تازہ ترین

چھانہ پورہ میں تشدد سے شہری کی ہلاکت | لواحقین کا پریس کالونی میں احتجاج،انصاف کی مانگ

سرینگر// چھانہ پورہ میں مبینہ طور پر تشدد کا نشانہ بنانے کے دوران ایک شہری کی ہلاکت کے خلاف اہل خانہ نے پریس کالونی لالچوک میں احتجاج کرتے ہوئے حملہ کرنے والوں کو قانون کے کٹہرے میں لانے کا مطالبہ کیا۔ پریس کالونی میں جمعہ کو چھانہ پورہ سے تعلق رکھنے والا ایک کنبہ اور انکے رشتہ دار جمع ہوئے اور احتجاج کرتے ہوئے انصاف کے حق میں نعرہ بازی کی۔احتجاجی مظاہرین نے بتایا کہ گزشتہ دنوں منی کالونی چھانہ پورہ میں مبینہ طور پر ایک شہری کو تشدد کا نشانہ بنا کر اسے ہلاک کیا گیا۔فوت شدہ شہری کی دختر نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ غلطی سے انکے گھر کے سامنے ایک لڑکی پر پانی کی چھینٹے پڑی اور اس نے شور و غل مچایا۔ مہلوک کی بیٹی صدف بقال نے بتایا کہ اس دوران مذکورہ لڑکی کا ایک رشتہ دار بھی وہاں پہنچا جو کہ پیشہ سے فٹ بال کھلاڑی ہے اور جموں کشمیر بنک میں کام کرتا ہے،نے اس کے والد پر اس کا لباس برباد کرنے کا

چیرکوٹ اور ڈانگری رامحال میں پانی کی قلت | 4سال قبل چرائی گئی پائپوں کو جوڑنے کی مانگ

کپوارہ//چیرکوٹ اور ڈنگری رامحال میں ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی پینے کے صاف پانی سے محروم ہیں۔ لوگوں کاکہناہے کہ مذکورہ علاقوں کوڈانگر واڑی واٹرسپلائی سکیم سے پانی فراہم کیا جاتا تھا لیکن 4سال قبل پنجواہ سے چیرکوٹ تک پانی سپلائی کرنے والی سروس پائپوں کی چوری ہوگئی جس کے باعث 17ہزار نفوس پر مشتمل آبادی پانی کی ایک ایک بوند کیلئے ترس رہی ہے۔ لوگوںکاکہنا ہے کہ پانی کیلئے ٹیوب ویل لگائے گئے لیکن خشک سالی کے سبب پانی کی سطح کم ہے اور صرف کئے گئے روپے ضائع ہوگئے۔ لوگوںکاکہنا ہے کہ خواتین کو 2 کلو میٹر پیدل جاکر ندی نالو ں سے پانی حاصل کرتے ہیں تاہم ہو نا قابل استعمال ہو تا ہے ۔مقامی لوگو ں نے بتا یا کہ ان علاقوں میں منقطع ہوئی واٹر سپلائی سکیم کو از سرنو جو ڑ نے کے لئے وہ گز شتہ 4برسوں سے محکمہ جل شکتی کے دفتروں کا چکر کا ٹ کاٹ کر تھک ٓچکے ہیں لیکن تا حال نئی پایپو ں کو نہیں جو ڑ دیا گیا ۔م

چاڈورہ ہسپتال میں لیڈی ڈاکٹروں کی عدم دستیابی | خواتین مریض دیگرہسپتالوں کا رخ کرنے کیلئے مجبور

سرینگر//سب ضلع اہسپتال چاڈورہ میں طبی عملے کی کمی کے باعث خواتین مریضوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرناپڑرہا ہے۔ لوگوںکاالزام ہے کہ ہسپتال میں 2ماہر امراض خواتین تعینات ہے تاہم انتظامیہ نے ایک خاتون ڈاکٹر کو کووڈ۔19 ڈیوٹی پر تعینات کیا جبکہ دوسری سرجن ڈاکٹر کی عدم موجودگی کے باعث خواتین مریضوں کو دوسرے ہسپتالوں کا رخ کرنا پڑ رہا ہے ۔ کے این ایس کے مطابق مقامی لوگوں نے مانگ کی ہے کہ ہسپتال میں طبی عملے خاص کر خواتین امراض کے ڈاکٹروں کی موجودگی کویقینی بنانے کیلئے فوری اقدامات کئے جائیں۔  

