جموں میں کورونا سے ایگریکلچر آفیسر کی موت، تعداد190

  سرینگر//جموں کے تالاب تلو میں ایک شہری، جو پیشے سے ایگریکلچر آفیسر تھا منگل کے روز کورونا وائرس کی وجہ سے فوت ہوگیا۔ اس طرح جموں کشمیر میں مہلک وائرس سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر190تک پہنچ گئی ہے۔ جی ایم سی جموںکے پرنسپل ڈاکٹر نصیب چند ڈوگرہ نے نیوز ایجنسی جی این ایس کو بتایا کہ مذکورہ مریض کو12جولائی کے روز داخل کرایا گیا تھا اور اُسے فوراً وینٹی لیٹر پر رکھا گیا تھا جس کے دوران آج صبح اُس کی موت واقع ہوگئی۔ اس سے قبل بارہمولہ کا ایک شہری سکمز صورہ میںکورونا کی وجہ سے دم توڑ بیٹھا۔  

جزوری سیاحتی سرگرمیوں کی بحالی 14جولائی سے کورونا ٹیسٹ لازمی ، سیاحوں کو پہلے ہی ہوٹل اور ٹکٹ بک کرنیکامشورہ

جموں //14جولائی سے سیاحتی سرگرمیوں  کی جزوی طو رپر بحالی کی اجازت دیتے ہوئے حکام نے سیاحوں کیلئے کورونا ٹیسٹ کو لازمی قرار دیاہے ۔ساتھ ہی سیاحوں کو مشورہ دیاگیاہے کہ وہ ہوٹل اور ٹکٹ کی بکنگ پہلے ہی کریں ۔پہلے مرحلے کے تحت حکومت نے سیاحوں کی آمد کے سلسلے کو بحال کرتے ہوئے ان کیلئے قواعد جاری کئے ہیں ۔انہیں مشورہ دیاگیاہے کہ وہ ہوائی سفر کریں اور لازمی طو رپر اپنا کورونا ٹیسٹ کروائیں۔انہیں یہ مشورہ بھی دیاگیاہے کہ ایئرپورٹ پر اترنے کے بعد وہ ہوٹل کی طرف سے بک کی گئی گاڑی پر ہی سفر کریں ۔قواعد میں کہاگیاہے کہ ہوٹل ، ہائوس بوٹ اور گیسٹ ہائوسز کی طرف سے ہی سیاحوں کیلئے ٹرانسپورٹ کا بندوبست کیاجائے گاجس میں سماجی دوری کے اصول کو اپنایاجائے گا۔قواعد میں بتایاگیاہے کہ احکامات کی خلاف ورزی کرنے پر ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایکٹ2005کے تحت کارروائی کی جائے گی۔اس سلسلے میں جاری ہونے والے حکمنامہ میں ب

جموں کا55سالہ شہری کورونا سے جاں بحق، اموات کی تعداد164ہوگئی

سرینگر//بری برہمنا جموں کا ایک55سالہ شہری ہفتے کو جی ایم سی جموں میں کورونا وائرس کی وجہ سے جاں بحق ہوگیا۔یہ آج دن کے دوران ہونے والی چوتھی ایسی ہلاکت تھی جس سے مہلک وائرس سے مرنے والوں کی تعداد164تک پہنچ گئی۔ جی ایم سی جموں کے میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر دارا سنگھ نے نیوز ایجنسی جی این ایس کو بتایا کہ مذکورہ شہری ذیابطیس سمیت کئی بیماریوں میں مبتلاءتھا۔اُسے29جون کو داخل کرایا گیا تھا اور وہ آج انتقال کرگیا۔ اس سے قبل آج وادی کشمیر میں کورونا کی وجہ سے تین شہری جاں بحق ہوگئے۔ان میں سے ایک کا تعلق اننت ناگ، دوسرے کا تعلق حیدر پورہ سرینگر جبکہ تیسرے کا تعلق ترہگام کپوارہ سے تھا۔

