سامبہ میں قرنطین مرکز سے فرار ہونے والا شخص بازیاب، کیس درج

سرینگر//ضلع سامبہ میں کورونا وائرس کے ایک مشتبہ مریض کو قرنطین مرکز سے فرار ہونے کے بعد واپس لایا گیا جس کے بعد پولیس نے اُس کیخلاف کیس درج کرلیا۔ سرکاری ذرائع نے پیر کے روز بتایا کہ ہندوارہ کا رہنے والا ایک شخص گذشتہ روز سامبہ میں قائم ایک قرنطین مرکز سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔واقعہ کی اطلاع ملنے کے بعد پولیس کی ایک ٹیم نے مذکورہ شخص کو بازیاب کرکے واپس قرنطین مرکز پہنچایا۔ سرکاری ذرائع کا مزید کہنا تھا کہ مذکورہ شخص کو اچھی طرح معلو م ہے کہ کورونا وائرس کتنا مہلک ہے اور اس کے باوجود قرنطین مرکز سے جان بوجھ کر بھاگ گیا جس کی وجہ سے اُس نے باقی لوگوں کو خطرے میں مبتلاءکیا۔ انہوں نے کہا کہ مذکورہ شخص کیخلاف رام گڑھ پولیس سٹیشن میں کیس درج کرلیا گیا ہے۔  

کورونا وائرس وَبا | گاندھی نگر ہسپتال مؤثر طریقے سے نمٹنے کیلئے تیار/ڈاکٹر بھگت

جموں//میڈیکل سپر اِنٹنڈنٹ گورنمنٹ ہسپتال گاندھی نگر ڈاکٹر لکشمن داس بھگت نے کہا کہ کووِڈ۔19 مریضوں کو مناسب طبی نگہداشت فراہم کرنے کے لئے ہر ممکن کوششیں جاری ہیں۔اُنہوں نے کہا کہ یہ اِدارہ کورونا وَبا سے نمٹنے کے لئے مؤثر طریقے پر تیار رکھا گیا ہے۔اُنہوں نے کہا کہ ہسپتال اِنتظامیہ متعلقہ مریضوں کو مناسب علاج فراہم کرنے کے لئے طبی نگہداشت کے تمام رہنما خطوط پر عمل کر رہا ہے۔اُنہوں نے کہا کہ اب تک باقاعدہ پروٹوکو ل کے بعد 62 کورنٹین مریضوںکو ہسپتال سے رخصت کیا گیا ہے۔گورنمنٹ ہسپتا ل گاندھی نگر جسے خصوصی طور پر کووڈ۔19 ہسپتال نامزد کیا گیا ہے میں 270 آئیسولیشن بستروں کی گنجائش ہے۔ ڈاکٹر بھگت نے مزید کہا کہ محکمہ صحت نے کورونا وائرس مریضوں سے نمٹنے کے لئے ہسپتال میں ایک نئے بلاک کو چالو کرنے کے لئے فوری اقدامات کئے ۔ اِس کے علاوہ ہسپتال میں نیو نیٹل اور ایک بچوں کا وارڈ بھی مو جود ہے۔اُن

ملازمین کی ایس آر ٹی سی بسوں کے ذریعہ واپسی

جموں //سیول سیکریٹریٹ ملازمین اوران کے اہل خانہ کو سٹیٹ روڈ ٹرانسپورٹ کارپوریشن کی گاڑیوں کے ذریعہ گھر واپس روانہ کیاجارہاہے جبکہ دربار موو کے سلسلے میں ایک ہفتے کے اندر فیصلہ متوقع ہے ۔اگرچہ ملازمین اور ان کے گھروالوں نے لاک ڈائون شرو ع ہوتے ہی گھر واپسی کا عمل شروع کردیاتھاتاہم ابھی تک کچھ ملازمین جموں میں موجود تھے جنہیں بھی ایس آر ٹی سی بسوں کے ذریعہ سرینگر اور دیگر علاقوں بھیجاجارہاہے ۔ایس آر ٹی سی جنرل منیجر سدیش گپتا نے بتایا’’آج ہم نے کارپوریشن کی دو گاڑیاں بھیجی ہیں جن میں دربار موو ملازمین اور ان کے گھر والے جموں سے سرینگر روانہ ہوئے‘‘۔انہوں نے بتایاکہ گزشتہ روز بھی دو بسیں روانہ کی گئیں ۔سیول سیکریٹریٹ نان گزیٹیڈ ایمپلائز یونین کے صدر رئوف احمد بٹ نے بتایاکہ زیادہ تر ملازمین پہلے سے ہی اپنے محکمہ جات سے اجازت لیکر گھروں کوروانہ ہوگئے تھے جبکہ 45فیص

