جموں کشمیرکاہرشعبہ تنزلی کاشکار

 سرینگر// نیشنل کانفرنس نے ماضی میں بہت سارے نشیب و فراز دیکھے ہیں اور اس جماعت نے یہاں کے عوام کے تعاون اور اشتراک سے بڑے بڑے چیلنجوں کا سامنا کیا ہے اور ہمیشہ سرخرو ہوکر اُبھری ہے۔اِن باتوں کا اظہار پارٹی کے جنرل سکریٹری علی محمد ساگر نے پارٹی ہیڈکوارٹر پر عہدیداروں اور کارکنوں کیساتھ تبادلہ خیال کرتے ہوئے کیا۔ایک بیان کے مطابق  انہوں نے کہا کہ موجودہ ایام میں بھی جموں وکشمیر ایک بہت بڑے چیلنج سے دوچار ہے اور اللہ کے فضل و کرم سے ہم اس چیلنج میں بھی سرخرو ہوکر اُبھریں گے لیکن اس کیلئے ہمیں صبرو استقلال اور ثابت قدمی کا مظاہرہ کرنا ہوگا۔ اُنہوں نے کہا کہ 5اگست2019کے سیاہ دن نہ صرف ہماری شناخت، انفرادیت اور اجتماعیت پر غیر قانونی اور غیر آئینی ڈاکہ زنی کی گئی بلکہ اس کے بعد سے لیکر آج تک ایسے حالات برپا کئے جارہے ہیں جس سے یہاں کے لوگ ہر طرح سے محتاج بن جائیں۔ انہوں نے کہا

کشمیر پر امن ،صورتحال پر سکون

سرینگر// فوج نے کہا کہ کورونا وائرس کے اثرات وادی میں پرامن صورتحال کا موجب نہیں بنے بلکہ یہ اس لئے پرامن ہے کیونکہ لوگ ایسا چاہتے ہیں۔15ویں کور کے آفیسر کمانڈنگ لیفٹیننٹ جنرل بی ایس راجو نے سرینگر میں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کہا’’سال 2020  میںایک پرامن وقت رہا ۔ وادی میں صورتحال معمول کے مطابق ہے، تشدد کے تمام طریقے، چاہے وہ پتھراؤ ، احتجاج ہو یا ہڑتال تمام میں کمی واقع ہوئی‘‘۔راجو ، جو نئے ڈائریکٹر جنرل ملٹری آپریشنز کے عہدے کا چارج سنبھالیں گے ، نے کہا  اس بات کا یقین کرنا چاہیں گے کہ وادی میں صورتحال کورونا وبائی امراض کی وجہ سے ’’پْرسکون‘‘  نہیںہے ،بلکہ ایسا  لوگ چاہتے ہیں۔ چنار کور کے کمانڈر نے کہا کہ یہ خاموشی اس لئے ہے کیونکہ لوگ چاہتے ہیں کہ وہ پرسکون رہیں، اگر کچھ اچھا ہو رہا ہے تو ، اس کی وجہ یہ ہے ک

محکمہ بجلی کے عارضی ملازمین کامظاہرہ

سرینگر//پولیس نے محکمہ بجلی کے عارضی ملازمین کی جانب سے سیکریٹریٹ کی جانب پیش قدمی کو روکتے ہوئے انہیں منتشر کرنے کیلئے لاٹھی چارج کیا،جبکہ مظاہرین نے بعد میں سرینگر کی پریس کالونی میں اپنی مستقلی اور تنخواہوں کی واگزاری کے حق میں احتجاج کیا۔ پیر کو محکمہ بجلی کے مستقل اور عارضی ڈیلی ویجر نمائش گاہ کے قریب چیف انجینئر کے دفتر کے احاطے میں جمع ہوئے اور اپنی مستقلی کے حق میں نعرہ بازی کرتے ہوئے احتجاج کیا۔ اس موقعہ پر نعرہ بازی کرتے ہوئے عارضی ملازمین نے سیکریٹریٹ پیش قدمی کرنے کی کوشش کی تاہم پولیس نے انہیں پرامن طور پر منتشر ہونے کی ہدایت دی تاہم ملازمین نے اس ہدایت کو نظر انداز کیا۔ اس موقعہ پر طرفین میں مخاصمت ہوئی،جس کے بعد پولیس نے احتجاجی عارضی ملازمین کو منتشر کرنے کیلئے لاٹھی چارج کیا،جس کے نتیجے میں جہانگیر چوک میںکچھ وقفہ کیلئے گاڑیوں کی نقل و حرکت بھی متاثر رہی اور ملازمین من

