محکمہ مال نے گول داچھن میں کیمپ لگایا | 70مستحقین میں اقامتی اسناد تقسیم

گول//ضلع ترقیاتی کمشنر رام بن کی ہدایت پر سب ڈویژن گول کی داچھن پنچایت میں محکمہ مال نے لوگوں کے مشکلات کو ازالہ کرنے اور موقعہ پر ڈومیسائل اسناد تقسیم کرنے کی خاطر ایک کیمپ کا انعقاد کیا جس میں 70سے زائد مستحقین میں اسناد تقسیم کیں ۔ اس موقعہ پر نائب تحصیلدارگول جاوید اقبال شان نے لوگوں کے مسائل سنے اور لوگوں میں ڈومیسائل سرٹیفکیٹ تقسیم کیں ۔ کیمپ کے دوران مقامی نائب سرپنچ غلام جیلانی کے علاوہ معزز شہری بھی موجود تھے ۔ لوگوں نے محکمہ مال کی جانب سے لگائے گئے کیمپ کو کافی سراہا اور مطالبہ کیا کہ اس طرح کے کیمپ مزید یہاں علاقوں میں لگائے جائیں تا کہ ڈومیسائل اسناد کے ساتھ ساتھ دوسری اسناد جاری ہوں اور ان کے مسائل بھی حل ہوں ۔  

گول میں سڑکوں کی تعمیر | کئی اراضی مالکان برسوں سے معاوضے سے محروم

گول//سب ڈویژن گول میں ایسی درجنوں سڑکیں ہیں جن کے مالکان اراضی کو ابھی تک معاوضہ نہیں ملا ہے ۔ ان کی فائلیں بیس بیس برسوں سے ایسے ہی پڑی ہیں تاہم پی ایم جی ایس وائی کی سڑکوں کی زد میں آنیوالی اراضی کا معاضہ دیاگیاہے ۔البتہ تعمیرات عامہ کے تحت بننے والی سڑکوں کا معاوضہ التواکاشکار ہے۔ان سڑکوں میں گول تتا پانی روڈ، سنگلدان اشمار بڑا کنڈ روڈ وغیرہ شامل ہیں ۔ گزشتہ ماہ ضلع ترقیاتی کمشنر رام بن نے اس بات کا اظہار کیا تھا کہ پورے ضلع میں بہت ساری ایسی سڑکیں ہیں جن کا معاوضہ اراضی مالکان کو نہیں ملا ہے جس کے لئے کروڑوں روپے بنتے ہیں اور اس سلسلے میں مرکزی سرکار کو بھی مطلع کیا گیاہے ۔ اگر گول تتا پانی روڈ کی بات کریں تو جو گول کا سب سے پرانی لنک روڈ ہے اور اس کی تعمیر 1999ء میںشروع ہوئی لیکن بیس سال گزرنے کے با وجود لوگوں کو ابھی تک کوئی معاوضہ نہیں ملا ۔ ہر سال مارچ مہینے میں لوگ انتظار کرت

بانہال کی میونسپل پارک کی تجدید و مرمت التواکاشکار | ٹراما ہسپتال کو جلد از جلد مکمل کیاجائے: صدر بیوپارمنڈل

بانہال // پیر کے روز میرا قصبہ میری شان کے سلسلے میں لیفٹنٹ گورنر کے مشیر فاروق خان نے بانہال کا دورہ کیا تھا اور اس موقعہ پر بیوپار منڈل بانہال کے صدر شمس الدین راہی نے بانہال کو درپیش کئی مسائل کو اجاگر کیا اور انہیں فورء طور پر حل کرنے کی امید ظاہر کی۔ شمس الدین راہی نے کہا کہ قصبہ میں شاہراہ کے برلب گندی نالیوں اور گندگی اور غلاظت کی طرف میونسپل کمیٹی بانہال کی طرف سے کوئی توجہ نہیں دی جا رہی ہے اور وزیر اعظم کی صفائی کی مہم یہاں دم توڑ چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ زائد از پندرہ سال پہلے اگ کی ایک واردات میں خاکستر ہوئے میونسپل کمیٹی بانہال کے شاپنگ کمپلیکس کو ابھی تک تعمیر نہیں کیا گیا اور اس کی تعمیر سے کئی بیروز گاروں اور میونسپل کمیٹی کو فائدہ حاصل ہوتا۔ انہوں نے کہا کہ دور دراز کے علاقوں سے قصبہ بانہال کا رخ کرنے کیلئے روزانہ ہزاروں کی تعدا میں لوگ آتے جاتے ہیں مگر قصبہ بانہال میں

