تازہ ترین

لال منڈی میں محکمہ دیہی ترقی کے ملازمین کا احتجاج

سرینگر// محکمہ دیہی ترقی میں کام کرہے عارضی ملازمین نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ اگر انکی مستقلی کیلئے فوری طور پر اقدامات نہیں کئے گئے تو وہ احتجاجی لہر میں شدت لائے گے۔ محکمہ کے ملازمین نے رورل ڈیولپمنٹ ڈیلی ویجرس ایسو سی ایشن کے جھنڈے تلے لال منڈی سرینگر میں احتجاج کرتے ہوئے نعرہ بازی کی۔مظاہرین نے ہاتھوں میں بینئر اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے،جن پر انکے مطالبات کے حق میں تحریر درج تھی۔نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے ایسو سی ایشن کے صدر امتیاز احمد نے کہا کہ وہ گزشتہ25برس سے لیکر28برسوں تک اس محکمہ میں کام کر رہے ہیں تاہم ابھی تک بیشتر عارضی ملازمین کو مستقل نہیں کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ مسلسل حکومتوں نے انہیں فراموش کیا تھا اور جب از خود انہوں نے یہ معاملہ سابق گورنر این این وہرا کی نوٹس میں لایا تو انہوں نے متعلقہ محکمہ سے اعداد وشمار اور تفصیلات طلب کی۔ امتیاز احمد نے بتایا کہ مجموعی طور

میرا قصبہ میری شان| شہر کے کئی مقامات پر خصوصی تقریبات

 سرینگر//شہر کے اندرونی علاقوں میں رہائش پذیر شہریوں نے’’ میرا شہر میری شان‘‘ کیولین پروگرام میں مطالبات کرتے ہوئے انتظامیہ سے امیدیں وابستہ کیں،جبکہ انتظامیہ نے متعدد شہریوں میں سرٹیفکیٹ اور سازوسامان تقسیم کیا۔حال ہی میں منعقدہ’’ گائوں کی اور‘‘ پروگرام کی تسلسل کے بعد لیفٹنت گورنر انتظامیہ نے شہری آبادی تک پہنچنے کے لئے2روزہ ’’ میرا شہر میری شان‘‘ کا اعلان کیا۔اس پرجوش پروگرام میں جموں و کشمیر کے شہری علاقوں میں رہنے والے لوگوں کی دہلیز تک حکمرانی لانے کا تصور کیا گیا ہے۔ پیر کو اس پروگرام کے پہلے دن انتظامیہ نے سرینگر اور اس کے آس پاس متعدد کیمپ لگائے۔ گنج بخش پارک نوہٹہ میں منعقد ایسے ہی ایک کیمپ میں ،علاقے کے لوگوں کو پروگرام میں مختلف سرگرمیوںمیں مصروف دیکھا گیا۔ اسی نوعیت کا ایک اور کیمپ نگین کلب میں

شہر خاص میں آوارہ کتوں کی بڑھتی تعداد سوہانِ روح

 سرینگر // شہر خاص میں ہر گزرتے دن کے ساتھ آوارہ کتوں کی بڑھتی تعداد سے عام لوگوں کا جینا مشکل ہو رہا ہے۔شہر خاص کے خیام، خانیار، رعناواری، زندشاہ مسجد ، سعیدہ کدل ، خوجہ یار بل، شاہ آباد ، کاٹھی دروازہ ، بادام واری، حول ،علمگری بازار، نوہٹہ ،راجوری کدل، کائو ڈارہ، ، خواجہ بازار اور دیگر علاقوں میں آوارہ کتوں کی ہڑبونگ کی وجہ سے لوگ سخت پریشان ہیں۔ رعناواری سے تعلق رکھنے والے جہانگیر احمد بٹکاکہنا ہے کہ ’’ خیام ، خانیار اور رعناواری میں آوارہ کتوں کی بڑھتی تعداد کی وجہ سے نہ صرف بچوں اور بزرگوں کو سخت مشکلات کا سامنا ہے کیونکہ صبح اور شام کے وقت کتوں کی بڑی تعداد ان علاقوں کے اندرونی محلہ جات میں داخل ہوکر لوگوں کو زخمی کردیتے ہیں‘‘۔جہانگیر نے بتایا کہ زندہ شاہ مسجد، کرالہ یار اور دیگر محلہ جات میں آوارہ کتوں کی تعداد اتنی بڑھ گئی ہے کہ وہاں لوگوں کو ص

