نواک جوکووچ کا یو ایس اوپن میں شرکت کا اعلان

 نیویارک/کورونا وائرس کا شکار نمبر ون ٹینس سٹار نواک جوکووچ نے یو ایس اوپن میں شرکت کا اعلان کر دیا ہے۔نیویارک کے بلیو ٹینس کورٹ پر شیڈول میگا ایونٹ میں شرکت کے حوالے سے نواک جوکووچ کی انٹری مشکوک تھی۔ کورنا کے دوران اپنی ہی سرزمین پر ٹورنامنٹ کھیلنے اور بے احتیاطی برتنے پر جوکووچ سمیت کھلاڑی وائرس کا شکار ہو گئے تھے۔جان لیوا مرض کو مات دینے والے سربین سٹار نے گرینڈ سلیم میں دبنگ انٹری ڈالنے کی تصدیق کر دی ہے۔ خیال رہے کہ عالمی نمبر ون نواک جوکووچ نے 2018ء میں یو ایس اوپن کا ٹائٹل جیتا تھا۔خیال رہے کہ نواک جوکووچ نے 2 جولائی اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ جون کے آخر میں اڈریہ ٹور کے دوران کورونا وائرس ٹیسٹ مثبت آنے کے چند دن بعد میں اور میری بیوی جیلینا نے ایس او پیز پر عمل کرتے ہوئے دوبارہ کورونا وائرس ٹیسٹ کرایا تھا جس کی رپورٹ منفی آئی تھی۔انہوں نے کہا تھا کہ ہم دونوں نے کروشی

سدا بہار کھلاڑی دھونی 40 کی دہائی تک کھیل سکتے ہیں:واٹسن

 نئی دہلی/آسٹریلیا کے سرکردہ کھلاڑی اور چنئی سپر کنگز کے اوپنر شین واٹسن نے دعوا کیا ہے کہ ہندستانی کرکٹ ٹیم کے سابق اور چنئی سپر کنگز کے موجودہ کپتان مہندر سنگھ دھونی اپنی عمر کی 40 کی دہائی تک کرکٹ کھیلتے رہیں گے ۔یہ انتخاب دھونی کا ہوگا کہ وہ آئی پی ایل کھیلیں گے یا انٹر نیشنل کرکٹ۔چنئی سپر کنگز کے کپتان ایم ایس دھونی ایک طرف آئی پی ایل کے 13 ویں سیزن میں شرکت کے لئے زور وشور سے تیاری کر رہے ہیں اور دوسری طرف ان کے کرکٹ کیریئر کے بارے میں طرح طرح کی باتیں کی جارہی ہیں۔ سی ایس کے ٹیم کے سی ای او نے کہا کہ انہیں امید ہے کہ وہ 2022 تک یقینی طور پر کھیلیں گے ، جبکہ اب دھونی کے ساتھی کھلاڑی اور ٹیم کے اوپنر شین واٹسن نے بتایا ہے کہ دھونی کب تک کرکٹ کھیل سکتے ہیں۔ایم ایس دھونی کی عمر 39 سال ہے لیکن شین واٹسن کا خیال ہے کہ ان کے لئے یہ صرف ایک ہندسہ ہے ۔ واٹسن کو امید ہے کہ وہ 40 کی

انگلینڈ اور پاکستان کے مابین دوسراٹیسٹ میچ آج سے شروع

ساؤتھمپٹن/انگلینڈ اور پاکستان کے مابین تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا دوسرا میچ آج سے ساوتھمپٹن کے روز باؤل اسٹیڈیم میں کھیلا جائے گا۔ پہلے میچ میں ہار کر جیتنے والی انگلینڈ کے پاس اب سیریز جیتنے کا موقع ہے ۔ اگر انگلش ٹیم دوسرا میچ بھی جیتتی ہے تو وہ 10 سال بعد پاکستان کے خلاف ٹیسٹ سیریز جیت جائے گی۔ اس وقت انگلینڈ اس سیریز میں 1-0 سے آگے ہے ۔اس میچ میں انگلینڈ کو اپنے آل راؤنڈر بین اسٹوکس اور بلے باز ڈین لارنس کی خدمات حاصل نہیں ہوں گی ، اسٹوکس اور لارنس خاندانی وجوہات کی بناء پر سیریز سے باہر ہوگئے ہیں۔ اسٹوکس نے پہلے ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں صفر اور دوسرے اننگ میں 9 رنز بنائے تھے ۔ انہوں نے 2 وکٹیں بھی حاصل کی تھیں۔ان کی جگہ انگلش ٹیم پلیئنگ الیون میں ٹاپ آرڈر بیٹسمین جیک کرولی کو شامل کیا جاسکتا ہے ۔کرولی 6 ٹیسٹ میچوں میں اب تک 261 رنز بنا چکے ہیں۔ کرولی ویسٹ انڈیز کے خلاف سیریز کے آخر