بلال آبادکنڈ آستان ترال پائین کے لوگوں کی مانگ | سڑک پر میکڈم بچھانے سے قبل ڈرینج کا انتظام کیا جائے

ترال //ترال ستورہ روڑ پر واقع بلال آباد کنڈ آستان ترال پائین کے لوگوں نے ترال ستورہ روڑ کو تعمیر کرنے والی تعمیراتی ایجنسی سے مطالبہ کیا ہے کہ سڑک پر میکڈم بچھانے سے پہلے سڑک کے دونوں اطراف ایک ڈرین تعمیر کرنے کی ضرورت ہے ۔علاقے سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے بتایا ہم سرکار کے شکر گزار ہیں کہ انہوں خستہ حال سڑک پر میگڈم بچھانے کا کا ہاتھ میں لیا ہے تاہم مذکورہ علاقے میں نذیر احمد بٹ کے مکان سے حاجی محمد انور ڈار کے مکان تک دونو اطراف سے ڈرین تعمیر کرنے کی ضرورت ہے ۔انہوں نے اس بارے میںمتعلقہ محکمے کے اعلیٰ حکام سے فوری مداخلت کی اپیل کی ہے ۔آبادی کا کہنا تھا کہ مذکورہ جگہ پر پانی کو باہر نکلنے کے لئے کوئی جگہ نہیں ہے اس لئے ڈرین تعمیر کرنے کی اشد ضرورت ہے۔انہوں نے بتایا اس حوالے سے اگر چہ لوگوں نے مقامی سب ضلع انتظامیہ سے مداخلت کی اپیل کی تھی تاہم تا حال کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائ

۔5 اگست 2019 سے5اگست2020تک 346 ہلاکتیں : رپورٹ

سری نگر// جموں و کشمیر کولیشن آف سول سوسائٹی (جے کے سی سی ایس) نے اپنی تازہ رپورٹ میں کہا ہے کہ سال گذشتہ 5 اگست کو خصوصی آئینی حیثیت کے خاتمے کے بعد سے جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی صورتحال بد سے بد تر ہوگئی ہے۔’’دفعہ 370 کے خاتمے کے بعد ایک سال، جموں و کشمیر میں حقوق انسانی کی صورتحال‘‘ عنوان والی اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی کے کشمیر میں جنگجویت کو ختم کرنے اور تشدد کو کم کرنے کے دعوے سراب ثابت ہوئے ہیں۔رپورٹ میں کہا گیا ہے،’’تشدد کم نہیں ہوا ہے دراصل جنگجوؤں اور سیکورٹی فورسز کے درمیان تصادم آرائیوں کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے۔ اگست 2019 سے اگست 2020 تک جموں و کشمیر میں کم سے کم 346 ہلاکتیں ہوئی ہیں جن میں 73 عام شہری، 76 سیکورٹی فورسز اہلکار اور 197 جنگجو شامل ہیں‘‘۔جے کے سی سی ایس نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ

دفعہ370کی منسوخی کے فائدے عوام کو عنقریب ملیں گے | وزیراعظم نے انتظامیہ صاف کرکے اِس کی نئی تعمیر کی ہدایت دی :چیف سیکریٹری

سرینگر//جموں کشمیر سے دفعہ 370کی منسوخی کے تمام فوائد کو حاصل کرنے کیلئے عوام کو صبر رکھنا ہوگا، کی بات کرتے ہوئے جموں کشمیر کے چیف سیکرٹری بی وی آر سبرامنیم نے کہا ہے کہ جموں کشمیر ایک ٹوٹی ہوئی ریاست تھی اور گزشتہ سال ماہ اگست میں لیڈران کی گرفتاری پر ایک بھی فرد نے آنسو نہیں بہایا ۔ اسی دوران انہوںنے کہا کہ پنچوں اور سر پنچوں کی خالی پڑی سیٹوں پر انتخابات موجودہ صورتحال میں بہتر ی آنے کے ساتھ ہی منعقد کرائے جائیں گے ۔ سی این آئی کے مطابق جموں کشمیر کے چیف سیکرٹری بی وی آر سبرامنیم نے کہا ہے کہ جموں وکشمیر کے لوگوں کو دفعہ 370 کی منسوخی کے بعد اس کے فوائد سے لطف اندوز ہونے کے لئے صبر کرنا ہوگا کیونکہ ابھی تک بہت سارے مثبت اقدامات مکمل طور پر سامنے نہیں آسکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر ایک ٹوٹی ہوئی ریاست تھی اور بد انتظامی ، بدعنوانی اور ناقابل یقین حد تک دھوکہ دہی کے سبب