مشتاق کالو نی سے گنگہ بگ تک آ د ھا کلومیٹرروڈ خستہ حال

سرینگر// مشتاق کالو نی حیدر پورہ سے گنگہ بُگ تک آ د ھا کلومیٹر روڈٖ کو تارکول نہ بچھانے کے باعث لوگوںاور ٹرانسپورٹروں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہاہے۔ مقامی لوگوں نے محکمہ آر اینڈ بی پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ اگر چہ ضلع بڈ گام کے کئی علاقوں کی سڑکوں پر میکڈم بچھایا گیا تاہم یہ نصف کلومیٹر ابھی تک خستہ ہے جس کی طرف کوئی توجہ نہیں دی جارہی ہے ۔ضلع بڈ گام کی بیشتر سڑ کوں پر تار کول بچھا یا گیا ہے تاہم مشتاق کالو نی حیدر پورہ سے گنگہ بگ تک آ د ھے کلومیٹرکو نظر انداز کیا گیاہے۔ مقامی لوگوںکا کہنا ہے کہ لالچوک سے آ نے والے ٹریفک اسی روڈ کے ذریعے براستہ نار کرہ بڈگام کی طرف جاتا ہے لیکن گاڑیوںکے بھاری رش سے اس آدھے کلومیٹر روڈ کی حالت مزید ناگفتہ بہہ بن گئی ہے اورسڑک پر جگہ جگہ گہرے کھڈ بن چکے ہیں۔سی این ایس کے مطابق لوگوں نے کہاکہ ا سڑک کی حالت اس قدر خستہ ہے کہ ٹرانسپورٹر اب ا

کوہنہ کھن ڈلگیٹ میں 2منشیات فروش گرفتار

سرینگر//کوہنہ کھن ڈلگیٹ میں پولیس نے 2منشیات فروشوں کو گرفتار کرکے چرس ضبط کیا۔ پولیس پوسٹ نہروپارک نے کوہنہ کھن  ڈلگیٹ میں گشت کے دوران 2شہریوں کو روک کر تلاشی لی۔ اس موقعہ پر تلاشی کے دوران 1100 گرام چرس برآمد کیا۔پولیس نے محمد رفیق پتو اور عاقب منظور بکرو کو گرفتار کرکے ان کیخلاف پولیس اسٹیشن رام منشی باغ ایف آئی آر زیرنمبر110/2020 درج کرکے مزید تحقیقات شروع کی ۔ پولیس کی طرف سے کمیونٹی ممبران سے گزارش ہے کہ وہ اپنے پڑوس میں منشیات فروشوں سے متعلق کسی بھی معلومات کے ساتھ آگے آئیں۔ منشیات کی خریدو فروخت میں ملوث افراد کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی تاکہ معاشرے کو اس وبا سے پاک رکھا جائے۔   رعناواری میں 5قِمار باز گرفتار ۔19ہزارروپے اور تاش کے پتے ضبط  سرینگر//رعناواری میںپولیس نے قمار بازوں کو گرفتار کرکے 19ہزار روپے ضبط کئے۔ پولیس کو مصدقہ

۔ 8ماہ بعد سنڈے مارکیٹ کی سرگرمیاں بحال | تاجروں اور خریداروں میں خوشی ، ایس او پیز پر من و عن عمل

