دھمکی آمیز پوسٹر چسپاں کرنے کا معاملہ

سرینگر// پلوامہ پولیس نے نجی اسکول کے ایک ٹیچر کو دھمکی آمیز پوسٹر چسپاں کی پاداش میں گرفتارکیا۔پولیس نے بتایا کہ 10ستمبر گوندی پورہ کاکہ پورہ علاقے میں لشکر اسلام کے نام سے کچھ پوسٹر چسپاں ہوئے پائے گئے تھے جن میں علاقے کے کچھ نوجوان طلبہ کے نام دھمکی دی گئی تھی ۔ مقامی لوگوں نے پولیس کاکاپورہ کی نوٹس میں یہ بات لائی اور پولیس نے اس سلسلے میں کیس زیر ایف آئی آر نمبر69/2020 متعلقہ دفعات کے تحت درج کرکے اسپیشل تفتیشی ٹیم تشکیل دی۔ابتدائی تحقیقات کے دوران پولیس نے کئی مشتبہ افراد سے پوچھ تاچھ کی اور بعد میں مز مل احمد ڈار ولد فاروق احمدکی گرفتاری عمل میں لائی گئی، جس نے ذاتی رنجش کی بنا پر یہ جرم کیا تھامذکورہ ملزم پانپور میں ایک نجی اسکول میں بحیثیت اُستاد کام کررہا ہے۔  

فوج پر فائرنگ ،مرہامہ سنگم میں جنگجو فرار

اننت ناگ //مرہامہ سنگم میں مشتبہ جنگجوئوں نے منگل کے روز فوج کی ایک گشتی پارٹی پر فائرنگ کی  اور بعد میں فرار ہوئے۔ منگل کی دوپہر جنگجوؤں نے اس وقت 3آر آر کی گشتی پارٹی پر فائرنگ کی، جب وہ مرہامہ میں ہائر سکنڈری سکول کے نزدیک موجود تھے۔فوجی اہلکار علاقے میں جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے پر گشت کرنے آئے تھے۔اس موقعہ پر جنگجوئوں نے فوج پر فائرنگ کی جس کے بعد طرفین میں کچھ منٹوں تک فائرنگ کا تبادلہ ہوا اور اس سے پہلے فوجی اہلکار علاقے کو محاصرہ میں لیتے، جنگجو فرار ہونے میں کامیاب ہوئے۔واقعہ کے بعدمرہامہ گائوں کا محاصرہ کرکے حملہ آوروں کی تلاش شروع کی گئی جو شام دیر گئے تک جاری تھی۔ تاہم بعد میں کریک ڈائون ختم کیا گیا۔ادھر قاضی گنڈ کے کنڈ واری پورہ نامی گائوں میں جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے پر فورسز نے آپریشن عمل میں لایا ،تاہم تلاشی کارروائی کے دوران جنگجوئوں اور فور

افسران زمینی سطح پر تبدیلی لانے کے علمبردار بنیں:لیفٹینٹ گورنر

 سرینگر//لفٹینٹ گورنر منوج سنہا نے افسروں کو زمینی سطح پر تبدیلی لانے کے علمبردار بن کر انتظامیہ کے فوائد ہر فرد تک پہنچانے کیلئے کہا ۔ وہ یہاں سول سیکرٹریٹ میں بیک ٹو ولیج مرحلہ سول کیلئے جاری تیاریوں کا جائیزہ لینے کیلئے منعقدہ میٹنگ میں اپنے خیالات کا اظہار کر رہے تھے ۔عوامی افادیت کا حامل یہ پروگرام دو اکتوبر سے شروع ہو رہا ہے جس کا مقصد انتظامیہ کو لوگوں کی دہلیز تک لے جانا ہے اور جس کو حکومت کی جانب سے حال ہی میں تشکیل دی گئی پنچائتوں کو مستحکم بنانے کیلئے ایک منفرد کوشش قرار دیا جا رہا ہے ۔ انہوں نے بیک ٹو ولیج مرحلہ سوم کے انعقاد کیلئے حکمتِ عملی پر مفصل رپورٹ طلب کی اور جن ابھیان پروگرام کے بارے میں بھی تفصیلات پیش کرنے کیلئے متعلقہ حکام کو کہا ۔ انہوں نے ڈپٹی کمشنروں ، اے ڈی سیز ، ایس ایس پیز ، اے ایس پیز اور یو ٹی کے اضلاع کے دیگر افسران کو صبح دس بجے سے شام چار بجے تک