شاہراہ پر بھاری ٹریفک رواں دواں | جگہ جگہ ٹریفک جام سے مسافروں کو مشکلات

رام بن//جموں سرینگر قومی شاہراہ کے ناشری رام بن اور رام بن بانہال کے درمیان گاڑیوں کی آمدورفت آہستہ آہستہ منزل کی طرف بڑھ رہی ہے اور توقع ہے کہ ایسی صورتحال آدھی رات تک جاری رہے گی کیونکہ جموں اور اودھم پور سے وادی کشمیر کے لئے پیر کو دو دن بعد بھاری ٹریفک کی اجازت دی گئی۔تاہم ٹریفک پولیس کی جانب سے طے شدہ وقت کے ساتھ شاہراہ پر جمعہ کے علاوہ دونوں اطراف سے ہلکی موٹر گاڑیاں چلانے کی اجازت ہے۔ناشری اور بانہال کے مابین شاہراہ کی  چوڑائی اور کھدائی کا کام مختلف مقامات پر جاری ہے جس سے بھی پریشانی کاسامناکرناپڑرہاہے ۔ایک ٹرک ڈرائیور کرنیل سنگھ نے بتایا کہ مختلف مقامات پر کھدائی کے کام کی وجہ سے سڑک کو نقصان پہنچا ہے اور سڑک کی چوڑائی کم ہونے سے ٹریفک جام ہوتاجارہاہے۔فور لین پروجیکٹ کا جاری کام مسافروں کے لئے اذیت کا باعث بن گیا کیونکہ ادھم پور سے چنینی ناشری ٹول پوسٹ، ناشری سے رام

کووڈ19منفی رپورٹ کاتقاضابدستور جاری | شیطان نالہ کا چیک پوسٹ مسافروں کے لئے باعث پریشانی

بانہال // عالمی وبا کورونا وائرس کے پھوٹ پڑنے اور جموں وکشمیر میں لاک ڈائون کے نفاذ کے ساتھ ہی جموں سرینگر شاہراہ پر بانہال کے شیطان نالہ علاقے میں مسافروں کی چیکنگ کیلئے ضلع انتظامیہ رام بن کی طرف سے ایک انتظامی چیک پوسٹ کا قیام عمل میں لایا گیا تھاجواحتیاطی تدابیر کے ساتھ سفری اجازت کے باوجود مسافروں کیلئے وبال جان بنا ہوا ہے اور حکام اسے جواہر ٹنل کے دونوں اطراف مسلسل ریڈ زون کے زمرے میں ہونے کی وجہ قرار دیتے ہیں۔شاہراہ پر سفر کرنے والے کئی مسافروں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ مرحلہ وار طریقے سے لاک ڈائون ہٹائے جانے اور شاہراہ پر کووڈ شرائط کے مطابق سفر کرنے کی سرکاری اجازت کے باوجود شیطان نالہ پر چیکنگ کے جاری سلسلے سے عام مسافر تنگ آئے ہیں اور یہاں ابھی بھی کووڈ منفی رپورٹ کا تقاضا کیا جاتا ہے اور وادی کشمیر سے جموں جانے والے مسافروں کو واپس بھی لوٹنے پر مجبور کیا جاتا ہے۔ انہوں نے

