تازہ ترین

مودی کے انتخاب کو چیلنج کرنے والی درخواست سپریم کورٹ سے خارج

نئی دہلی// سپریم کورٹ نے منگل کو وزیر اعظم نریندر مودی کے وارانسی میں 2019 کے انتخابات کو چیلینج کرنے والی ایک درخواست کو خارج کردیا۔ چیف جسٹس شرد اروند بوبڈے کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے مودی کے انتخاب کو چیلنج کرنے والے بارڈر سیکورٹی فورس (بی ایس ایف) کے سابق جوان تیج بہادر کی درخواست خارج کردی۔ عدالت عظمی نے گزشتہ بدھ کو اس معاملے میں فیصلہ محفوظ کرلیا تھا۔ گذشتہ سماعت پر درخواست گزار تیج بہادر کے وکیل پردیپ یادو کی طرف سے سماعت ملتوی کرنے کے کافی زور لگایا تھا ، لیکن عدالت عظمیٰ نے ان کے ارادے کو محسوس کرتے ہوئے ایسا کرنے سے انکار کردیا۔ درخواست گزار کے وکیل نے متعدد بار بینچ سے معاملے کی سماعت ملتوی کرنے کی درخواست کی تھی ، لیکن جسٹس بوبڈے نے وکیل کے مقصد کو بخوبی بھانپ لیا ہے اور وکیل سے بار بار جرح کرنے کو کہا تھا۔ جسٹس بوبڈے نے کہا تھا کہ سماعت بار بار موخر نہیں

ملک میں 37975 نئے کورونا وائرس کیس،480اموات

نئی دہلی//مرکزی وزارت صحت اور خاندانی بہبود کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 37975 نئے کیس سامنے آنے کے بعد ملک میں متاثرہ افراد کی تعداد 91.77 لاکھ تک پہنچ گئی ہے جبکہ مزید 480 مریضوں کی موت کے ساتھ ہی مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر134218 ہوگئی ہے۔  ملک میں 4819 فعال کیس کم ہونے کے بعد اب یہ تعداد گھٹ کر438667 ہوگئی ہے۔  ملک میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران دہلی ، کیرالہ ، مہاراشٹرا اور مغربی بنگال میں کورونا وائرس (کوویڈ۔19) سے سب سے زیادہ افراد بازیاب ہوئے ہیں۔ کورونا کی وبا سے سب سے زیادہ دہلی میں7216 افراد، کیرالہ میں5425، مہاراشٹر میں3729 اور مغربی بنگال میں3687 صحتیاب ہوئے ہیں۔  

کورونا کے نئے معاملوں میں اضافہ جاری

 نئی دہلی// ملک میں ایک بار پھر کورونا کیسز بڑھ رہے ہیں اور پچھلے کچھ دنوں سے روزانہ 45 ہزار سے زیادہ نئے کیسز سامنے آرہے ہیں ، حالانکہ اس بیماری کو شکست دینے والے افراد کی تعداد میں بھی اوسطاً اضافہ ہوا ہے ۔ زیر علاج مریضوں کی شرح پانچ فیصد سے کم ہے ۔مرکزی وزارت صحت و خاندانی بہبود کے مطابق ، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 44،059 نئے کیس سامنے آئے ہیں اور متاثرہ افراد کی تعداد 91.39 لاکھ ہوگئی ہے ۔ 2524 فعال معاملوں میں اضافے کے ساتھ ، یہ تعداد بڑھ کر 4،43،486 ہوگئی ہے ۔ اس عرصے کے دوران ، 41،024 مریض ٹھیک ہوگئے ، جس میں اب کورونا کو شکست دینے والوں کی تعداد 85.62 لاکھ ہے ۔ اسی عرصے میں ، 511 مریضوں کی مزید ہلاکت کے ساتھ ہلاکتوں کی تعداد 1،33،738 ہوگئی ہے ۔ملک میں زیر علاج مریضوں کی شرح کم ہوکر 4.85 اور بازیابی کی شرح 93.68 ہوگئی ہے جبکہ اموات کی شرح 1.46 ہے ۔ مہاراشٹر میں گذشتہ 24 گھن

