شہر کے کئی علاقوں میں میلاد کے جلوس برآمد

سرینگر// عید میلاد النبی ؐ کے موقعہ پر شہر کے کئی علاقوں میں کل جلوس برآمد کئے گئے جس دوران جلوس میں شامل شرکاء نے اسلام کے حق میں نعرے بلند کئے ۔نماز جمعہ سے قبل اور نماز جمعہ کے بعد کئی مقامات پر مساجد اور درسگاہوں کی جانب سے جلوس برآمد کئے گئے،جس میں لوگوں نے جسمانی دوری بناتے ہوئے نعرے بلند کئے۔ سونہ وار علاقے میں جمعہ کو نماز جمعہ سے قبل ہی میلاد کی مناسبت سے جلوس برآمد کیا گیا،جس میں رنگ برنگی پوشاک میں چھوٹے بچوں کے علاوہ دیگر لوگوں نے بھی شرکت کی۔جلوس میں شامل شرکا’’ احمد کی آمد مرحبا،سرکار کی آمد مرحبا‘‘ کے نعرے بلند کر رہے تھے۔یہ جلوس اقبال کالونی،بنم سر اور اندرانگر کے چکر لگاتے ہوئے سونہ وار میں ہی اختتام پذیر ہوا۔ جلوس میں کچھ لوگ گاڑیوں میں بھی تھے جبکہ نوجوان موٹر سائیکلوںپر بھی سوار تھے،جن پر انہوں نے اسلامی پرچم بھی نصب کئے تھے۔اس دوران شہر

انجمن شرعی شیعیان کے اہتمام سے ہفتہ وحدت کا آغاز

سرینگر//انجمن شرعی شیعیان کے اہتمام سے ہفتہ وحدت بمناسبت عید میلاد النبیؐ کی تقریبات کا آغاز ہوا۔ سیرتی محافل و مجالس کا یہ سلسلہ 17 ربیع الاول تک جاری رہے گا۔ اس سلسلے میں امام بارگاہ گلشن باغ بٹہ کدل میں حسب عمل قدیم ایک پروقار محفل میلاد کا انعقاد کیا گیا جس میں انجمن شرعی شیعیان کے شعبہ تعلیم جامعہ باب العلم سے منسلک دینی مکاتب کے طلباء و طالبات کے علاوہ عاشقان رسولؐ کی خاصی تعداد نے شرکت کی۔اس موقعہ پرمولانا مولوی خورشید احمد قانون قانونگو (صدر انجمن حمایت الاسلام)، سید محمد صفوی ، انجمن شرعی شیعیان کے صدرآغا سید حسن نے خاتم النبیین حضور سرور کائناتؐ کے یوم ولادت کی فضیلت اور آپؐ کی سیرت و عظمت کے کئی گوشوں کی وضاحت کی۔ نبی اکرمؐ کی سیرت کاملہ کو دنیائے بشریت کیلئے نجات ابدی اور امن ، انصاف اور انسانیت کا دستور العمل قرار دیتے ہوئے آغا حسن نے کہا کہ بحیثیت انسان کامل نبی اکرمؐ

ڈپٹی کمشنر سرینگر کی درگاہ حضرت بل میں حاضری

سرینگر// ضلع ترقیاتی کمشنر سرینگر ڈاکٹر شاہد اقبال چودھری نے جمعہ کو درگاہ حضرت بل میں حاضری دی اور وہاں پر عید میلاد النبی ؐ کی مناسبت سے انتظامات کاجائزہ لیا۔ ڈپٹی کمشنر سرینگر کے ہمراہ سینئر ضلعی افسران بھی تھے،جنہوں نے متعلقہ محکموں کی جانب سے کئے گئے انتظامات سے متعلق انہیں تفصیلات سے آگاہ کیا۔ درگاہ حضرت بل میں کئی محکموں کی جانب سے سہولیات بہم رکھنے کے علاوہ انہوں نے زائرئن کی سہولیات کیلئے کیمپ بھی لگائے تھے ۔ کرونا وائرس کی وبا کے پیش نظر محکمہ صحت نے بھی متعلقہ انتظامات کئے تھے جن میں تھرمل سکریننگ اور کرونا جانچ کی سہولیات بھی شامل ہے۔درگاہ میں داخل ہونے سے قبل زائرین کی تھرمل جانچ کی جاتی ہے،جس کے بعد ہی انہیں درگاہ میں  داخل ہونے کی اجازت دی جاتی ہے۔جبکہ خواہشمند زائرین کے کرونا ٹیسٹ بھی موقعہ پر ہی کئے گئے۔ اس موقعہ پر ضلع ترقیاتی کمشنر سرینگر نے درگاہ حضرت بل میں ن