جموں سرینگر شاہراہ پرمیوہ گاڑیوں کو روکنے پر غم و غصہ

 سوپور//ایشیاء کی دوسری بڑی میوہ منڈی سوپور میں منگل کو سینکڑوں میوہ اُگانے والوں،تاجروں ،ٹرانسپورٹروں اور مزدور انجمنوں نے سرینگر جموں شاہراہ پر پولیس کی طرف سے میوہ سے بھری گاڑیوں کو بلاجواز روکنے کے خلاف پرامن احتجاج کیا۔احتجاجی مظاہرین نے کہا کہ سوپور منڈی سے جارہی سینکڑوں میوہ سے لدی گاڑیوں کو مسلسل طور جموں سرینگرشاہراہ پرپولیس روک رہی ہے۔احتجاجیوں کے ایک گروپ نے بتایا کہ چارچار پانچ پانچ روزتک گاڑیوں کو روکے رکھنے سے ان میں موجود میوہ سڑرہا ہے،جس کی وجہ سے انہیں لاکھوں روپے کا نقصان ہورہا ہے ۔سوپور میوہ منڈی کے صدر فیاض احمد ملک نے کہا کہ گزشتہ دوبر س سے حکام کے رویہ کی وجہ سے تاجروں کو بھاری نقصان ہورہا ہے ۔احتجاجی میوہ تاجروں نے مارکیٹ انٹر ونشن اسکیم کو لاگو کرنے کا مطالبہ کیا تاکہ وہ اس اسکیم سے قدرتی آفات کے دوران فائدہ اُٹھا سکیں ۔انہوں نے لیفٹینٹ گورنر سے مطالبہ کیا

میوہ پیداوار کی ٹرانسپورٹیشن

سری نگر//پرنسپل سیکرٹری زراعت و باغبانی نوین کمار چودھری نے یہاں سول سیکرٹریٹ میں میوہ فصل کو وادی سے باہر لے جانے کے لئے کئے جارہے ٹرانسپورٹ انتظامات کا جائزہ لیا۔میٹنگ میں ضلع ترقیاتی کمشنر اودھمپور پیوش سنہلا ، ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ راہل یادو ، ایس ایس پی ٹریفک ہائی وے ، اے ڈی سی اننت ناگ ، اے سی آر رام بن ، ڈائریکٹر پلاننگ اینڈ مارکیٹنگ اور دیگر افسران، ایس ایس پی ٹریفک، سوپور،شوپیان اور کولگام فروٹ منڈیوں کے نمائندوں نے بذریعہ ویڈیو کانفرنسنگ میٹنگ میں شرکت کی۔دوران میٹنگ نوین چودھری نے متعلقہ افسران کو میوہ فصل وادی سے باہر لے جانے کے دوران یکطرفہ ٹریفک کے ضابطے پر سختی سے عمل پیرا رہنے کی ہدایت دی ۔پرنسپل سیکرٹری نے افسروں کو ٹھیکیداروں اور دیگر تعمیراتی ایجنسیوں کے مابین باقاعدہ تال میل قائم کرنے کی ہدایت دی تاکہ شاہراہ کی باقاعدہ دیکھ ریکھ یقینی بنائی جاسکے۔  

عالمی یوم قلب| کپوارہ میں ’گوری ہیلدی ہارٹ پروجیکٹ‘کاافتتاح

 کپوارہ//اشرف چراغ//عالمی یوم قلب کے موقعہ پر یہاں ضلع اسپتال کپوارہ میں ضلع انتظامیہ اور محکمہ صحت کے اشتراک سے’’گوری ہیلدی ہارٹ پروجیکٹ ‘‘ کی طرف سے دل کے مریضوں کے علاج معالجہ کیلئے یک روزہ کیمپ منعقد کیا گیا جس میں معرف ڈاکٹروں نے پہلے سے ہی منتخب کئے گئے عارضہ قلب کے مریضوں کاملاحظہ کیا۔کیمپ کاافتتاح صحت وطبی تعلیم کے کمشنر سیکریٹری اٹل ڈولونے کیا۔اس موقعہ پرمعروف ماہرامراض قلب پدم شری ڈاکٹر اوپندر کول جو اس پروجیکٹ کے ڈائریکٹر بھی ہیں ،کے علاوہ چیف میڈیکل افسرکپوارہ ڈاکٹر کوثرامین،ضلع ہیلتھ افسرڈاکٹر عبدالغنی بھی موجودتھے۔کیمپ کے دوران ڈاکٹر اعجازمنصورسینئر ماہرامراض قلب،ڈاکٹر زبیرسلیم نے ضلع اسپتال کپوارہ کے طبی ونیم طبی عملہ کے تعاون سے پہلے ہی سے دیکھے گئے  ذیا بیطس ،بلڈ پریشراوردیگر دائمی امراض میں مبتلاء مریضوں کاملاحظہ کیا ۔اس موقعہ پر فائن