 سرینگر//اتوار کو قریب 8ماہ بعد سنڈے مارکیٹ جزوی طور کھل گیا جہاں ایک بار پھر مختلف اقسام کی اشیاء خاص طور پر ملبوسات چھاپڑیوں پر صبح سے ہی سجائے گئے تھے اور لوگوں کی بڑی تعداد نے مارکیٹ میں حاضر ہوکر جم کر خریداری کی ۔ سنڈے مارکیٹ دوبارہ کھل جانے کے نتیجے میں سنڈے مارکیٹ میں چھاپڑیوں پر مال فروخت کرنے والوں کے چہروں پر خوشی صاف چھلک رہی تھی ۔سی این آئی کے مطابق   ہر اتوار کو سرینگر میں سجنے والا بازار جس کو عرف عام میں سنڈے مارکیٹ کہتے ہیںگذشتہ اتوار کولگ بھگ 8ماہ بعد دوبارہ کھل گیا ،جہاں پر  ایک بار پھر بازار میں مختلف اقسام کی چیزں سجائی گئی تھیں ۔ سنڈے مارکیٹ عمومی طور پر ٹورسٹ سنٹر ڈلگیٹ سے مہاراجہ بازار اور ہری سنگھ ہائی سٹریٹ تک لگتا تھا تاہم کووڈ 19کے بعد پیدا شدہ صورتحال کے نتیجے میں اس اتوار کو مارکیٹ میں نصف ہی تاجروں نے اپنا مال سجایا تھا  کیوں کہ

پریس کالونی کار پارکنگ میں تبدیل | صحافیوں کو گاڑیاں پارک کرنے میں دقت | حکام سے مداخلت کی اپیل

 سرینگر // پریس کالونی سرینگر کو عام لوگوں نے کار پارکنگ کے طور پر استعمال کرنا شروع کر دیا ہے ،جس کے نتیجے میں صحافیوں اور اخبارات سے وابستہ افراد کو اپنے گاڑیاں کھڑا کرنے کیلئے جگہ ہی دستیاب نہیں ہوتی ہے ۔ مختلف اخبارات سے وابستہ صحافیوں کا کہنا ہے کہ روزانہ دن کو کالونی میں عام شہری اپنی گاڑیاں کھڑاکر دیتے ہیںجس کے نتیجے میں نہ صرف انہیں آمد ورفت میں کافی دقتوں کا سامنا رہتا ہے، بلکہ انہیں اپنی گاڑیاں پارک کرنے کیلئے جگہ بھی دستیاب نہیں ہوتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ پریس کانونی کو لوگوں نے کار پارکنگ کے طور پر استعمال کرنا شروع کر دیا ہے ،جبکہ یہاں کوئی بھی پارکنگ نہیں ہے اور لوگ مفت میں اس کو پارکنگ کے طور پر استعمال کر رہے ہیں۔صحافیوں کا مزید کہنا تھا کہ کبھی کبار انہیں راستے میں اپنی گاڑیاں چھوڑ کر آفس میں کام کرنے پہنچنا پڑتا ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ انہیں ذہنی عذاب اُس وقت ہوتا

بوسیدہ کھمبے اور ڈھیلی ترسیلی لائنیں لٹکتی تلوار کی مانند | رواں برس بھی حالت نہیں بدلی، صارفین کا محکمہ بجلی پر لیت و لعل کاالزام

