تازہ ترین

کورونا کے 144نئے معاملات

 سرینگر //جموں و کشمیر میں ایک مرتبہ پھر کورونا وائرس سے ہونے والی اموات اور روزانہ متاثرہونے والے افرادکی تعداد میں اضافہ ہوا ہے۔ جمعہ کو جموں و کشمیر میں وائرس سے 2 خواتین سمیت 5افراد فوت ہوئے ہیں۔ متوفین کی مجموعی تعداد 1920ہوگئی ہے۔ ان میں 715جموں جبکہ 1205 کشمیر میں فوت ہوئے ہیں۔ پچھلے 24گھنٹوں کے دوران کورونا کی تشخیص کیلئے 22ہزار665ٹیسٹ کئے گئے جن میں سے 144کی رپورٹیں مثبت آئیں اور اسطرح متاثرین کی مجموعی تعداد 1لاکھ 23ہزار108 ہوگئی ہے۔ ان میں 72ہزار 81کشمیر جبکہ 51ہزار 27جموں میں متاثر ہوئے ہیں۔ نئے 144معاملات میں 64جموں جبکہ 80کشمیر میں متاثر ہوئے ہیں۔ جموں صوبے کے 64معاملات میں 46ضلع جموں، 2ادھمپور، ایک کٹھوعہ، 9سانبہ، 1پونچھ اور5رام بن سے تعلق رکھتے ہیں۔ جموں صوبے کے راجوری ، ڈودہ، کشتواڑ اور ریاسی میں کوئی بھی شخص متاثر نہیں ہوا ہے۔ کشمیر کے 80متاثرین میں 40سرینگر، 2ب

صوبائی کمشنر کا گریز دورہ

گریز // ڈویژنل کمشنر کشمیر پی کے پولے اور ڈپٹی کمشنر بانڈی پورہ ڈاکٹر اویس احمد نے جمعہ کو سرحدی ضلع گریز میں 2دنوں تک جارے رہنے والی ٹیکہ کاری مہم کا جائزہ لیا اور وہاں سردی کے ایام اور برف ہٹانے کے کام جائزہ لیا ۔  ویکسینشن کا پہلا مرحلہ سنیچر کو شروع ہونے والا ہے اور اس کیلئے متعلقہ افسران نے ویکسین بھی وہاں پہنچائے ہیں۔ ڈویژنل کمشنر نے سب ڈویژن گریز کے تمام محکمہ جات کی میٹنگ کا انعقاد کیا اور میٹنگ کے دوران برف ہٹانے، سردی کی تیاریوں، ترقیاتی منصوبوں اور سماجی بہبود کیلئے شروع کی گئی سیکیموں کا جائزہ لیا ۔ اس موقع پر سب ڈویژنل مجسٹریٹ ڈاکٹر مدثر وانی نے تمام محکمہ جات کی کارگردی  اور علاقے میں ترقیاتی اقدامات کی تفصیلات پیش کیں ۔ ڈویژنل کمشنر نے محکمہ صحت کے کام کاج کا جائزہ لیا  اور محکمہ صحت کے افسران کو ہدایت دی کہ راستے بند ہونے کی صورت میں زچگی کیلئے خواتین کو

جعلی تعیناتیوں کی جانچ

سرینگر// حکومت نے فروغ ہنر محکمہ اور اس سے منسلک خود مختار اداروں میں جعلی تعیناتیوں کی جانچ کیلئے حقائق کی تلاش سے متعلق کمیٹی کا سر نو  قیام عمل میں لایا ہے،جس کی کمان شہری ترقی و مکانات کے پرنسپل سیکریٹری کو سونپی گئی ہے،جبکہ کمیٹی کوایک ماہ کے اندر اپنی رپورت پیش کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ سرکار نے اس سلسلے میں با ضابطہ طور پر ایک حکم نامہ بھی جاری کیا،جس میں3رکنی کمیٹی کے قیام کو ہری جھنڈی دکھائی گئی ہے۔کمشنر سیکریٹری محکمہ عمومی انتظامی محکمہ منوج کمار دیویدی کی جانب سے جاری حکم نامہ میں کہا گیا’’ گورنمنٹ آرڈر نمبر 578-GAD  آف 2019 محررہ 11مئی 2019 کے تناظر میں محکمہ فروغ ہنر اور اس کے انتظامی کنٹرول کے تحت آنے والے خود مختار اداروں و کارپوریشنوں میں سال 2010  سے  لیکر 2018 تک  جعلی تعیناتیوں کی جانچ کیلئے سرکاری حکم نامہ کے تحت حقائق کی تلاش

