تازہ ترین

ایک روز کی نرمی کے بعد پارہ پھر نیچے

سرینگر//وادی میں سردی کی شدت میں ایک دن کی نرمی کے بعد پھر سے شدت آگئی ہے اور گذشتہ شب پارہ منفی 7ریکارڈ کیا گیا جو اس سے پہلے کی شب سے زیادہ تھا۔وادی میں شوپیان کا علاقہ سرد ترین رہا جہاں درجہ حرارت منفی10.3ریکارڈ کیا گیا۔محکمہ موسمیات نے منگل کو بتایا کہ اگلے چوبیس گھنٹوں کے دوران موسم خشک رہنے کے بعد22جنوری کی شام سے موسم میں تبدیلی آنے کا امکان ہے جس کا سلسلہ25جنوری شام تک جاری رہے گا۔۔وادی کشمیر میں فی الوقت سخت ترین سردی کے ایام چل رہے ہیں جنہیں کشمیری کلینڈر میں’چلہ کلان‘ کہا جاتا ہے۔40روز پر مشتمل ’چلہ کلان‘ 30 جنوری کو اختتام پذیر ہوگا۔لیکن امسال چلہ کلان میںسردی کا شباب کا موسم ہے۔منفی درجہ حرارت سے شبانہ سردی کے ریکارڈ بن رہے ہیں،آبی ذخائر بشمول شہرہ آفاق جھیل ڈل منجمدہوگئے ہیں،نل اور پانی کی ٹینکیوں میں  پانی جم گیا ہے ،گھروں میں موجود پانی

کولگام میں خیمہ زن ریاسی کے خانہ بدوش

 کولگام // کمرے کے ایک کونے میں بیٹھے 55سالہ زبیر احمد مندار نامی ریاسی کا خانہ بندوش انتہائی غمزدہ ہے ،اس نے 24گھنٹوں میں اپنے2بچوں کے تابوتوں کو کندھا دیا ہے ۔یہ خانہ بندوش کنبہ کولگام کے دور دراز جنگلاتی علاقہ برنیل لامڑ میں عارضی طور رہائش پذیر ہے ۔ہر سال یہ خانہ بدوش موسم سرماشروع ہوتے ہی جموں کے میدانی علاقوں کا رخ کرتے ہیں تاہم اس برس شدید سردی کے باعث وہ وقت پر نہ نکل پائے ۔زبیر احمد نے بتایا ’’ میں مزدوری کرتا ہوں تاہم کورونا لاک ڈائون کی وجہ سے موسم گرما میں کمائی نہیں ہوئی اور پھر ہم کچھ کمائی کیلئے یہاں ٹھہر گئے ‘‘۔انہوں نے کہا’’ جیسے جیسے سردی بڑھ رہی تھی ،ہم نے قریبی اسکول کی عمارت میں منتقل ہونے کا سوچا ، لیکن پھر اس کا مطلب مویشیوں کو چھوڑنا تھا ، جوہمارا ذریعہ معاش ہے،اس لئے ہم کھلے عام خیموں میں رات گزارنے کو ترجیح دیتے ہیں&lsq

کورونا وائرس|24گھنٹوں میں113مثبت

 سرینگر // جموں و کشمیر میں پچھلے 24گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کی تشخیص کیلئے 22ہزار  411 ٹیسٹ کئے گئے جن میں 113افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں اور اسطرح متاثرین کی مجموعی تعداد 1لاکھ 23ہزار 538ہوگئی ہے۔ ان میں 72ہزار 306کشمیر جبکہ 51ہزار 232جموں صوبے میں متاثر ہوئے ہیں۔ منگل کو کشمیر صوبے میں ایک اور متاثرہ شخص فوت ہوگیا ہے۔ متوفین کی مجموعی تعداد 1923ہوگئی جن میں 716جموں جبکہ 1207کشمیر میں فوت ہوئے ہیں۔  نئے 113معاملات میں 53جموں جبکہ 60کشمیر صوبے سے تعلق رکھتے ہیں۔ جموں صوبے کے 53متاثرین میں سے 40ضلع جموں،ایک کٹھوعہ، 2سانبہ، 1کشتواڑ، 7پونچھ، 2رام بن سے تعلق رکھتے ہیں جبکہ ادھمپور، راجوری، ڈوڈہ اور ریاسی سے ایک تعلق رکھتا ہے۔ کشمیر صوبے کے 60نئے معاملات میں 37ضلع سرینگر، 5بارہمولہ، 7بڈگام،4پلوامہ، 2کپوارہ، 1بانڈی پورہ،  2کولگام اور 2  شوپیان سے تعلق رکھتے ہیں۔