مزید خبریں

دوردرازعلاقوں میں تعلیمی ڈھانچے کی توسیع |  23 نئے کیندر وِدیالیہ قائم کئے جارہے ہیں : سامون  سرینگر//جموںوکشمیر میں تعلیم کے بنیادی ڈھانچے کو توسیع دینے کے لئے دور دراز علاقوں میں 23کیندریہ وِدیالیہ قائم کئے جارہے ہیں۔پرنسپل سیکرٹری محکمہ تعلیم داکٹر اصغر حسن سامون نے میٹنگ میں جموںوکشمیر کے دُور دراز علاقوں میں درس و تدریسی کے عمل میں کیندریہ وِدیالیوں کی اہمیت کو اُجاگر کیا۔ڈاکٹر سامون نے کہا کہ جموںوکشمیر میں 36 کیندر وِدیالیہ کام کر رہے ہیں اور مزید 23کیندر ودِیالیوں کے قیام سے تعلیم کے بنیادی ڈھانچے کو مزید فروغ حاصل ہوگا۔جن علاقوںمیں یہ کیندر وِدیالیہ قائم کئے جارہے ہیںان میں ویری ناگ، رانی پورہ ، گندو کاستی گڈھ ، گاندربل ، جگتی ،بنی،رامکوٹ، کپواڑہ، آزوتی، گالندر ، رینی پورہ ، نوشہرہ ، ڈونگی ، رام بن ، گول ، ریاسی ، کٹرا ، ککریال، وِجے پور،شوپیاں ، شادت کریوا، منت

گرمی نے 10سالہ ریکارڈ توڑ دیا

سرینگر //کشمیر وادی میں جھلسا دینے والی گرمی نے دس سالہ ریکارڈ توڑ دیا ہے اور جمعہ کے روز کشمیر وادی میں اس موسم کا سب سے گرم ترین دن ریکارڈ کیا گیا۔ سرینگر میں درجہ حرارت 35.4 ڈگری تک جا پہنچا جبکہ یہاں ہوا میں نمی کا تناسب 111فیصد تھا ۔ کپوارہ میںجمعہ کو زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 36.3 ڈگری سلسیش ریکارڈ کیا گیا ،جبکہ ضلع میں ہوا میں نمی کا تناسب 137ڈگری تک جا پہنچا  ۔قاضی گنڈ میں 32.3، پہلگام میں 29.3،کوکرناگ میں 31.6 اور گلمرگ میں 27.0ڈگری سلسیش ریکارڈ کیا گیا۔ محکمہ موسمیات کے ترجمان کے مطابق کشمیر میں پارہ جہاں 35.4 سے 36 ڈگری تک جا پہنچا وہیں جموں ضلع میں زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 32.2 ڈگری ریکارڈ کیا گیا ۔محکمہ موسمیات ڈائریکٹر سونم لوٹس نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ برسوں میں پہلی بار جمعہ کو اس موسم کا سب سے گرم دن ریکارڈ کیا گیا ۔انہوں نے کہا کہ2018میں 35.1ڈگری سلسیش ریکارڈ