بٹ نور ترال کا مفلوک الحال کنبہ شیڈ میں رہائش پزید

ترال (بٹ نور)//مرکزی و ریاستی سرکار کی جانب سے غریب لوگوں کومکان فراہم کرنے کے لئے کئی اسکمیں موجود ہیں، تاہم جنوبی کشمیر کے سب ضلع ترال کے دور افتادہ گائوں بٹ نور میں 5افراد پر مشتمل ایک کنبہ شدید سردی کی اِن راتوں میںمعمولی شیڈ کے ایک کمرے میں زندگی بسر کر رہاہے جہاں انہیں کوئی معمولی سہولیت بھی میسر نہیں ہے جس کی وجہ سے یہ کنبہ انتہائی پریشانیوں کا سامنا کررہا ہے۔ستم ظریفی یہ ہے کہ ایک کمرے میں رہائش پزیر ہونے کے باجوو محکمہ بجلی نے اُن کے بجلی فیس میںکوئی رعایت نہ کر کے ان کی پریشانیوں میں مزید اضافہ کیا ۔سب ضلع ترال سے7کلو میٹر دور بٹ نور نامی گائوں میں رئیس احمد شیخ(موچی) ولد غلام محمدموچی اپنے3بچیوںاو بیوی سمیت ایک معمولی شیڈ میں سخت سردی کے ان ایام میں زندگی بسر کر رہا ہے جس کی وجہ سے اُسے طرح طرح کے مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔رئیس کی زوجہ نے بتایا وہ گزشتہ3سال  سے اس

پولیس کی منشیات مخالف مہم

سرینگر//سوپور، گاندربل اور اونتی پورہ پولیس نے منشیات مخالف مہم کے دوران چارافراد کو گرفتار کر کے ان کے قبضے سے ممنوعہ نشیلی اشیاء برآمد کرلی ہیں۔سوپور پولیس نے ایک کارروائی کے دوران قیصر احمد ڈار ساکن لڈورہ رفیع آباد کے انکشاف پر ایک اور ملزم امتیاز احمد میر ساکن لڈورہ کی گرفتاری عمل میںلائی جس کے قبضے سے کوڈین فاسفیٹ کی12بوتلیں اور سپاسموپراکسون برآمد کرلیا۔انہیں ڈنگی وچھہ تھانہ میں حراست میں رکھا گیا۔ادھر گاندربل پولیس نے ناکہ چیکنگ کے دوران ایک شخص کو 900 گرام بھنگ پائوڈر اور 240500 روپئے نقدی برآمد کئے۔پولیس نے معمول کے مطابق جمعہ کوپیر پورہ قمریہ گرائونڈ گاندربل کے نزدیک ناکہ چیکنگ کے دوران بشیر احمد خان عرف سیٹھہ ساکن حجام محلہ سالورہ گاندربل کو مشتبہ حالت میں گھومتے ہوئے پایا۔پولیس نے مذکورہ شخص کی تلاشی کے دوران تین کلوگرام بھنگ پائوڈربرآمدہوئی۔ مذکورہ ملزم گاندربل تھانہ م

مہنگائی،راشن کی قلت،بجلی بحران سے لوگ پریشان:نیشنل کانفرنس

سرینگر//نیشنل کانفرنس نے وادی میں بجلی سپلائی کی بدترین صورتحال اور سرینگرجموں شاہراہ بندہونے کے بعد غذائی اجناس کی قیمتو ں میں ہوشربا اضافہ ہونے پرشدیدتشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انتظامیہ قیمتوں کو اعتدال پررکھنے اور ناجائز منافع خوروں کیخلاف کارروائی کرنے میں ناکام ہوا ہے اور حکومت لوگوں کے مسائل ومشکلات کاتماشہ دیکھ رہی ہے۔ایک بیا ن کے مطابق ان باتوں کا اظہار نیشنل کانفرنس کے صوبائی صدر ناصر اسلم وانی نے وادی کے اطراف و کناف سے آئے پارٹی کارکنوں اور عوامی وفود کیساتھ تبادلہ خیال کرتے ہوئے کیا۔ ملاقی ہوئے وفود نے اپنے اپنے علاقوں کے لوگوں کو درپیش مسائل و مشکلات اُجاگر کئے۔ ناصر اسلم وانی نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ کپوارہ، بارہمولہ، بڈگام ،بانڈی پورہ اور خطہ چناب و پیرپنچال کے دور دراز اور پہاڑی علاقوں میں انتظامیہ اور حکومت کا کہیں نام و نشان نہیں،جس وجہ سے لوگوں کو مشک