ہیلتھ ورکروں میں جوش و خروش ہنوز مفقود

 سرینگر //گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر کے زیر نگرانی کام کرنے والے صدر اسپتال میں ہیلتھ ورکروں کو ویکسین دینے کا عمل منگل سے شروع ہوگیا اور پہلے دن 25ہیلتھ ورکروں کو کورنا مخالف ٹیکے دئے گئے جبکہ جی ایم سی سمیت دیگر6اسپتالوں میں ہیلتھ ورکر ابھی بھی ٹیکہ کاری کے منتظر ہے۔ گورنمنٹ میڈیکل کالج کے تحت کام کرنے والے صدر اسپتال، لل دید ، بون اینڈ جوائنٹ ، سپر سپیشلٹی ، سی ڈی اسپتال ، کشمیر ویلی نرسنگ ہوم اور ذہنی مریضوں کے خصوص کا ٹھی دروازہ اسپتال میں سے صرف صدر اسپتال میں ٹیکہ کاری شروع ہوگئی ہے جبکہ دیگر اسپتالوں میں کام کرنے والے ہیلتھ ورکروں کو ابھی ویکسین نہیں دیا گیا ۔ سی ڈی اسپتال میں تعینات ایک سینئر ڈاکٹر نے بتایا کہ اسپتال میں ابھی بھی 87کورونا وائرس مریض زیر علاج ہیں اور ڈاکٹر ہر وقت ان مریضوں کے رابطے میں آتے ہیں‘‘۔سینئر ڈاکٹر نے بتایا کہاسپتال میں کام کرنے والے

الرجی متاثرین، حاملہ خواتین اور دودھ پلانے والی مائوں کوویکسین نہ دیا جائے

نئی دہلی // کورونا ویکسین بنانے والی کمپنی’بھارت بائویٹک‘ نے احتیاطی  ایڈوائزری جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ مدافعتی نظام پر اثر انداز ہونے والی ادویات لینے والے لوگوں کو Covaxin  نہیں لگانا چاہئے۔ ملک کی چند ریاستوں میں شکایات درج ہونے کے بعد بھارت بائوٹیک نے مفصل رپورٹ جاری کرتے ہوئے لکھا ہے کہ خون کی مختلف بیماریوں میں مبتلا لوگ بھی یہ ویکسین نہیں لے سکتے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ الرجی کے شکار افراد، حاملہ خواتین اور دودھ پلانے والی مائوں کو بھی ویکسین نہیں لینا چاہئے۔ ٹائمز آف انڈیا کے پاس موجود رپورٹ میں مزید لکھا گیا ہے کہ اگر ویکسین لینے کے بعد کسی شخص میں کورونا وائرس جیسے علامات پیدا ہوتی ہیں تو آر ٹی۔ پی سی آر کی تشخیص کے بعد اسے ائے ای ایف آئی سمجھا جائے گا۔ ٹیکہ کاری کیلئے قوائد و ضوابط جاری کرنے والے ادارے نے حالیہ دنوں کہا تھا کہ جو لوگ(immuno-suppre

حکومت عوام کی ترقیاتی امنگوں کو پورا کرنے کیلئے کوشاں:منوج سنہا

 سری نگر//صوبہ کشمیر کے میونسپل اِداروں کے سربراہان ، سیاسی قائدین ، کھلاڑی ، سکمز صورہ کے سینئر فیکلٹی ارکان اور منیجنگ ڈائریکٹر احد ہوٹلز نے  یہاں راج بھون میں لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا سے ملاقات کی۔صدور ،نائب صدور ، کونسلرس کوآڈی نیشن کمیٹی کے وفود جو صوبہ کشمیرکے میونسپل اِداروں کے ارکان پر مشتمل تھے ،نے کمیٹی کے چیئرمین محمد اقبال آہنگر کی قیادت میں لیفٹیننٹ گورنر سے ملاقات کی ۔کمیٹی دیگر ارکان جن میں الطاف احمد لون ، اِرشاد احمد ، عمر ککرو ، زاہد جان، جہانگیر احمد، عبدالکریم ، پرتپال سنگھ اور شاہینہ نداف شامل تھیں ،نے لیفٹیننٹ گورنر کو مانگوں اور مسائل پر ایک یادداشت پیش کی جن میں جمہوری اداروں کو نچلی سطح پر مستحکم بنانے کے لئے 74ویں ترمیم کی مکمل عمل آوری ، تمام میونسپل کمیٹیوں اوور کونسلوں سے وابستہ صفائی کرمچاریوں کی ملازمتوں کوباقاعدہ بنانے ، اِختیارات کی تفویض

