تازہ ترین

دوپہیوں والی گاڑیوں کی ضبطی کا شاخسانہ

سرینگر//تجارتی مصنوعات گھر پہنچانے کے تجارت سے وابستہ متعدد اداروں نے الزام لگایا ہے کہ گزشتہ تین روز سے پولیس کی طرف سے دوپہیوں والی گاڑیوں کو ضبط کرنے کی مہم کی وجہ سے ان کی تجارت پرکافی برے اثرات پڑے ہیں۔شہر کے لوگوں نے بھی الزام لگائے ہیں کہ متوسط طبقے ،نچلے متوسط طبقے اورطلباء پولیس کی مہم سے بری طرح متاثر ہوئے ہیں اور بہت سے لوگوں نے اپنی دوپہیوں والی گاڑیوں کو گھرمیں ہی رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ’فاسٹ بیٹل ‘نامی ایک ادارے کے معاون بانی  سمیع اللہ نے ٹوئٹر پر لکھا،’’ہماری سرگرمیاں مسلسل رکی ہوئی ہیں کیوں کہ ہمارے ڈیلیوری بوائز(گھروں تک مصنوعات پہنچانے پر مامورلڑکے)کی دوپہیوں والی گاڑیاں مسلسل طور پولیس ضبط کررہی ہیں ۔سلسلہ وار ٹوئٹس میں انہوں نے کہاکہ جب کشمیرمیں تجارت نے دفعہ370کی منسوخی اورکووِڈ- 19لاک ڈائوںسے ہوئے نقصانات کے بعددوبارہ رفتار پکڑنی شروع