تازہ ترین

شرما نے کلسٹر یونیورسٹی جموں کا جائیزہ لیا

جموں// لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر کے کے شرما نے کلسٹر یونیورسٹی جموں کی وائس چانسلر پروفیسر انجو بھسین کے ساتھ ایک ویڈیو کانفرنس کے ذریعے یونیورسٹی کے تدریسی منظر نامے اور سال 2020-21 کیلئے داخلے کے عمل کا جائیزہ لیا ۔ اس موقعہ پر مشیر موصوف نے یونیورسٹی کی جانب سے ڈیجیٹل تدریسی عمل شروع کرنے کی سراہنا کی جس کے ذریعے طالب علم اور فیکلٹی ممبران آپس میں رابطہ کر سکتے ہیں ۔ ویڈیو کانفرنس کے ذریعے کے کے شرما نے یونیورسٹی کے فیکلٹی ممبران اور دیگر عملے کے ساتھ تبادلہ خیال کیا اور معیاری تعلیم فراہم کرنے کے علاوہ موجودہ صورتحال میں طالب علموں کو تعلیمی سہولیات فراہم کرنے کیلئے اُن کی تعریف کی ۔ انہوں نے یونیورسٹی حکام پر زور دیا کہ وہ اپنے ڈیجیٹل پروگراموں کو شائع کریں تا کہ طالب علم ان سے زیادہ سے زیادہ استفادہ کر سکیں ۔ انہوں نے تدریسی عملے پر زور دیا کہ وہ آئی سی ٹی کے استعمال کو ایک معمول

جموں میں صحت و صفائی کا عمل مزید تیز

جموں//کورونا وائرس کے پھیلاؤ سے پیدا شدہ صورتحال کو روکنے کیلئے جموں میونسپل کارپوریشن ( جے ایم سی ) نے روزانہ بنیادوں پر سینی ٹائیزیشن اور سینی ٹیشن مہم کو شہر میں تیزی لائی ہے ۔ اس کے علاوہ کارپوریشن کی دیگر ذمہ داریاں بھی باقاعدگی کے ساتھ انجام دی جا رہی ہیں ۔ ان باتوں کا اظہار کمشنر جے ایم سی اولین لواسہ نے یہاں جے ایم سی کے افسران کی ایک میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے کیا ۔ کووڈ 19 کے خلاف جاری جنگ میں سینی ٹیشن ورکروں کی کارکردگی کی سراہنا کرتے ہوئے لواسہ نے کہا کہ جبکہ شہر کی ساری آبادی لاک ڈاؤن کے تحت اپنے اپنے گھروں میں قیام پذیر ہیں لیکن کورونا وائرس کی چین کو توڑنے کیلئے جے ایم سی کا سینی ٹیشن عملہ ( صفائی کرمچاری ) شہر کو صاف رکھنے اور شہر کے لوگوں کی صحت محفوظ رکھنے کیلئے دن رات کام کر رہے ہیں ۔ صفائی کرمچاریوں کی صحت کا تحفظ یقینی بنانے کیلئے انہیں دستانے ، سینی ٹائیزر اور م

یونیورسٹیوں کی تیاری کا جائیزہ لیا

جموں//لیفٹینٹ گورنر گریش چندر مرمو نے جموں کشمیر کی یونیورسٹیوں کے وائس چانسلروں کے ساتھ ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے کووڈ 19 کے خلاف لڑائی میں ان اداروں کی تیاریوں کا جائیزہ لیا ۔ لیفٹینٹ گورنر نے لاک ڈاؤن کے بعد یونیورسٹیوں کی جانب سے کی گئی احتیاطی تدابیر کے بارے میں جانکاری حاصل کرتے ہوئے اداروں میں کیمیکل کا چھڑکاؤ کرانے کی ہدایت دی ۔ یونیورسٹیوں اور کالجوں میں تعلیمی نقصان کی بھرپائی کے بارے میں لیفٹینٹ گورنر کو بتایا گیا کہ طالب علموں کو آن لائن موڈ کے ذریعے تدریسی مواد فراہم کیا جاتا ہے اور ای کلاسز لی جاتی ہیں ۔ انہوں نے یونیورسٹیوں میں سوشل ڈیسٹینسنگ بنائے رکھنے کی تلقین کی تا کہ کورونا وائیرس کے پھیلاؤ کو قابو کیا جا سکے ۔ موقعہ پر بتایا گیا کہ تمام یونیورسٹیوں میں طالب علموں کی راحت رسانی کیلئے نوڈل افسر تعینات کئے گئے ہیں۔ انہوںنے کہا کہ کشمیر میں 24 اور جموں میں 10 علاقے