سیاسی مخالفین کی زندگیاں دانستہ خطرے میں ڈالی جارہی ہیں:محبوبہ

سرینگر//پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی نے حکومت ہند پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ مرکزی حکومت دانستہ طور پر اپنے سیاسی مخالفین کی زندگیوں کو خطرے میںڈال رہی ہے۔ پی ڈی پی لیڈر اور سابق وزیر نعیم اختر کی دوران حراست علالت پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے ٹیوٹر پر کہا،’’ جس سرکاری عمارت میں ہماری پارٹی کے سینئر لیڈر نعیم اختر کو غیر قانونی طور پر قید رکھا گیا ہے وہ وادی کی شدید سردیوں کے موافق نہیں ہے،جس کے نتیجے میں ان کی صحت بگڑ گئی ‘‘۔ انہوںنے مزید لکھا کہ ایسا جان بوجھ کر کیا جا رہا ہے اور اس کا واحد مقصد یہاں کے مخالف سیاسی لیڈران کو تنگ طلب کرنا ہے ۔   

سیاسی قائدین کیخلاف آج تک کوئی بھی جرم ثابت نہیں کیا جاسکا:حریت (ع)

سرینگر//حریت(ع) کانفرنس نے سیاسی اورسماجی کارکن سرجان برکاتی کی رہائی کے بعد گزشتہ روزدوبارہ گرفتاری کوبوکھلاہٹ قرار دیتے ہوئے اس کے خلاف شدیدردعمل کااظہار کیا ہے ۔ایک بیان میں حریت (ع)کانفرنس نے جموںوکشمیر میں بلا جواز گرفتاریوں کی تازہ لہر کو غیر جمہوری اور انتقام گیری پر مبنی قرار دیتے ہوئے اس کی مذمت کی ۔ بیان میں حریت (ع)نے کہا کہ یہ انتہائی بدقسمتی کی بات ہے کہ طاقت کے بل پر جموںوکشمیر میںبنیادی انسانی حقوق کی پامالیوںکا نہ تھمنے والا سلسلہ جاری ہے ،اور 5 اگست2019 کے دوران اور اس سے پہلے گرفتار کئے گئے سینکڑوں کشمیری نوجوانوں، معزز شہریوں ، سیاسی کارکنوں اور سیاسی رہنمائوں کو جیلوں اور گھروں میں نظر بند رکھا گیا ہے جو حد درجہ افسوسناک اور باعث تشویش ہے اور انسانی حقوق کی تنظیموں کیلئے لمحہ فکریہ ہے۔بیان میں حریت چیرمین میرواعظ مولوی محمد عمر فاروق کی گزشتہ ڈیڑھ سال سے مسلسل نظر ب

سکمزصورہ میں کینسرانسٹی چیوٹ،میٹرنٹی اسپتال اور ڈرگ اسٹور چالو

سرینگر// سکمز صورہ میں کینسر انسٹی چیوٹ اور میٹرنٹی ہسپتال کے علاوہ ڈرگ سٹور کو چالوکیا گیاہے ۔ سکمز کے ڈائریکٹر کی کاوشوںکی وجہ سے کئی برسوں کے بعد ہسپتال میں کینسٹر انسٹچیوٹ چالو کیا گیا ہے جس سے یہاںآنے والے مریضوں کو کافی سہولیات فراہم ہوںگی ۔ صورہ سکمز میں برسوں بعد کینسر انسٹچیوٹ کو چالو کیاگیا ہے ۔ سکمز کے ڈائریکٹر ڈاکٹر اے جی آہنگر نے انسٹچیوٹ کو کامیابی کی بلندیوں تک پہنچانے کیلئے جہاں کافی تگ ودو کی ہے، وہیں کافی کاوشوں اور جدوجہد کے بعد کینسر انسٹچیوٹ چالو کیا گیا ہے ۔ اس انسٹچیوٹ کے چالو ہونے سے اب کینسر کے مریضوں کو یہاں پر مطلوبہ علاج ومعالجہ فراہم ہوگا اور مختلف ٹیسٹ بھی انجام دئے جائیں گے ۔کینسرمریضوں کو بہت سے معاملات میں پہلے بیرون یوٹی جانا پڑتا تھا لیکن اب سکمزصورہ میں کینسرانسٹچیوٹ کے چالو ہونے کے بعد انہیں باہر جانے کی کم ہی ضرورت پڑے گی۔ اس کے علاوہ انسٹیچوٹ سے

