یکم سے 3فروری تک پہاڑوں پر ہلکی برفباری کا امکان

سرینگر //شہر سرینگر اور وادی کے دیگر اضلاع میں دن کے درجہ حرارت میں کمی واقع ہونے سے سردی کی لہر پیدا ہوگئی ہے اور پچھلے دو روز سے دن میں یخ بستہ ہوائوں نے سردی کی شدت میں اضافہ کردیا ہے۔وادی میں پہلے ہی شبانہ درجہ حرارت میں بہت حد تک کمی ہوئی ہے اور شبانہ سردی کے ریکارڈ قائم ہوچکے ہیں۔منگل کو دن کا کم سے کم درجہ حرارت 5ڈگری ریکارڈ کیا گیا تھا جبکہ بدھ کو دن کے درجہ حرارت میں مزید کمی آئی۔ پچھلے دو روز سے دن میں بے جان دھوپ رہتی ہے  حالانکہ اس سے قبل اچھی خاصی دھوپ ہوا کرتی تھی۔محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ دن میں موسم ابرآلودرہنے کی وجہ سے سخت سردی پیدا ہوگئی ہے کیونکہ دن بھر ٹھنڈی ہوائیں چل رہی ہیں تاہم شبانہ درجہ حرارت میں بہتری ریکارڈ کی جارہی ہے۔ محکمہ موسمیات نے یکم سے3 فروری تک بالائی علاقوں میں ہلکی برف باری کا امکان ظاہر کیا ہے ۔  دو روز کے دوران اگرچہ رات کے کم سے ک

۔2افسران کی معطلی کے احکامات صادر

سرینگر// جموں کشمیرسرکار نے بدھ کو2سرکاری افسروں کی معطلی کے احکامات صادر کردئیے ۔عمومی انتظامی محکمہ کی جانب سے جاری ایک حکم نامہ زیرنمبر75-JK(GAD)آف2021 محررہ27جنوری2021میں پہلے ہی جاری کئے گئے احکامات کاحوالہ دیتے ہوئے کہاگیاکہ طرزعمل سے متعلق زیرالتواء انکوائری کے پیش نظرمحکمہ اعلیٰ تعلیم کے سیکشن افسرمحمد عمران اورمحکمہ اینمل وشیپ ہسبنڈری(محکمہ افزائش بھیڑ و جانور) کے سیکشن آفیسر وجے کمارکی فوری معطلی عمل میں لائی جاتی ہے ۔لیفٹیننٹ گورنر کی ہدایت پر جنرل ایڈمنسٹریشن ڈیپارٹمنٹ کے کمشنرسیکریٹری منوج کمار دویدی کی جانب سے جاری سرکاری آرڈرمیں کہاگیاہے کہ ا ن دونوں سرکاری افسروں کوجموں وکشمیر سیول سروسز(کلاسفکیشن،کنٹرول اینڈاپیل) رولز1956کے رول31کے تحت ملازمت سے معطل کردیاجاتاہے ۔  

کورونا وائرس| خاتون فوت ، 77نئے معاملات درج

سرینگر //جموں و کشمیر میں پچھلے 24گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کی تشخیص کیلئے 17ہزار 203ٹیسٹ کئے گئے جن میں 77افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں اور اسطرح متاثرین کی مجموعی تعداد 124ہزار234ہوگئی جن میں 72ہزار747کشمیر جبکہ 51ہزار 487جموں میں متاثر ہوئے ہیں۔بدھ کو کشمیر صوبے میں ایک60سالہ خاتون کورونا وائرس سے فوت ہوگیا ۔ متوفین کی مجموعی تعداد 1931ہوگئی ۔ ان میں 719جموں جبکہ 1212کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں۔ نئے 77معاملات میں سے 18جموں جبکہ 59کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں۔ کشمیر صوبے کے59معاملات میں 23ضلع سرینگر، 8بارہمولہ، 4بڈگام، 6پلوامہ،1کپوارہ،6اننت ناگ، 0بانڈی پورہ، 7گاندربل، 2کولگام اور 2شوپیان سے تعلق رکھتے ہیں۔ جموں صوبے کے 16، 1ادھمپور اور ایک کٹھوعہ میں متاثر ہوا ہے جبکہ دیگر 7اضلاع میں کسی کی رپورٹ مثبت نہیں آئی جن میں راجوری، ڈوڈہ، سانبہ، کشتواڑ، پونچھ، رام بن اور ریاسی سے تعلق رکھتے ہیں۔&nb