رام بن و ملحقہ علاقوں میں 3 ہفتوں سے پانی کا بحران

رام بن//ضلع ہیڈ کوارٹررام بن اور اس کے ملحقہ علاقوں کے رہائشی تین ہفتوں سے پینے کے پانی کے بحران کا شکار ہیں کیونکہ پی ایچ ای کے عارضی ملازمین اپنی خدمات کو باقاعدہ بنانے کے مطالبے پر ہڑتال پر ہیں۔محکمہ پی ایچ ای (جل شکتی) رام بن، میترا، پرنوت ،سیری اور دیگر علاقوں کے صارفین کو پانی کی فراہمی کی بحالی میں ناکام ہوچکا ہے اور وہ اپنی ذمہ داری کو سنجیدگی سے نہیں لے رہاجس کی وجہ سے صارفین بلا وجہ پریشانیوں اور بحرانوں کا شکار ہیں۔گاؤں سیری کے مکینوں نے الزام لگایا کہ اس علاقے کو پچھلے چھ ماہ سے زیادہ عرصہ سے پانی کی عدم فراہمی کا سامنا ہے اور مقامی عہدیدارمتبادل انتظامات کرکے یا رجسٹرڈ صارفین کو پانی کی فراہمی کی کے لئے باقاعدہ ملازمین کی تقرری کرکے پریشانیوں کو کم کرنے کی زحمت گوارا نہیں کررہے ۔انہوں نے الزام لگایا کہ یہ ملازمین علاقے کے رجسٹرڈ صارفین کو پینے کا پانی فراہم کرنے میں بری طر

وی ڈی سی ممبران 2 برس سے اجرت سے محروم | بقایاجات کی ادائیگی و سبھی کمیٹیوں کو اجرت فراہم کرنے کا مطالبہ

ڈوڈہ //وی ڈی سی یونین ضلع ڈوڈہ نے لیفٹیننٹ گورنر انتظامیہ سے بقایاجات کی ادائیگی کو یقینی بنانے و 2006 کے بعد سے قائم کمیٹی ممبران کو ماہانہ اجرت فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ضلع صدر وی ڈی سی یونین جگدیو سنگھ ٹھاکر نے حکومت پر وی ڈی سی ممبران کے ساتھ سوتیلے پن کا مظاہرہ کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ سرکار ان کے ساتھ کئے گئے وعدوں کو وفا کرنے میں ناکام ثابت ہوئی ہے۔انہوں نے کہا کہ انتخابی ریلیوں کے دوران مختلف سیاسی جماعتوں نے وی ڈی سی ممبران کو مالی طور مضبوط بنانے کے دعوے کئے تھے لیکن تاحال کوئی مثبت نتائج سامنے نہیں آئے۔انہوں نے کہا کہ 2018 سے وی ڈی سی ممبران تنخواہوں سے محروم ہیں جبکہ 2006 کے بعد قائم کی گئی کمیٹیوں میں شامل ممبران تنخواہ کے بغیر اپنی ڈیوٹی انجام دے رہے ہیں۔انہوں نے لیفٹیننٹ گورنر سے مطالبہ کیا کہ وی ڈی سی ممبران کے ساتھ انصاف کیا جائے اور ان کی دیرینہ مانگ کو

بھدرواہ ہسپتال میں بیداری کیمپ منعقد | بیٹیوں کے حقوق ، جائیداد میں حصہ داری اور گھر یلو تشد پر روشنی ڈالی گئی

بھدرواہ// ڈسٹرکٹ لیگل سروس اتھارٹی کی جانب سے بھدرواہ ہسپتال میں حمل گرانے کی برائی اور بیٹیوں کی اہمیت کے موضو ع پر ایک روزہ بیداری کیمپ منعقد کیا گیا جس میں بلاک میڈیکل افسر ڈاکٹر عبدا لحمید زرگر مہمان خصوصی تھے جبکہ ڈاکٹر ورشا کوتوال ، ڈاکٹر ورشا شرما ، ڈاکٹر مونیز ، ڈاکٹر سندیپ شرما نے بھی اس موقعہ پر شرکت کی ۔اس دوران ایڈووکیٹ محمد ماجد ملک ریسورس پرسن تھے جنہوں نے موضوع پر قانونی لحاظ سے تفصیلی روشنی ڈالی ۔ اپنے خطاب میں ایڈووکیٹ محمد ماجد ملک نے کہا کہ 1961میں ہی بیٹیوں کی حفاظت کے لئے سخت قانون  تشکیل دیئے گئے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم ایک ایسے سماج میں رہتے ہیں جہاں لڑکوں کو زیادہ اہمیت دی جاتی ہے اور لڑکیوں کو بوجھ مانا جاتا ہے لیکن حقیقت یہ ہے کہ بیٹیاں کسی سے کم نہ ہیں اور جہاں بیٹیوں نے ملک کی آزادی میں اہم کردار ادا کیا ہے اور آزادی کے بعد بیٹیاں اور لڑکیاں زندگی کے