جموں کشمیرکے نوجوانوں کے ہنرکونکھارنے کاقدم

جموں//محکمہ اعلیٰ تعلیم نے جموں اور سرینگر کلسٹریونیورسٹیوں میں درج طالب علموں کا ہنر مزید نکھارنے کیلئے انسٹی چیوٹ آف کمپنی سیکرٹریز آف انڈیا کے ساتھ ایس پی ایم آر کالج جموں میں ایک مفاہمت نامے پر دستخط کئے ۔مفاہمت نامہ محکمہ کی جانب سے جموں کشمیر کے انڈر گریجویٹ طلاب کو مزید باہنر بنانے کیلئے شروع کی گئی پہل کا ایک حصہ ہے جس کے تحت سرٹیفکیٹ ، ڈپلومہ ، ایڈوانسڈ ڈپلومہ اور ڈگریاں حاصل کی جا سکتی ہیں ۔ بیان میں کہا گیا کہ کئی شعبوں جیسے زراعت ، باغبانی ، فیشن ٹیکنالوجی ، پیرا میڈیکل سائینسز ، فارمیسی نرسنگ اور فوڈ ٹیکنالوجی سے متعلق ہنروں میں تربیت فراہم کی جا رہی ہے ۔ تقریب میں بمنہ ڈگری کالج سرینگر نے بذریعہ ورچول طریقہ کار شرکت کی ۔ کمشنر سیکرٹری محکمہ اعلیٰ تعلیم نے مفاہمت نامے کی اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ نے یہ اقدام کل کی افرادی قوت کو مستقبل کیلئے تیار رکھنے کی غرض

لاوے پورہ تصادم

 پلوامہ//سید اعجاز//لاوے پورہ جھڑپ میں مارے گئے تین نوجوانوں میں سے ایک نوجوان اطہر مشتاق کے والد نے کہا ہے کہ وہ انصاف کے حصول کیلئے ملک کی سب سے بڑی عدالت سپریم کورٹ کادروازہ بھی کھٹکھٹائیں گے۔انہوں نے کہا ،میری زندگی کومقصد جوکچھ تھا،سب ختم ہوگیا(ان کابیٹا)مجھے قاتلوں کے خلاف لڑنا ہے اورانصاف حاصل کرنا ہے‘‘۔وہ صوبائی پولیس سربراہ وجے کمار کے سوموار کو دیئے گئے بیان پراپنے ردعمل کا اظہار کررہے تھے۔رشتہ داروں کے ہمراہ ذرائع ابلاغ سے بات کرتے ہوئے انہوں نے ہاتھوں میں سیاہ بینر اُٹھائے تھے،جن پر’’ہم انصاف چاہتے ہیں اورلاشوں کوواپس کرو‘‘کے نعرے درج تھے۔مہلوک نوجوان کے والد مشتاق احمد نے بتایا’’ میں انصاف چاہتا ہوں اگر مجھے اس کے لئے ملک کے سپریم کورٹ یا ہائی کورٹ میں بھی جانا پڑے گا تو میں وہاں بھی جائوں گااورقاتلوں کو ننگا کروں گا&lsq