کورونا کے باعث او پی ڈی کی بندش

 سرینگر //عالمی وباء کے دوران جموں و کشمیر میں کورونا وائرس متاثرین کے علاج کیلئے مختص رکھے گئے44  سرکاری اسپتالوںمیں 7ایسے اسپتال بھی شامل ہیں جہاں او پی ڈی بند ہونے کی وجہ سے ان اسپتالوں کی آمدنی بھی ختم ہوگئی ہے اور400ایچ ڈی ایف ملازمین تنخواہوں سے محروم بھی ہوگئے ہیں۔جواہر لال نہرو میموریل اسپتال رعناواری اور بارہمولہ ضلع کے دیگر اسپتالوں میں کام کرنے والے300ملازمین پچھلے10ماہ سے تنخواہوں سے محروم ہیںجبکہ اس دوران 7عارضی ملازمین وائرس سے متاثر بھی ہوئے  جن میں ایک کی مالی حالت کافی کمزور ہے۔ آل جے اینڈ کے ایچ ڈی ایف ہیلتھ ایمپلائز ایسوایشین کاکہنا ہے کہ اعلیٰ افسران تو ہماری خدمات کا اعتراف کرتے ہیںاور بجٹ میں شامل کرنے کا وعدہ بھی کرتے ہیںلیکن جب بات ہمارے حق کی ہوتی ہے تو سب خاموش ہوجاتے ہیں۔  

سلمان ساگر کاصورہ کا مختلف علاقوںکا دورہ

سرینگر//نیشنل کانفرنس یوتھ لیڈراورکونسلرسلمان علی ساگر نے عوام کو درپیش مسائل کا جائزہ لینے کیلئے صورہ کے اونتہ بھون، الٰہی باغ، ڈار محلہ، احمد نگر(90فٹ)، میر محلہ ، شاہ محلہ اور ملہ باغ کے علاوہ دیگر علاقوں کا دورہ کیا۔ایک بیان کے مطابق انہوں نے مختلف مقامات پر مقامی لوگوں کے ساتھ تبادلہ خیالات کیا۔ انہوں نے جگہ جگہ پر لوگوں کے ساتھ بات کی اور اُن کے مسائل سنے اور متعلقہ حکام کو ان کا سدباب کرانے کی تاکید کی۔ انہوں نے کہا کہ لوگوں کیلئے ہر وقت دستیا ب رہنا اور ان کے مسائل کا ازالہ کرانا اُس کا فرض ہے کیونکہ لوگوں نے  اپنے قیمتی ووٹوں سے اُسے کامیاب بنا یا ہے۔ سلمان ساگر نے کہا ’’ عوامی مفادات کے حامل 70لاکھ روپے کی لاگت کے پروجیکٹوں پر جلد ہی کام شروع ہوگا۔ان کاموں میں ڈرینج سسٹم کی تجدید کاری، پارک کی تعمیر و تجدید، مقامی سٹیڈیم لائٹنگ اور مائک سسٹم نصب کرنے کے علاوہ

اتحاد امت کیلئے ہم آہنگی لازمی

سرینگر//انجمن شرعی شیعیان کے اہتمام سے بڈگام میں علماء کا ایک اجلاس آغا سید حسن کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں وادی کے مختلف علماء نے شرکت کی۔ اجلاس میں طے پایا گیاکہ اتحاد امت کے لئے علماء کے درمیان ہم آہنگی اور نزدیکی رابطہ کے لئے مشترکہ طور پر کوشش کی جائے اور اس سلسلے میں چھ افراد پر مشتمل ایک رابطہ کمیٹی تشکیل دی گئی جو علماء ،دانشوروں اور مفکرین کے ساتھ رابطہ کرکے مشترکہ لائحہ عمل تشکیل دے گی۔ اجلاس میں مجلس علماء کی تشکیل کے بارے میں بھی حتمی فیصلہ لیا گیا اور ایک آزاد و خودمختار شیعہ وقف بورڈ بنانے کے بارے میں اتفاق رائے سے فیصلہ ہوا جسے جموں و کشمیر میں شیعہ اوقاف کو منظم کرنے کی کوشش کی جائے گی۔  