دیوسر،کوکرناگ اور ڈورو میں بی جے پی ممبران مستعفی

اننت ناگ//بندوق برداروں کی جانب سے بی جے پی سے وابستہ پنچ اور سرپنچوں پر حملوں کے بعدپنچایتی ممبران و سیاسی کارکنوں میں خوف وہراس پھیل گیا ہے اور متعدد نے پارٹی کی بنیادی رکنیت سے مستعفی ہونے کا اعلان کیا ہے ۔گذشتہ روز آکھرن میں  پنچ کو زخمی کرنے اور ویسو میں سر پنچ کو ہلاک کرنے کے واقعات نور پورہ وتہ ناڈ کوکر ناگ سے تعلق رکھنے والے 3بی جے پی کارکنوں نے شبیر احمد خان ولد غلام رسول خان ،ریاض احمد راتھر ولد عبدالعزیز راتھر اور عبدالخالق شیخ ولد محمد سبحان شیخ نے سماجی رابط گاہوں کا سہارا لیکر اپنا استعفیٰ پیش کیا اور عوام سے معافی مانگی ۔بی جے پی جنرل سیکریٹری ڈورو حلقہ انتخاب محمد رفیق بٹ نے بھی اپنا استعفیٰ پیش کیا ہے اورمستقبل میں کسی بھی پارٹی سے لاتعلقی ظاہر کی ہے ۔بی جے پی جنرل سیکریٹری کولگام نذیر احمد میر ساکن کیلم،ضلع سیکریٹری شہزاد احمد بٹ ساکن چوگام،جنرل سیکریٹری دیوسر م

نورپورہ ترال میں بارودی شل ناکارہ

ترال+ پلوامہ// نور پورہ ترال میں باردودی شل ناکارہ بنایا گیا جبکہ کریم آباد پلوامہ میں طویل ترین کریک ڈائون کیا گیا۔ اونتی پورہ سے چند کلو میٹر دور نور پورہ نامی گائوں میںایک لنک روڑ پر مقامی لوگوں نے جمعرات کی صبح سڑک پر ایک بارودی شل دیکھا ، جسکے فوراً بعد پولیس کو مطلع کیا گیا ۔اس دوران پولیس نے اطلاع ملتے ہی بم ڈسپوزل سکارڈ طلب کرلیاجس نے بعد میں بارودی شل کو ناکارہ بنا یا ۔ادھر جنگجوئو ں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد فوج و فورسز اور ایس او جی پلوامہ نے کریم آباد گائوں کا محاصرہ عمل میں لایا۔ 5 اور 6 اگست کی درمیانی شب سے ہی گھر گھر تلاشی شروع کی گئی جبکہ مکینوں سے بھی پوچھ تاچھ ہوئی اور جمعرات کے بارہ بجے تک یہ سلسلہ جاری رہا۔ جنگجوئوں کو ڈھونڈ نکالنے کیلئے تمام تر وسائل بروئے کار لائے گئے لیکن کسی بھی جگہ جنگجوئوں اور فورسز کے مابین آمنا سامنا نہیں ہوا اور نہ ہی کسی جگہ سے ک

چیف سیکریٹری نے آتما نربھر بھارت ابھیان کے تحت جاری پیش رفت کا جائزہ لیا

 نجکاری کیلئے پبلک سیکٹر انٹر پرائزز کی نشاندہی کرنے کی تلقین سرینگر//چیف سیکرٹری بی وی آر سبھرامنیم نے ایک میراتھن میٹنگ میں آتما نربھر بھارت ابھیان کے مختلف شعبوں کے تحت جاری حصولیابیوں کے لئے کئے گئے اقدامات کا جائزہ لیا۔واضح رہے کہ اس ضمن میں8 ٹاسک فورس پہلے ہی قائم کئے گئے ہیںسرمایہ کاری صنعتی شعبے کی بحالی و ترقی کے ٹاسک فورس نے میٹنگ کو جانکاری دی کہ ضلع معدنیاتی افسران کو ضلع معدنیاتی رقومات کا استعمال میڈیکل ٹیسٹنگ اور سکریننگ کے لئے استعمال کرنے جبکہ چھوٹے اور درمیانہ درجے صنعتوں کو حکومت کے ای۔ مارکیٹ پلیس ( جی ای ایم) اور ٹریڈس پورٹل کے لئے اپنا نام درج کرنے کے لئے کہا گیا ہے ۔ اس کے علاوہ مقامی مصنوعات کو ترجیح دینے کے عالمی رسائی پروگرام کے تحت جموںوکشمیر کی دستکاری و ہینڈ لوم ، ریشم ، پشمینہ بسوہلی مصوری ، قالین وغیرہ کی ڈیزائن، مداخلت ، خام مال ، امداد ، عام