کٹھوعہ سے مزید345افراد کشمیر روانہ

جموں //کٹھوعہ سے مزید 345افراد کو کشمیر میںاپنے متعلقہ اضلاع کیلئے روانہ کیاگیاہے جنہوں نے قرنطینہ کی 14روزہ مدت مکمل کرلی تھی ۔ان افراد کا تعلق کشمیر کے مختلف اضلاع سے ہے جن کیلئے ضلع انتظامیہ کٹھوعہ نے 19سٹیٹ رورڈ ٹرانسپورٹ کارپوریشن بسوں کا اہتمام کیاتھا۔یہ سبھی افراد بیرون جموں وکشمیر سے لاک ڈائون کی مدت کے دوران واپس لوٹے تھے جنہیں 14دنوں کیلئے کٹھوعہ میں قرنطینہ رکھاگیاتھا۔دریں اثناء ضلع انتظامیہ کٹھوعہ نے تمام ایڈیشنل ڈپٹی کمشنروں، سب ڈیویژنل مجسٹریٹس، تحصیلداروں اور بلاک ڈیولپمنٹ افسران کو ہدایت دی ہے کہ پنچایتی راج اداروں اور بلدیاتی اداروں کے علاوہ سیلف ہیلپ گروپوں کو متحرک کرکے ماسک تیار کرنے کے کام پر لگایاجائے ۔ انتظامیہ کے ایک افسر نے بتایاکہ 20اپریل تک سبھی کیلئے ماسک کاہدف رکھاگیاہے ۔  

اگلے چند روز اہم، تلاش اور جانچ میں تیزی لائی جائے

جموں///مرکزی کابینہ سیکریٹری راجیو گابا نے تمام ریاستوں اور یوٹیز سے کہا  ہے کہ وہ کورونا وائرس کے پھیلائو سے نمٹنے کیلئے اُن کی حکمت عملی کے ایک حصے کے طور پر کنٹینمنٹ پلان تیار کریں اور زمینی سطح پر اِس کی موثر عمل آوری کو بھی یقینی بنائیں ۔کابینہ سیکریٹری اتوار کو ریاستوںکے چیف سیکریٹریوں کے علاوہ دیگر افسروں کے ساتھ ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے بات چیت کر رہے تھے۔اُنہوں نے کہا کہ اگلے چند روز ہم سب کے لئے اہمیت کے حامل ہے اور ہمیں تمام وسائل بروئے کار لا کر کووِڈمخالف اقدامات کو تقویت بخشنی چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ ڈسٹرکٹر سرویلنس ٹیمیں اور ریپیڈ ریسپانس ٹیمیں مکمل طور پر متحرک ہونے چاہئے تاکہ وقت ضائع کئے بغیر مشتبہ شخص کی نشاندہی ہوسکے اور اُس کی جانچ کی جاسکے۔ کابینہ سیکریٹری نے ریاستوں اور یوٹیز سے کہا کہ وہ کورونا وائرس کے مریضوں کی صحت کا وضع کئے گئے پروٹوکال کے مطابق دیکھ ری

زندگی بخش ادویات وادی بھیج دی گئیں | مریضوں کیلئے دوماہ کیلئے سٹاک ذخیرہ کیا گیا :ڈرگ کنٹرولر آرگنائزیشن

جموں//کورونا وائرس کی وبا ء کے مد نظر لاک ڈاون سے وادی میں لوگوں کی جان بچانے اور ان کا تحفظ یقینی بنانے کی غرض سے جے اینڈ کے ڈرگ اینڈ فوڈ کنٹرول آرگنائزیشن ( ڈی ایف سی او) نے وافر مقدار میں ادویات ہوائی جہاز کے ذریعے وادی کشمیر بھیج دی۔ ان ادویات کو خصوصی سٹوریج سہولیات فراہم کرنے کی غرض سے اُنہیں سرینگر میں قائم ایم آر ایس انٹرپرائزز ، ایکسٹنشر فارما ، جے ایس ٹریڈرس، ای ایف ایف اے اے وائی ٹریڈریس ، بہری ایجنسیز اینڈ جے ایس برادرس کے پاس پہنچایا گیا ۔631 کلوگرام وزنی یہ کنسائنمنٹ وادی کے مریضوں کے علاج و معالجہ کے دو ماہ کی مدت کے لئے کافی ہوگا۔یہاںیہ بات قابل ذکر ہے کہ لاک ڈاون اور شاہراہ بند رہنے کے مد نظر وادی میں ادویات کی کمی کے بارے میں موصول رپورٹوں کے بعد ان ادویات کو خصوصی منصوبے کے تحت ہوائی جہاز کے ذریعے وادی پہنچایا گیا۔ اس عمل میں ائیر فورس ، ریڈ کراس اور جموںوکشمیر حکو

تازہ ترین