کشمیر یونیورسٹی کا خصوصی کیمپ

سرینگر// عیدمیلاد النبی ؐ کے موقعہ پر کشمیر یونیورسٹی کی طرف سے حضرت بل آنے والے عقیدت مندوںکیلئے ایک کیمپ لگایا گیا جس دوران  زائرین میں کھانے کے پیکٹ تقسیم کئے گئے۔یونیورسٹی کیمپس میںشعبہ سٹوڈنٹس ویلفیر کی طرف سے لگائے گئے اس کیمپ کا افتتاح وائس چانسلر کشمیر یونیورسٹی پروفیسر طلعت احمد نے کیا۔اس موقعہ پر انہوں نے کہا کہ میلاد النبی ؐ ایک مقدس موقع ہے جو ہمیں حضرت محمد ؐ کی تعلیمات اور طریقوں کے مطابق ہمدردی ، مددگار اور نرم دل رہنے کا درس دیتا ہے۔انہوںنے عقیدت مندوں میں کھانے پیکٹ بھی تقسیم کیے۔پروفیسر طلعت احمد نے کہا کہ یہ ایک سماجی ذمہ داری ہے اور انہوں نے شعبہ سٹوڈنٹس ویلفیر کی طرف کئے گئے انتظامات کو سراہا۔اس موقعہ پررجسٹرار ڈاکٹر نثار احمد میر نے کہا کہ تعلیمی اداروں کو چاہئے کہ میلاد النبی ؐ جیسے خصوصی موقعوں پر سماجی خدمت کے کیمپوں کاانعقاد  کریں ۔ڈین اسٹوڈنٹس ویلف

آثار شریف درگاہ حضرت بل سے انس و محبت

سرینگر//درگاہ حضرت بل میں جمعہ کو عید میلاد النبیؐ کی مناسبت سے بڑی تقریب منعقد ہوئی اور عقیدت مند موئے مقدس آنحضورؐ کے دیدار سے فیضاب ہوئے۔ لوگوں کے ساتھ ساتھ مائور لنگیٹ سے آئی ہوئی ایک بزرگ خاتون خدیجہ کی آنکھیں بھی آبدیدہ ہوئیں۔قریب70برس کی خدیجہ اپنے جذبات پر قابو کھو بیٹھی اور زور زور سے درود حضورؐ کا ورد کرنے لگی۔ خدیجہ قریب ایک سال بعد اپنے  فرزند،بہو اور پوتے کے ہمراہ درگاہ حضرت بل پہنچی تھی،جہاں پر انہوں نے نماز جمعہ کے بعد موئے مقدس کا دیدار کیا۔ عید میلاد کے پیش نظر قریب8ماہ بعد درگاہ حضرت بل میں اس قدر گہما گہمی اور چہل پہل دیکھنے کو ملی ۔18مارچ کو وادی میں کرونا وائرس کا پہلا کیس نمودار ہونے کے بعد پہلی مرتبہ لوگوں کی اس قدر تعداد حضرت بل میں جمع ہوئی اور نماز جمعہ ادا کی۔کرونا وائرس کے نمودار ہونے کے ساتھ ہی وادی میں تمام مذہبی مقامات بشمول درگاہوں، خانقاہوں، بڑ

توہین رسالتؐ کے خلاف بٹہ مالو میں احتجاج

 سرینگر// فرانسیسی صدر کی جانب سے توہین رسالت کے خلاف جمعہ کو شہر میں تاجروں نے احتجاج کرتے ہوئے فرانسسی مصنوعات کا بائیکاٹ کرنے کی اپیل کی۔ نماز جمعہ کے بعد بیسوںتاجر اور دیگر لوگ بٹہ مالو میں فائر سروس کے نزدیک بٹہ مالو ٹریڈرس ایسو سی ایشن کے جھنڈے تلے جمع ہوئے اور پیغمبر اسلام ؐکے خلاف توہین آمیز کلمات کی مذمت کی۔احتجاجی تاجروں نے بینر اور پلے کارڑ اٹھا رکھے تھے،جن پر فرانسسی صدر کے گستخانہ بیان کی سخت الفاظ میں مذمت کی گئی۔مظاہرین’’ گستاخ رسولؐ کی ایک ہی سزا،سر تن سے جدا سر تن سے جدا‘‘ کے نعرے بھی بلند کئے۔اس موقعہ پر بٹہ مالو ٹریڈرس ایسو سی ایشن کے قائمقام صدر وسیم فیروز خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ فرانسسی صدر کے گستخانہ بیان سے عالم اسلام کے دل مجروع ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ مسلمانان عالم کسی بھی صورت میں توہین رسولؐ برداشت نہیں کرسکتے ۔ نامہ نگاروں

تازہ ترین