ڈی جی پولیس کا دعویٰ

 سرینگر// جموں کشمیر پولیس کے سربراہ دلباغ سنگھ نے کہا ہے کہ علیحدگی پسند لیڈروں نے جیل خانہ جات سے رہائی سے قبل’’اچھے برتائو کے مچلکہ‘‘ پر دستخط کئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دفعہ370کی تنسیخ کے بعد ایک سال قبل قریب504 علیحدگی پسند لیڈروں کو حراست میں لیا گیا تھا ، مچلکہ پر دستخط کرنے کے بعد انکی رہائی عمل میں لائی گئی۔دلباغ سنگھ نے کہا’’ مجموعی طور پر حریت کانفرنس اور جماعت اسلامی کے علاوہ دیگر جماعتوں کے504 علیحدگی پسندوں کو تاہم اچھے برتائو کے مچلکہ پر دستخط کرنے کے بعد رہا کیا گیا‘‘ ۔دلباغ سنگھ نے کہا کہ350علیحدگی پسند لیڈراں اور سنگبازوں کو بیرون ریاستوں کی جیلوں میں منتقل کیا گیا تھا،جن میں سے50سے60افراد ابھی نظر بند ہیں جبکہ باقی لوگوں کو رہا کیا گیا۔انہوں نے کہا جن لوگوں نے اچھے برتائو کے مچلکہ پر دستخط کئے، پر لازم ہے جیلوں اور خ

گیلانی کورونا میں مبتلا نہیں

سرینگر//سید علی گیلانی کے افراد خانہ نے اُن افواہوں کو یکسر مسترد کیا ،جن میں کہا گیا تھا کہ بزرگ رہنما کورونا میں مبتلا ہیں ۔ گیلانی کے فر زند نسیم گیلانی نے بتایا کہ چند شر پسند افراد اُنکے والد سے متعلق بے بنیاد افواہیں پھیلا رہے ہیں جس پر وہ بھی حیران وپریشان ہیں ۔انہوں نے ان افواہوں کو بد قسمتی سے تعبیر کرتے ہوئے کہا کہ انہیں معلوم نہیںان افواہوںکے پیچھے کون سے محرکات کار فر ما ہیں ۔انہوں نے کہا ’’میرے والد کمزور ہیں لیکن سر ما کے مقابلے میں اُنکی صحت اچھی ہے‘ ‘۔  

ملک کو ہٹانااور مرمو کا استعفیٰ عجب اتفاق : عمر عبداللہ

سرینگر(یو این آئی) //نیشنل کانفرنس کے نائب صدر اور سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے کہا کہ عجب اتفاق ہے کہ ریاست جموں و کشمیر کے آخری گورنر اور جموں و کشمیر یونین ٹریٹری کے پہلے لیفٹیننٹ گورنر دونوں کو اس وقت عہدوں سے برطرف کیا گیا جب انہیں اس کی کوئی توقعات ہی نہیں تھیں۔عمر عبداللہ نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا 'عجب اتفاق ہے کہ دونوں ریاست جموں وکشمیر کے آخری گورنر اور جموں وکشمیر یونین ٹریٹری کے پہلے لیفٹیننٹ گورنر کو اس وقت عہدوں سے ہٹایا گیا جب انہیں اس کی کوئی توقعات ہی نہیں تھیں۔ دونوں نے اپنا شیڈول بنایا ہوا تھا کہ انہیں بسترہ گول کرنے کو کہا گیا'۔قابل ذکر ہے کہ جموں و کشمیر کے پہلے لیفٹیننٹ گورنر گریش چندرا مرمو نے بدھ کو اچانک اس وقت اپنا استعفیٰ پیش کیا جب وہ دلی کے صحافیوں سے ملاقات کرنے والے تھے۔بتادیں کہ جموں وکشمیر کے پہلے لیفٹیننٹ گورنر گریش چندرا مرمو کے استعفیٰ کو