جموں کشمیر کے طلباء کیلئے وزارت اقلیتی امورکا وظیفہ

سرینگر// پولیس نے اقلیتی کوٹا کے تحت وظیفہ کی حصولیابی کیلئے کولگام کے طلاب کے نام پرنقلی طلاب کو دکھانے اور وزارت اقلیتی امور سے ایک کروڑ34لاکھ روپے حاصل کرنے کی پاداش میں مغربی  بنگال  کے ایک شہری کو مالدہ میں گرفتار کیا۔پولیس کرائم برانچ کشمیر کی ایک ٹیم ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ کی سربراہی میں مغربی بنگال روانہ ہوگئی اور ملزم سلیم  شیخ ولد غیاث الدین میاں ساکن تنسا تبگی بیرآباد ، مالدہ ، مغربی بنگال کو گرفتار کیا۔ اس سلسلے میں ایک کیس زیر ایف آئی آر نمبر  04/2020 زیر دفعات 420, 468, 120-B-آر پی سی, 66 (D) IT قانون  5(2)پی سی ایکٹ کرائم برانچ کشمیر درج کیا گیا تھا۔ سلیم شیخ نے دیگر ملزمان کے ساتھ مجرمانہ سازش کرکے ضلع کولگام میںجموں و کشمیر کے طلباء کے لئے اقلیتی کوٹا کے تحت میرٹ اسکالرشپ کے لئے  سال2018-19قومی اسکالرشپ پورٹل پر جعلی درخواست فارم اپ لوڈ کیے۔ ا

شیری بارہ مولہ میں بجلی کی آنکھ مچولی سے لوگ پریشان

بارہمولہ// ضلع بارہمولہ کے شیری ناروائو  علاقے میں بر قی رو کی عدم دستیابی سے عوام کو گونا گو ں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے تاہم محکمہ کے افسران کی نوٹس میں شکایات لانے اور کئی بار احتجاج کرنے کے باوجود بھی بجلی کی صورتحال میں بہتری نہیں لائی جاتی جس سے عوام میں محکمہ کے خلاف زبردست غم و غصہ پایا جارہا ہے  ۔شیری  بارہمولہ کے صارفین اور تاجروں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ علاقے میں گزشتہ کئی ہفتوں سے بجلی آتے ہی چلی جاتی ہے جس کے نتیجے میں عوام کی مشکلات میں اضافہ ہوگیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اگرچہ اس بارے میں کئی بار احتجاج بھی کیا گیا لیکن محکمہ کے افسران نے آج تک صورتحال کو بہتر بنانے کیلئے کارگر اقدامات نہیں کئے بلکہ وہ ٹس سے مس نہیں ہورہے ہیں جس کے نتیجے میں عوام میں محکمہ کے خلاف زبردست غم و غصہ پایا جارہا ہے کیونکہ عوامی لوگوں کے مطابق علاقے میں بجلی کٹوتی کا کوئی

کسانوں سے پانی کاٹیکس لینے کاحکم منسوخ کیا جائے:تاریگامی

سری نگر// کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا مارکسسٹ کے رہنما یوسف تاریگامی نے آبپاشی وفلڈ کنٹرول محکمہ کے چیف انجینئر کے اُس حکم کو منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا ہے جس کے تحت نمبرداروں کو کسانوں سے مارچ2015سے واٹر ٹیکس وصول کرنے کی ہدایت دی گئی ہے ۔کمیونسٹ رہنما نے11اگست2020کو جاری حکم کو منسوخ کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ جموں کشمیر کی اُس وقت کی حکومت کے وزیرخزانہ نے کسانوں سے پانی کا ٹیکس معاف کرنے کا حکم دیا تھا اور اس فیصلے کا اعلان ریاستی اسمبلی کے ایوان میں بھی کیا گیا تھا۔تاریگامی نے کہا کہ ایک چیف انجینئر منتخب حکومت کے فیصلے کو کالعدم کرنے کا حکم کیسے جاری کرسکتا ہے؟انہوں نے کہا کہ کچھ ایسی زرعی اراضی جس پرچیف انجینئر نے واٹر ٹیکس وصول کرنے کی ہدایت جاری کی ہے ،تب سے دوسرے مقاصد کیلئے استعمال ہورہی ہے اور یہ کسانوں کے ساتھ سراسر ناانصافی ہے کہ انہیں اب ادائیگی پرمجبور کیا جارہا ہے جبکہ