طبی عملے کی کووِڈٹیکہ لینے میں ہچکچاہٹ باعث تشویش:ڈاک

سرینگر// پہلے مرحلے میں طبی نگہداشت کے اہلکاروں کو کوروناوائرس سے بچائو کاٹیکہ دینے کاآغاز16جنوری سے ہورہا ہے اورکئی ڈاکٹروں،نرسوں اورنیم طبی عملہ کے یہ ٹیکہ لینے میں ہچکچاہٹ پرڈاکٹرس ایسوسی ایشن کشمیرنے جمعہ کو تشویش کااظہارکیا۔ڈاکٹرس ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر نثارالحسن نے کہا کہ طبی عملہ کا ٹیکہ لینے میں ہچکچاہٹ کااظہار فکرمندی کاباعث ہے۔انہوں نے کہا ،’’ٹیکہ لینے میں ہچکچاہٹ سے ایک بڑامسئلہ پیداہوگا۔انہوں نے کہا ،’’یہ ایک ہلادینے والی بات ہے جبکہ طبی نگہداشت کا کاکنوں کو وائرس لگنے کا زیادہ خطرہ ہے اور ان کی بیماری صحت عامہ کے نظام میں رکاوٹ بن جائے گی۔ڈاکٹر س ایسوسی ایشن کے صدر نے کہا کہ ٹیکہ لینے سے انکار کرکے طبی عملہ مریضوں کو خطرے میں ڈالے گا۔عملہ کے جن اہلکاروں نے کووِڈ ٹیکہ نہیں لیاہوگا ،اُن سے مریضوں کویہ بیماری لگ سکتی ہے جنہیں کووِڈسے ہونی والی پیچید

محکمہ بجلی کے عاضی ملازمین سراپا احتجاج

  سرینگر//محکمہ بجلی کے عارضی ملازمین نے مطالبہ کیا ہے کہ ان کے دیرینہ مطالبات کو فوری طور حل کیا جائے۔حفاظتی سازوسامان کی قلت،تنخواہوں کی عدم فراہمی اور مستقلی کے منتظرمحکمہ بجلی کے 7ہزار سے زائد ڈیلی ویجروں نے امسال برف باری کے دوران بجلی بحال کرنے میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑدی۔ البتہ ایسے ملازمین تنخواہوں کی عدم فراہمی،نوکریوں کی مستقلی اور ڈیوٹی کے دوران ضروری ساز و سامان کی عدم موجود گی سے پریشان ہیں۔ اس پر طرہ یہ کہ ان غیر تربیت یافتہ ملازمین کو محکمہ ایسے کام سونپ رہا ہے جس کی انہیں تربیت ہی نہیں ہے۔جموں و کشمیر پی ڈی ایل ،ٹی ڈی ایل کے صدر عرفان احمد کاوا،ترجمان محمد ادھیر اور محمد یوسف گوسو نے کہا کہ اس وقت محکمہ میں 13ہزار میں 7ہزار430ملازمین عارضی بنیادوں پر کام کر رہے ہیں جنہیں نہ وقت پر تنخواہ ملتی ہے ،نہ انکو انشورنس کے دائرے میں لایاگیا ہے اور نہ کام کاج کے دوران انہ

بونہ پورہ صدرکوٹ میں پینے کے پانی کی قلت

سوناواری// صدر کوٹ بالا کے بونہ پورہ علاقہ میں پچھلے ایک ہفتہ سے پینے کے صاف پانی کی شدید قلت پائی جارہی ہے جس کے نتیجے میں مقامی آبادی نے محکمہ جل شکتی کے خلاف ناراضگی کا اظہار کیا۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ پچھلے ایک ہفتہ سے علاقہ میں پانی کی سخت قلت ہے جس کے نتیجے میں انہیںمشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔انہوں نے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا کہ جب تک پانی کی فراہمی یقینی بنائی جائے گی تب تک علاقے کو ٹینکر کے ذریعے پانی فراہم کیا جائے ۔  