پیپلز کانفرنس کے بیان پر نیشنل کانفرنس سیخ پا

سرینگر//پیپلز کانفرنس کی طرف سے نیشنل کانفرنس اور کُل جماعتی اجلاس کیخلاف زہر افشائی پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے نیشنل کانفرنس ترجمان نے کہا ہے کہ صاف ظاہر ہورہا ہے کہ نئی دلی میں بیٹھے پیپلز کانفرنس کے آقائوں نے انہیں جموں وکشمیر میں خصوصی پوزیشن کی بحالی کی جدوجہد کیلئے تمام سیاسی جماعتوں کے مشترکہ پلیٹ فارم کے قیام کو سبوتاژ کرنے کا کام سونپ دیا ہے۔ایک بیان میں ترجمان نے کہا کہ نیشنل کانفرنس صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے جموں وکشمیر کی سیاسی صورتحال اور دفعہ 370اور 35اے کی بحالی کیلئے سیاسی جماعتوں کے مشترکہ پلیٹ فارم اور ریاست کو درپیش دیگر چیلنجوں سے نمٹنے کیلئے لائحہ عمل مرتب کرنے کیلئے کُل جماعتی اجلاس کیلئے تمام سیاسی جماعتوں کو مدعو کیا تھا لیکن سخت ترین بندشیں اور گپکار روڑ سیل کرکے اجلاس کے انعقاد کو ناممکن بنایا گیا جس سے نئی دلی کی نیت عیاں ہوگئی اور اب پیپلز کانفرنس کو

گورنروں کی تبدیلی سے امن و استحکام بحال نہیں ہوگا: حکیم

سرینگر//پیپلز ڈیموکریٹک فرنٹ چیئرمین حکیم محمد یاسین نے کہا ہے کہ جموں وکشمیر میں گورنروں کو تبدیل کرنے سے نہیں بلکہ انصاف پر مبنی سیاسی نظام قائم کرنے سے ہی امن و استحکام بحال کرنے میں مدد مل سکتی ہے۔ایک بیان میں حکیم یاسین نے کہا کہ 5اگست 2019کے بعد مرکز کی طرف سے یکطرفہ طور من ما نے طریقے پر جموں وکشمیر کا ریاستی تشخص پامال کرنے اور زمین و نوکریوں کے حقوق سلب کرنے سے مقامی لوگوں میں زبردست مایوسی اور عدم اعتماد کی لہر پیداہوگئی ہے جس کو بحال کرنے کے لیے سیاسی نظام اور جمہوری طریقے پر چنی ہوئی عوامی حکومت کا قیام لازمی ہے۔ حکیم یاسین نے کہا کہ مرکزی حکومت کی طرف سے من مانے طریقے پر ریاست کا خصوصی درجہ ختم کرنے کے فیصلے سے جموں وکشمیر کے لوگوں میں سخت غم و غصہ پایا جاتا رہا ہے اور وہ مرکزی حکومت کے اس فیصلے کو ایک اور وعدہ خلافی اور دھوکے سے تعبیر کرتے ہیں۔ انہوں نے مرکزی قیادت پر زور

مسئلہ کشمیر پر بنددروازہ غیر رسمی اجلاس منعقد

سرینگر//اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اراکین نے مسئلہ کشمیر کو دو طرفہ مذاکرات سے حل کرنے پر زور دیا ہے ۔ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی جانب سے مسئلہ کشمیر پر ایک بند دروازہ غیر رسمی اجلاس منعقد کیا گیاجس میں واضح کیا گیا کہ یہ بھارت اور پاکستان باہمی مسئلہ ہے ۔ اجلاس میں پانچ مستقل اراکین میں سے 4امریکہ، برطانیہ، فرانس اور روس نے بھارت کی حمایت کی۔اقوام متحدہ میں بھارت کے مستقل نمائندے ٹی ایس تیرمورتی نے ٹویٹ میں لکھا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس میں، جو بند دروازہ، غیر رسمی اور جسے ریکارڈ نہیں کیا گیا ,میں تقریبا تمام ممالک نے اس بات پر زور دیا کہ جموں و کشمیر دو طرفہ مسئلہ ہے اور وہ کونسل کے وقت اور توجہ کا مستحق نہیں ہے۔واضح رہے کہ پاکستان نے گذشتہ برس اگست کے بعد سے تیسری مرتبہ کشمیر کے بارے میں کونسل کو ایک خط میں بات چیت کا مطالبہ کیا تھا۔اقوام متحدہ کے ایک اور سفار