سنگھ پورہ پٹن میں بجلی اور پانی کی عدم دستیابی

بارہمولہ // باغوان پورہ سنگھ پورہ پٹن میں مقا می لوگوں نے بجلی اور پینے کے صاف پانی کی عدم دستیابی کے خلاف محکمہ پی ڈی ڈی اور جل شکتی کے خلاف احتجاجی دھرنا دیا  جس کے نتیجے میں سرینگر بارہمولہ شاہراہ پر ٹریفک کی نقل و حمل متاثرہ ہوئی ۔ احتجاجی مظاہرین کا کہنا تھا کہ علاقے کا بجلی ٹرانسفارمر کئی ہفتے قبل خراب ہوا ، جس کے بعد اُسے  مرمت کے لئے ورکشاپ لیجایا گیا ،لیکن ابھی تک مذکورہ ٹرانسفارمر کو واپس نہیں لایا گیا جس کے نتیجے میں مقامی آبادی گھپ اندھیرے میں ہے ۔ صارفین نے سوموار کو صبح 9  بجے مین بازار سنگھ پورہ میں سرینگر بارہمولہ شاہرا پر احتجاجی دھرنا دیا جس کی وجہ سے مسافر خاص کر ملازمین ٹریفک جام میں پھنس گئے ۔ احتجاج میں بچوں کے ساتھ نوجوان اور خواتین بھی شامل تھیں، نے کہا کہ علاقے میں بجلی ٹرانسفارمر ناکارہ  ہونے سے وہ برقی رو سے محروم ہیں جس کے نتیجے میں صارف

زچہ بچہ اسپتال میں بنیادی سہولیات کافقدان

سوپور//سوپور میں سوموار کو جنرل نرسنگ ومڈوائفری کورس کے متعدد طلاب نے زچہ بچہ اسپتال سوپور میں نامناسب سہولیات کے خلاف احتجاج کیا۔حکام کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے ان طلبہ نے کہا کہ حال ہی میں محکمہ صحت وطبی تعلیم کے حکام نے انہیں نرسنگ کالج بارہ مولہ سے سوپور منتقل کیا جہاں ان کے ٹھہرنے کابندوبست زچہ بچہ اسپتال کی ایک پرانی عمارت میں کیاگیاجوناگفتہ بہہ حالت میں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس عمارت میں بنیادی سہولیات جیسے پینے کا پانی، بجلی، لیبارٹری ،لائبریری اور غسل خانوں کی سہولیت ہی نہیں ہے حتی کہ کلاسوں میں بلیک بورڈ بھی نہیں ہیں ،جس کی وجہ سے ان کی معمول کی کلاس ورک متاثرہورہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ وادی کے دوردرازعلاقوں جیسے اوڑی، ٹنگمرگ، پٹن اور رفیع آباد سے آتے ہیں اورانہیں سوپور پہنچنے میں زیادہ وقت لگتا ہے ۔انہوں نے مزیدکہا کہ انہوں نے کورس کیلئے حکومت کو بھاری رقم بطور فیس اداکی

کنگن اور گاندربل میں مردہ کوئے پائے گئے

کنگن +گاندربل//پانزن و بملونہ کنگن اور دودرہامہ گاندربل میںمردہ کوے پائے گئے جنکے نمونے فوری طور پر لئے گئے۔کنگن کے متذکرہ دیہات میں مقامی لوگوں نے کئی کوئوںکو مردہ پایا ۔ مقامی لوگوں کے مطابق انہوں نے معاملے کو انتظامیہ کنگن کی نوٹس میں لایا جس کے بعد انیمل ہسبنڈری کی ایک ٹیمپہنچ گئی جس نے مردہ کوئوں کے نمونے حاصل کرلئے ۔ چیف انیمل ہسبنڈری آفسر گاندربل ڈاکٹر شبیر احمد وانی نے بتایا کہ ان مردہ کوئوں سے نمونے حاصل کر کے انسٹچیوٹ آف انیمل ہیلتھ اینڈ بیالوجیکل پروڈکٹس زکورہ سرینگر ابتدائی تحقیق کیلئے بھیج دیئے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ رپورٹ آنے کے بعد ہی کچھ کہا جاسکتا ہے۔انہوں نے لوگوں سے کہا کہ وہ ان مقامات پر جانے سے گریز کریں جہاں جہاں مردہ کوئوں کو پایا گیا ہے۔ ادھر دودہرہامہ میں موجود بائز ہائر سیکنڈری سکول کے احاطے میں بھی مردہ کوئے پائے گئے۔ محکمہ انمل ہسبنڈری کے ڈاکٹر اظہر نے ک