سرینگر // شہر میں بجلی ڈھانچہ کو مزید بہتر بنانے کیلئے متعدد سکیموں کے تحت ایک بڑی رقم خرچ کی جا چکی ہے لیکن اس کے باوجود بھی شہر میں عارضی کھمبوں کے ساتھ لٹکتی بجلی کی تاریں نہ صرف مکینوں اور راہگیروں کیلئے وبال جان بنی ہوئی ہیں،وہیں سرما میں برف باری کے دوران پھر سے بجلی گل رہنے کا احتمال ہے ۔شہر کے متعدد علاقوں میں بجلی کے بوسیدہ کھمبوں اور تاروں کو نہیں بدلا گیا ہے ۔مکینوں کا کہنا ہے کہ انہوں نے متعدد بار ترسیلی لائنوں اور کھمبوں کو بدلنے کیلئے متعلقہ محکمہ سے رابطہ قائم کیا تاہم اس جانب کوئی دھیان ہی نہیں دیا جاتا ہے۔شہر کے گرین کالونی لاوے پورہ کے لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ وہاں بجلی کی تاریں ڈھیلی ہوگئی ہیں اور خدانخواستہ حادثہ ہو سکتا ہے۔مقامی لوگوں کے ایک وفد نے بتایا کہ کئی بار انہوں نے محکمہ کے متعلقہ حکام سے رجو ع کیا لیکن اس جانب کوئی بھی دھیان نہیں دیا گیا ۔شہر کے ک

گندے پانی کی نکاسی کیسے ممکن ؟ | شہرمیں متعدد پروجیکٹوں پر کام سست رفتاری کا شکار

سرینگر//شہر سرینگر میں گندھے پانی اور فضلہ کی نکاسی کیلئے صرف40فیصد ڈھانچہ ہی موجود ہے،جبکہ اسمارٹ سٹی کے تحت جن20پروجیکٹوں کو منظوری ملی تھی،اس میں سے بھی نصف پروجیکٹ سست رفتاری کے نتیجے میں پائے تکمیل کو ابھی تک پہنچ نہیں پائے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سرینگر میں سمارٹ سٹی کے تحت پانی کی نکاسی کیلئے جن20پروجیکٹوں کو سال2019-20میں شروع کیا گیا تھا،ان میں سے بھی11ہی مکمل ہوئے اور باقی9سست رفتاری کی بھینٹ چڑ گئے ہیں۔سرینگر مونسپل کارپوریشن کے ذرائع کا کہنا ہے کہ سرینگر میں پانی کی نکاسی کیلئے صرف40فیصد نظام موجود ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ حالیہ برسوںکے دوران نہ ہی سرینگر مونسپل کارپوریشن اور نہ ہی محکمہ تعمیرات عامہ نے شہر میں نکاسی آب کے نظام کو درست کرنے کی کوشش کی،اور یہ معاملہ شہری عوام کیلئے درد سر بنا ہواہے۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ شیخ باغ،الہی باغ،باغات،شہنشاہ کالونی اور دیگر علاقوں م

پالتھین لفافوں کا کاروبار جاری | روک لگانے والا کوئی نہیں

 سرینگر// شہر اور دیگرقصبہ جات میں پالی تھین لفافوں کا کاروبار بڑے پیمانے پر جاری ،عدالت عالیہ کے حکمنامے کو عملانے میں متعلقہ محکمہ جات بری طرح سے ناکام ہوچکے ہیں ۔ کرنٹ نیو ز آف انڈیا کے مطابق وادی کشمیر میں پالتھین لفافوں کے کاروبار پر انتظامیہ کے ساتھ ساتھ عدالت عالیہ نے بھی پابند لگائی تھی، لیکن میونسپلٹی، محکمہ خورات و رسدات اور لیکس اینڈ واٹر ویز محکمہ عدالت اور انتظامیہ کے حکمنامے کو زمینی سطح پر عملانے میں بُری طرح سے ناکام ہوچکا ہے ۔ سرکار کی جانب سے باربار یہ دعویٰ کیا جارہا تھا کہ کشمیر کو پالتھین سے پاک خطہ بنایا جائے گا تاہم بد قسمتی سے سرکاری اعلانات محض اخباروں کی سرخیوں تک ہی محدود رہے۔ جس کے نتیجے میں پالتھین کا کاروبار پہلے سے زیادہ پھیل گیا ۔ وادی کے تمام اضلاع میںپالیتھین لفافوں کا کاروبار اور اس کا استعمال جاری رہنے کی پاداش میں ماہرین ماحولیات اور ماحول دوس

