مشرقی لداخ میں بھارتی فوج بھرپور جنگ لڑنے کے قابل:فوجی ترجمان

جموں//ہندوستانی فوج نے کہا ہے کہ وہ مشرقی لداخ میں چین کے ساتھ طویل تعطل کے لئے تمام آپریشنل تیاریوں کے ساتھ اچھی طرح سے تیار ہے تاہم ہندوستان ہمیشہ بات چیت کے ذریعہ معاملات حل کرنا چاہتا ہے۔چین کے ساتھ کشیدگی کے بیچ دفاعی ترجمان کے بیان میں کہاگیاہے کہ مشرقی لداخ میں سردیوں میں بھی بھارتی فوج پوری طرح سے جنگ لڑنے کی صلاحیت سے تیار ہے۔سرکاری بیان میں واضح کیاگیاہے کہ سخت موسم کی صورتحال لائن آف ایکچول کنٹرول کے ساتھ چین کے ساتھ سرحد کا دفاع کرنے میں ہندوستانی فوج کے محافظوں کو پریشان نہیں کرسکے گی۔بیان میں کہاگیاہے کہ ہندوستانی فوج کے پاس سیاچن کا تجربہ ہے جہاں حالات ایل اے سی کے مقابلے میں کہیں زیادہ مشکل ہیں۔دفاعی ترجمان نے کہا ’’جسمانی اور نفسیاتی طور پر سخت لڑنے والی ہندوستانی فوج کے مقابلے میں ، چینی فوج زیادہ تر شہری علاقوں سے ہے اور وہ مشکلات کا سامنا نہیں کرتی یا

خوبصورتی سے مالا مال ریاسی

ریاسی//ضلع ریاسی کے دور دراز علاقہ جات میں کئی ایک خوبصورت جگہیں ہیں تاہم یہ علاقے محکمہ سیاحت کی نظروں سے اوجھل ہیں۔سب ڈویڑن مہور کے درجنوں مقامات جن میں لپری ٹاپ،اچنی،سنگڑی،سونا بگا،دیول مرگ،انسی ٹاپ،تھائی مرگ، اڑیتل، نکن ٹاپ،آگشی،لیون گلی وغیرہ سیروتفریح کے لحاظ سے اعلیٰ درجہ رکھتے ہیں۔اگرچہ گول گلابگڑھ کو قدرت نے اپنے حسن جمال سے نوازا ہے اور گول گلابگڑھ کی حسین پہاڑیاں اپنی مثال خود بیان کرتی ہیں لیکن اس علاقہ کی طرف کبھی بھی کسی حکومت کی جانب سے اس علاقہ کو سیاحتی نقشے پر لانے کیلئے توجہ نہیں دی۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ بدقسمتی کی بات تو یہ ہے کہ ریاسی  کے دور دراز علاقہ جات میں سڑک کی سہولت نہ ہونے کی وجہ سے یہ علاقہ جات پچھڑے ہوئے ہیں اور ان مقامات کی خوبصورتی کی کوئی قیمت نہیں ہے۔علاقہ میں درجنوں ایسے خوبصورت مقامات ہیں جہاں پر دور دور سے سیاح ا?سکتے ہیں لیکن سڑک کی سہو

تازہ ترین