امرناتھ یاتراکیلئے حفاظتی انتظامات

مرمو نے جنوبی کشمیر کے ضلع کولگام کا دورہ کر کے وہاں ایک مشترکہ سیکورٹی جائزہ میٹنگ کی صدارت کی ۔اس دوران انہوں نے آئندہ امرناتھ جی یاترا کے حوالے سے سیکورٹی کے موجودہ انتظامات کا تفصیلی جائزہ لیا۔میٹنگ میں جموں وکشمیر پولیس کے سربراہ دلباغ سنگھ ، ڈویژنل کمشنر کشمیر ،پی کے پولے ، آئی جی کشمیر وجے کمار ، ڈی آئی جی اننت ناگ اتل کمار گوئل ، ڈی آئی جی سی آر پی ایف دلیب سنگھ امبیش ، ایس پی کولگام کے علاوہ تمام حفاظتی ایجنسیوں کے اعلیٰ افسران بھی میں موجود تھے ۔ میٹنگ کے دوران ایس ایس پی کولگام نے ایل جی کو کولگام پولیس کی جانب سے ضلع میں سماج دشمن عناصر سے نپٹنے کیلئے شروع کی گئی مختلف مہموں کے بارے میں آگاہ کیا ۔انہوں نے  لیفٹینٹ گورنر کو کووِڈ - 19کے پھیلائوں کو روکنے کیلئے پولیس اور انتظامیہ کے کام کو بھی اُجاگر کیا ۔انہوں نے کہا کہ ضلع میں امن وقانون کی صورتحال کو بنائے رکھنے

معیشت کی بحالی انتہائی ضروری:اپنی پارٹی | لیفٹیننٹ گورنرسے مذہبی مقامات اور سیاحتی شعبہ کی بحالی کا مطالبہ

جموں//پونی، پِٹھو اور پالکی والوں کے لئے جامع مالی پیکیج کی مانگ کرتے ہوئے جموں وکشمیر اپنی پارٹی نے لیفٹیننٹ گورنر گریش چندر مرمو سے اپیل کی ہے وہ جموں وکشمیر میں مذہبی مقامات اور سیاحتی شعبہ کو بحال کریںتاکہ معیشت کو پٹری پر لایاجاسکے۔ایک بیان میں پارٹی لیڈران اعجاز احمد خان، منجیت سنگھ اوروکرم ملہوترہ نے حکومت سے اپیل کی کہ مذہبی مقامات کو کھول دیاجائے تاکہ مذہبی مقامات سے جڑا کاروبار بحال ہو تاکہ تاجر وکاروباری طبقہ اور اُن کے اہل خانہ کو راحت ملے جوکہ اِس وقت مالی بحران کا شکار ہیں۔انہوں نے کہاکہ ماتا ویشنو دیو ی کٹرہ، اولڈ سٹی جموں میں تاریخی رگھوناتھ مندر ، باغ ِ بہو کے نزدیک تاریخی باوے والی ماتا مندر، ستواری زیارت، راجوری میں شاہدرہ شریف زیارت، ریاسی میں شیو کھوڑی، پیر کھو گپھا، کشتواڑ میں شاہ اسرار المعروف دربار ِ اسراریہ اور آستان پیاں ، مچیل ماتا، پونچھ میں بڈھا امرناتھ، ض

روزانہ 500امرناتھ یاتری شاہراہ سے سفر کریں گے | مشیر بھٹناگر اور پولیس سربراہ کا گپھا کا دورہ ، انتظامات کا جائزہ لیا