پابندی کے بعد شکیب کی ٹیم میں ہوسکتی ہے واپسی

ڈھاکہ/بدعنوانی کے معاملے میں پابندی کا سامنا کرنے والے بنگلہ دیش کے اسٹار آل راؤنڈر شکیب الحسن کے اس سال سری لنکا کے دورے کے لئے ٹیم میں واپس آنے کی امید ہے ۔ شکیب پر پابندی 29 اکتوبر کو ختم ہوگی۔شکیب سری لنکا کے خلاف مجوزہ تین میچوں کی ٹی 20 سیریز کا حصہ بن سکتے ہیں۔ بنگلہ دیش کے ہیڈ کوچ رسل ڈومنگو کے مطابق شکیب کی کرکٹ کے میدان میں واپسی کا انحصار ان کی فٹنس پر ہوگا۔ کوچ کے مطابق ایک سال تک ٹیم سے شکیب کی عدم موجودگی باقی ٹیم کھلاڑیوں سے مختلف نہیں ہے جو 6-7 ماہ سے کرکٹ سے دور ہیں۔ڈومینگو نے کہا کہ میرے خیال میں شکیب کو ایک سال کے لئے ٹیم سے باہر ہونا باقی ٹیم کھلاڑیوں سے زیادہ مختلف نہیں ہے ۔ ہمیں امید ہے کہ تمام کھلاڑی فٹ ہیں۔ فٹنس لیول کے لحاظ سے ایسے معیارات ہیں جن کو حاصل کرنے کی ضرورت ہے ۔ ہمیں شکیب کے علاوہ دوسرے کھلاڑیوں کے لئے بھی کسی نہ کسی طرح کی کرکٹ کا اہتمام کرنا ہے ۔ ک

نیوزی لینڈ کو اس سال چار ممالک کی میزبانی کا یقین

آکلینڈ //کورونا کے سبب زیادہ تر کرکٹ سرگرمیاں موقوف ہونے کے باوجود نیوزی لینڈ کی کرکٹ رواں سال کے آخر تک ویسٹ انڈیز ، پاکستان ، آسٹریلیا اور بنگلہ دیش کے ساتھ سیریز کی میزبانی کے لئے پراعتماد ہے ۔نیوزی لینڈ کرکٹ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) ڈیوڈ وائٹ نے منگل کے روز کہا کہ پاکستان ، آسٹریلیا ، بنگلہ دیش اور ویسٹ انڈیز نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ وہ آنے والے موسم گرما میں ان کے ملک کا دورہ کریں گے ۔ وائٹ نے کہا کہ نیوزی لینڈ کرکٹ (این زیڈ سی) ایک بایو سیکیور ماحول بنانے میں مصروف ہے ، جیسا کہ انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ (ای سی بی) نے موجودہ سیزن میں کورونا وائرس سے متاثرہ بین الاقوامی کرکٹ کو دوبارہ شروع کرنے کے لئے کیا ہے ۔انہوں نے ای ایس پی این کرک انفو کو بتایا کہ ہم اچھی پیشقدمی کر رہے ہیں۔ میں نے ابھی فون پر ویسٹ انڈیز سے بات کی ہے اور وہ یہاں آنے کی تصدیق کر رہے ہیں جبکہ پاکستان