کشمیرمیں پتھرکے زمانہ کے مقامات

سرینگر//کشمیریونیورسٹی کے سینٹرل ایشین اسٹیڈیزشعبے نے کشمیرمیں پتھر کے زمانہ کے آخری دور(Neo Lithic period)کے مقامات سے متعلق ایک روزہ بین الاقوامی سطح کے سمینار کا اہتمام کیا۔یہ آن لائن سمینار سڈنی یونیورسٹی آسٹریلیا کے شعبہ آثار قدیمہ کے اشتراک سے منعقد کیاگیا۔اس دوران عالمی شہرت یافتہ ماہرین نے افتتاحی اورتیکنیکی سیشن کے دوران اپنے تحقیقی مقالے پیش کئے جن میں پروفیسر الیسن بیٹس اورڈاکٹر مائیکل اسپیٹ یونیورسٹی آف سڈنی بھی شامل ہیں ۔اپنے صدارتی خطبے میں کشمیر یونیورسٹی کے ڈین ریسرچ پروفیسر شکیل احمد رومشو  نے کہا کہ کشمیرمیں کریوائوں کی افادیت پر روشنی ڈالی جو کشمیرکی قدیم تاریخ کے بارے میں محققوں کو کافی معلومات فراہم کرتے ہیں ۔انہوں نے سینٹرل ایشین اسٹیڈیز کو اس سمینار کا انعقاد کرنے کیلئے سراہا اور کہا کہ یہ نازک اہمیت کے معاملے بحث طلب ہیں اور ان کی کھوج لازمی ہے ۔اپنے ا

درگمولہ نشست کی ووٹ شماری کے عمل میں تاخیر

سرینگر// کپوارہ کی درگمولہ نشست سے الیکشن لڑنے والی پاکستانی زیرانتظام کشمیر سے تعلق رکھنے والی صومیہ صدف کے حلقے میں ووٹوں کی گنتی روکنے سے الیکشن میں حصہ لینے امیدواروں نے سخت ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے الیکشن کمیشن سے مطا لبہ کیا ہے کہ وہ اس حلقے کے جلد ازجلد انتخا بی نتائج منظر عام پر لائیں۔ سی این ایس کے مطابق کپوارہ کی درگمولہ نشست سے الیکشن لڑنے والی پاکستان کے زیرانتظام کشمیر سے تعلق رکھنے والی صومیہ صدف نے حالیہ ڈی ڈی سی انتخا بات میں حصہ لیا تھا۔ صومیہ صدف نے زور و شور سے اپنی مہم چلائی اور ان کا انتخابی نشان لیپ ٹاپ تھا۔ انہوں نے حکام کے سامنے کاغذات نامزدگی داخل کرتے وقت اپنا پاسپورٹ، الیکشن کارڈ اور آدھار کارڈ تک پیش کیا لیکن 22دسمبر کو ہوئی وو ٹ شماری کے دن سے ہی اس حلقے میںووٹوں کی گنتی روکی گئی اور تب سے آ ج تک اس حلقے کے انتخا بی نتائج منظر عام پر نہیں لا ئے جارہے ہی

وادی میں پھر زلزلہ کا جھٹکا

سرینگر// وادی میںکے مختلف علاقوں میںکل رات ایک بار پھر زلزلے کے جھٹکے محسوس کئے گئے جس کی وجہ سے لوگوں میںخوف و ہراس پھیل گیا۔ کشمیر میں گزشتہ کئی ہفتوں سے بیچ بیچ میں زلزلے کے جھٹکے محسوس ہورہے ہیں تازہ واقعے میںکل رات 9بجکر 13منٹ پر وادی کے کئی علاقوںمیں زلزلہ کے جھٹکے محسوس کئے گئے جس کی شدت 3.6ریکٹر پیمانے پر ریکارڈ کرلیا گیا ہے جبکہ زلزلے کی گہرائی 5کلو میٹر تھی ۔فوری طور پر کسی علاقہ سے جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔  

محکمہ بجلی میں جونیئرانجینئرکی تقرری

سرینگر//ارشاداحمد//کرائم برانچ کشمیر نے منگلوارکو اننت ناگ کے شہری کے خلاف سروس سلیکشن ریکروٹمنٹ بورڈ کی بھرتی مہم کے دوران جعلی ڈگریوں کے عوض محکمہ پاور ڈیولپمنٹ میں جونیئر انجینئر الیکٹرک کے طور پر نوکری حاصل کرنے پرعدالت میں چارج شیٹ پیش کی۔کرائم برانچ کے اعلیٰ حکام نے بتایا کہ ضلع اننت ناگ کے علاقے ویری ناگ کے مقامی شہری محمد عارف گنائی پر دس سال قبل ایک مقدمہ  زیر نمبر 09/2011 رنبیرپینل کوڈکے  دفعات  468،471،201کے تحت درج کیا گیا تھا، کی چارج شیٹ کو خصوصی مجسٹریٹ 13 ویں فنانس ریلوے سرینگر کی عدالت میں پیش کیا گیا۔یہ مقدمہ جعلی ڈپلوما مارکس سرٹیفکیٹ کی بنیاد پر سروس سلیکشن ریکروٹمنٹ بورڈ کی بھرتی مہم کے دوران محکمہ پاور ڈیولپمنٹ  میں ایک جونیئر انجینئر الیکٹرک کی تقرری حاصل کرنے پر دائر کیاگیاہے ۔کرائم برانچ کے اعلیٰ حکام نے مزید بتایا کہ ہمارے پاس ایک تحریری شک