گول:کھارپورہ وانی محلہ میں پانی کی شدید قلت | تعمیرات کے دوران پائپیں اکھاڑ دی گئیں ،محکمہ خاموش

گول//آئے روز گول سب ڈویژن میں پانی کی قلت رونما ہو رئی ہے جس وجہ سے لوگوں کو کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔تاہم محکمہ نے دعویٰ کیا ہے کہ جلد پانی کی مشکلات کو دورکیاجائے گا ۔ گول سب ڈویژن صدر مقام کے کھار پورہ وانی محلہ میں پانی کی شدید قلت پائی جا رہی ہے ۔ قریباً چھ ماہ سے لوگ اس مصیبت کا سامنا کر رہے ہیں ۔ مقامی لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ پانی کی پائپیں کئی جگہوں پر تعمیرات کے دوران لوگوں نے توڑ دیں جس وجہ سے پانی کی شدید قلت ہوئی ہے۔ان کاکہناتھاکہ اس سلسلے میں یہاں تعینات لائن مین کو بھی مطلع کیاگیاجبکہ جے ای کو بھی بتایاگیالیکن کوئی نتیجہ بر آمد نہ ہو سکا ۔مقامی لوگوں نے مزید کہا کہ پانی جو ایک ایک بوند آ رہا ہے وہ نا قابل استعمال ہے اور اس میں مٹی ملی ہوئی ہوتی ہے جس کو کھانے اور پینے کے استعمال میں نہیں لایاجاسکتا۔اس سلسلے میں کشمیر عظمیٰ نے اے

کشتواڑ کے بازاروں میں سناٹا | پابندیوں کے سبب تمام تر تجارتی سرگرمیاں متاثر

کشتواڑ //ضلع کشتواڑ میں کورونا وائرس کے مثبت معاملوں کی تعداد میں مسلسل اضافے کے بعد جہاں انتظامیہ نے ضلع میں پابندیاں کا نفاد عمل میں لایااور تجارتی مراکز کو ہفتہ میں کچھ ہی دن کھولنے کی اجازت تھی وہی اس میں دوروز قبل ضلع انتظامیہ نے ترمیم کی اور نیاا حکمنامہ جاری کیا جس کے مطابق صرف اتوار کو دوائی و لیباٹریوں کو چھوڑ کر دیگر تمام طرح کی تجارتی سرگرمیوں کوبند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ۔اس حکمنامہ کے بعد اتوار کو قصبہ و اسکے گردونواح کے علاقہ جات میں تمام طرح کی تجارتی سرگرمیاں متاثر رہیں، جس سے قصبہ و دیگر بازاروں میں سناٹا چھایا رہا ۔اگرچہ سڑکوں پر گاڑیوں و پیدل لوگوں کی آوجاہی رہی لیکن تمام دکانیں بند رہیں جبکہ سنڈے مارکیٹ بھی بند رہا۔وہیں دن بھر پولیس کی گاڑیاں سڑکوں پر دوڑتی رہیں ۔اگرچہ کچھ مقامات پر دکانیں کھولی گئیں لیکن پولیس نے ان دکانداروں کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی۔ضلع

اسٹامپ فروشوں کا ڈوڈہ میں احتجاج

ڈوڈہ //اسٹامپ فروشوں نے سنیچر کو ایک بار پھر ضلع کے صدر مقام ڈوڈہ میں احتجاج بلند کیا۔ان احتجاجی مظاہرین کا مطالبہ ہے کہ محکمہ انکم ٹیکس اس حکم نامے کو فوراً ًمنسوخ کرے جس میں ان سے کہا گیا ہے کہ وہ کمپیوٹر میں تربیت حاصل کریںاور اپنا تمام ریکارڈ اور کام کاج ڈیجیٹلائزڈ کریں تب جا کر وہ عدالتوں اور دیگر جگہوں پر کام کرنے کے اہل ہونگے۔ان کا مزید کہنا ہے کہ ان کو اس حکم نامے کی رو سے ایک مخصوص اور نا مزد کمپنی کے ٹھیکیدار سے یہ تمام کمپیوٹر مشنری اور الیکٹرانک آلات خریدنے کا پابند بنا دیا گیا ہے۔ان کا الزام ہے کہ یہ صرف ایک مخصوص ٹھیکیدار کو فائدہ دینے کی غرض سے اس طرح کا حکم نامہ منظر عام پر لایا گیا ہے، عدلیہ میں کام کرنے والے افراد کو اس طرح سے ایک قسم کی ہدایت اور پابندی لگا دی گئی ہے کہ وہ کس دوسرے کمپنی یا افراد سے وہ یہ چیزیں نہ خریدیں جو کہ ان یومیہ اپنا کاروبار و روزگار کمانے وا