ایس ڈی کالونی بٹہ مالومیں ایک ماہ سے پانی کی قلت

 سرینگر// شیخ دائود کالونی بٹہ مالو میں پینے کے صاف پانی کی قلت کیخلاف خواتین نے سڑکوں پر نکل کر محخمہ جل شکتی کے خلاف احتجاجی مظاہرے کیے۔ایس ڈی کالونی بٹہ مالو میں گذشتہ ایک ماہ سے پانی کی سپلائی متاثر ہے جس کی وجہ سے لوگ شدید مشکلات سے دوچار ہیں ۔سنیچر کو متعدد خواتین سڑ ک پر جمع ہوئیں اور سڑک پر رکاوٹیں کھڑا کرکے محکمہ جل شکتی کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے۔ مظاہرین کاکہناہے کہ پچھلے ایک ماہ سے یہاں پانی کی شدید قلت ہے جس کے سبب عوام کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ مظاہرین نے کہاکہ انہوںنے کئی مرتبہ محکمہ جل شکتی کے عملہ سے پانی کی قلت کے بارے میں آگاہ کیا لیکن کوئی ٹھوس کارروائی نہیں کی گئی جس کے نتیجہ میں وہ سڑکوں پر احتجاج کرنے کیلئے مجبور ہوگئے۔ احتجاجی خواتین نے کہا کہ علاقہ میں پانی کی قلت سے لوگ سخت مشکلات کا سا منا کرر ہے ہیں ۔انہوںنے کہا کہ صبح صادق سے ہی خواتین کو

فائر اینڈ ایمر جنسی کے لسٹ کو کالعدم قرار دینے کی مانگ

 سرینگر// محکمہ فائر اینڈ ایمرجنسی محکمے کی جانب سے حالیہ مشتہر شدہ لسٹ کو کالعدم قرار دینے کے مطالبے کو لے کر ناکام امیدواروں نے پریس کالونی میں احتجاجی مظاہرہ کیاجس دوران پولیس نے احتجاج میں شامل امیدواروں پر لاٹھی چارج کر کے انہیں تتر بتر کیا ۔ فائر اینڈ ایمر جنسی محکمے کی حالیہ مشتہر شدہ لسٹ میں ناکام قرار دئے گئے امیدواروں کی ایک بڑی تعداد نے زور دار احتجاج کر کے ان کے ساتھ انصاف کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔احتجاج میں شامل امیدواروں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ان امتحانات اور نتایج میں دھندلیاں ہوئیں اور اصل و قابل امیدواروں کے بجائے منظور نظر افراد کو فہرست میں جگہ دی گئی۔انہوں نے کہا کہ وہ گذشتہ کئی ہفتوں سے لسٹ کو کالعدم قرار دینے کی مانگ کررہے ہیں تاہم حکام کی جانب سے کوئی توجہ نہیں دی جارہی ہے جس کی وجہ سے وہ سڑکوں پر آنے کیلئے مجبور ہوگئے ہیں ۔انہوں نے بتایا جب تک نہ انہ