دل کی بیماریوں کی روکتھام ممکن : فائنانشل کمشنر صحت

سری نگر//  فائنانشل کمشنر صحت و طبی تعلیم اتل ڈولو نے آج عالمی یوم قلب کے موقعہ پر کہا کہ دل کی بیماریوں سے عالمی سطح پر سب سے زیادہ اموات ہوتی ہیں لیکن زندگی کے طور طریقوں میں تبدیل لا کر ان سے بچاجاسکتا  ہے۔فائنانشل کمشنر آج ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے طبی پیشہ وروں سے خطاب کر رہے تھے۔ اس موقعہ پر ڈائریکٹر صحت کشمیر بھی موجود تھے۔۔اتل ڈولو نے کہا کہ قلبی امراض (سی وی ڈی) اور کووِڈ۔19 کے مابین ایک ربط ملا ہے لہٰذا دل کی دیکھ بھال کرنا پہلے سے زیادہ ضروری بنا ہے۔ ڈبلیو ایچ او کے حوالے سے اتل ڈولو نے کہا کہ ہر سال سی وی ڈی سے 17.9 ملین اَفراد کو جان سے ہاتھ دھونا پڑتا ہے اور یہ عالمی سطح پر ہونے والی اموات میں سے 31 فیصد ہے۔فائنانشل کمشنر نے مزید کہا کہ وادی میں ہونے والی اموات میں سی وی ڈی (کارڈیو ویسکولر ڈائسز) تقریباً  35 سے 45 فیصد ہیں اور کشمیر میں مجموعی طور پر سی وی

اقوام متحدہ حقوق انسانی کونسل کا45 ویں اجلاس

سرینگر//جنیوا میں منعقد اقوام متحدہ حقوق انسانی کونسل کے 45 ویں اجلاس میں بھارت نے کہا ہے کہ پاکستان ابھی بھی شدت پسندوں کے لئے محفوظ پنا ہ گاہ ہے ۔کے این ایس،کے مطابق  اقوام متحدہ حقوق انسانی کونسل کے 45 ویں اجلاس میں بھارت نے پاکستان میں شدت پسندی کے معاملہ کو اٹھایا۔ بھارتی نمائندہ پون بدھے نے کہا کہ پاکستان شدت پسندی کو فروغ دے رہا ہے اور اس نے4ہزارشدت پسندوں کے نام ہٹا دئیے ہیں۔ان کا کہناتھا کہ یہی نہیں پاکستان ابھی بھی شدت پسندوں کے لئے محفوظ پناہ گاہ بنا ہوا ہے اور کشمیر میں سرگرم شدت پسندوں کو تربیت دے رہا ہے۔انہوںنے کہا کہ کشمیری شدت پسندوں کو تربیت دینے کے لئے پاکستان شدت پسندانہ لانچ پیڈ چلا رہا ہے۔ ایسے وقت میں جب دنیا کورونا وائرس سے نبردآزما ہے۔ان کا کہناتھا کہ پاکستان نے 4ہزار شدت پسندوں کا نام خاموشی سے فہرست سے ہٹا دیا ہے، اس کے ذریعہ پاکستان چاہتا ہے کہ اس کی شد

سڑکوں پرگاڑیا ں کھڑی کرنے والوں کو انتباہ

ترال //ترال سب ضلع میں پولیس نے سڑکوں پر گاڑیاں کھڑی کرنے والوں اور دیگر ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف کارروائی کااغاز کیا ہے اور اس سلسلے میں قصبے میں ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے کی پاداش میں30سے زائد موٹر سائیکل ضبط کئے گئے۔ترال پولیس نے منگل کو ذارئع ابلاغ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ علاقے میں بیشتر لوگ سڑکوں پر گاڑیاں کھڑی کرتے ہیں جس کے نتیجے میں لوگوں کو چلنے پھرنے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔پولیس نے کہا کہ اس بات کو مدنظر رکھتے ہوئے بدھ سے سڑکوں پر گاڑیاں کھڑی کرنے والوں کیخلاف باضابطہ کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ایس ڈی پی او ترال ڈاکٹر اعجازملک اور ایس ایچ اوترال جی ایم راتھرنے یہاں نمائندوں کو بتایاکہ قصبے میں پولیس نے ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے کی پاداش میں30سے زیادہ موٹر سائیکل ضبط کئے ۔پولیس کے مطابق جن لوگوں کے موٹر سائیکل ضبط کئے گئے ان کے پاس نہ