کرکٹ بورڈ کو نئے کپتان کی تلاش کرنی چاہئے :اکرم

اسلام آباد// پہلے ٹیسٹ میں اپنی ٹیم کی شکست سے ناخوش پاکستان کے سابق فاسٹ بولر وسیم اکرم کا کہنا ہے کہ اگر کپتان اظہر علی پرفارمنس میں ناکام رہتے ہیں اور ٹیم انگلینڈ کے خلاف سیریز کے بقیہ میچ نہیں جیت پاتی ہے تو پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کو نئے کپتان کی تلاش کرنی چاہئے ۔انگلینڈ کے خلاف پہلے ٹیسٹ میں پہلی اننگز کی برتری حاصل کرنے اور انگلینڈ کو دوسری اننگز میں ابتدائی دھچکا دینے کے باوجود پاکستان کو تین وکٹوں سے شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا جس کے بعد کپتان اظہر کو کافی تنقید کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔ انگلینڈ کے لئے جوس بٹلر اور کرس ووکس نے اپنی ٹیم کے لئے 139 رنز کی عمدہ شراکت قائم کرکے میچ جیتنے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔اکرم نے کہا کہ اگر پاکستان کی ٹیم سیریز کے دوسرے دو میچ جیت جاتی ہے تو اظہر کپتان بنے رہ سکتے ہیں۔ یہ ان کی کارکردگی پر منحصر ہے ۔ لیکن اگر ٹیم نہیں جیت پاتی ہے اور اظہر

آئی پی ایل 2021 کے لئے نہیں ہوگی کھلاڑیوں کی نیلامی

 نئی دہلی/ کورونا وائرس کے سبب مارچ میں شروع ہونے والا آئی پی ایل (IPL) کا 13 واں سیزن اب 19 ستمبر سے شروع ہونے جا رہا ہے اور وہ بھی ملک سے باہر۔ 19 ستمبر سے 10 نومبر تک متحدہ عرب امارات میں بایو محفوظ ماحول میں آئی پی ایل کا انعقاد ہوگا۔ کورونا کے سبب جہاں بی سی سی آئی کو آئی پی ایل کے اس سیزن کو ملک سے باہر کروانے کے لئے مجبور ہونا پڑا، وہیں اب خبر آرہی ہے کہ کورونا کے سبب آئی پی ایل 2021  کے لئے بی سی سی آئی آکشن کا انعقاد نہیں کرے گا۔ٹائمس آف انڈیا کی خبر کے مطابق کووڈ-19کے خطرے کو دیکھتے ہوئے بورڈ نے اسے غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی کردیا ہے۔ دراصل متحدہ عرب امارات میں آئی پی ایل 2020 کا انعقاد کرنے کے بعد بی سی سی آئی کے پاس آئی پی ایل 2021 کا انعقاد کرنے کے لئے زیادہ وقت نہیں ہوگا۔کورونا کے سبب جہاں بی سی سی آئی کو آئی پی ایل کے اس سیزن کو ملک سے باہر کروان

مایوس ہونے کی ضرورت نہیں

کراچی/ پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ اوراور چیف سلیکٹر مصباح الحق کا کہنا ہے کہ انگلینڈ کے خلاف تین وکٹ کی شکست سے مایوس اور افسردہ ضرور ہیں مگر ہمیں ناامید نہیں ہونا چاہیے، اولڈ ٹریفورڈ ٹیسٹ میچ کے بعد وہ بھی مداحوں کی طرح دل شکستہ ہیں مگر یہی کرکٹ ہے۔میڈیا سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ فتح اور شکست کے درمیان ہمیشہ ایک بہت معمولی فرق ہوتا ہے، مگر ہمیں یہ ضرور یاد رکھنا چاہیے کہ پاکستان نے بہت اچھی کرکٹ کھیلی اور میچ کے آخری سیشن کے علاوہ پاکستان کرکٹ ٹیم نے اس ٹیسٹ میچ میں اپنی گرفت برقرار رکھی۔ ہمیں ابھی اپنے کھیل میں 10 سے 15 فیصد بہتری اور دباؤ میں بہتر کھیل پیش کرنے کی ضرورت ہے۔ مایوسی ضرور ہے مگر ہمیں اسے اپنے ذہنوں میں برقرار نہیں رکھنا ورنہ واپسی مشکل ہوگی اور لڑکوں کو بھروسہ ہے کہ وہ ابھی واپس آسکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ یہ ایک سنسنی خیز ٹیسٹ میچ تھا اور جس طرح انگلینڈ نے فا