پولی تکنیک کالجوںکے طلباء کیلئے کونسلنگ کم پلیسمنٹ مہم کا افتتاح

سرینگر//پرنسپل سیکرٹری سکل ڈیولپمنٹ ڈاکٹر اصغر حسن سامون نے طلاب میں اَنٹرپرینیور شپ سکلز اُجاگر کرنے پر زور دیا ہے اور مختلف آرگنائزیشنوں کے نمائندوں پر زور دیا ہے کہ وہ اپنی تنظیموں میں کام کرکے اپنی صلاحیتوں کو ثابت کرنے کا موقعہ فراہم کر کے نئے طلاب میں اعتماد پیدا کریں ۔پرنسپل سیکرٹری نے ان باتوں کا اظہار کل کشمیر ڈویژن کے پولی تکنیک کالجوں کے فارغ التحصیل طلاب کے لئے کونسلنگ کم پلیسمنٹ مہم کے افتتاحی پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس پروگرام کا اہتمام ڈائریکٹوریٹ آف سکل ڈیولپمنٹ جے اینڈ کے نے کیا تھا اور اس کی میزبانی گورنمنٹ پولی تکنیک برائے خواتین بمنہ سری نگر نے کی تھی۔اس مہم کے لئے کیمپس میں 32 آرگنائزیشنوںنے حصہ لیا جبکہ 4 کمپنیوں نے بذریعہ آن لائن موڈ تبادلہ خیال کیا۔اُنہوں نے گورنمنٹ پولی تکنیک کی ایک گروپ گرلز اَنٹرپرینیوروں کی بھی حوصلہ افزائی کی جو اس وقت جے کے ای ڈی

سرسید احمد خان کی یوم پیدائش

سرینگر//ممتاز مفکرماہر تعلیم اور علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے بانی سرسید احمد خان کی 203 ویں یوم پیدائش کے موقع پرکل یہاں کشمیر یونیورسٹی میں ایک تقریب منعقد ہوئی ۔جس میں کشمیر یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر طلعت احمد ، سنٹرل یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر معراج الدین میر ، ڈین اکیڈمک افیئرس ،پروفیسر اکبر مسعود اور رجسٹرار ڈاکٹر نثار احمد میر نیسرسید احمد خان کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا ۔پروفیسر طلعت احمد نے سرسید احمد خان کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ سرسید احمد خان نے ملک کے تعلیمی معیار کو بلند کرنے کے لئے وسیع پیمانے پر جوتعاون دیا،اسکی کوئی مثال نہیں ہے۔انہوں نے کہا  "اس مشن کو جاری رکھنا ہی ہمارے نوجوانوں کو زیادہ سے زیادہ تعلیم کی طرف لے جائے گا کیونکہ تعلیم ہی قوم کو ترقی اور خوشحالی کی طرف لے جانے کا واحد راستہ ہے‘‘۔پروفیسرمعراج الدین میر

غیر قانونی تعمیرات ہٹانے کی مہم

سرینگر// جھیل ڈل اور اس کے گرد و نواح میں غیر قانونی تعمیرات کو منہدم کرنے کی کارروائی جاری رکھتے ہوئے لیکس اینڈ واٹر ویز ڈیولپمنٹ اتھارٹی (لائوڈا ) نے سنیچر کوچندہ پورہ ہارون ،لشکری محلہ ،تیل بل ،سعدہ کدل ،میاں شاہ صاحب رعناواری اور باغ روپ سنگھ نائو پورہ میں متعددڈھانچوں کو ہٹا لیا جن میں یک منزلہ4مکان اوردیگر 3دھانچے شامل ہیں۔یہ تعمیرات غیر قانونی طور تعمیر کئے گئے تھے ۔اس دوران ٹپروں اور تعمیراتی میٹریل لے جانے والی گاڑیوں پر روک لگانے کیلئے لاوڈاسکارڈ کی طرف سے خصوصی ناکے لگائے گئے ہیں ۔لائوڈا کے ترجمان نے بتایا کہ غیر قانونی طور ڈھانچے تعمیر کرنے والوں کے خلاف سختی سے نمٹا جائے گا اور انہدامی کارروائی جاری رہے گی ۔انہوںنے ٹپرمالکان اور تعمیراتی میٹریل لے جانے والی گاڑیوں کے مالکان کو متنبہ کیا ہے کہ وہ ڈل اور نگین جھیلوں اور اس کے مضافاتی علاقوں میں بغیر اجازت تعمیراتی میٹریل لے