جموں //بھاگوتی نگر جموں میں واقع یاتری نواس کو امرناتھ یاترا کیلئے آنے والے یاتریوں کی خاطر بیس کیمپ کے طور پر استعمال کیاجائے گا۔اس حوالے سے بات کرتے ہوئے ایک افسر نے بتایا’’یاتری نواس کو بیس کیمپ کے طور پر استعمال کیاجائے گا اور اس سلسلے میں سیکورٹی کے تمام تر انتظامات کئے گئے ہیں ‘‘۔جموں و کشمیر انتظامیہ نے روزانہ 500یاتریوں کو جموں سرینگر شاہراہ پر سفر کرنے کی اجازت دی ہے ۔قبل ازیں سالانہ یاترا کو شیڈیول کے مطابق 23جون کو شروع ہوناتھا تاہم کورونا وائرس کے باعث اس میں تاخیر ہوئی ۔واضح رہے کہ یاتری نواس جموں کو پہلے انتظامی قرنطینہ میں تبدیل کیاگیاتھا اور پھر اسے اپ گریڈ کر کے 500 بستروالا کووڈ ہسپتال بنایاگیا۔دریں اثناء اتوار کو لیفٹنٹ گورنر کے مشیر آر آر بھٹناگر اور پولیس سربراہ دلباغ سنگھ نے امرناتھ گپھا بالتل کا دورہ کیا اور سیکورٹی صورتحال کا جائزہ لیا

بڑی براہمناں فیکٹری کے 17ورکر کورونا مثبت

جموں //سانبہ کے صنعتی علاقے بڑی براہمناں کی ایک فیکٹری سے 17ورکر کورونا وائرس سے متاثر پائے گئے ۔ چیف میڈیکل افسر سانبہ راجندر سنگھ سمبیال نے بتایا’’پیپسی فیکٹری بڑی براہمناں کے 17ورکروں کی آج کورونا رپورٹ مثبت آئی ہے جبکہ دوروز قبل اسی فیکٹری کے 2ورکر کورونا میں مبتلاپائے گئے تھے‘‘۔انہوں نے بتایاکہ انہوں نے پیپسی کمپنی کے لگ بھگ500ورکروں کے کورونا نمونے حاصل کئے اوربیشتر کے نتائج ملنے کا انتظار ہے ۔انہوں نے بتایاکہ 17ورکروں کے نمونے مثبت آنے کی تصدیق ہوئی ہے جبکہ دو ملازم دوروز قبل مثبت پائے گئے تھے ۔انہوں نے بتایاکہ ابتدائی معاملات میں ڈپٹی منیجر رینک کا ایک منتظم بھی کورونا مثبت پایاگیااور فیکٹری کو حکام نے وقتی طور پر سیل کردیاہے۔  

ٹیلی ریڈیولوجی سے 1ہزار مستحقین مستفید

 جموں//لیفٹیننٹ گورنر گریش چندر مرمو کی جانب سے 24؍جون 2020ء کو جموں وکشمیر میں ٹیلی ریڈیولوجی کا اِفتتاح کرنے کے بعد پہلے ہفتے کے دوران زائد اَز ا1000مریضوں کو یہ سہولیت فراہم کی گئی۔اِس پہل کے تحت ڈوڈہ ، رِیاسی ، رام بن ،پونچھ ، کپواڑہ اوربانڈی پورہ کے دُور دَراز اور دُشوار گزار علاقوں میں نامزد مراکز پر مریضوں کو ایکسرے اور سٹی سکین رِپورٹ مقررہ مدت کے اندر فراہم کئے گئے۔ٹیلی ریڈیولوجی سہولیت قومی صحت مشن کے مفت قومی تشخیصی پہل کے تحت جموںوکشمیر یونین ٹریٹری کے نامزد طبی اِداروں میں فراہم کی جارہی ہے اور اِبتدائی مرحلے میں دیہی اور دُور دراز اور دُشوار علاقوں پر توجہ مرکوز کی جارہی ہے۔اِس پہل سے دیہی علاقوں میں بود و باش رکھنے والے لوگوں کو راحت ملی اور اُنہیں درست تشخیص جدید ترین ٹیکنالوجی اور تشخیصی آلات کو بروئے کار لا کر کی گئی۔ اس پہل سے دیہی اور دُشوار علاقوں کے مریضوں ک