بٹلر نے ہمارے منہ سے فتح چھین لی:اظہر

مانچسٹر/پاکستان کے کپتان اظہر علی نے انگلینڈ کے خلاف پہلے ٹیسٹ میچ میں تین وکٹوں کی شکست کے بعد کہا کہ ٹیم مضبوط پوزیشن میں تھی لیکن جوز بٹلر کی شاندار بیٹنگ نے ہمارے منہ سے فتح چھین لی۔میچ کے بعد میڈیا کانفرنس میں اظہر علی سے سوال ہوا کہ کیا آپ نے خراب کپتانی کی یا ٹیم اچھا نہیں کھیلی اس پر انھوں نے کہا کہ بطور کپتان میں اس شکست کی مکمل ذمہ داری قبول کرتا ہوں مگر آپ میری قیادت کو شکست کی وجہ قرار نہیں دے سکتے ۔بطور ٹیم ہم اچھا نہیں کھیلے ،10سالہ تجربے سے میں نے بہت کچھ سیکھا ہے ۔بیٹنگ کرتے ہوئے کپتانی اور کپتانی کرتے ہوئے بیٹنگ کا نہیں سوچتا،اس لیے دونوں ایک دوسرے کو متاثر نہیں کر رہی ہیں۔انھوں نے کہا کہ چوتھے روز پچ اچانک آسان ہوگئی۔ہم ریورس سوئنگ نہ ہونے پر حیران ہیں۔بہرحال جب5وکٹیں حاصل کیں تو حالات حق میں جا رہے تھے مگر پھر جوز بٹلر اور کرس ووکس کی شراکت نے میچ کا پانسہ پلٹ دیا

وسیم اکرم کی اظہر علی کی کپتانی پر تنقید

مانچسٹر/مانچسٹر ٹیسٹ میں شکست کے بعد سابق کپتان وسیم اکرم نے کپتان اظہر علی پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اظہر علی کو کئی مواقع ملے لیکن وہ فائدہ نہیں اٹھا سکے، شکست سے شائقینِ کرکٹ اور پاکستان ٹیم کو تکلیف ہوئی ہو گی۔ وسیم اکرم نے کہا کہ ہار جیت کھیل کا حصہ ہے لیکن ہمارے کپتان نے موقع کھو دیا۔انہوں نے کہا کہ جہاں تک اظہر علی کی کپتانی کا تعلق ہے انہیں کئی مواقع ملے لیکن وہ فائدہ نہ اٹھا سکے، جب کرس ووکس بیٹنگ کے لیے آئے تو انہیں سیٹ ہونے دیا گیا، نہ باؤنسرز، نہ شارٹ بالز کرائے گئے جس کی وجہ سے پارٹنر شپ لگ گئی تو کچھ بھی کارآمد نہ رہا اور میچ ہاتھ سے نکل گیا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کرکٹ ٹیم قدرتی صلاحیتیوں، غیر یقینی اور اٹیک کا نام ہے، ہم کاؤنٹی بولرز نہیں ہیں جو آئیں اور سارا دن لائن اینڈ لینتھ پر بولنگ کریں۔  

بابر اعظم یقینی طور پر دنیا کے بہترین ٹیسٹ بیٹسمینوں میں سے ایک ہیں:مائیکل وان

کراچی/ مانچسٹر ٹیسٹ کے پہلے دن کے کھیل کے بعد انگلش میڈیا نے بابر اعظم کی تعریف میں زمین آسمان ایک کردیے۔ انگلینڈ کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان مائیکل وان کا کہنا ہے کہ بابر اعظم یقینی طور پر دنیا کے بہترین ٹیسٹ بیٹسمینوں میں سے ایک ہیں۔ ان انداز مجھے بہت پسند ہے۔ ایک اور سابق کپتان ناصر حسین نے کہا کہ وہ وائٹ بال ہی نہیں ریڈ بال کرکٹ میں بھی ورلڈ کلاس ہے۔  

اگلے سال نیوزی لینڈ میں ہونے والا ویمنز ورلڈ کپ بھی ملتوی

لندن/انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے اگلے سال نیوزی لینڈ میں ہونے والا ویمنز ورلڈ کپ بھی ملتوی کردیا، جبکہ 2021ء میں ہونے والے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے لئے بھارت کو میزبان برقرار رکھا ہے۔ آسٹریلیا 2022ء کے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کی میزبانی کرے گا۔انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کے اعلامیہ کے مطابق اگلے سال نیوزی لینڈ میں ہونے والا ویمنز ورلڈ کپ اب 2022ء میں فروری اور مارچ میں کھیلا جائے گا۔ ویمنز ورلڈ کپ ملتوی کرنے کا فیصلہ کورونا وائرس اور اس کی وجہ سے معطل کرکٹ سرگرمیوں کو مدنظر رکھتے ہوئے کیا گیا۔ اس سے قبل جولائی میں شیڈول آئی سی سی ویمنز ورلڈ کپ کوالیفائرز بھی ملتوی کیے جاچکے ہیں، جو اب 2021ء￿  میں ہوں گے۔ آئی سی سی کے مطابق جو ٹیمیں ورلڈ کپ کے لیے کوالیفائی کرچکی ہیں، ان کے اسٹیٹس پر کوئی فرق نہیں پڑے گا۔آئی سی سی نے 2021ء اور 2022ء کے مینز ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے میزبان ملکوں اور کوالیفا

