تازہ ترین

’کھیلوانڈیا‘ سرمائی کھیلوں کاتیسراایڈیشن بھی گلمرگ کواَلاٹ | جموں کشمیر نے طلائی کے11،چاندی کے18اور کانسی کے5میڈل حاصل کئے

سرینگر// ’کھیلوں انڈیا‘ سرمائی کھیلوں کا تیسرا ایڈیشن بھی گلمرگ میں ہی منعقد ہوگا اور گلمرگ کو اولمپک کھیلوں کیلئے کھلاڑیوں کو تیار کرنے کی نرسری بنایا جائے گا۔ اس بات کا اظہاریوتھ سروسزاینڈ سپورٹس کے پرنسپل سیکریٹری آلوک کمار نے  ’کھیلوانڈیا‘سرمائی کھیلوں کے دوسرے ایڈیشن کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اختتامی تقریب کی شروعات خوشبوں’اسبند‘جلانے سے ہوئی۔اس موقعہ پریوتھ سروسزاینڈ سپورٹس کے پرنسپل سیکریٹری آلوک کمار نے گلمرگ کوخوبصورت مقام قرار دیتے ہوئے کہا کہ کھیلوانڈیاسرمائی کھیلوں کو تیسرا ایڈیشن بھی گلمرگ میں ہی منعقد ہوگا۔انہوں نے تمام کھلاڑیوں کو مبارکباد دی جواُن ریاستوں سے آئے تھے جہاں برف نہیں گرتی اوربہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔انہوں نے اُن کھلاڑیوں کوبھی نیک خواہشات پیش کیں جنہوں نے ان کھیلوں میں کوئی اعزازحاصل نہیں کیااورا

نستہ چھن گلی کے دامن میں پہلی بار سنو سیکنگ کھیلوں کا انعقاد

کرناہ //جموں وکشمیر میں کھیل کود کے بنیادی ڈھانچہ کو فروخت دینے کی خاطر یوٹی حکام نے جہاں کئی ایک مقابلوں کا انعقاد کیا ہے وہیں اب سرحدی علاقوں کی طرف بھی سرکار اپنی توجہ مبذول کرا رہی ہے اور اس کڑی کے تحت 10ہزار فٹ بلندی پر واقعہ کرناہ کی نستہ چھن گلی کے دامن میں  زرلہ کے مقام پر سنو سیکنگ کھیلوں کے پروگرام کا انعقاد شکتی وجے برگیڈ کرناہ کی طرف سے کیا گیا جس میں بڑی تعداد میں نوجوانوں نے شرکت کی۔ برف سے ڈھکے زرلہ میںسیکنگ کیلئے جگہ کافی زیادہ ہے اورپہلی بارفوج نے برف کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اس پر سیکنگ شروع کی ہے ۔ ہاء آلٹیچیوٹ وار فیر سکول گلمرگ کے ماہر کھلاڑیوں نے نوجوان کو سیکنگ کی تربیت فراہم کی کیونکہ کرناہ میں پہلی بار ایسی کھیل کا انعقاد کیا گیا جبکہ اس سے قبل گلمرگ اور سونہ مرگ میں سیکنگ ہوتی تھی اور مقامی وغیر مقامی سیاح اس کھیل میں حصہ لیتے تھے ،لیکن اب قدرتی حسن سے مالا