عدالتی احکامات کے تحت عمرککرومیونسپل کونسل بارہمولہ کے صدربرقرار

بارہمولہ //فیاض بخاری//بارہمولہ میونسپل کونسل کے صدر عمر اظہر ککرو عدالت عالیہ کے حکم کے تحت پر اپنے  صدر کے عہدے پر ہی قائم رہیں گے۔عدالت عالیہ نے ایگزیکٹو آفیسر بارہمولہ کے حکم نامے کو کالعدم قرار دیا ۔ اس سے پہلے عمر اظہر ککرو کوکو عدم اعتماد کی تحریک سے عہدے سے ہٹایا گیا تھا ۔اس طرح عمر اظہر ککرو صدر کے عہدے پر بدستور فائز رہیں گے۔   15 جنوری2021 کے ہائی کورٹ کے حکم کے مطابق ، عمر ککرو صدر میونسپل کونسل بارہمولہ برقرار رہیں گے جب تک نہ عدم اعتماد کی تحریک سے متعلق ہائی کورٹ سے حتمی فیصلہ سنایا جائے گا ،جس کی سماعت کی اگلی تاریخ 17 مارچ 2021  مقرر کی گئی ہے۔ ان باتوں کا اظہارے عمر ککرو نے شیروانی ہال بارہمولہ میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کیا ۔ انہوں نے  ذرائع ابلاغ کے نمائندوں  سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اُنہیں عدالت عالیہ پر پورابھروسہ ہے، جس نے ایک غلط

محکمہ تعلیم میں تعینات زونل ایجوکیشن افسروں کاکنفرمیشن کا مطالبہ

سرینگر //محکمہ سکول ایجوکیشن میں تعینات انچارج زونل ایجوکیشن افسر ان نے اپنی کنفرمیشن کا مطالبہ کیاہے۔اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ کئی افسران ملازمت سے سبکدوش بھی ہوچکے ہیں لیکن ان کی کنفرمیشن نہیں ہوئی اور 2008سے وہ اپنی کنفرمیشن کیلئے انتظار کررہے ہیں۔بیان کے مطابق سینکڑوں کی تعداد میں ہیڈ ماسٹروں اور انچارج ہیڈ ماسٹروں کو انچارج زیڈ ای اوز بنایاگیالیکن ان کے مسائل کو حل کرنے میں کوئی بھی پہل نہیں کی جا رہی ہے جس سے ان کے ساتھ ناانصافی ہو رہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ ان کے ساتھ انصاف کیاجائے اور ان کی خدمات کو خاطر میں لاتے ہوئے انہیں کنفرمیشن دی جائے۔سکول ایجوکیشن آفیسرس ایسوسی ایشن کشمیر نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ انہوں نے اس تعلق سے متعدد بار محکمہ کے اعلیٰ حکام کو آگاہ کیا لیکن اس جانب کوئی بھی دھیان نہیں دیا جا رہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ایسے اساتذہ بچوں کو تربیت اور محکمہ