۔24 سال بعد برطانوی سرزمین پر

 سعید انور نے 1996ء میں 176 رنز کی باری کھیلی تھی لاہور/پاکستانی ٹیم کے اوپنر شان مسعود 24 سال بعد برطانوی سرزمین پر سنچری سکور کرنے والے پاکستانی اوپنر بن گئے ۔ شان مسعود نے انگلینڈ کے خلاف پہلے ٹیسٹ کے دوسرے روز جب اپنی سنچری مکمل کی تو وہ یہ اعزاز حاصل کرنے والے سعیدانور کے بعد پہلے اوپنر بنے، سعید انور نے 1996ء میں اوول ٹیسٹ میں 176 رنز کی شاندار باری کھیلی تھی۔ شان مسعود مسلسل تین ٹیسٹ سنچریاں سکور کرنے والے چھٹے پاکستانی بلے باز بھی بن گئے ہیں۔ ان سے قبل ظہیرعباس (83-1982ء میں بمقابلہ بھارت) ، مدثر نذر (1983ء بمقابلہ بھارت)، محمد یوسف (2006ء بمقابلہ ویسٹ انڈیز) ، یونس خان (2014ء میں بمقابلہ آسٹریلیا) اور مصباح الحق(14-2013ء میں بمقابلہ آسٹریلیا و نیوزی لینڈ) یہ کارنامہ سر انجام دے چکے ہیں۔   

ویوو آئی پی ایل کا خطابی اسپانسر نہیں ہوگا :بی سی سی آئی

نئی دہلی/ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) اور چین کی موبائل کمپنی ویوو نے سال 2020 میں انڈین پریمیر لیگ (آئی پی ایل) کے 13 ویں ایڈیشن کے لئے اپنا معاہدہ معطل کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ بی سی سی آئی نے جمعرات کے روز صرف ایک لائن کا بیان جاری کرتے ہوئے یہ اطلاع دی ۔ آئی پی ایل کے 13ویں ایڈیشن کا انعقاد 19ستمبر سے 10 نومبر تک متحدہ عرب امارات میں ہونا ہے ۔ حالانکہ بی سی سی آئی کو اس کے لئے ابھی حکومت ہند کی منظوری کا انتظار ہے ۔ بی سی سی آئی نے ایک لائن کا بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہندوستانی بورڈ اور ویوو موبائیل انڈین پرا لیمی نے فیصلہ کیا ہے کہ 2020 میں آئی پی ایل کے لئے ان کی ساجھیداری کو معطل کردیا جائے ۔ ہندوستان اور چین کے بیچ سرحد پر تناؤ کے سبب بی سی سی آئی کو یہ قدم اٹھانے کے لئے مجبور ہونا پڑا ہے ۔ بی سی سی آئی نے آئی پی ایل کے 13 ویں ایڈیشن کو 19 ستمبر سے 10ن

