ضلع ترقیاتی کونسل چیئرمینوں کیلئے خواتین کے ریزرویشن روسٹر میں تبدیلی

 جموں // خواتین کیلئے ضلع ترقیاتی کونسل چیئرپرسنوں کے ریزرویشن روسٹر میں تبدیلی کرنے پر جموں کشمیر ہائی کورٹ نے مرکزی زیرانتظام علاقہ کی انتظامیہ کو نوٹس جاری کرکے 27جنوری تک یاا س سے قبل جواب داخل کرنے کی ہدایت دی ہے۔ جموں کشمیر حکومت کی طرف سے 11جنوری کو ضلع ترقیاتی کونسل چیئرپرسنوں کے عہدوں کیلئے ریزرویشن قواعد جاری کئے ،کانگریس نے ضلع ترقیاتی کونسل چیئرپرسنوں کے لئے خواتین کے ریزرویشن روسٹر میں تبدیلی پرسوال اُٹھایا اور کہا کہ یہ لوگوں کے منڈیٹ کوشکست دینے اور نتائج سے چھیڑ چھاڑکرنے کی کوشش ہے ۔  کانگریس کے ضلع ترقیاتی کونسل ممبر ندیم شریف نیاز اوردیگرمنتخب ممبران کی عرضی پرجمعہ کو جموں کشمیر ہائی کورٹ نے حکم جاری کیااورجسٹس رجنیشن اوسوال نے یوٹی حکومت کے علاوہ اسٹیٹ الیکشن کمیشن کو ہدایت دی کی وہ اگلی تاریخ یعنی27جنوری سے قبل اپنا جواب داخل کرے۔عدالت نے رجسٹری کو بھی حکم

گڑھا سلاتھیہ میں لائبریری عمارت کا سنگِ بنیاد

 سانبہ//سیکرٹری محکمہ دیہی ترقی اور پنچائتی راج شیتل نندا نے بلاک وجے پور میں گڑھا سلاتھیہ پنچایت کیلئے لائبریری عمارت کا سنگِ بنیاد رکھا۔ اس موقعہ پر انہیں بتایا گیا کہ لائیبریری عمارت مقامی گورنمنٹ ہائی سکول کے نزدیک 13 ویں مالی کمیشن سکیم کے تحت محکمہ دیہی ترقی کی جانب سے 21.0 لاکھ روپے کی لاگت سے تعمیر کی جا رہی ہے۔ اس موقعہ پر محکمہ دیہی ترقی کی مختلف سکیموں کو اجاگر کرتے ہوئے طلاب نے ایک نکڑ ناٹک پیش کیا۔ سیکرٹری دیہی ترقی نے اس موقعہ پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کیپکس بجٹ کے تحت منظور شدہ کاموں کو ہی ضلع میں اولین ترجیح دی گئی ہے تا کہ عوام کی بہبود کیلئے پائیدار اثاثے قائم کئے جا سکیں۔ مقامی لوگوں کی مانگوں پر ردِ عمل کے تحت سیکرٹری نے دیہی ترقی افسران کو ترقیاتی کام بشمول اراضی کی سطح ہموار کرنے ، نئی گلی کوچوں اور نالیوں کی تعمیر وغیرہ کا کام ہاتھ میں لینے کی

کسانوں تحریک کی حمایت میں راج بھون کے باہر احتجاج

 جموں//جموں و کشمیر کسان تحریک اور سنٹر آف انڈین ٹریڈ یونینوں (سی آئی ٹی یو) نے ہفتے کے روز راج بھون کے باہر مرکزی زرعی قوانین کو منسوخ کرنے کے مطالبے کے سلسلے میں جاری کسانوں کے احتجاج کی حمایت میں ایک احتجاجی مظاہرہ کیا۔  مظاہرین کی قیادت سی ٹی یو کے ریاستی صدر اور سی پی آئی (ایم) کے رہنما ایم وائی تاریگامی نے کی جنھوں نے "کسانوں کی تاریخی جدوجہد" پر ردعمل پر مرکز کو تنقید کا نشانہ بنایا اور وزیر اعظم نریندر مودی سے اپیل کی کہ وہ اپنی "سختی" کو ترک کردیں اور کسانوں کے مطالبات کوقبول کریں ۔تاریگامی نے نامہ نگاروں کو بتایا "جموں و کشمیر کے کسان ملک کے باقی حصوں میں کسانوں کے احتجاج میں متحد ہیں۔ کسان ملک کی ریڑھ کی ہڈی ہیں اور اگر وہ کمزور ہوئے تو معاشرے کے ساتھ ساتھ ملک بھی کمزور ہوگا"۔جموں و کشمیر کسان تحریک کے ترجمان نے بتایا کہ یہ احتجاج ج

تازہ ترین