عالمی یوم سیاحت | ڈل جھیل کو کشمیر کی شناخت قرار | نہرو پارک میں تقریب ، شکارادوڑ اور موٹر بوٹ آبی کھیل پیش

سرینگر//’’عالمی یوم سیاحت‘‘ کے موقعہ پر صوبہ کشمیر میں کووِڈ ۔19 پروٹوکال پر عمل پیرا رہ کر کئی تقریبات کا اِنعقادکیا گیا۔ اِس سلسلے میں محکمہ سیاحت کشمیر کی جانب سے سب بڑی تقریب نہرو پارک میںمنعقد کی گئی جس کے دوران شکارا دوڑ ، کیانگ ، کنوئینگ ، کینو سلیلم ، کینو سپرنٹ اور موٹر بوٹ آبی کھیل پیش کئے گئے ۔ سیکرٹری امور نوجوان و کھیل کود اور سیاحت سرمد حفیظ نے تقریب کی صدارت کی۔اس موقعہ پر اپنے خیالات کا اِظہار کرتے ہوئے سیکرٹری سیاحت نے کہا کہ محکمہ آنے والے دِنوں میں اس شعبے کی ترقی کیلئے کئی بڑے اِقدامات اُٹھا رہا ہے۔ انہوں نے جھیل ڈل کو کشمیر سیاحت کی شناخت قرار دیا۔ موجودہ کووِڈ بحران کا ذکر کرتے ہوئے اُنہوں نے کہا کہ آنے والے دِنوں میں ایس او پیز پر عمل پیرا رہنے اور دیگر متعلقہ سہولیات دستیاب رکھنا ذمہ دارسیاحتی سرگرمیوں کے لئے لازمی ہے۔ناظم سیاحت کشمیر

حیدپورہ اور بمنہ بائی پاس پر کراسنگ بند | ٹرانسپورٹر اورمسافرپریشان ، حکام سے مداخلت کی اپیل

سرینگر //حیدرپورہ سمیت شہر کے متعدد روٹوں پر ٹریفک کیلئے کراسنگ بند ہونے کے نتیجے میں مسافروں کو مشکلات کا سامنا ہے، جبکہ گاڑیوں کی آمد ورفت میں سخت دقتیں پیش آرہی ہیں۔ مقامی لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ حید پورہ بائی پاس کراسنگ کو بند رکھا گیا ہے جس کے نتیجے میںمسافروں کو کراسنگ کیلئے پیر باغ جانا پڑھ رہا ہے جس سے نہ صرف ان کا وقت ضایع ہوتا ہے بلکہ ٹریفک جامنگ کا سلسلہ بھی رہتا ہے ۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ اگر بائی پاس پر سگنل لائٹ نصب ہیں اور وہاں پر محکمہ کے اہلکار بھی تعینات رہتے ہیں ،تو اس کے باوجود بھی وہاں کراسنگ کو بند رکھنے کا کوئی جواز نہیں ہے ۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ  5اگست 2019 کے بعد شہر میں بندشیں ہٹنے کا نام ہی نہیں لے رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جموں وکشمیر کی خصوصی پوزیشن کے خاتمہ کے بعد حکام نے ممکنہ احتجاجی مظاہروں کے پیش نظر شہر کو سیل کر دیا تھا اور لوگ

آبی ذخیرہ باباڈیمب کا وجود خطرے میں | آلودہ پانی سے اُٹھنے والی بدبو سے آبادی پریشان

سرینگر//سی این آئی/شہرسرینگر کا مشہور آبی ذخیرہ ’’باباڈیمب‘‘تباہی کے دہانے پر پہنچ چکا ہے ، جہاں اب اس کا پانی زہر الودہ بن گیا ہے، وہیں اس آبی زخیرہ کے ایک بڑے حصے پر خود غرض عناصر نے قبضہ کرکے اس کو زرعی اراضی میں تبدیل کردیا ہے اور اس پر سبزیاں اُگائی جارہی ہیں ۔ نہرکابیشترحصہ اب دلدل میں تبدیل ہوچکا ہے ۔یہ خوبصورت دریاء تیزی کے ساتھ کچرے کے مرکز میں تبدیل ہوتاجارہا ہے ،ایک وقت وہ تھا جب لوگ اس دریاء کا پانی پینے کیلئے استعمال میں لاتے تھے لیکن اب اس کا پانی اس قدر آلودہ ہوچکا ہے کہ پانی چھونے سے بھی کئی طرح کی بیماریاں لگنے کا احتمال رہتا ہے ۔ اس چھوٹے سے دریاء میں شہر سرینگر کی ڈرینوں سے نکلنے والا گندہ پانی بشمول گندگی وغلاظت اس جھیل میں چلے جانے سے وہ ایک دلدل کی شکل اختیارکررہی ہے ۔مقامی لوگ کہتے ہیں کہ گندگی اوربدبو کی وجہ سے دریاء کے قریب ٹھہرنابھی

شہر خاص میں آوارہ کتوں کا راج | نائد کدل ،مخدوم منڈو سمیت دیگر علاقوں میں لوگ پریشان