جموں سرینگر شاہراہ پرٹریفک کا دوبارہ آغاز

 رام بن//ہفتہ کی صبح جموں سرینگر قومی شاہراہ کی ٹھیکیدار کمپنی کے ذریعہ سرینگر اور قاضی کھنڈ پر درماندہ مالبردارسمیت سینکڑوں گاڑیوں کو جموں اور شاہراہ پر دیگر مقامات کی طرف جانے کی اجازت دی گئی۔جمعہ کو جموں سرینگر قومی شاہراہ پر گاڑیوں کی ٹریفک معطل رہی کیونکہ مرمت اور بحالی کاکام کیاگیاتھا۔ٹریفک پولیس کے ایک افسر نے بتایاکہ جمعہ کو مرمت اور بحالی کیلئے شاہراہ پر کام کیاگیا جس وجہ سے ٹریفک کی اجازت نہیں دی گئی تھی اوراس دوران سینکڑوں گاڑیاں مختلف مقامات پر درماندہ ہوگئیں۔اس دوران ناشری اور بانہال کے درمیان مرمت کاکام انجام دیاگیا۔تاہم سنیچر کو ٹریفک کا یہ سلسلہ بحال ہوگیا ۔  

مڑواہ میں جنگجوئوں کی کمین گاہ تباہ

کشتواڑ//جمعہ کوایک مصدقہ اطلاع ملنے پر جموں کشمیر پولیس و 11راشٹررائفل نے ضلع کشتواڑ کے دورافتادہ علاقہ مڑواہ کے جنگلات میں تلاشی کارروائی عمل میں لائی جس دوران جنگجوئوں کی ایک کمین گاہ سے بھاری تعداد میں ہتھیار و گولہ بارود برآمد ہوا۔ پولیس ذرائع نے بتایا کہ پرانہ پل کے جنگلات میں کمین گاہ سے ہتھیار برآمد کئے گئے جن میں ا ٓر پی جی لانچر، 2پستول، پستول میگزین ،پستول روند،اے کے سنتالیس کی خالی میگزین 4، 122 اے کے 47 روند جبکہ 7 پلاسٹک گرینیڈ شامل ہے۔ پولیس نے اس سلسلے میں کیس درج کرکے مزید تحقیقات شروع کردی ہے۔ذرائع کے مطابق اس وقت ضلع کشتواڑ میں کل 3 جنگجو سرگرم ہیں۔   

جموں صوبہ کے ہائراسکینڈری سکولوں میں نئے مضامین متعارف کرنے کا معاملہ | اردو اور کشمیری نظرانداز،دیگرکئی شعبہ جات کے تئیں فراخدلی کا مظاہرہ

 بانہال // جموں صوبہ کے ہائر سیکنڈری سکولوں میں عوامی مانگ، ضرورت اور تجزیہ کی بنیاد پر نئے مضامین کو متعارف کرانے،نئے مضامین اور زبانوں کیلئے لیکچراروں کی تعیناتی عمل میں لانے اور موجودہ مضامین کے لیکچراروں میں اضافے کو لیکر ڈائریکٹر سکول ایجوکیشن جموں کی طرف سے 28 ستمبر 2020 کو 3348 اسامیوں کو پر کرنے کی ایک تجویز پرنسپل سیکریٹری ایجوکیشن کو بھیجی گئی ہے اور اس مجوزہ فہرست میں ضلع رام بن میں اردو کی 3خالی اسامیوں کے مقابلے میں کوئی بھی اسامی پُر نہ کرنے اور کشمیری زبان کے مضامین کو یکسر نظرا ندازکرنے کے خلاف وادی چناب کی کئی ادبی تنظیموں نے سخت برہمی کا اظہار کیا ہے۔ اس تجویز کے منظر عام پر انے اور متعلقین کے ردعمل کے بعد کشمیر عظمیٰ کی طرف سے تحقیق کے دوران حاصل کی گئی دستاویزات کے مطابق چیف ایجوکیشن افسر رام بن کی طرف سے 24 ستمبر 2020 کو ڈائریکٹر سکول ایجوکیشن جموں کو ضلع را م