’کورونا ٹیسٹ کے بعد ہی آئی پی ایل کھیل سکیں گے کھلاڑی‘

نئی دہلی/ انڈین پریمیر لیگ (آئی پی ایل) نے متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں 19 ستمبر سے 10 نومبر تک ہونے والے آئی پی ایل کے 13 ویں سیشن میں کھلاڑیوں اور عملے کوسخت جانچ کے عمل سے گزرنا ہوگا جنہیں یو اے ای میں مشق شروع کرنے سے قبل کم از کم چار ٹیسٹ پاس کرنے ہونگے اور ایک ہفتہ کورنٹائن ہونا ہوگا۔ آئی پی ایل نے جانچ اور معیاری آپریٹنگ طریقہ کار (ایس او پی) کے عمل کا ڈرافٹ دستاویز فرنچائزی ٹیموں کے ساتھ شیئر کیا ہے ۔ایس او پی میں بتایا گیا ہے کہ 53 دن کے اس ٹورنامینٹ کے دوران سفر، قیام اور ٹریننگ کے لئے کیا کرنا ہوگا اور کیانہیں کرناہوگا۔ اس ٹورنامینٹ کے میچ دبئی، ابو ظہبی اور شارجہ میں کھیلے جائیں گے ۔ بی سی سی آئی نے ابھی ٹورنامنٹ شیڈول کا اعلان نہیں کیا ہے اور اسے یو اے ای میں ٹورنامنٹ کے انعقاد کے لئے حکومت ہند سے باضابطہ منظوری کا انتظار ہے ۔ایسا سمجھا جاتا ہے کہ ٹیموں کو کم سے کم عملے

رافیل نڈال کا بھی یو ایس اوپن ٹورنامنٹ سے ہٹنے کا اعلان

نیویارک/ٹینس کی نمبر ون خاتون کھلاڑی ایشلے بارٹی اور راجر فیڈرر کے بعد دفاعی چمپیئن رافیل نڈال نے بھی یو ایس اوپن ٹورنامنٹ سے ہٹنے کا اعلان کیا ہے ۔ انہوں نے منگل کو ٹویٹ کرکے اس بارے میں معلومات دیں۔نڈال نے کہا کہ کافی غوروخوص کے بعد میں نے اس سال یو ایس اوپن ٹورنامنٹ میں نہ کھیلنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ کورونا کی وجہ سے دنیا بھر میں صورتحال بہت خراب ہے ۔کوویڈ 19 کے معاملات میں مسلسل اضافہ ہوتا جارہا ہے ۔ ایسا لگتا ہے کہ اس پر ہمارا کوئی کنٹرول نہیں ہے ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ میں یہ فیصلہ نہیں کرنا چاہتا تھا لیکن اس بار میں نے اپنے دل کی بات سنی اور میں اس وقت تک سفر نہیں کروں گا جب تک کہ حالات ٹھیک نہیں ہوں گے ۔ورلڈ نمبر 2 نڈال نے کورونا کی وجہ سے ٹینس کے بین الاقوامی شیڈول میں ہونے والی تبدیلی کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا۔   

پانزو سُپر لیگ T20کرکٹ ٹورنامنٹ اختتام پذیر

 ترال//ترال میں T20کرکٹ ٹورنامنٹ کا فائنل بٹہ گنڈ XIنے جیت لیا ہے۔ جولائی سے جاری ’پانزو سُپر لیگ‘ T20کرکٹ کا فائنل میچ پانزو سٹیڈیم میں بٹہ گنڈ اور کچھمولہ کے درمیان کھیلا گیا۔ فائنل دیکھنے کیلئے لوگوں کی اچھی خاصی تعداد موجود تھی۔ بٹہ گنڈ نے ٹاس جیت کر بلے بازی کرتے ہوئے مقررہ20اوور میں 161رن سکور کئے۔ ہدف کو حاصل کرنے کیلئے کچھملہ کی ٹیم نے 121رن بنائے اور سارے کھلاڑی آوٹ ہوئے۔ عادل احمد کو مین آف دی میچ اور مین آف دی سیریز قرار دیا گیا ۔مقابلے میںجاسم نذیرنے روایتی انداز میں کمنٹری پیش کرکے حاضرین کو محظوظ کیا۔ فائنل میچ دیکھنے کیلئے انتظامیہ کے افسران بھی موجود تھے اورسماجی دوری بنائے رکھی اور ماسک بھی تقسیم کئے ۔ٹورنا منٹ کے  منتظمین کاکہنا ہے کہ لاک ڈائون کے دوران نوجوانوں کو تندرست رکھنے کیلئے اس طرح کے ٹورنا منٹوں کا انعقاد مستقبل میں بھی کیا جائیگا۔&n