بانڈی پورہ کے کئی علاقے بجلی سے محروم

بانڈی پورہ//عازم جان //ضلع بانڈی پورہ میں بجلی کی کٹوتی سے لوگوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہاہے ۔بجلی کی ناقص صورتحال کی وجہ سے ضلع کے سمبل ،نائدکھے ،شادی پورہ، صدرکوٹ بالا ،جیوہ بانیاری، اجس، سملر، سریندر، دردپورہ، ارن ،کنن ترکہ پورہ، قوئل ،ملنگام، ویون ،پٹھکوٹ اورآلوسہ کے لوگوں نے بتایا کہ کڑاکے کی سردی میں بجلی کی عدم دستیابی کسی عذاب سے کم نہیں۔لوگوں نے کہا کہ بجلی کی عدم دستیابی کے باوجود بلیں باقاعدہ موصول ہورہی ہیںاور صارفین ادا بھی کررہے ہیں۔ویون ،سریندر  اورچونٹی مولہ کے لوگوں نے بتایا کہ مہینے میں بجلی کبھی کبھار ہی دیکھنے کو ملتی ہے ۔انہوں نے بتایا کہ اب تو پتوشے بانڈی پورہ کا گرڈ اسٹیشن بھی ایک برس سے چالو ہوچکا ہے لیکن بجلی سپلائی میں کوئی بہتری واقع نہیں ہوئی ہے ۔انہوں نے لیفٹیننٹ گورنر سے اپیل کی کہ بانڈی پورہ ضلع میں بجلی سپلائی کی بہتری کیلئے توجہ مبذول کی جائے

ریت ، باجری اورپتھر نکالنے پر پابندی باعث عذاب

سرینگر//صد رکوٹ بانڈ ی پورہ کے لوگوںنے پتھر کی کانوں پر عائد پابندی ہٹا نے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ اس فیصلے سے وہ فاقہ کشی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہو چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صدرکوٹ کی اکثر آبادی کان کنی سے وابستہ ہے لیکن گزشتہ دو برسوں سے جیالوجی اور مائننگ محکمہ نے اس کام پر پابندی عائد کردی ہے جس کے نتیجے میں متعدد افراد بے روزگارہوچکے ہیں۔انہوںنے کہاکہ وہ کان کنی کے کام کے ساتھ برسوں سے وابستہ ہیں لیکن جب سے جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت کا خاتمہ کیا گیا ، ریت ،باجری اورپتھر نکالنے پر پابندی عائد کی گئی اور انہیںسخت دشواریوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ایک شہری عبدالخالق نے بتایا کہ وہ پچھلے پچاس برسوں سے اس کام کے ساتھ وابستہ ہیں اور اپنی روزی روٹی چلاتے تھے لیکن جب سے انتظامیہ نے پابندی عائد کر دی ہے ، ان کی زندگی پر منفی اثرات مرتب ہو رہے ہیں اور  کمائی کا واحد ذریعہ ختم ہوچ

مزید خبرں

گاندربل میں2 ٹیکہ کاری مرکز قائم گاندربل //گاندربل ضلع میں کووِڈٹیکہ کاری کیلئے دو ٹیکہ کاری مرکز قائم کئے گئے ہیں۔اس بات کی جانکاری ضلع ترقیاتی کمشنر نے ایک میٹنگ کے دوران دی۔انہوں نے کہا کہ ضلع اسپتال گاندربل اور سب ضلع اسپتال کنگن میں کووڈ ٹیکہ کاری مراکز ہوں گے۔میٹنگ کے دوران بتایا گیا کہ فرنٹ لائن ورکروں کی ٹیکہ کاری کیلئے مزید17ٹیکہ کاری مراکزقائم کئے جائیں گے.۔ چیف میڈیکل افسر گاندر بل نے بتایا کہ کورونا ویکسین کی پہلی کھیپ ضلع میں پہنچ گئی ہے اور اس کیلئے عملہ بھی تعینات کیا گیا ہے۔ میٹنگ میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر گاندربل فاروق احمد بابا، سی پی او، سی ایم او  اور بی ایم اوز اور دیگر افسران شامل تھے۔    محکمہ خزانہ کے جعلی آرڈر،کرائم برانچ تحقیقات کریگا نیوز ڈیسک  سرینگر// محکمہ خزانہ نے اپنے تمام شعبہ جات کے سربراہان کو جعلی آرڈروں سے متعل