مزید خبرں

ہارون اور پیر باغ میںپانی کی ہاہا کار   سرینگر/ارشاد احمد//ہارون اورپیر باغ سرینگر کے متعدد علاقوں میں پچھلے ایک ہفتے سے زائد عرصہ سے پینے کے پانی کی شدید قلت کا سامنا ہے۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ ہارون، چندہ پورہ،درباغ،سمیت دیگر متعدد علاقوں میں پچھلے ایک ہفتے سے پینے کے صاف پانی کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے جبکہ محکمہ جل شکتی اس قلت کو دور کرنے سے ابھی تک ناکام ہی ثابت ہوگیا ہے۔ہارون کے حفیظ اللہ میر نے بتایا کہ کئی مرتبہ اس بارے میں محکمہ جل شکتی کو آگاہ کیا گیا لیکن ابھی تک پانی کی فراہمی یقینی نہیں بنائی جاسکی۔ادھر گرین ایونیو پیرباغ اور دیگر ملحقہ علاقوں کے لوگوں نے بھی شکایت کی ہے کہ ان علاقوںمیں پچھلے کچھ دنوں سے پینے کے پانی کی شدید قلت ہے۔مقامی شہری بلال احمد بٹ نے بتایا کہ ان علاقوں کے باشندوں نے متعلقہ حکام سے بار بار درخواست کی ہے کہ وہ لوگوں کو درپیش شدید پریشانی

عالمی یوم خوراک | آر ٹی آئی مومنٹ کا پریس کالونی میںاحتجاج | غریبوں کو مہنگے داموں اناج فراہم کرنے کا الزام

سری نگر//آر ٹی آئی مومنٹ جموں و کشمیر نے عالمی یوم خوراک کے موقع پر یہاں پریس کالونی میں جمعے کو محکمہ خوراک کے خلاف احتجاج درج کیا۔احتجاجیوں کا الزام تھا کہ مذکورہ محکمہ میں برسہا برس سے دھاندلیوں کا بازار گرم ہے۔احتجاجی 'ڈیجیٹل مشین چالو کرو' اور 'ریٹ لسٹ جاری کرو' کے نعرے لگا رہے تھے۔اس موقع پر موومنٹ کے چیئرمین راجا مظفر بٹ نے نامہ نگاروںکو بتایاکہ محکمہ خوراک میں دھاندلیاں برسوں سے جاری ہیں۔انہوں نے کہا: 'محکمہ خوراک میں دھاندلیاں جاری ہیں، غریبوں کو سرکاری راشن اسٹوروں پر راشن مہنگے داموں دیا جاتا ہے، ان کو بی پی ایل کے زمرے میں نہیں رکھا جا رہا ہے'۔موصوف نے کہا کہ ایک طرف یہ محکمہ دکانداروں کو ریٹ لسٹ نہ ہونے پر جرمانہ عائد کرتا ہے جبکہ خود ان کے راشن اسٹوروں میں ریٹ لسٹ ہوتا ہے نہ ڈیجیٹل کنڈے ہوتے ہیں۔انہوں نے الزام لگایا کہ یہ محکمہ سر سے پاؤں تک کور

موجودہ سیاسی صورتحال حد درجہ پریشان کن | میر واعظ سمیت تمام قیدیوں کو رہا کیا جائے:عوامی مجلس عمل

سرینگر// عوامی مجلس عمل کے سینر رہنما محمد شفیع خان نے مرکزی جامع مسجد سرینگر میں نماز جمعہ سے قبل عوام میں تقریر کرتے ہوئے جموںوکشمیر کی  موجودہ  سیاسی صورتحال کو حد رجہ پریشان کن اور اضطراب انگیز قرار دیا۔انہوں نے کہا کہ یہ کس قدر دکھ اور افسوس کی بات ہے کہ حکمرانوں کی زور زبر دستی کی پالیسیوں کے سبب سربراہ تنظیم و حریت چیرمین میرواعظ ڈاکٹر مولوی محمد عمر فاروق جو کشمیر کے سب سے بڑے اور قدآور مذہبی ، سماجی اور سیاسی رہنما بھی ہیں سمیت سینکڑوں رہنما اور نوجوان اب تک مختلف جیلوں اور گھروں میں قیدو بند کی زند گی گزاررہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ میر واعظ کوگزشتہ سال5اگست 2019 سے لگاتار  اپنے ہی گھر میں نظر بند رکھ کرمو صوف کی پر امن سر گرمیوں پر قدغن عائد کی گئی ہے۔  جو حد درجہ تکلف دہ اور قابل مذمت ہے۔خان نے تنظیم اور عوام کی جانب سے یہ پر زور مطالبہ کیاکہ  چونک