دھونی نے کیریئر کے بارے میں حقیقت کا احساس دلایا: یوراج

نئی دہلی //سابق ہندوستانی آل راؤنڈر یوراج سنگھ کو عام طور پر سابق کپتان مہندر سنگھ دھونی کا ناقد سمجھا جاتا ہے لیکن یوراج اب کہتے ہیں کہ ان کا بین الاقوامی کیریئر دھونی نے حقیقت کے معنی میں بنایا تھا۔ یوراج نے بتایا کہ کس طرح ویسٹ انڈیز کے دورے میں ناقص کارکردگی کے بعد 2017 میں ون ڈے ٹیم سے باہر رکھا گیا تھا اس وقت دھونی نے بین الاقوامی کیریئر کی حقیقت سے آگاہ کرایا تھا۔اس دورے سے پہلے انہوں نے 2017 میں آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی میں چار اننگز میں صرف 105 رنز بنائے تھے ۔یوراج نے نیٹ ورک 18 کو بتایا کہ جب میں واپس آیا تو کپتان وراٹ کوہلی نے میرا ساتھ دیا۔ اگر اس نے میرا ساتھ نہ دیا ہوتا تو میں واپس نہیں آپاتا ۔ میں نے پنجاب کی طرف سے کھیلتے ہوئے ڈومیسٹک کرکٹ میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا لیکن دھونی نے مجھے 2019 کے ورلڈ کپ کی حقیقت سے آگاہ کیا وہ یہ تھا کہ سلیکٹرز مجھے اس میں شامل کرنے پر

کھلاڑی بوریت کاشکار نہیں ہو ئے، میچ کھیلنے کے منتظر ہیں

لندن/پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر مصباح الحق کا کہنا ہے کہ کھلاڑی بوریت کاشکار نہیں ہو ئے، وہ فریش ہیں اور میدان میں کھیلنے کے منتظر ہیں۔ پاکستان اور انگلینڈ کی ٹیموں کے درمیان تین ٹیسٹ میچز کی سیریز کا آغاز بدھ سے اولڈ ٹریفورڈ مانچسٹر میں ہو رہا ہے جہاں ان دنوں پاکستان ٹیم بھرپور تیاریوں میں مصروف ہے۔ٹیسٹ سیریز سے قبل پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق نے ویڈیو لنک پر میڈیا کے سوالات کے جواب دیے۔ ہیڈ کوچ مصباح الحق کا کہنا ہے کہ کوویڈ 19 کی وجہ سے تین ماہ سے زائد کھلاڑی کھیل کی سرگرمیوں سے دور رہے ، یہ ایسے ہی تھا جیسے زیرو سے شروع کرنا ہے۔ اس لیے جب یہاں انگلینڈ آکر ٹریننگ کا آغاز کیا تو یہ شاندار رہا، ایک ماہ سے زائد ہو گیا ہے کہ سب اکٹھے ہیں ، جو کہ ٹیم بائنڈنگ کے لیے بھی اچھا تھا۔انہوں نے کہا کہ وہ تیاریوں سے مطمئن ہیں، بس اب ان تیاریوں کو میدان میں لیکر جانا

مہندر سنگھ دھونی جیسا دوسرا کوئی کھلاڑی نہیں ہوسکتا:روہت شرما

نئی دہلی/ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے نائب کپتان روہت شرما نے سابق کپتان مہندر سنگھ دھونی کے ساتھ اپنے موازنہ کوغلط قرار دیتے ہوئے کہا کہ مہندر سنگھ دھونی جیسا دوسرا کوئی کھلاڑی نہیں ہوسکتا۔واضح رہے کہ حال ہی میں سریش رینا نے روہت کا دھونی سے موازنہ کیا تھا۔اتوار کے روز فرینڈشپ ڈے کے موقع پر روہت نے مداحوں کے ساتھ ٹویٹر پر ایک سوال و جواب کا سیشن کیا۔ اس میں ایک مداح نے پوچھا کہ رینا نے حال ہی میں آپ کا دھونی سے موازنہ کیا ہے ، کیا آپ بتا سکتے ہیں کہ آپ دوسرے کپتانوں سے کتنے مختلف ہیں؟اس پر روہت نے جواب میں کہا کہ ہاں میں نے سریش رینا کا بیان سنا ہے ۔ ایم ایس دھونی ایک مختلف قسم کے کھلاڑی ہیں اور کوئی بھی ان جیسا نہیں ہوسکتا ہے ۔ میرا خیال ہے کہ اس طرح کا موازنہ نہیں ہونا چاہئے ۔ ہر شخص مختلف ہوتا ہے اور اس کی طاقت اور کمزوری بھی مختلف ہوتی ہے ۔حال ہی میں سریش رینا نے ایک پوڈ کاسٹ میں کہا تھا

تازہ ترین