۔1,75,166درماندہ شہری واپس لائے گئے

  جموں//حکومت جموں وکشمیر نے کووِڈلاک ڈائون کے سبب ملک کے مختلف حصوں میں درماندہ جموںوکشمیر کے     1,75,166 شہریوں کو  بسوں کے ذریعے براستہ لکھن پور اور کووِڈخصوصی ریل گاڑیوں کے ذریعے تمام رہنما خطوط اور ایس او پیز پر عمل پیرا رہ کر یوٹی واپس لایا۔حکومت نے لکھن پور کے راستے بسوں کے ذریعے اب تک بیرون ملک سے 657مسافرو ں کویوٹی واپس لایا  ۔اِس طرح جموںوکشمیر حکومت نے اب تک 69 کووِڈ خصوصی ریل گاڑیوں اور براستہ لکھن پور بسو ںکے کاروان میں اب تک بیرون یوٹی درماندہ 1,75,166 شہریو ں کو کووڈِ۔19 وَبا سے متعلق تمام احتیاطی تدابیر کواپناتے ہوئے واپس لایا گیا۔تفصیلات کے مطابق 29جون سے 30 جون2020ء کی صبح تک لکھن پور کے راستے سے1,620  درماندہ مسافر یوٹی میں داخل ہوئے جبکہ818مسافر آج 48ویں دلّی کووِڈ خصوصی ریل گاڑی سے جموں پہنچے ۔اب تک 48ریل گاڑیوں سے یوٹی کے مختلف

رشوت ستانی کا معاملہ

جموں //اینٹی کرپشن بیورو جموں نے سینئر سابق کے اے ایس افسر کے خلاف رشوت ستانی کے معاملے میں تحقیقات مکمل کرکے چالان عدالت میں پیش کیاہے ۔سابق ڈپٹی ایکسائز کمشنر (ایگزیکٹو)جموں سید مریدحسین شاہ ولد نصیب شاہ ساکن گورسائی تحصیل مینڈھر ضلع پونچھ کے خلاف ایف آئی آر زیر نمبر42/2018کے تحت کیس درج تھا اور اب چالان اینٹی کرپشن جموں سپیشل جج کے پاس پیش کیاگیاہے۔تحقیقات کے مطابق 21/12/2018کو کرنل ایچ ڈی ایس رینل ولد دلیپ سنگھ ساک 243سیکٹر1چھنی ہمت جموں نے اس وقت ایکسائز کمشنر کے عہدے پر تعینات مرید حسین شاہ کے خلاف تحریری طور پر شکایت درج کروائی ،جس میں الزام عائد کیاتھاکہ مذکورہ افسر اس کی شراب کی دکان کی لائسنس زیر نمبر204/JKEL-02کی تجدید کیلئے 2لاکھ روپے رشوت طلب کررہاہے ۔اینٹی کرپشن بیورو کے مطابق اس پر ایف آئی آر درج کرکے تحقیقات شروع کی گئی اور مذکورہ افسر کو 2لاکھ روپے رشوت طلب اور قبو

جموں میں زلزلے کے ہلکے جھٹکے

جموں//یواین آئی// صوبہ جموں میں منگل کی صبح زلزلے کے ہلکے جھٹکے محسوس کئے گئے جو چند سیکنڈوں تک جاری رہے۔ ریکٹر اسکیل پر زلزلے کی شدت چار اعشاریہ صفر ریکارڈ کی گئی ہے۔ تاہم زلزلے سے کسی جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔سرکاری ذرائع نے زلزلے کے بارے میں تفصیلات فراہم کرتے ہوئے کہا،’’صوبہ جموں بالخصوص جموں، ریاسی، ادھم پور اور خطہ چناب کے دو اضلاع کشتواڑ اور رام بن میں منگل کی صبح 8 بجکر 56 منٹ کے قریب زلزلے کے ہلکے جھٹکے محسوس کئے گئے۔ ریکٹر اسکیل پر اس کی شدت چار اعشاریہ صفر ریکارڈ ہوئی ہے‘‘۔انہوں نے کہا کہ زلزلے کا مرکز جموں وکشمیر کا ہی کوئی علاقہ تھا اور اس کی گہرائی دس کلو میٹر تھی۔واضح رہے کہ جموں کشمیر زلزلیاتی پیمانے پر سب سے زیادہ خطرناک پانچ اور چار زون میں آتا ہے۔  