راشن کوٹے میں کمی کا فیصلہ تشویشناک:حکیم

سرینگر//وادی میں محکمہ خوراک ورسدات وامورصارفین کی طرف سے صارفین کے ماہانہ راشن کوٹے میں کمی کرنے کے فیصلے پرتشویش کااظہار کرتے ہوئے پیپلزڈیموکریٹک فرنٹ کے چیئرمین حکیم محمد یاسین نے لیفٹینٹ گورنر سے مانگ کی اس فیصلے کو فوری طور کالعدم قرار دیاجائے۔ایک بیان میں حکیم یاسین نے کشمیرمیں صارفین کیلئے مقررہ ماہانہ راشن کوٹے میں کمی کرنے کے محکمہ خوراک ورسدات وعوامی تقسیم کاری کے مبینہ فیصلے کی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ صارفین کو اس بہانے راشن گھاٹوں سے خالی ہاتھ واپس لوٹنے پرمجبور کیا جاتا ہے کہ پہلے ان کواپنے راشن کارڈوں کو آدھار کارڈ کے ساتھ لنک کرانا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ راشن کارڈوں کا آدھار کے ساتھ لنک کرانا محکمہ خوراک ورسدات وامورصارفین کی اپنی ذمہ داری ہے جس میں وہ بری طرح ناکام رہے ہیں اور وہ اپنی ناکامی کا نزلہ عام صارفین پر گرا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ راشن کے کوٹے میں کمی کرن

مزید خبرں

قاضی گنڈ میں سڑک حادثہ ۔3 اہلکاروں سمیت 4زخمی اننت ناگ //عارف بلوچ//قاضی گنڈ میں سی آر پی کی ایک گاڑی اور تیل ٹینکر کے درمیان ٹکر ہوئی جس کے نتیجے میں3سی آر پی اہلکار اورٹینکر ڈرائیور زخمی ہوگئے ۔سرکاری ذرائع کے مطابق بونیگام قاضی گنڈ میں منگلوار صبح سی آر پی کیسپر گاڑی اور ایک تیل ٹینکر زیر نمبرJK02AR 5528کے درمیان ٹکر ہوئی جس کے نتیجے میں سی آر پی ایف 46بٹالین سے وابستہ3اہلکاربشوا جیت، کیلاش چند،اشو ک کمار اورٹینکر ڈرائیور گنیش داس ساکنہ جموں زخمی ہوگئے ۔زخمیوں کو فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا، جہاں ڈاکٹروں کے مطابق اُن کی حالت خطرے سے باہر ہے ۔پولیس نے معاملے کی نسبت کیس درج کیا ہے۔   کولگام میں سردی سے دوبچوں کی موت پرسی پی آئی ایم کو تشویش  سری نگر//کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا(مارکسسٹ)نے وادی میں رہائش پزیدخانہ بدوش کنبوں کو رہائشی سہولیات فراہم ک

پینے کے پانی کی عدم دستیابی | گاندربل میں لوگوں کو مشکلات درپیش،سڈورو میں دھرنا

گاندربل+اننت ناگ//گاندربل قصبہ کے بیشتر علاقوں سمیت درجنوں علاقوں میں پینے کے صاف پانی کی مقدار میں کمی واقع ہونے سے ہزاروں افراد پر مشتمل آبادی کو گوناگوں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔مقامی آبادی کے مطابق قصبہ میں موجود گنگرہامہ،دودرہامہ،بیہامہ، سالورہ، وانی پورہ اوربمبلورہ سمیت میونسپل کونسل کے حدود میں آنے والے وارڑ میں پانی کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے۔وانی پورہ کے مقامی شہری ماجد وانی نے اس ضمن میں کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ پچھلے پندرہ روز سے گاندربل قصبہ میں موجود علاقوں میں پانی کی مقدار میں کمی واقع ہوگئی ہے۔ادھر گاندربل کے مضافاتی علاقہ اکہال ،نجون ،گوٹلی باغ،ورپش،بدرکونڈ،شاہ پورہ اور گیراج سمیت دیگر علاقوں میں بھی پانی کی عدم فراہمی کی وجہ سے آبادی کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہاہے۔کئی علاقوں میں استعمال کے لئے دور دور سے پانی لانا پڑ رہا ہے۔اس سلسلے میں محکمہ جل شکتی کے اسسٹ