شہر میںٹریفک نظام کی درستگی کیلئے اقدامات | ای چالان کا عمل شروع،ڈیبٹ کارڈ کے ذریعہ جرمانے وصول

سرینگر//شہر سرینگر میں ٹریفک نظام کو بہتر بنانے اور قوانین کی خلاف ورزی کرنے والوں سے جرمانہ وصول کرنے کیلئے جموں کے بعد شہر سرینگر میں پہلی بار’’ ای چالان ‘‘ مہم کی شروعات کی گئی ہے ۔ جس دوران چالان کو آن لائن ہی ادا کرنے کی صارفین کو سہولیات بہم رکھی جارہی ہے ۔شہر سرینگر میں ٹریفک نظام کو مزید بہتر بنانے کیلئے جگہ جگہ ٹریفک اہلکاروں کی تعیناتی عمل میں لاکر اس بات کو یقینی بنایا جا رہا ہے کہ ٹریفک جام پر قابو پا لیا جائے ۔ اپنی نوعیت کے پہلے اقدام کے تحت ٹریفک پولیس نے ای چالان کا عمل شروع کر دیا ہے اور جس گاڑی کو بھی چالان ہو تا ہے انہیںموقعہ پر ہی ڈیبٹ کارڈکے ذریعے اس کی ادائیگی کی سہولیات بہم رکھی گئی ہے جس پر انہیں رسید بھی فراہم کی جاتی ہے ۔ معلوم ہوا ہے کہ ایس ایس پی ٹریفک سرینگر سٹی کی زیر نگرانی میں شہر سرینگر میں ای چالان کا عمل شروع کر دیا گیا ہے اور

جعلی نوکریاں فراہم کرنے کاسکینڈل طشت ازبام | سائبر پولیس سرینگرکی کارروائی،2 ملزمان سلاخوں کے پیچھے

سرینگر//سائبر پولیس اسٹیشن کشمیر زون نے سوشل میڈیا کے ذریعے دھوکہ دہی کرتے ہوئے لوگوںاور خاصکر خواتین اور نو عمر لڑکیوں کو ملازمت فراہم کرنے کا جھانسہ دینے والے 2 ملزمان کو گرفتارکرکے سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا۔سائبر پولیس اسٹیشن کشمیر زون سرینگر کو بارہ مولہ کی ایک خاتون کی جانب سے تحریری شکایت موصول ہوئی جس میں انہوں نے بتایا کہ مذکورخاتون کو نامعلوم فیس بُک صارف نے دھوکہ دیا اور جنہوں نے کئی جعلی فیس بُک اکاونٹ کھولے ہوئے ہیں اوروہ خود کو پروجیکٹ آفیسر’’ آئی سی ڈی ایس ‘‘جتلاتا ہے اور مذکوریہ عورت کو نوکری فراہم کرنے کی یقین دہانی کی تھی ۔سائبر پولیس نے کیس زیر ایف آئی آرنمبر23/2020 متعلقہ دفعات کے تحت درج کرکے تحقیقات شروع کی جس دوران یہ پتہ چلا کہ مذکورہ فیس بک اکاونٹ صارف کے لگ بھگ15 جعلی فیس بک اکاونٹ ہیں جو مرد اور خواتین کے الگ الگ ناموں پر درج ہیں او