کورونا وائرس سے نمٹنے کے اقدامات | ہائی کورٹ نے 10روز میں رپورٹ طلب کرلی

جموں//جموں و کشمیر ہائی کورٹ نے جموں و کشمیر اور لداخ کی حکومتوں کی اُن کوششوں کی سراہنا کی ہے جو انہوں نے کورونا وائیرس ( کووڈ 19 ) کی وباء کو پھیلنے سے روکنے کے سلسلے میں انجام دی ہیں ۔چیف جسٹس جموں اینڈ کشمیر ہائی کورٹ جسٹس گیتا متل اور جسٹس رجنیش اوسوال نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے حکومت سے طبی نگہداشت کے پیشہ وروں کو دستیاب تحفظی آلات کی دستیابی کے بارے میں رپورٹ طلب کی ۔ ہائی کورٹ کی طرف سے تمام ہسپتالوں /اداروں میں 24 گھنٹے جاری رہنے والے کنٹین /کیچن کی خدمات جاری رکھنے کے امکانات کو تلاش کرنے کی بھی ہدایت دی ۔ اس سلسلے میں ہائی کورٹ نے صحت و طبی تعلیم کے سیکرٹری کو ہدایت دی کہ وہ معاملے کی نگرانی کرتے ہوئے رپورٹ پیش کریں ۔ طبی خدمات میں مصروف عملے کو آٹھ گھنٹے کی ڈیوٹی سے زیادہ مدت کیلئے گھر سے باہر رہنا پڑتا ہے اس لئے چند افراد کا نیٹ ورک معرض وجود میں لانا ضروری بنتا ہے جو ا

جموں صوبہ میں صورتحال جوں کی توں | لاک ڈائون کا سختی سے نفاذ بدستو ر جاری

جموں //جموں میں سنیچر کے روز بھی لاک ڈائون سختی سے نافذ رہا اور اس دوران سڑکیں پوری طرح سے سنسان نظر آئیں جبکہ بازار بدستور بند پڑے ہیں ۔اگرچہ ادویات اور دیگر اشیائے ضروریہ کی دکانوں کوکہیں کہیں کھلنے کی اجازت دی جارہی ہے تاہم کئی علاقوں کو مکمل طور پر سیل کیاگیاہے اور پولیس اور پیرا ملٹری فورسز جگہ جگہ تعینات ہیں جن کی طرف سے اہم چوراستوں اور سڑکوں پر خاردار تاریں بچھائی گئی ہیں ۔پورے صوبہ جموں میں سنیچر کے روز بھی لاک ڈائون رہا اور خطہ پیر پنچال اور خطہ چناب سمیت سبھی اضلاع میں سختی کے ساتھ امتناعی احکامات کی پاسداری کو یقینی بنایاگیا۔اس دوران لکھن پور سے لیکر پونچھ تک سڑکیں سنسان نظر آئیں اور صرف اشیائے ضروریہ والی گاڑیوں کو سکریننگ کے بعد چلنے کی اجازت دی گئی ۔ سبھی اضلاع میں ٹرانسپورٹ بند ہونے کی وجہ سے بڑی تعداد میں مسافروں کو پیدل چلتے ہوئے دیکھاگیا جبکہ کئی مریض بھی دربدر ہوئ

تازہ ترین