غیرقانونی ٹیلی فون نیٹ ورک

سرینگر//انسداد رشوت ستانی بیورو نے شمیم احمد شاہ سب ڈویژنل انجینئر،ٹرانسمشن ڈویژن بی ایس این ایل سرینگر اور دیگر کیخلاف بی ایس این ایل کو دھوکہ دے کر بین الاقوامی کالیں کرنے کیلئے غیرقانونی ٹیلی فون نیٹ ورک قائم کرنے کے الزام میں چالان پیش کیا۔اینٹی کورپشن بیورو نے سپیشل جج اینٹی کورپشن سرینگر کی عدالت میں متعلقہ دفعات کے تحت دائرکیس زیر ایف آئی آر نمبر30/2007میں چالان پیش کیا۔تحقیقات کے دوران پتہ چلا کہ ملزموں نے بی ایس این ایل کوفی منٹ6روپے کی شرح پر کال کی قیمت سے3کروڑ روپے کا چونا لگایا گیا۔ حقائق اور شواہد کی بنیاد پراینٹی کورپشن بیور ونے سپیشل جج اینٹی کورپشن کی عدالت میں ایف آئی آر30/2007کے سلسلے میں ملزم شمیم احمدشاہ اُس وقت کے جونیئر ٹیلی کام افسر،روشن لال بٹ(ریٹائرڈ) اپس وقت کے فون میکنک بسنل،فائدہ کنندگان اعجازاحمد بٹ اور شبیراحمد بٹ ،محمد شفعی بٹ اورنصیراحمد ملک کے خلاف

لرو ترا ل میں اعانت کار کی گرفتاری کادعوی

ترال //جنوبی کشمیر کے سب ضلع ترال کے لرو علاقے میں فورسز کی ایک مشترکہ پا رٹی نے جیش محمد سے وابستہ ایک اعانت کار کو گرفتار اور اس کے قبضے سے ایک ہتھ گولہ برآمد کرنے کا دعوی کیا ہے ۔ اونتی ورہ پولیس کی جانب سے موصولہ بیان میں بتایا گیا ہے کہ فوج کی42RRسی آر پی ایف اور ایس او جی ترال نے لرو جاگیر علاقے میں ایک مشترکہ کارروائی کے دورا ن مزمل قادر بٹ کو گرفتار کیا۔پولیس کے مطابق گرفتار شدہ سے ایک گرینیڈ اور قابل اعتراض مواد بھی بر آمد کیا گیا۔بیان کے مطابق مزمل جیش کے کمانڈروں کے ساتھ رابطے میں تھا۔اس ضمن میں ایف آئی آر نمبر13درج کرکے مزید تحقیقات شروع کی گئی ہے۔ادھر ناز نین پورہ ترال میں فوج ،پولیس اور سی آر پی ایف نے گائوں کو پیر کی صبح محاصرے میں لے کرگھر گھر تلاشی لی تاہم اس دوران کسی گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی ۔ مقامی ذرائع کے مطابق مذکورہ گاؤں کے تمام داخلی اور خارجی راستو

حالیہ بارشوں سے گھروں میں پانی داخل

بارہمولہ+سوپور//شمالی قصبہ بارہمولہ کے سٹیڈیم کالونی علاقے میں حالیہ باشوں سے گھروں میں پانی گھسنے کے بعد سوموار کو مقا می لوگوں نے ہندوارہ بارہمولہ شاہراہ پر زبردست احتجاج کیا جس کے نتیجے میں ٹریفک کی نقل و حمل متاثر ہوئی ۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ علاقے میں حالیہ  بارشوں کے بعدپانی گھروں میں داخل ہو گیا اور نکاسی آب کا مناسب انتظام نہ ہونے کی وجہ سے کئی رہائشی مکانات کو نقصان ہوا جس کی وجہ سے مکینوں کو سخت مشکلات درپیش ہیں۔ اس دوران میونسپل کونسل بارہمولہ کے چیئرمین عمر ککرو ، پولیس افسران اور تحصیلدار بارہمولہ جائے موقع پر پہنچے اورمظاہرین کو یقین دلایا کہ وہ اس معاملے کو حل کریں گے جس کے بعد مظاہرین پُر امن طور منتشر ہوئے ۔ برف باری اور لگاتار بارش کی وجہ سے ندیوں میں پانی کی سطح میں اضافہ ہوا جس سے سوپور قصبے کے متعدد علاقوں میں پانی جمع ہوچکا ہے۔خاص طور پر پچھلے دو روز بارش س