یکطرفہ تبدیلی غیر قانونی اور غیر مؤثر: چین

سرینگر//چین کا کہنا ہے کہ کشمیر میں یکطرفہ تبدیلی غیر قانونی اور غیر مئوثر ہے ۔چین کے دفتر خارجہ کے ترجمان وانگ وینبین نے کہا کہ کشمیرپر بیجنگ کا موقف مستقل اور واضح ہے کہ یہ مسئلہ کشمیر ہندوستان اور پاکستان کے درمیان تاریخ کا چھوڑا ہوا ایک تنازعہ ہے ۔ وانگ وینبین نے نیوز بریفنگ کے دوران ایک سوال پر واضح کرتے ہوئے کہا کہ چین کشمیر کے خطے کی صورت حال کو قریب سے دیکھ رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ کشمیر پر ہمارا مؤقف مستقل اور واضح ہے، مسئلہ کشمیر پاکستان اور بھارت کے درمیان تاریخ کا چھوڑا ہوا ایک تنازعہ ہے۔مسئلہ کشمیر سے متعلق بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ اقوام متحدہ کے منشور، سلامتی کونسل کی متعلقہ قراردادوں، پاکستان اور بھارت کے درمیان دوطرفہ معاہدوں کے تحت ایک تسلیم شدہ حقیقت ہے۔اپنے مؤقف کو دہراتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کشمیر کا مسئلہ متعلقہ فریقین کے درمیان مذاکرات اور پرامن بات چیت سے

ایک سال میں تیسرا اجلاس بھارت کیلئے چشم کشا: قریشی

سرینگر//پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں مسئلہ کشمیر پر ایک سال میں تیسرا اجلاس منعقد ہونا بھارت کے اس دعوے کی مکمل تردید ہے کہ جموں وکشمیر اس کا داخلی معاملہ ہے۔ سلامتی کونسل میں  15 رکنی ان کیمرہ اجلاس پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی درخواست پر ہوا۔ شاہ محمود قریشی نے ایک ٹویٹ میں کہاکہ’ منعقدہ اجلاس نے غیر جانبدارانہ رائے شماری کے ذریعہ کشمیریوں کے حق خود ارادیت کے حق پر اقوام متحدہ کی قراردادوں کی توثیق کی تصدیق کردی ہے‘۔چین جو سلامتی کونسل کا مستقل رکن ہے، نے اس اجلاس کو منعقد کرنے میں کلیدی کردار ادا کیا اور تمام 15 ممبران نے اس مباحثے میں حصہ لیا۔اگست میں کونسل کی صدارت رکھنے والے انڈونیشیا کے سفیر ڈیان تریانسیہ دجانی نے اجلاس کی صدارت کی۔پاکستانی وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان یو این ایس سی کے اجلاس کا خیر مق

جموں کشمیر میں جمہوریت کو کچلاجارہا ہے: پرینکا

نئی دہلی//(یواین آئی)//کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی کے بعد اب کانگریس کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی واڈرا نے بھی پارٹی کے سینئر لیڈر سیف الدین سوز کو فوراً رہا کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔پرینکا گاندھی نے کہا کہ حکومت جموں کشمیر میں آمریت پر اتر آئی ہے اور وہاں جمہوریت کو کچلا جارہا ہے اور جمہوریت کو مضبوط کرنے میں اہم کرداراداکرنے والے رہنماوں کے ساتھ بدسلوکی کی جارہی ہے ،حکومت کو نظربند کیے گئے سیف الدین سوز کو فوراً رہا کرنا چاہیے ۔انہوں نے کہا،‘‘سیف الدین سوز صاحب نے ہندوستانی جمہوریت کے عمل کو مستحکم کرنے میں بڑااہم کردار ادا کیا ہے،ان کے ساتھ قیدی جیسا سلوک کر کے بی جے پی حکومت جمہوریت کو کچل رہی ہے ۔جموں کشمیر میں ایک سال سے تاناشاہی قائم ہے ۔میں حکومت کو یاددلانا چاہتی ہوں کہ ہندوستان ایک جمہوری ملک ہے‘ ۔ گزشتہ ہفتہ کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے بھی ان کی رہائی

تازہ ترین