جموں میں اقلیتوں میں خوف وہراس : سول سوسائٹی | روشنی ایکٹ کے نام پر ایک طبقہ کو نشانہ بنایا جارہا ہے ، حکو مت سے حفاظت کا مطالبہ

جموں//جموں میں روشنی ایکٹ کے تحت اراضی پرفیصلے کے نام پر ایک طبقہ کونشانہ بنانے کا الزام عائد کرتے ہوئے جموں کے ممتاز شہریوں نے کہاکہ بٹھنڈی اور سنجواں علاقوں کے رہائشیوں سمیت اقلیتیں خوف اورعدم تحفظ کا شکار ہیں۔سول سوسائٹی کے ممبران اور ریٹائرڈ بیوروکریٹس ریٹائرڈ ڈپٹی کمشنر اور ممتاز پنجابی مصنف خالد حسین، ریٹائرڈ ڈپٹی کمشنر خواجہ غلام احمد، ریٹائرڈ ڈپٹی کمشنر گلزار قریشی، ممتاز وکیل شیخ شکیل احمد، ممتاز تاجر شیخ جاوید اقبال، ریٹائرڈ ی ٹی او نسیم ملک، سرپنچ بٹھنڈی نور عالم، ریٹائرڈ AEE محمد آمین بٹ، ایڈووکیٹ دانش بٹ اور دیگران نے موجودہ حالات پر ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا’’حکومت کی توجہ بٹھنڈی کی طرف لانا ضروری تھا جہاں ایک ماہ کے اندر تین مسلسل احتجاج ہوچکے ہیں، اگر 25 نومبر کو مقامی افراد اور پولیس کی بروقت مداخلت نہ ہوتی تو یہ امن وامان کے ایک بڑامسئلہ پیدا

۔1947 سے پہلے کا ریکارڈ ؔ بٹھنڈی اور سنجواں جنگلاتی اراضی نہیں

جموں// ریٹائرڈ ڈپٹی کمشنر اور ممتاز پنجابی مصنف خالد حسین نے 1947 کے محکمہ مال ریکارڈ کے حوالے سے انکشاف کیا ہے کہ مہاراجہ کے زمانے میں بٹھنڈی اور سنجواں جنگلات کی زمین نہیں تھی۔انہوں نے کہا کہ بٹھنڈی اور سنجواں میں جنگل کی کوئی سرزمین نہیں تھی جبکہ ایک پرانے ریکارڈکے کاغذات میں اس کا نام ’ملکا سرکار دولت  مادر‘بتایا گیا تھا۔پرانے ریکارڈ کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا’’اس زمین کی تعریف ’واریال‘ (آبپاشی زمین) اور ’واریال ڈوم‘ (غیر آبپاشی زمین)، بنجر قدیم (سب سے قدیم ناقابل زراعت اراضی) کے طور پر کی گئی تھی، سنجواں گاؤں کا تعلق 1947 سے قبل جموں و کشمیر کے قدیم ترین پٹوارخانوں میں ہوتا تھا اور بٹھنڈی سنجواں پٹوار کے گائوں ڈونگیاں کا حصہ تھا،تب بٹھنڈی گائوں نہیں تھا‘‘۔انہوں نے کہا’’یہ اراضی مقامی گجروں کے قبضے

مشن یوتھ جموں کشمیراورممبئی اسٹاک ایکس چینج کے مابین معاہدہ | مرکزی زیرانتظام علاقہ کے نوجوانوں کو مالی جانکاری اور تربیت فراہم کی جائے گی

جموں//بمبئی سٹاک ایکسچینج اورجموں وکشمیر کے مابین حال ہی میں طے شدہ معاہدے کے بعد آج بی ایس ای انسٹی چیوٹ کے چیئرمین امریش دتہ اور سی ای او مشن یوتھ اور ڈائریکٹر جے اینڈ کے سکل ڈیولپمنٹ مشن ڈاکٹر سیّد عابد رشید شاہ نے  ایک میٹنگ کی مشترکہ طور صدارت کرتے ہوئے مختلف سکل ڈیولپمنٹ ٹریننگ کورسوں کی عمل آوری پر غور و خوض کیا جو بینکنگ فائنانشل انشورنس بی ایف ایس آئی سیکٹر کی جانب سے جموںوکشمیر میں شروع کئے جارہے ہیں ۔واضح رہے کہ معاہدوں پر دستخط کرنے کے بعد جموںوکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر نے پروگرام کی فوری عمل آوری کی ہدایات جاری کی ہیں تاکہ جموںوکشمیر کے نوجوانوں کے لئے روزگار کے مواقع فراہم کئے جاسکیں۔ بی ایس ای انسٹی چیوٹ کے نمائندگان ، جے اینڈ کے مشن یوتھ اور جے اینڈ سکل ڈیولپمنٹ مشن کے ملازمین نے میٹنگ میں شرکت کی ۔ اس کے دوران اُمید واروں کے انتخاب اور ٹریننگ کورسوں کی کامیاب عم

گپکار الائنس سے جڑی جماعتیں بھاجپا سے خوفزدہ:شاہنوازحسین | بھارتیہ جنتاپارٹی جموں کشمیرکے لوگوں کی خوشحالی اور بہبودی کی متمنی

چوکی بل (کپوارہ)// دفعہ370کو دنیا کی کوئی طاقت  دوبارہ بحال نہیں کرسکتی اور جو لوگ اُس کوبحال کرنے کاوعدہ کرتے ہیں وہ سراب ہے۔ان باتوں کااظہار بھارتیہ جنتاپارٹی کے قومی ترجمان سید شاہنوازحسین نے ریڈی چوکی بل کپوارہ میں ایک عوامی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے بندوق اُٹھانے والے نوجوانوں کو بندوق چھوڑ کر قلم ہاتھ میں اُٹھانے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ جنگجو کی عمر دس سال سے کم ہوتی ہے۔ انہو ں نے کہا کہ لوگ ’گپکار گینگ ‘ سے ہو شیار رہیں، کیونکہ گپکار الائنس سے جڑی سیاسی پارٹیا ں بی جے پی سے خوف ذدہ ہیں اور اس لئے ملکر بی جے پی کے خلاف الیکشن میں حصہ لیا۔انہو ںنے کہا کہ گپکار گینگ والو ں نے ہمیشہ اپنے رشتہ دارو ں کی بھلائی کے لئے کام کیا اور اگر کشمیر کے لوگو ں کی بھلائی کے لئے کام کیا  ہوتا، تو آج یہ لوگ بھی کشمیر میں کھل کر گھومتے ۔انہو ں نے کہا ہندوستان ایک سو

تازہ ترین