این آئی اے نے 4منشیات سمگلروں کو گرفتار کرلیا

 سرینگر // این آئی اے نے چار منشیات اسمگلروں کو گرفتار کیا ۔ الطاف احمد شاہ ولد محمد افضل شاہ ڈانگر پورہ  گاندربل ،شوکت احمد ولد عبد السلام پرے محلہ ، وانگی پورہ سمبل مدثر احمد ڈار ولد غلام محمد ڈار ساکن وندوناشوپیاں اور حاجی غلام محی الدین نیشنل ہائی وے سنگم کو حراست میں لیا گیا جن کی تحویل سے 21 کلو ہیروئن ضبط کرنے اور 1 کروڑ،35 لاکھ،89 ہزار،850 روپے نقد رقم  بر آمد کی گئی تھی ۔یہ مقدمہ ابتدائی طور پر ایف آئی آر نمبر 183/2020 مورخہ 11.06.2020 کے مطابق پی ایس ہندواڑہ میں درج کیا گیا تھا ، جس میں ہندواڑہ میں گاڑیوں کی چیکنگ کے دوران ملزم عبد المومن پیر کی ہنڈا کریٹا گاڑی کو پولیس نے ایک ناکے پر روک لیا۔ اور تلاش کے دوران دو کلوگرام ہیروئن کے ساتھ 20 لاکھ روپے برآمد کرکے قبضے میں لے لئے گئے۔ این آئی اے نے 23.06.2020 کو RC-03/2020 / NIA / JMU کے طور پر مقدمہ دوبارہ د

منشیات مخالف مہم

سرینگر//منشیات مخالف مہم میں پولیس نے جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ اور کولگام میں 6 منشیات فروشوں کو گرفتار کرکے بھاری مقدار میں ممنوعہ نشیلی اشیاء کو برآمد کرلیا ہے۔ منشیات کے خلاف اپنی کاروائی جاری رکھتے ہوئے پلوامہ پولیس کو اطلاع موصول ہوئی کہ یونس احمد وانی ساکن بٹہ پورہ نائنہ کے پاس بھاری مقدار میں بھنگ پائوڈر موجود ہے ۔اطلاع ملتے ہی پلوامہ پولیس نے ایس ڈی پی او لیتر فرقان قادری ، ایس ایچ او لیتراور مجسٹریٹ کی قیادت میں مذکورہ شخص کے رہائشی مکان پر چھاپہ ڈالکر تلاشی کاروائی شروع کردی ۔ تلاشی کاروائی کے دوران پولیس نے مذکورہ شخص کے رہائشی مکان اور گاوَ خانے سے30 کلو گرام بھنگ پائوڈر برآمد کی گئی البتہ ملزم ابھی مفرور ہے۔ تھانہ پولیس لیتر نے اس سلسلے میں کیس زیرایف آئی آرنمبر05/2021 درج کرلیا ہے۔ کولگام پولیس نے 6افرادکو گرفتارکرکے ان کے قبضے سے بھاری مقدار میں منشیات کی کھیپ برآم

گریز میں تعینات اساتذہ سراپا احتجاج

بانڈی پورہ //تلیل اور گریز میں تعینات اساتذہ نے احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ اسکول کھل رہے ہیں اور وہ ہوائی ٹکٹ حاصل کرنے کیلئے ڈپٹی کمشنر دفتر آئے ہیں لیکن یہاں کوئی ہوائی ٹکٹ دستیاب نہیں ہورہی ہے۔ احتجاجی اساتذہ نے بتایا کہ ہیلی کاپٹر سروس شروع کی گئی ہے جو داور گریز تک مہیا ہے اور دن میں ایک یا دو بار سنروانی ہیلی پیڑ سے لیکر داور گریز تک آواجاہی ہوتی ہے۔ انہوں نے ڈپٹی کمشنر بانڈی پورہ ڈاکٹر اویس احمد سے اپیل کی کہ ہیلی کاپٹر سروس دن بھر جاری رکھنے کی ہدایات صادر کئے جائیں تاکہ اساتذہ اپنی منزلوں تک پہنچ سکیں۔ ڈپٹی کمشنر بانڈی پورہ دفتر کے سامنے ایک سو سے زائد اساتذہ ودیگر ملازمین ہوائی ٹکٹ حاصل کرنے کیلئے انتظار کررہے تھے ۔  