اسکولوں کو جزوی طور کھولنے کا فیصلہ مبہم

سرینگر//سابق ایجیک رہنماو ٹیچرس فورم صدراورجموں کشمیر سول سوسائٹی فورم کے چیئرمین عبدالقیوم وانی نے حکومت کی طرف سے21ستمبر کواسکولوں کو جزوی طور کھولنے کے فیصلے کے بعد وادی میں اسکولوں کے عصری نظام کے بارے میں ابہام پر تشویش کااظہار کیا ہے۔ ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ اسکولنگ کارگزاریاں یعنی آن لائن کلاسز ، کمیونٹی کلاسز ،آف لائن کلاسز، ایک کھچڑی بن کر رہ گئے ہیں کیونکہ ان کثیر الرائج طریقوں سے طلاب میں غلط فہمیاں پیداہوگئیں ہے اور طلباء اور اساتذہ الجھن میںہے۔ اْن کویہ الجھن ہے کہ کیا آن لائن کلاس جاری رکھیں یا کمیونٹی کلاسز  یا آف لائن کلاسوں کے لئے اسکولوں کا رخ کریں۔طلبا الجھے ہو ئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اگرچہ وبائی مرض کوروناوائرس میں تشویشناک حدتک اضافہ ہورہا ہے،جو لمحہ فکریہ ہے۔ وانی نے کہا کہ امتحانات کا وقت قریب آرہا ہے اور وقت کی ضرورت ہے کہ طلباء کو تیاریوں کے لئے گ

وائل پل عوام کیلئے عذاب کاباعث

گاندربل// کنگن شاہراہ پر نالہ سندھ کے مقام پر وائل پل یکطرفہ ہونے کے سبب عوام کیلئے سوہان روح ثابت ہورہاہے ۔ستمبر 1992 میں نالہ سندھ میں سیلاب آنے کے نتیجے میں وائل کے مقام پر لکڑی کا بنا ہوا پل پانی کے تیز بہاو میں ڈہہ گیا جس کے باعث تین ماہ تک گاڑیوں کی آمدورفت بھی بند ہوگئی۔بیکن اور فوج کی مدد سے تین ماہ کے اندر اندر لوہے کاایک پل بنادیا گیا تاہم صرف دو سال کے بعد ہی دوسری مرتبہ زبردست سیلاب آگیا اور لوہے کا یہ پل بھی پانی کے تیز بہاو میں ڈہہ گیا۔اس مرتبہ پل کی تعمیر میں ایک سال کا عرصہ لگ گیا اوربالآخر 1995 میں بیکن اور فوج کی جانب سے لوہے کا دوسرا پل بنا یا گیا جس پر گاندربل اور کنگن کے درمیان یکطرفہ ٹریفک جاری ہے۔گزشتہ 25 سالوں کے دوران ضلع گاندربل میں کئی بڑے اور اہم پل تعمیر کئے گئے لیکن وائل کے مقام پر پل تعمیر نہیں کیا جاسکا جس کے سبب منی گام،یارمقام ،اندرون علاقوں سمیت ک