رام بن میں آدھار اندراج سنٹر کا افتتاح

 رام بن//ڈپٹی کمشنر رام بن ناظم زئی خان نے گورنمنٹ سٹی مڈل اسکول (جی سی ایم ایس) رام بن میں آدھار اندراج کے مرکز کا افتتاح کیا۔اس موقعہ پر چیف ایجوکیشن آفیسر رام بن ونود کمار ، ڈی ای ایس او گوپال سنگھ اور دیگر افسران کے علاوہ آدھار کا تکنیکی عملہ موجود تھا۔ڈی سی نے بتایا کہ محکمہ تعلیم سماگراشکشا نے پورے یوٹی میں رہ جانے والے اسکول کے بچوں کے آدھار اندراج اور 100فیصد اندراج پر کاربند ہے۔

گول میں سڑکوں کی حالت ابتر

گول//سب ڈویژن گول میں سالہا سال سے درجنوں سڑکیں خستہ حالت کا شکار ہیں اور ان سڑکوں پر ٹریفک کو بر قرار رکھنے کے لئے محکمہ تعمیرات عامہ کوئی توجہ نہیں دیتا ۔ سڑکوں کے بیچوں بیچ شدید بارشوں کے دوران کھڈے پڑجاتے ہیں اور سالہا سال سے ان سڑکوں کی مرمت نہیں کی گئی۔ گول تتا پانی سڑک ہویاپرتمولہ بائی پاس ،پرتمولہ کریشر موڑ ، مکجی داڑم روڈ، آئی ٹی آئی روڈ ، داچھن گلی سے زیرو پوائنٹ تک، اپر دلواہ ، گمبیری روڈ، سرنڈا گھمیری روڈ، تتا پانی روڈ وغیرہ تمام روڈوں کی حالت نہایت ہی ابتر ہے ۔ سرنڈا گمیری روڈ پر محکمہ نے سات سا ل قبل کٹائی کی تھی لیکن تب سے اب تک اس کی طرف محکمہ نے کوئی توجہ نہیں دی ۔ اس کے علاوہ گول تتا پانی روڈ پر کئی جگہوں پر بڑے بڑے کھڈے بنے ہوئے ہیں جس وجہ سے چلنا کافی دشوار بنا ہوا ہے۔ اس طرح سے تمام سڑکوں پر سالہا سال سے کھڈے پڑے ہیں اور محکمہ ان کھڈوں کو برابر کرنے اور ٹریفک کو

رام بن میں ڈاکٹر فاروق کیخلاف احتجا ج

رام بن/ایم ایم پرویز/دائیں بازو کی تنظیموں بجرنگ دل اور ویشو ہندو پریشد کے کارکنوں کے ایک گروپ نے جمعرات کی سہ پہر دفعہ 370 پر اپنے بیان پر نیشنل کانفرنس کے سینئر رہنما ڈاکٹر فاروق عبد اللہ کے خلاف زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا۔انہوں نے سابق وزیراعلیٰ ڈاکٹر فاروق عبد اللہ کا بھی پتلا بھی نذر آتش کیا۔ضلع کنوینر بجرنگ دل کشور سنگھ کی سربراہی میں کارکنوں کے ایک گروپ نے پلے کارڈز تھامے ہوئے ہوئے تھے ۔جن پر’ڈاکٹر فاروق مردہ آباد‘ کے نعرے درج تھے۔  

شیخ پورہ سنگھ پورہ محکمہ بجلی کی عدم توجہی کاشکار | بجلی کی ترسیلی لائنیں لکڑی کے کھمبوں کے ساتھ آویزاں