منیگام سمبل میں آگ

گاندربل //منیگام سمبل بائی پاس پر بارسو کے مقام پر موجود فرنیشنگ کی دوکان اور اس میں موجود لاکھوں روپے مالیت کا سامان دوران شب آتشزدگی کی ایک واردات میں خاکستر ہوگئی۔مقامی لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ دوران شب نظیر احمد میر ولد غلام احمد ساکن بارسو کی فرنیشنگ کی دوکان جو کہ بائی پاس بارسو میں موجود ہے ،سے آگ نمودار ہوئی اورآگ لگنے کی اطلاع ملتے ہی مقامی شہری آگ بجھانے کی کارروائی میں جٹ گئے اور آگ کو مزید پھیلنے سے روک دیا۔ اس موقع پر فائر اینڈ ایمرجنسی محکمہ کی آگ بجھانے کی گاڑیاں بھی موقع پر پہنچ گئیں اور آگ پر قابو پالیا تاہم آتشزدگی کی اس واردات میںدوکان اور اس میں موجود لاکھوں روپے مالیت کے قالین اور دیگر فرنیشنگ سامان خاکستر ہوگیا۔ پولیس نے آگ لگنے کی وجوہات جاننے کیلئے کیس درج کرکے تحقیقات شروع کردی۔    صفاکدل آتشزدگان سے اظہار یکجہتی دارالخیر

معراج سے قبل میرواعظ کو رہا کیا جائے

 سرینگر// شہر خاص کارڈی نیشن کمیٹی کے اجلاس میں ائمہ مساجد اور منتظمین نے بھی شرکت کی،جس دوران میرواعظ محمد عمر فاروق کی رہائی کا مطالبہ کیا گیا۔اجلاس میں کہا گیا کہ شب معراج اور ماہ رمضان کی آمد کے نتیجے میں میرواعظ کی رہائی عمل میں لائی جانی چاہئے تاکہ وہ اپنی مذہبی خدمات کو انجام دیں سکیں۔انہوں نے کہا کہ میرواعظ کی رہائی سے جامع مسجد میں رونق بحال ہوسکتی ہے اور اس علاقے میں تجارتی سرگرمیوں کو بھی فروغ حاصل ہوسکتا ہے۔ادھرجموں کشمیرسول سوسائٹی فورم نے معراج العالم سے قبل میرواعظ محمد عمر فاروق کورہا کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ایک بیان میں جموں کشمیر سول سوسائٹی فورم کے چیئرمین عبدالقیوم وانی نے حکومت پرزوردیا کہ وہ معراج سے قبل ہی جموں کشمیر کے اعلیٰ پایہ کے مذہبی رہنماکورہا کریں۔انہوں نے کہا کہ میرواعظ گزشتہ ڈیڑھ برس سے مسلسل نظر بندہیں جو ہمارے لئے باعث فکروتشویش ہے۔وانی نے کہا کہ

صنعتی پالیسی خوش آئند:سنجے صراف

سرینگر/ /صنعتی پالیسی کا خیرمقدم کرتے ہوئے ایل جے پی کے امور کشمیر انچارج  سنجے صراف نے کہا کہ اس میں35فیصد مقامی تاجروں اور کاروباریوں کیلئے مخصوص رکھا جانا چاہئے۔ ایوان صحافت کشمیر میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صراف نے کہا کہ باقی65فیصد میں بھی مقامی نوجوانوں کیلئے20فیصد روزگار کیلئے مخصوص رکھے جانے چاہیں۔گلمرگ میںکھیلو انڈیا کھیلو کا انعقاد کرنے پر مرکزی حکومت کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے صراف نے کہا کہ اس طرح کی سرگرمیوں سے وادی میں سیاحت کو فروغ ملے گا اور معیشت کو جہاں دوام ملے گا وہیں اقتصادی حالت بھی بہتر ہوگی۔انہوں نے کہا کہ وادی کی معیشت کافی حد تک سیاحتی سرگرمیوں پر منحصر ہے اور اس طرح کے پراگراموں سے وادی میں سیاحتی شعبے کو کافی فروغ حاصل ہوگا۔صراف نے ٹورسٹ گائڈ انسٹی چیوٹ قائم کرنے کی وکالت کرتے ہوئے کہا کہ اس سے جہاں نوجوانوں کو روزگار فراہم ہوگا،وہیں بیرون جموں و