برنہ بگ کنگن میں محکمہ بجلی کے خلاف احتجاجی دھرنا

کنگن//برنہ بگ کنگن کے مردو زن نے منگلوار کو سخت سردی کے باوجود برنہ بگ وانگت کنگن سڑک پر محکمہ بجلی کے خلاف احتجاجی دھرنا دیا ۔احتجاج میں شامل لوگوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ علاقے میں نصب بجلی ٹرانسفارمر گذشتہ ایک ماہ سے بار بار خراب ہوجاتا ہے جس کی وجہ سے برنہ بگ کنگن میں اندھیراچھایا رہتا ہے۔ مظاہرین کے مطابق علاقے میں گذشتہ ایک ہفتے سے بجلی ٹرانسفارمر خراب ہوگیا ہے اور لوگ چلہ کلان کے دوران بجلی کی عدم دستیابی کو لیکر مشکلات سے دو چار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کئی بار متعلقہ محکمہ سے لوگ مطالبہ کررہے ہیں کہ ایک سو گھرانوں پر مشتمل آبادی کے لئے 250 کے وی بجلی ٹرانسفارمر نصب کیا جائے تاکہ لوگوں کو بار بار بجلی کے حوالے سے مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے لیکن محکمہ نے ان کے مطالبے کو آج تک نظر انداز کیا ہے۔مظاہرین نے دھمکی دی کہ اگر آج علاقے میں 250 کے وی بجلی ٹرانسفارمر نصب نہیں کیا گ

غلام نبی شیداکا انتقال | نیشنل کانفرنس،پی ڈی پی ،اپنی پارٹی ،شمع فائونڈیشن ،عوامی مجلس عمل ،اردو کونسل کا اظہار رنج و غم

سرینگر//نیشنل کانفرنس،پی ڈی پی ،اپنی پارٹی ،عوامی مجلس عمل ،اردو کونسل ،شمع فاونڈیشن،سی پی آئی ایم ،پی ڈی ایف سمیت متعددسیاسی،مذہبی،ادبی اور سماجی تنظیموں نے غلام نبی شیدا کے انتقال پر گہرے دکھ اور صدمے کا اظہار کرتے ہوئے صحافت میں ان کی خدمات کو یاد کیا ہے۔نیشنل کانفرنس کے صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ اور نائب صدر عمر عبداللہ نے غلام نبی شیدا کے انتقال پر گہرے صدمے کا اظہار کیا ہے۔ لیڈران نے اس سانحہ ارتحال پر مرحوم کے جملہ سوگوران خصوصاً اہل خانہ کیساتھ دلی تعزیت کی اور مرحوم کی جنت نشینی اور بلند درجات کیلئے دعا کی۔ پارٹی لیڈران نے صحافتی میدان میں مرحوم کی خدمات کو خراج عقیدت پیش کیا۔ پارٹی جنرل سکریٹری علی محمد ساگر، معاون جنرل سکریٹری ڈاکٹر شیخ مصطفیٰ کمال، صوبائی صدر ناصر اسلم وانی، رکن پارلیمان حسنین مسعودی ،ترجمان عمران نبی ڈار اور انچارج کانسچونسی پانپور ایڈوکیٹ یاور مسعودی نے بھ

قومی روڈ سیفٹی ماہ | اونتی پورہ، پانپورہ اور ترال میں ریلیاں

 سرینگر//اونتی پورہ پولیس نے ترال ، پانپور اور اونتی پورہ کے علاقوں میںقومی روڈ سیفٹی ماہ کے تحت ریلیاں منعقد کیں۔ اونتی پورہ پولیس نے روڈ سیفٹی ماہ پروگرا م کو جاری رکھتے ہوئے پانپور ، اونتی پورہ اور ترال میں عوام کو حفاظتی اقدامات کے بارے میں ریلیوں کا انعقاد کیا، جس میں ایس ڈی پی او اوانتی پورہ ، ایس ڈی پی او پانپور اور ایس ڈی پی او ترال شامل تھے۔ ان ریلیوں میں متعلقہ ایس ایچ اوبھی شریک تھے۔ترال میں بس اسٹینڈ ترال سے آب گھر ترال تک ریلی کا انعقاد ہوا جس میں اسکول کے بچوں ، ذی عزت شہریوں،سٹیزن کونسل ممبران اور ڈرائیوروں نے شرکت کی۔پانپور میںتھانہ سے ٹانچہ باغ تک ریلی میں اسکولی بچوں ، ڈرائیوروں اور ٹرانسپورٹ یونین ممبران نے حصہ لیا۔اونتی پورہ میں بھی ریلی منعقد ہوئی جو تھانہ سے شروع ہوکر کھار موڈ اونتی پورہ پہنچ کر اختتام پذیر ہوئی۔ریلیوںمیں شریک افراد نے ہاتھوں میں بینر اور پل