کشتواڑ//ضلع کشتواڑ کے سب ڈویژن چھاترو کے علاقہ سنگھ پورہ میں اگرچہ 12 سال قبل سرکار نے علاقہ کو بجلی فراہم کی لیکن باجود اسکے آج بھی علاقہ میں بجلی کی ترسیلی لائنیں لکڑی کے بوسیدہ کھمبوں کیساتھ بندھی ہوئی ہیں جنہیں آج تک تبدیل نہیں کیا گیا۔ انتظامیہ کی گھر گھر روشن کرنے والی سوبھاگیہ سکیم بھی علاقہ میں زمینی سطح پر نہیں دکھائی دے رہی ۔اگرچہ علاقہ میں بجلی کا نظام موجود ہے لیکن مقامی لوگوں کی مشکلات میں کوئی کمی نہیں ہوئی ۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ اگرچہ پورے سنگھ پورہ علاقہ میں بجلی کا  نظام موجود ہے لیکن زیادہ مشکلات شیخ پورہ و ہندگام کے لوگوں کو اٹھانی پڑرہی ہیںجبکہ علاقہ میں متعدد مقامات پر لکڑی کے بوسیدہ کھمبے لگائے گئے ہیں جن سے کسی بھی وقت کوئی بڑا حادثہ پیش آسکتاہے۔ علاقہ میں کوئی بھی فورمین نہیںجس سے بھی مشکلات پیش آرہی ہیں ۔مقامی لوگوں کاکہناہے کہ ا علیٰ حکام کو متعدد م

ڈپٹی کمشنر کی سنگلدان میں یوم بلاک پروگرام میں شرکت | سیری پورہ میں ڈومیسائل کیمپ لگانے کی ہدایت

گول//ضلع ترقیاتی کمشنر رام بن ناظم زئی خان نے بلاک سنگلدان میں’بلاک دیوس‘ کے تحت میگا پبلک آؤٹ ریچ پروگرام کی صدارت کرتے ہوئے عوامی مسائل ، شکایات اور مقامی لوگوں کے مطالبات کو ان کو موقعہ پر حل کیا۔اس موقعہ پر بی ڈی سی کی چیئرپرسن ، سنگلدان  نویدہ بیگم ، ایس ایس پی رام بن ، حسیب الرحمن ، اے سی ڈی ضمیر احمد ریشو ، سی ایم او ڈاکٹر محمد فرید بٹ ، تحصیلدار گول ، ایکسن پی ڈبلیو ڈی ، پی ایچ ای ، پی ڈی ڈی ، پی ایم جی ایس وائی ، سی ایچ او ، ڈی ایس ایچ او ، سی ایچ او ،پنچایتی نمائندگان اور اجلاس میں مختلف محکموں کے دیگر افسران اور عہدیدار شریک ہوئے۔ڈی سی نے بلاک سنگلدان میں مختلف محکموں کے ذریعہ چلائے جانے والے ترقیاتی کاموں پر پیشرفت کاجائزہ لیا اورمسائل کے ازالہ یقین دلایا ۔ڈی سی نے پروگرام کے مقاصد پر روشنی ڈالی اور عوام کو آگاہ کیا کہ ان عوامی مہم کا مقصد لوگوں کے مسائل

رام بن میں طلباء کا احتجاجی مظاہرہ | قرنطینہ و ٹیسٹنگ سنٹر کو منتقل کرنے کا مطالبہ

رام بن //اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد (اے بی وی پی) کے بینر تلے طلباء نے قرنطینہ اور ٹیسٹنگ سنٹر کی تبدیلی کا مطالبہ کرتے ہوئے ضلع ہیڈ کوارٹر رام بن میں احتجاجی مظاہرہ کیا ۔گورنمنٹ ہائر سیکنڈری اسکول رام بن کے باہر بی اے بی پی کے بینر تلے سینکڑوں طلباء جمع ہوئے اور احتجاج کیا۔ انہوں نے ضلع انتظامیہ اور محکمہ اسکول ایجوکیشن کے خلاف نعرے بازی کی۔مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ فوری طور پر مرکز کو گورنمنٹ ہائر سیکنڈری اسکول رام بن سے کسی اور جگہ منتقل کیا جائے تاکہ وہ اپنی تعلیم جاری رکھ سکیں۔ مظاہرین نے سوال کیا’’ادارے میں اپنی تعلیم جاری رکھنا کیسے ممکن ہے جب کہ یہ کورونا سے متاثرہ افراد کا مرکز بنایاگیاہے‘‘۔ادارے میں دور دراز علاقوں کے طلبا تعلیم حاصل کر رہے ہیں اور ان کاکہناہے کہ وہ اپنی زندگی سے کھیل کو تعلیم حاصل نہیں کریں گے اس لئے اس سنٹر کو کسی دوسری جگہ منتقل کیا