تازہ ترین

جامع مسجد بدستور بند

سرینگر//وادی میں معمول کی سرگر میاں بحال ہونے کے باوجود جمعہ کوجامع مسجد سر ینگر سمیت بیشتر خانقاہوں اور زیا ر ت گاہوں میں بارہویں ہفتے بھی نماز جمعہ کے اجتماعات منعقد نہیں ہو سکے۔ کورونا کی دوسری لہر میں نرمی آنے کے ساتھ ہی انتظامیہ نے 31 جون کو مرکزی زیر انتظام خطے کے سبھی بیس اضلاع میں کرفیو میں نرمی کی تھی۔ پچھلے ہفتے ہی جموں کشمیر کے سبھی اضلاع سے ہفتہ وار بندشیں بھی ہٹائی گئیں لیکن اسکے باوجود بارہویں مرتبہ جامع مسجد سرینگر کے ممبرومحراب خامو ش رہے۔ شیخ سید عبدالقادر جیلانی ؒ سے منسوب آستان عالیہ خانیار میں بھی لوگوں کی ایک اچھی خاصی تعداد نے نماز جمعہ ادا کی۔  

لال منڈی کے قریب ہاوس بوٹ غرقآب

سرینگر//گذشتہ رات سری نگر کے لال منڈی میں میوزیم کے قریب دریائے جہلم میں ہاوس بوٹ ڈوب گیا جبکہ پانچ افراد خانہ  بے گھر ہوگئے۔کنبہ کے افراد نے بتایا کہ گذشتہ رات ان کا ہاوس بوٹ جہلم میں ڈوب گیا جس کے نتیجے میں وہ بے گھر ہوگئے۔  ہاوس بوٹ کے مالک محمد اشرف خانقاشی نے بتایا کہ ہاوس بوٹ میں جب پانی داخل ہوا ،تو وہ بال بال بچ گئے اور غرقابی سے بچنے کیلئے ہاوس بوٹ سے باہر کود پڑے۔انکا کہنا تھا کہ وہ اب بے گھر ہوگئے ہیں اور ان کے پاس سر چھپانے کیلئے کوئی جگہ نہیں ہے۔خانقاشی کا کہنا تھا کہ وہ اب ہمسایہ کے ہاوس بوٹ میںہے۔ انکا کہنا تھا کہ ان کے ہاوس بوٹ کی مرمت پر قریب ایک لاکھ50ہزار روپے خرچہ آے گا اور اس کے پاس اس قدر رقم نہیں ہے کہ وہ اس کی مرمت کریںاور نا ہی ایسے ہی وسائل ہیں کہ وہ از خود ہاوس بوٹ کی مرمت کریں گا۔

تازہ ترین