جنوبی کشمیر کے کئی سیاسی کارکنوں کی اپنی پارٹی میں شمولیت

سرینگر//ضلع کولگام اور اننت ناگ سے متعدد سیاسی کارکنان نے اپنی پارٹی میں شمولیت اختیار کی۔ پارٹی دفتر لال چوک میں منعقدہ پروگرام کے دوران پی ڈی پی زونل صدر ڈورو بشیر احمد براگامی، شانگس حلقہ سے سماجی کارکن اور وکیل فیضان احمد حاجی،سابقہ کانگریس بلاک صدر کوکرناگ حاجی علی محمد کے علاوہ نور آباد سے بی ڈی سی چیئرمین محمد شریف بٹ نے اپنے کئی حمایتیوں سمیت پارٹی میں شمولیت اختیار کی۔پارٹی صدر سید محمد الطاف بخاری، سینئر نائب صدر غلام حسن میر، نائب صدر ظفر اقبال منہاس، صوبائی صدر کشمیر محمد اشرف میر، ضلع صدر اننت ناگ عبدالرحیم راتھر، ضلع صدر سرینگر نور محمد شیخ، پارٹی لیڈرا ن منتظر محی الدین اور عرفان نقیب نے اُن کاخیرمقدم کیا۔ پارٹی کے سینئرلیڈرا ن محمد دلاور میر اور عبدالمجید پڈر بھی اِس موقع پر موجود تھے۔ اس موقع پر الطاف بخاری نے کہا ’’اپنی پارٹی کے سامنے یہ چیلنج ہے کہ جموں

ٹرانسپورٹ و میوہ صنعتوں سے وابستہ افرادمشکلات کا شکار:جاویدمصطفی میر

سرینگر / /جموں کشمیر پیپلز مومنٹ کے چیئرمین جاوید مصطفی میر نے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا سے جموں وکشمیر میں کام کررہے ڈیلی ویجروں ، ایڈہاک ،عارضی اور کسنالڈیٹ ملازمین کی مستقلی اور جموں وکشمیر میں ما لکان باغات کے ساتھ ساتھ ڈرائیوروں اور کنڈیکٹروں کیلئے خصوصی مالی پیکیج کامطالبہ کیا ۔سرینگر میں ایک پریس کانفرنس کے دوران جاوید میر نے میوہ صنعت سے وابستہ افرادسے یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے ان کے ’کے سی سی‘ قرضوں کو معا ف کرنے اورمالی پیکیج کی مانگ کی ۔ ٹرانسپورٹ شعبہ کا ذکر کرتے ہو ئے میرنے کہاکہ پچھلے سات ماہ کے دوران آٹو اور ٹیکسی ڈرائیورکام نہیں کر پائے اور انہیں سخت مشکلات درپیش ہیں۔ انہوں نے حکومت پرزور دیاکہ اس ضمن میںفوری اقدامات کئے جائیں۔ انہوںنے  سرینگرجموں شاہراہ پرجاری کام میں سرعت لانے کا مطالبہ کیا۔انہوںنے کہا کہ بانہا ل سے رام بن تک شاہراہ کی حالت ابتر ہے۔ ج

کنگن حادثے میں زخمی سکوٹی سوار اسپتال میں چل بسا

کنگن//غلام نبی رینہ//کنگن میںچار ورزقبل ایک حادثے میں زخمی نوجوان منگل کو شیرکشمیرمیڈیکل انسٹی چیوٹ میں دم توڑبیٹھا۔اطلاعات کے مطابق 25ستمبر کو پاور ہاؤس کنگن کے نزدیک بغیر نمبر کے ایک ٹریکٹر اور ایک سکوٹی زیر نمبر 7973,  JK16- کے درمیان شدید ٹکر ہوگئی تھی ،جس کے نتیجے میں دو سکوٹی سوار رئوف احمد راتھر ولد عبدالرشید راتھراور سجاد احمد بٹ ولد عبدالرشید بٹ ساکن وسن کنگن زخمی ہوگئے تھے، جن کو علاج و معالجہ کے لئے سب ڈسٹرک ہسپتال کنگن میں داخل کیا گیا تھا، جہاں سے رئوف احمد بٹ کو شدید زخمی حالت میں سکمز صورہ ریفر کیا گیا ۔میڈیکل انسٹی چیوٹ صورہ میں چار روز تک موت و حیات کی کشمکش میں مبتلا رہنے کے بعد منگل کورئوف احمدزخموں کی تاب نہ لاکر زندگی کی جنگ ہار گیا۔مذکورہ نوجوان کی لاش جب اُس کے آبائی گائوںپہنچائی گئی، تو وہاں کہرام مچ گیا۔ کنگن پولیس نے اس سلسلے میں کیس درج کرکے کاروائی شر