معروف سرجن ڈاکٹر خورشید اقبال انتقال کرگئے

بانہال/محمد تسکین/ معروف سرجن ڈاکٹر سید خورشید اقبال ساکن صنعت نگرپیر کو مختصر علالت کے بعد نارائن ہسپتال جموں میں انتقال کرگئے۔ موصوف 65 برس کے تھے۔ضلع رام بن کے علاقہ درشی پورہ بانہال میں پیدا ہوئے ڈاکٹر خورشید ایک شریف النفس انسان تھے۔ وہ ایک ہمدرد ڈاکٹرتھے جس کی وجہ سے وہ مریضوں میں بہت مقبول تھے۔ اُن کی انسان دوستی کی وجہ سے طبی حلقوں میں ہی نہیں بلکہ اُن کے مریضوں اور عام لوگوں نے گہرے صدمے کا اظہار کیا ہے۔بانہال سے کئی برس قبل کشمیر منتقل ہونے کے باوجود موصوف آج بھی آبائی علاقے کے مریضوں اور عام لوگوں کی بہت قدر کرتے تھے جس کے نتیجے میں انہیں اشکبار آنکھوں سے یاد کیا جارہا ہے۔موصوف زنانہ امراض کے معروف معالج ڈاکٹر سید نصیر کے برادر ِاکبر اورسابق کے اے ایس افسر تصدق جیلانی کے چچیرے بھائی تھے۔ادھر اُن کے انتقال پر طبی و نیم طبی حلقوں سمیت سماج کے مختلف طبقہ ہائے فکر سے وابستہ ا

اپنی پارٹی کی سرگرمیاں جاری

سرینگر//اپنی پارٹی نے پیر کے روز ضلع بڈگام کے چرارشریف میں پارٹی ورکروں کا ایک روزہ کنونشن منعقد کیا۔ اس کا اہتمام پارٹی لیڈر مشتاق زہومی نے کیاتھا جس کی صدارت پارٹی نائب صدر ظفر اقبال منہاس نے کی جوکہ اِس موقع پر مہمان خصوصی تھے۔ اپنی پارٹی میڈیا ایڈوائزر فاروق اندرابی، ضلع صدر سرینگر نور محمد شیخ، جنرل سیکریٹری یوتھ ونگ مظفر ریشی اور صوبائی صدر یوتھ ونگ کشمیر خالد راٹھور نے بھی کنونشن میں حصہ لیا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ظفر اقبال منہاس نے کہاکہ چرار شریف ایک مقدم سرزمین ہے جوکہ کشمیر کے معروف صوفی بزرگ حضرت نور الدین ولی ؒ کی آخری آرام گاہ ہونے کی وجہ سے دنیا بھر میں مشہور ہے۔انہوں نے کہا’’یہ مقدس جگہ عقیدتمندوں اور سیاحوں کی پسندیدہ جگہ ہے لیکن افسوس ہے کہ لیکن یہاں پر ضرورت کے مطابق ترقیاتی ڈھانچہ موجود نہیں تاہم ہماری کوششیں ہیں کہ کہ چرار شریف کو آپ کے تعاون سے

مزید خبرں

 شیری ملہ پورہ سڑک کھنڈرات میں تبدیل    فیاض بخاری    بارہمولہ//ضلع بارہمولہ کے نارواو علاقہ میں شیری سے ملہ پورہ رابطہ سڑک کی خستہ حالی کی وجہ سے لوگوں اور ٹرنسپورٹروں کو زبردست مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔مقامی لوگوں کے مطابق شیری سے ملہ پورہ کی واحد رابطہ سڑ ک خستہ حال ہو چکی ہے جس کے نتیجے میں ہیون ، کالے بن ، کاو ہار اور فتح گڈھ سمیت ایک درجن سے زیادہ دیہات کے لوگوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔انہوں نے آر اینڈبی محکمہ پر الزام عائد کرتے ہوئے بتایا کہ سڑک کی حالت ناگفتہ بہہ ہونے کے باوجود اس کی مرمت نہیں کی جارہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ سڑک پر جگہ جگہ گہرے کھڈ بن چکے ہیں جس کی وجہ سے مسافروں اورٹرانسپورٹروں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے ۔بارشوں کے دوران یہ سڑک  جھیل کا منظر پیش کرتی ہے ۔ لوگو ں کے مطابق گزشتہ روز ہوئی بارش اور برفباری

تازہ ترین