جموں میں زلزلے کے ہلکے جھٹکے

جموں// صوبہ جموں میں منگل کی صبح زلزلے کے ہلکے جھٹکے محسوس کئے گئے جو چند سیکنڈوں تک جاری رہے۔ ریکٹر اسکیل پر زلزلے کی شدت چار اعشاریہ صفر ریکارڈ کی گئی ہے۔ تاہم اس زلزلے میں کسی جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔  

کٹھوعہ میں پہلی کورونا ہلاکت،85سالہ خاتون چل بسی، تعداد97

سرینگر//جموں کشمیر کے ضلع کٹھوعہ میں منگل کو پہلی کورونا ہلاکت واقع ہوئی جس کے ساتھ ہی مرکز کے زیر انتظام علاقے میں کورونا سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر97ہوگئی ہے۔ خبر رساں ایجنسی کے این او کے مطابق کٹھوعہ کی رہنے والی85سالہ خاتون ،جو کئی امراض میں مبتلاءتھی، آج صبح دم توڑ بیٹھی۔ ایس ایس پی کٹھوعہ شیلندر مشرا نے مذکورہ خاتون کی موت کی تصدیق کی۔    

کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے جموں میں میٹنگ کاانعقاد

جموں//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے سول سیکریٹریٹ جموںمیں میٹنگ منعقد کر کے کووِڈ۔19 سے نمٹنے کے لئے کئے جارہے اِضافی اِقدامات کا جائزہ لیا۔ڈویژنل کمشنر کشمیر ، صوبائی کشمیر کے ڈپٹی کمشنراں ، ڈائریکٹر سکمز صورہ ، ڈائریکٹر محکمہ صحت کشمیر، پرنسپل جی ایم سی سری نگراور متعلقہ محکموں کے اعلیٰ افسران نے میٹنگ میں ویڈیوکانفرنسنگ کے ذریعہ شرکت کی۔مشیر نے تمام ڈپٹی کمشنران سے کووِڈ۔19کی روکتھام کے لئے کئے گئے اِقدامات کے بارے میں تفصیل طلب کی۔ بصیر خان نے صوبائی کشمیرکے ڈپٹی کمشنروں اور صوبائی اِنتظامیہ کو دائمی امراض یعنی ذیابطیس ، سرطان ، ہائی بلڈ پریشراورگردوں میں مبتلا ایسے مریض جن کی ڈائلیسس ہو رہی ہو جو ساٹھ برس سے زائد عمر کے افراد کی صد فیصد جانچ اور تشخیص یقینی بنائیں۔مشیرنے اَفسروں کو حکومت ہند اور جموںو کشمیر یوٹی سیکرٹریٹ سے لیفٹیننٹ گورنر کی جانب سے جاری رہنما خطوط پر سخ

ملک کے مختلف حصوں میں درماندہ1,68,327افرادواپس لائے گئے

  جموں//حکومت جموں وکشمیر نے کووِڈلاک ڈاون کے سبب ملک کے مختلف حصوں میں درماندہ جموںوکشمیر کے  1,68,327 شہریوں کو  بسوں کے ذریعے لکھن پور سے اور کووِڈخصوصی ریل گاڑیوں کے ذریعے تمام رہنما خطوط اور ایس او پیز پر عمل پیرا رہ کر یوٹی واپس لایا۔حکومت نے لکھن پور کے راستے بسوں کے ذریعے اب تک بیرون ملک سے 657مسافرو ں کویوٹی واپس لایا ہے ۔اِس طرح جموںوکشمیر حکومت نے اب تک 66 کووِڈ خصوصی ریل گاڑیوں اور براستہ لکھن پور بسو ںکے کاروان سے بیرون یوٹی درماندہ 1,68,327 شہریو ں کو کووڈِ۔19 وَبا سے متعلق تمام احتیاطی تدابیر پر عمل کرکے واپس لایا۔تفصیلات کے مطابق 26جون سے 27 جون2020ء کی صبح تک لکھن پور کے راستے سے1,757  درماندہ مسافر جن میں پاکستان سے 122 اور روس سے 2 (بیرون ملک) شامل ہیں، یوٹی میں داخل ہوئے جبکہ867مسافر  45ویں دلّی کووِڈ خصوصی ریل گاڑی سے جموں پہنچے ۔اب تک 45ری