سرینگر//شہر خاص کے متعدد علاقوںمیں آوارہ کتوں کی موجودگی سے عام شہریوں کیلئے شام کے بعد گھروں سے باہر نکلنا دشوار بن گیا ہے ۔شہر کے رعناواری، خانیار، نوہٹہ،راجوری کدل، بہوری کدل،مہاراج گنج، عالی کدل، نائد کدل، مخدوم منڈو ، کلاش پورہ زینہ کدل، گوجوارہ، حول ، حاکہ بازار، دیوی آنگن ہاری پربت و دیگر علاقوںمیں آوارہ کتوں کی ہڑبونگ سے لوگوں میں خوف و ہراس پھیل گیا ہے ۔ مقامی لوگوں کے مطابق کتوں کی تعداد اس قدر بڑھ گئی ہے کہ لوگ سڑکوں پر چلنے میں خوف محسوس کررہے ہیں ۔ لوگوں کے مطابق شام کے بعد انہوں نے اپنے گھروں سے باہر نکلنا ہی چھوڑ دیا ہے، اگر مجبوری کے وقت کوئی شہر ی کسی کام کے سلسلے میں گھر سے باہر نکلتا ہے تو اس کے پیچھے درجن بھر آوارہ کتوں لگ جاتے ہیں ۔ان علاقوں کے مکینوں کا کہنا ہے کہ آوارہ کتوں کی تعداد اس قدر بڑھ گئی ہے کہ ایک ایک دروازے کے باہر چار چار کتے کھڑے رہتے ہیں ۔ نائد

شاہ آباد سعیدہ کدل کے لوگ محکمہ تعمیرات عامہ سے نالاں | 2برس قبل ڈرنیج کی تعمیر کیلئے کھودی گئی سڑکیں مرمت کی منتظر

 سرینگر //شاہ آباد سعیدہ کدل میںڈرنیج کیلئے کھودی گئی سڑکیں ابھی بھی مرمت کی منتظر ہیں، تاہم حکام اس جانب کوئی بھی دھیان نہیں دے رہی ہے ۔ سال 2018میں امرت اسکیم کے تحت جھیل ڈل میں گندے پانی کی نکاسی کیلئے ڈرنیج کی تعمیر کیلئے کھودی گئی سڑکیں ابھی بھی مرمت کی منتظر ہیں اور یہ سڑکیں  اب لوگوں کیلئے درد سر بنی ہوئی ہیں۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ محکمہ یو ای ای ڈی نے ڈرنیج کیلئے کھودی گئی سڑک کی مرمت نہیں کی اور نہ ہی محکمہ آر اینڈ بی نے سڑک پر میگڈیم بچھانے کیلئے کوئی اقدام اٹھایا ہے۔ شاہ آباد میں رہنے والے ہلال احمد نے بتایا کہ سڑک کی خستہ حالت کے نتیجے میں لوگوں کو پریشانی کا سامنا ہے ۔ہلال احمد نے بتایا کہ سڑک پر بزرگوں اور بچوں کا چلنا مشکل ہوگیا ہے جبکہ آنے والے موسم سرما میں یہ سڑک لوگوں کیلئے مزید مشکلات پیدا کرسکتی ہے۔ ہلال نے مزید بتایا کہ جب بھی محکمہ یو ای ای ڈی سے

بصیر خان کل عوامی شکایات سنیں گے

سرینگر//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان 29 ستمبر یعنی منگل کو صبح 10بجے سرینگر میں عوامی شکایات کی شنوائی کریں گئے ۔وہ منگل کو صبح کے وقت لیفٹیننٹ گورنرس شکایتی سیل چرچ لین سونہ وار سرینگر میں موجود رہیں گئے ۔ عوامی وَفود اور اَفراد جو اپنی شکایات و مانگیں حکومت کی نوٹس میں لانا چاہتے ہیں وہ  مذکورہ جگہ اور وقت پر مشیر سے مل سکتے ہیں ۔مشیر سے مذکورہ جگہ سے ملنے والے لوگوں سے استدعا کی گئی ہے کہ وہ کویڈ۔ 19 وَبا کے پیش نظر صحت رہنما خطوط اور پروٹوکال پر عمل پیرا رہیںاور وفود میں تین سے زیادہ اَفراد نہ ہوں۔  

مزید 2432مسافروں کی آمد | 16 پروازیں کے ذریعے سرینگر پہنچے

سرینگر//کویڈ 19کے سبب بیروان ممالک اور ریاست میں درماندہ ہوئے افراد کی گھر واپسی کا سلسلہ جاری ہے اور اتوار کو مزید 2432مسافر وںکو لے کر16 پروازیں سرینگر کے ہوائی اَڈے پر اتریں ہیں۔ جموں وکشمیر یونین ٹریٹری میں گھریلو پروازو ں کے دوبارہ شروع ہونے کے 126 واں دِن 3,908مسافروں کو لے کر اتوارکو 27پروازیں جموں اور سرینگرکے ہوائی اڈے پر اتریں۔ان میں سے 2432مسافروں کو لے کر16 پروازیں سرینگر کے ہوائی اَڈے پر اتریں ہیںاور اس طرح ابھی تک سرینگر ائیر پورٹ پر کل1,795گھریلو پروازیںاُتریں ہیں ۔ ہوائی اَڈے پر اُترتے ہی تمام مسافروں کا کویڈ۔19ٹیسٹ کیا گیا ۔حکومت نے ہوائی پروازوں کے ذریعے یوٹی میں وارِد ہونے والے تمام مسافروں کی آمد سکریننگ نمونے لینے اور قرنطین مراکز کی طرف لے جانے کے لئے معقول ٹرانسپورٹ اِنتظامات کئے گئے ہیں۔      

تازہ ترین