’اڈھائی برسوں سے تنخواہ نہیں‘آنگن واڑی ورکروں کا احتجاج

سرینگر/نیوز ڈیسک//واجب الادا تنخواہوں کی واگزاری کے حق میں محکمہ سماجی بہبود کے آنگن واڑی ورکروں اور ہلپروں نے سرینگر میں احتجاج کیا۔  درجنوںخواتین ملازمین نے بدھ کے روز سخت سردی کی پرواہ کئے بغیر پریس کالونی میں مظاہرے کئے ۔احتجاج میں شامل خواتین آنگن واڑی ورکر واجب الادا تنخواہیں واگزار کرنے کے علاوہ دیگر مطالبات کو پورا کرنے کامطالبہ کر رہی تھیں ۔احتجاج میں شامل خواتین ورکروں نے بتایا وہ گزشتہ اڈھائی سال سے تنخواہوں سے محروم ہیں جس کی وجہ سے وہ طرح طرح کے مشکلات کا سامنا کرنا کررہی ہیں۔انہوں نے بتایا انہیں قلیل تنخواہ فراہم کیا جا رہا ہے تاہم وہ بھی وقت پر ادا نہیں کیا جاتا جس کے باعث وہ اور انکے کنبے پریشانیوں سے دو چار ہیں ۔ مظاہرین نے ہاتھوں میں بینر اور پلے کارڑ اٹھا کر’’ہمارے ساتھ انصاف کرو،ظلم کے اس دورامیں انصاف ہمارا نعرہ ہیــ‘‘ وغیرہ  جیس

پلوامہ میں آٹو ڈرائیوروں کی ہڑتال،عام لوگوں کو مشکلات

پلوامہ//پلوامہ قصبے میں پولیس کی طرف سے مبینہ طورتنگ طلب کئے جانے کے خلاف بدھوار کو آٹوڈرائیوروں نے اپنی سروس بطوراحتجاج بند کی جس کی وجہ سے ضلع کے مختلف علاقوں سے آنے والے لوگوں کو مشکلات کاسامنا کرناپڑا۔  کے این ایس کے مطابق جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ کے کئی دیہات کو چلنے والی آٹو سروس بدھ کے روزبند رہنے کے سبب پانچ سے زائد دیہات کے لوگوں کو پلوامہ قصبے تک سفر کرنے میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔مقامی لوگوں کے مطابق پنگلنہ ،گانگوہ ،اٹھورہ اور مندینہ دیہات کے روٹوں پر چلنے والی آٹو سروس کوڈرائیوروں نے بطور ہڑتال معطل رکھا، جس کے باعث مقامی لوگوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ہڑتال پر جانے والے ڈرائیور وںنے الزام لگایا کہ انہیںآئے روز پولیس کی طرف سے بلاجواز تنگ کیا جارہا ہے اور انہیں قصبے (مورن چوک) میں سواری اٹھانے اور چھوڑنے پر جرمانے عائد کئے جانے کے ساتھ ساتھ ہراساں

مزید خبرں

نوافسران کے حق میں خصوصی تنخواہ اسکیل منظور   جموں//جنرل ایڈمنسٹریشن محکمہ نے جموں کشمیرایڈمنسٹریٹوسروس کے نوافسران کے حق میں تنخواہ کے خصوصی اسکیل(غیرفعال) کو منظوری دی ہے۔جنرل ایڈمنسٹریشن محکمہ کے ایک حکم کے مطابق غیرفعال(ممبران) اسکیم کے تحت یکم جولائی 2020سے جموں کشمیرایڈمنسٹریٹو سروس کے خصوصی اسکیل(غیرفعال)  37, 400-6700گریڈ تنخواہ8700(جواب لیول13میں123100-215900) کیاگیا ہے،کومنظوری دی گئی ہے۔یہ خصوصی اسکیل سیدحنیف بلخی،انعام الحق صدیقی،ساجدیحیی نقاش،ڈاکٹر راجندرکمار کھجوریہ،ڈاکٹر طاہرفردوس دتہ،داکٹر روی کمار بھارتی،مشتاق احمد راتھر ،وشال شرما اور شبیراحمد رینہ کے حق میں منظور کیا گیا ہے   آوتھ کل میلیال میں بہتر طبی سڑک وٹرانسپورٹ سہولیات کا مطالبہ   کپوارہ/اشرف چراغ //کرالہ پورہ تحصیل ہیڈ کوارٹر سے 8کلو میٹر دور آوتھ کل میلیال می

تازہ ترین