گھریلو پروازو ں کی اُڑانوں کا 34واںدِن

  جموں//جموں وکشمیر یونین ٹریٹری میں گھریلو پروازوں کے دوبار ہ چالوہونے کے34ویں دِن  2,424مسافروں کو لے کر  سنیچرکو21 پروازیں جموں اور سری نگر ہوائی اڈوں پر اُتریں ۔834مسافروں سمیت 8کمرشل پروازیں جموں ہوائی اڈے اور 1,590مسافروں کو لے کر13 پروازیں  سری نگر کے ہوائی اڈے پر اُتریں۔ہوائی اڈے پر اُترتے ہی تمام مسافروں کا کووِڈ۔19ٹیسٹ کیا گیا اوردونوں ہوائی اڈوں سے  مسافراپنے منازل کی طرف تما م احتیاطی تدابیر پر عمل پیر ا رہ کر روانہ کئے گئے۔حکومت نے ہوائی پروازوں کے ذریعے یوٹی میں وارِد ہونے والے تمام مسافروں کی آمد سکریننگ نمونے لینے اور قرنطین مراکز کی طرف لے جانے کے لئے معقول ٹرانسپورٹ انتظامات کئے گئے ہیں اور اس دوران  شہری ہوا بازی اور صحت و خاندانی بہبود کی مرکزی وزارتوں کی جانب سے مقرر کئے گئے رہنما خطوط اور ایس او پیز کا خاص خیال رکھا جارہا ہے۔ &nb

جموں بار ایسوسی ایشن کے سابق صدر فوت

جموں// جموں وکشمیر ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن جموں کے سابق صدر اور سینئر ایڈوکیٹ بی ایس سلاتھیہ ہفتہ کی صبح فوت ہوگئے۔ستر سالہ ایڈوکیٹ سلاتھیہ نے چندی گڑھ کے پی جی آئی ہسپتال میں آخری سانسیں لیں جہاں وہ زیر علاج تھے۔ وہ جموں کی ترقی کے لئے اٹھنے والی تحریکوں میں ہمیشہ پیش پیش رہتے تھے۔ایڈوکیٹ سلاتھیہ کے پسماندگان میں ان کی اہلیہ دو بیٹیاں اور ایک بیٹا شامل ہے۔ ان کی میت ہفتہ کی شام کو جموں پہنچ گئی اور آج یعنی اتوارکواُن کے آخری رسوم انجام دئے جائیں گے۔دریں اثنا سلاتھیہ کے انتقال پر وکیل برادری میں غم کی لہر دوڑ گئی ہے نیز کئی سیاسی و سماجی جماعتوں نے اظہار غم کرتے ہوئے سوگواران سے تعزیت کی۔ ادھر لیفٹیننٹ گورنر گریش چندر مرمو نے سینئر وکیل اورہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن جموںکے سابق صدر بی ایس سلاتھیہ کی وفات پر تعزیت کا اظہار کیا ۔ اپنے تعزیتی پیغام میں لیفٹیننٹ گورنر نے آنجہانی سلات

پاکستان میں درماندہ 404شہریوں کی بذریعہ بس واپسی

جموں //جموں وکشمیر کے 404افراد کو بذریعہ بس واپس لایاگیاہے جو کورونالاک ڈائون کی وجہ سے پاکستان میں درماندہ ہوکر رہ گئے تھے ۔ڈپٹی کمشنر کٹھوعہ اوپی بھگت نے بتایا’’204افراد لکھنپور پہنچے ، ان کا استقبال کیا گیا اور انہیں کھانے پینے کی اشیاء فراہم کرکے اپنے متعلقہ اضلاع کیلئے روانہ کردیا گیا‘‘۔بھگت نے بتایاکہ یہ افراد8بسوں اور2چھوٹی گاڑیوں کے ذریعہ پہنچے اور سانبہ ضلع انتظامیہ نے ان کیلئے رات کے کھانے کا بندوبست کیاہے ۔انہوں نے بتایاکہ 200مزید افراد پاکستان سے واپس آگئے ہیں اور دیر گئے شام تک وہ بھی لکھنپور پہنچیں گے ۔انہوں نے بتایاکہ اس طرح سے کل 404افراد واپس آئے ہیں ۔امتیاز احمد لون پچھلے تین ماہ سے اسلام آباد میں درماندہ تھے جو واپس پہنچے ہیں ۔ ان کاکہناہے کہ ان کے ساتھ آنیوالے کئی طلباء ہیں جبکہ کچھ اپنے رشتہ داروں سے ملاقات کیلئے پاکستان گئے تھے ۔اسی طرح