سکالر شپ فارم جمع کرنے کیلئے درکار آمدنی اسناد

ترال //مختلف تعلیمی اداروں میں زیر تعلیم طالب علموںکو سکالر شپ فارم جمع کرنے کیلئے آمدنی اسناد کا ساتھ رکھنا پریشانی کا باعث بن چکاہے ۔کئی علاقوں میں دودو مرتبہ لوازمات مکمل کرنے کے بعدبھی فارم تحصیل دفاتر سے غائب ہیں ۔کئی طالب علموں نے بتایا کہ اسکالر شپ فارم کو تیار کرنے میں کئی دن لگتے ہیں جس کے بعد تحصیل دفتر میں جمع کیا جاتا ہے جہاں3سے 5روز کے اندر یہ سند فراہم کی جارہی ہے ۔کئی طلاب اور والدین نے بتایا کہ انہوں نے دو مرتبہ جبکہ کچھ لوگوں نے تین مرتبہ بھی فارم جمع کئے ہیں لیکن وہ دفتر پہنچ کے یہ سن ششدر رہ گئے کہ ان کے فارم ہی گم ہوگئے ہیں ۔کئی لوگوں نے بتایاکہ انہیں 1000 روپئے سکالر شپ ملے گا اورانہیں4چار دن آمدنی سند کے لئے ضائع کرنے پڑ تے ہیں۔ادھر ترال کے علاوہ ضلع کے دیگر کئی علاقوں سے بھی آمدنی اسنادکی فراہمی میںغیر ضروری طوالت کا الزام عائد کیا ہے۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ترال

مزید خبرں

ہندوارہ میں 4 جنگجوئوں اور3 اعانت کاروں کیخلاف چالان پیش ہندوارہ//ہندوارہ پولیس نے چار جنگجوئوں اوران کے تین اعانت کاروں کے خلاف عدالت میں چالان پیش کیا۔اطلاعات کے مطابق ہندوارہ نے اس سال 3اپریل کو 21آرآر،92سی آر پی ایف کے ساتھ ایک کارروائی کے دوران چار جنگجوئوں اوران کے تین اعانت کاروں کو گرفتار کیاتھااور پوچھ تاچھ اورتحقیقات کے بعد ہندوارہ پولیس نے مجازعدالت میں متعلقہ دفعات کے تحت چالان پیش کیا۔چالان پرویزاحمد چوپان،مدثراحمد پنڈت،محمد شفیع شیخ،اوربرہان الدین وانی نام کے جنگجوئوں اور  ممنوعہ تنظیم لشکرطیبہ کے تین اعانت کاروںآزاداحمد بٹ،الطاف احمد بابااورارشاداحمد چالکو کے خلاف پیش کیا گیا۔     درماندہ 5,17,627 شہری واپس لائے گئے  جموں//حکومت جموں وکشمیر نے کووِڈلاک ڈاون کے سبب ملک کے مختلف حصوں میں درماندہ جموںوکشمیر کے5,17,627 شہریوں کو ب

بجبہاڑہ میں خندق سے زہریلی گیس کا اخراج

اننت ناگ//بجہباڑہ اننت ناگ میں پیر کی شام اس وقت صف ماتم بچھ گئی جب ایک پر اسرار حادثہ میں باپ بیٹا اور دو بھائی سمیت 4افراد لقمہ اجل بن گئے۔ یہ واقعہ ٹائون سے دو کلو میٹر دور تلہ کھن میں پیش آیا۔ اس دلدوز حادثہ کے بارے میں بتایا گیا کہ کنویں کی کھدائی کے دوران زہریلی گیس کا اخراج ہوا جس سے یہ ہلاکتیں ہوئیں۔ لیکن مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ یہ لوگ مزدور نہیں تھے بلکہ ان میں سے دو بھائی کروڑ پتی تھے۔سوشل میڈیا اور بجبہاڑہ ایس ڈی ایم کی جانب سے بیان میں کہا گیا کہ تلہ کھن بجہباڑہ میں پیش آئے واقعہ کے 4متاثرین کو سب ڈسڑکٹ اسپتال بجہباڑہ لایا گیا تاہم وہ دم توڑ چکے تھے۔انہوں نے کہا کہ غالباً دم گھٹنے یا زہریلی گیس کے اخراج سے انکی موت ہوئی ہے۔مہلوکین کی شناخت عبدالرشید ڈار عرف رشید ژوٹ اور اسکا بھائی نذیر احمد ڈار پسران غلام حسن ڈار ساکنان تلہ کھن اور 45 سالہ ارشد حسین وانی ولد عبدالرشید و