مسئلہ ٹالنے سے نہیں حل تلاش کرنے سے ختم ہوتا ہے :مودی

نئی دہلی// وزیراعظم نریندر مودی نے آج کہا کہ مسئلہ انہیں ٹالنے سے نہیں بلکہ ان کا حل تلاش کرنے سے سے ختم ہوتا ہے اور ان کی حکومت نے ملک میں برسوں سے زیر التوا پروجیکٹوں کو اسی اصول پر چلتے ہوئے پورا کیا ہے ۔مسٹر مودی نے پیر کو دارالحکومت کے لٹین زون میں وشمبھر دت روڈ پر ارکان پارلیمنٹ کے لئے نئی کثیر منزلہ رہائش گاہوں کا افتتاح کرتے ہوئے کہا،‘‘دہائیوں سے چلے آرہے مسئلوں کو ٹالنے سے نہیں ،ان کا حل تلاش کرنے سے وہ ختم ہوتے ہیں۔صرف ارکان پارلیمنٹ کی رہائش گاہ ہی نہیں بلکہ یہاں دہلی میں ایسے متعداد پروجیکٹ تھے ،جو کئی کئی برسوں سے ادھورے تھے ۔’’اس احاطے میں آٹھ پرانے بنگلوں کو توڑ کر ارکان پارلیمنٹ کے لئے 76 نئی کثیر منزلہ رہائش گاہیں بنائی گئی ہیں۔اس موقع پر لوک سبھا اسپیکر اوم برلا اور کئی دیگر معزز ہستیاں بھی موجود تھیں۔وزیراعظم نے کہا کہ حکومت نے پختہ عزم کے

اگلے سال جون تک مفت راشن دیا جائے گا:ممتا بنرجی

کلکتہ//بانکوڑہ ضلع میں متعدد ترقیاتی پروجیکٹوں کا افتتاح کرتے ہوئے وزیرا علیٰ ممتا بنرجی نے کہاکہ ان کی حکومت نے اگلے سال جون تک مفت میں راشن فراہم کرنے کے بعد فیصلہ کیا ہے اور اگروہ دوبارہ اقتدار میںآئیں تو ‘‘مفت راشن ’’ اسکیم آگے بھی جاری رہے گی ۔ بانکوڑہ میں کھترا سدھو کانو اسٹیڈیم میں ضلع انتظامیہ کے ساتھ اعلیٰ سطحی میٹنگ اور متعدد پروجیکٹ کا افتتاح کیا ۔اس موقع پر وزیرا علیٰ ممتا بنرجی کے علاوہ چیف سکریٹری الاپن بنرجی ، ضلعی مجسٹریٹ ایس ارون پرساد اور ممبر پارلیمنٹ کلیان بینرجی سمیت حکمراں پارٹی کے ارکان اسمبلی بھی موجود تھے ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے انہوں نے گذشتہ 9سالوں میں ریاستی حکومت کی کامیابیوں پر روشنی ڈالی اور کہا کہ اگلے جون تک مفت راشن فراہم کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اگر بعد میں وہ اقتدار میں واپس آئیںتو اس میں اضافہ کیا جائے گا۔اس مہینے

چینی حکمت عملی کی حقیقت پر پردہ ڈالنا ممکن نہیں:راہل

نئی دہلی//کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے کہا ہے کہ سرحد پر چین کی حکمت عملی تیاری کی حقیقت کو میڈیا حکمت عملی کے ذریعہ سے پردہ ڈالکر کم نہیں کیا جا سکتا۔مسٹر گاندھی نے ٹویٹ کیا،‘‘ چین کی زمینی سیاست حکمت عملی کی حقیقت کا مقابلہ پی آر کے ذریعہ چلائی جارہی میڈیا حکمت عملی سے ہنیں کیا جا سکتا ہے ۔ یہی عام بات ہندوستانی حکومت کو چلانے والوں کی سمجھ میں نہیں آرہی ہے ۔’’اس کے ساتھ ہی انہوں نے ڈوکلام علاقے میں چینی فوج کے تعمیراتی کام کی ایک سیٹلائٹ تصویر بھی پوسٹ کی ہے اور کہا ہے کہ چین کی یہ حکمت عملی ہندوستان کے لئے ہے اور مضبوط حکمت عملی کے بغیر کام نہیں کیا جاسکتا ۔یواین آئی  

دوسری لہر کے خدشات کی سنگینی کو عوام محسوس کریں

ممبئی//آج 8 ، 9 ماہ بعد کورنا کے خوف و ہراس سے چھٹکارہ پانے اور زندگی کو حسب سابق روزمرہ کے معمولات کے مطابق گزارنے کی ابتداء میں ہی ایک بار پھر سے یہ خطرہ عوام کے سروں پر منڈالنے لگا ہے ، اور ملک میں اس کی دوسری لہر کی آمد کے خدشات نے نہ صرف ریاستی حکومتوں ، حتیٰ کے ملک کی اعلیٰ ترین عدالتِ اعظمیٰ کو بھی اس معاملے میں چوکنا کر دیا ہے ۔ کورونا کی یہ دوسری لہر جو مہاراشٹرا کے وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے کے خدشات کے مطابق ایک " سونامی " بھی ہو سکتی ہے ، انھیں سخت محتاط اور صحت عامہ کے تیئں اپنی ذمہ داریوں کے سلسلے میں ایک بار پھر سے غور و فکرکرنے پر مجبور کر دیا ہے ۔ملک کی اعلیٰ ترین عدالت ، سپریم کورٹ نے بھی پیر کو یہ مشاہدہ کیا کہ آنے والے مہینوں میں ملک بھر میں وبائی صورتحال پیدا ہونے کا امکان ہے ، اور ریاستوں کے ساتھ ساتھ مرکز کوویڈ 19 بحران سے نمٹنے کے لیے ایک ببتر اور اچھے طری