فاروق خان نے جموں وکشمیر میں سماجی بہبودی سکیموں کی آوری کا جائزہ لیا

جموں//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر فاروق خان نے محکمہ سماجی بہبود کی میٹنگ کی صدارت کی ۔ میٹنگ کا اِنعقاد مختلف مرکزی معانت سکیموں کی عمل آوری کا جائزہ لینے کے لئے کیا گیا۔میٹنگ میں پرنسپل سیکرٹری محکمہ سماجی بہبود ، محکمہ کے ناظم جموں ، ڈائریکٹر جنرل برائے ترقی خواتین و اطفال، انٹگریٹیڈ چائیلڈ ڈیولپمنٹ سروسز ، سی پی ایس ، ایس سی ایس ٹی کارپوریشن کے مشن ڈائریکٹران او دیگر اعلیٰ اَفسران موجود تھے جبکہ ڈائریکٹر جنرل محکمہ سماجی بہبود کشمیر ، جموں وکشمیر کے ڈپٹی کمشنران ، ضلع سماجی بہبود اَفسران اور پروگرام اَفسران نے میٹنگ میں بذریعہ ویڈیو کانفرنسنگ شرکت کی۔اِس موقعہ پر اَپنے خیالات کا اِظہار کرتے ہوئے مشیر خان نے افسروں کو سکیموں سے متعلق جانکاری عام کرنے کے لئے کہا تاکہ مستحقین اِن سکیموں سے اِستفادہ کرسکیں۔اُنہوں نے ڈپٹی کمشنر وں اور سوشل ویلفیئرافسرو ں کو تمام اہم سکیموں کو آئی سی ڈی ایس

’ڈکشااورودیادان‘پورٹلوں کاآغاز | درس وتدریس میں بہتری کیلئے اختراعی اقدام کئے جارہے ہیں : شرما

جموں//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر کے کے شرما نے جموںوکشمیر میں ڈکشا اور وِدیا دان پورٹلوں و اَپیس کا آغاز کیا۔پرنسپل سیکرٹری محکمہ تعلیم نے بھی تقریب میں سری نگر سے ویڈیو کانفرنس کے ذریعے شرکت کی جبکہ کمشنرسیکرٹری اعلیٰ تعلیم ، چیئرپرسن جے کے بی او ایس ای ، ناظم تعلیم جموں ، ناظم تعلیم کشمیر اور پروجیکٹ ڈائریکٹر سماگراہ شکھشا اِس موقعہ پر موجود تھے۔ڈی آئی کے ایس ایچ اے( ڈیجیٹل اِنفراسٹرکچر فار نالیج شیئرنگ ) پورٹل  اساتذہ کی تدریسی صلاحیتوں کو مزید فروغ دینے میں معاون ثابت ہوگا ۔اِس کی مدد سے اساتذہ اپنی تدریسی صلاحیتوں کو مزید نکھار سکتے ہیں اور دیگر اساتذہ کے ساتھ بھی رابطے قائم کرسکتے ہیں۔اس موقعہ پر اَپنے خیالات کا اِظہار کرتے ہوئے کے کے شرما نے کہا کہ جموںوکشمیر حکومت درس و تدریس کے عمل کے معیار میں بہتری لانے کے لئے متعدد اختراعی اِقدامات اُٹھارہی ہیں ۔اُنہوں نے کہاکہ کووِڈ ۔19

تازہ ترین