پانپور اور ڈورو میں 2جنگجو گرفتار

پلوامہ +اننت ناگ // پانپور میں 15روز قبل جنگجوئوں کی صف میں شامل ہونے والا جنگجو گرفتار کرلیا گیا ہے جبکہ ڈورو میں بھی ایک جنگجو کو حراست میں لیا گیا اور چاڑورہ میں اسلحہ بر آمد کیا گیا۔ اونتی پورہ پولیس نے کونہ بل پانپور سے حالیہ دنوں لشکر طیبہ میں شامل ہونے والے جنگجو کو گرفتار کرلیاہے ۔ پولیس کے مطابق  50آر آر ، سی آر پی ایف او ر اونتی پورہ پولیس نے فیصل احمد ڈار ساکن خانقاہ باغ پانپور کو حراست میں لیا ۔ پولیس کے مطابق فیصل 11ستمبرکو گھر سے نکلنے کے بعد لاپتہ ہو گیا تھا اور 13ستمبر کو اس نے سوشل میڈیا پر ایک آڈیو پیغام میں عسکری صفوں میں شامل ہونے کا اعلان کر دیا تھا ۔ اسکے خلاف پہلے ہی پانپور پولیس تھانے میں کیس زیر نمبر 79/2020 درج کیا گیا ہے۔ادھراننت ناگ میں  فورسزنے پولیس کیساتھ مشترکہ کارروائی کے دوان ایک جنگجو کو گرفتار کرکے اس کے قبضے سے اسلحہ اور گولہ بارود بر

مژھل اور نوشہرہ سیکٹروں میں گولہ باری

 کپوارہ +نوشہرہ// حد متارکہ پرمژھل سیکٹر میں ہند پاک افواج کی جانب سے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورز ی کے دوران ایک فوجی اہلکار زخمی ہوا۔ پیر کے روز کپوارہ کے مژھل سیکٹر میںگولہ باری کا واقعہ پیش آیا جس کے دوران ایک فوجی اہلکار زخمی ہو گیا ۔ دفاعی ترجمان کے مطابق پیربعد دوپہر پاکستانی فوج نے بلا کسی اشتعال کے بھارتی چوکیوں کو نشانہ بنا کر چھوٹے اور بڑے ہتھیاروں سے گولہ باری شروع کی۔ادھرنوشہرہ کے کلسیاں سیکٹر میں ہندوپاک افواج کے درمیان شدید گولہ باری اور فائرنگ کا تبادلہ ہوا ۔ پیر کے روز پاکستانی فوج نے راجوری کے نوشہرہ سیکٹر میں کلسیاں اور بھوانی علاقوں کو نشانہ بنایااور شدید گولہ باری کی ۔دفاعی ترجمان لیفٹنٹ کرنل دیوندر آنند نے بتایا کہ پیر کے روز سہ پہر 03بج کر 45 منٹ پرپاکستانی فوج نے نوشہرہ سیکٹر میں ایل او سی پر گولہ باری کی جس کا بھارتی فوج نے بھی بھرپور جواب دیا۔دریں اثنا،

دیہی ترقیاتی سکیموں کو مقررہ مدت کے اندر مکمل کیاجائے

سری نگر//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے دیہی ترقی او رپنچایتی راج محکموںکے حکام کو دیہی ترقی سکیموں کی مؤثر عمل آوری یقینی بنانے کے لئے کہا اور مکانات ، روزگار کے مواقع پید ا کرنے ، ترقیاتی اور دیگر کاموں سے متعلق سکیموں پر خصوصی توجہ مرکوز کرنے  کی تلقین کی۔ مشیر موصوف نے یہ ہدایات دیہی ترقی پنچایتی راج محکموں کی جائزہ میٹنگ کے دوران دیں۔ میٹنگ میں صوبہ کشمیر میں مختلف سکیموں ، پروگراموں اور پالیسوں کی عمل آوری کا مفصل جائزہ لیا گیا اور جن ابھیان ، ایم جی نریگا ، 14ویںمالی کمیشن ، 15ویں مالی کمیشن کے ڈرافٹ پلان، پردھان منتری آواس یوجنا گرامین، آدھار سیڈنگ ، گرہ پرویش تحفہ جات اور جیو ٹیگنگ کے تحت ہاتھ میں لئے گئے کاموں اور واجبات کی ادائیگی پر بھی دوران میٹنگ غور و خوض ہوا ۔ مشیر بصیر خان نے اَفسران کو بلاکوں کا دورہ کر کے ترقیاتی سرگرمیوں کے بارے میں جانکاری رکھنے