تازہ ترین

دہلی میں فضائی آلودگی انتہائی سنگین

نئی دہلی//ملک کی دارالحکومت دہلی کے عوام کو جمعہ کے روز لگاتار دوسرے دن بھی آلودگی کی سنگینی کا سامنا کرنا پڑا ۔دہلی آلودگی کنٹرول کمیٹی (ڈی پی سی سی) کے اعداد و شمار کے مطابق دہلی میں ہوا کا معیار اب بھی انتہائی خراب ہے اور یہ ’سنگین‘ زمرے میں ہے۔ کمیٹی کے مطابق ائر کوالٹی انڈیکس (اے کیو آئی ) آنند وہار میں 408 ، دوارکا سیکٹر 8 میں 405 ، علی پور میں 403 ، جہانگیرپوری میں 423 ریکارڈ کیا گیا جو سنگین زمرہ میں آتا ہے۔ سنٹرل آلودگی کنٹرول بورڈ (سی پی سی بی) کے مطابق آج صبح بوانا میں اے کیوآئی 447 تھی۔ پٹپڑ گنج میں 404 اور وزیر پور میں 411 تھی۔ ان چاروں مقامات پر انڈیکس ’سنگین‘ زمرہ میں ہے۔ ہوا کے معیار کو صفر سے 50 کے درمیان اے کیو آئی ’اچھا‘ ، 51 اور 100 کے درمیان ’اطمینان بخش‘ ، 101 اور 200 کے درمیان ’معتدل ‘ ، 201 سے 300 &

ملک میں ایکٹیو کوروناکیسوں کی تعداد 6 لاکھ سے کم ، شفایابی کی شرح 91 فیصد سے متجاوز

نئی دہلی// گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے نئے کیسز کے مقابلہ میں اس جان لیوا وبا کے مریضوں کی شفایابی میں اضافے سے ملک میں ایکٹیو کیسز کی تعداد چھ لاکھ سے نیچے آگئی ہے اور شفایابی کی شرح 91 فیصد سے تجاوزکرگئی ہے۔ 21 ستمبر تک ملک میں 10.03 لاکھ سے زائد ایکٹیو کیسز تھے، تب سے اس کی تعداد میں مسلسل کمی آرہی ہے اور اب یہ مزید کم ہوکر چھ لاکھ سے بھی کم رہ گئی ہے۔ لگاتار دو دن کی تیزی کے بعد وائرس کے یومیہ کیسز میں معمولی کمی آئی ہے۔ ایک دن میں ملک کے مختلف حصوں میں کووڈ 19 کے مزید 48648نئے کیسز رپورٹ ہوئے۔ ایک روز قبل جمعرات کو یہ تعداد49881 ، بدھ کے روز43843 اور منگل کو36470 نئے کیس سامنے آئے تھے۔ مرکزی وزارت صحت و خاندانی بہبود کی جانب سے جمعہ کے روز جاری تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا سے 57386مریض شفایاب ہوئے ہیں ، جس سے وبا سے شفایابی

کورونا کے یومیہ معاملوں میں مسلسل دوسرے دن اضافہ

 نئی دہلی//کیرالہ ، مہاراشٹر اور دہلی میں کورونا وائرس کے انفیکشن کے معاملات میں اضافے کی وجہ سے ، ملک میں مسلسل دوسرے دن ان کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے اور یہ تعداد ایک دن میں 50 ہزار کے قریب پہنچ گئی ہے اور ہلاکتوں کی تعداد 500 سے بھی تجاوز کرگئی ۔جمعرات کو صحت و خاندانی بہبود کی مرکزی وزارت کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے 49،881 نئے کیس رپورٹ ہوئے ہیں اور متاثرہ افراد کی تعداد 80.40 لاکھ ہوگئی ہے ۔ ایک روز قبل بدھ کے روز 43،843 مریضوں میں انفیکشن کی اطلاع ملی تھی ، جبکہ منگل کو یہ تعداد 36،470 تھی۔پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران ، 56،480 افراد نے وبا کو شکست دی۔ اس سے زیر علاج مریضوں کی تعداد 7،116 سے گھٹ کر 6،03،687 ہوگئی ہے ۔ وہیں 517 مریضوں کی موت کے بعد ، ہلاک ہونے والوں کی تعداد 1،20،527 ہوگئی ہے ۔کورونا سے اب تک 73.16 لاکھ افراد بازیاب ہوئے

ویکسین ترجیحی بنیادپرطبی عملہ کو دیا جائے گا

 کلکتہ//مغربی بنگال محکمہ صحت کے سینئر آفیسر نے بتایا کہ مغربی بنگال حکومت نے تمام سرکاری اور پرائیوٹ اسپتالوں اور دیگر طبی مراکزسے کہا ہے کہ وہ فرنٹ لائن ہیلتھ کیئر ورکرز (ایچ سی ڈبلیوز) اور دیگر عملے کی تفصیلات بھیجیں جن کو ترجیحی بنیادوں پر کوویڈ 19 کی ویکسین فراہم کی جائے گی ۔محکمہ صحت کے سینئر عہدیدار نے بتایا کہ تمام طبی اداروں جیسے میڈیکل کالج (ایلوپیتھک ، ہومیو پیتھک اور آیوش) ، صحت مراکز ، پرائیوٹ ہیلتھ کیئر یونٹ اور پولی کلینک کارکنوں کی فہرست بھیجنے کے لئے کہا گیا ہے ۔ایچ سی ڈبلیوز جیسے فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز ، آشا ، سپروائزر / سہولت کار ، آنگن واڑی کارکنان (AWWs) ، نرسیں اور سپروائزر ، ہیلتھ سپروائزرز ، بلاک ایکسٹینشن ایجوکیٹرز ، میڈیکل آفیسرز (ایلوپیتھک ڈاکٹر) ، تدریسی اور غیر تدریسی عملہ اور انتظامی عہدوں پر ڈاکٹرزانہوں نے کہا کہ آیوش ڈاکٹروں اور دانت کے ڈاکٹروں

دارالحکومت کے لوگوں پر کورونا اور آلودگی کی دوہری مار

نئی دہلی// دارالحکومت کے لوگ حال میں دوہری مار جھیل رہے ہیں۔ ایک تو آب و ہوا میں آلودگی کا ‘زہر’گھلا ہوا ہے تودوسری طرف جان لیوا کورونا وائرس کے ہر روز ریکارڈ توڑ نئے معاملے سامنے آرہے ہیں۔دارالحکومت کی ہوا میں معیار کی سطح ایک بار پھر ‘بہت خراب’ زمرے سے بڑھکر ‘شدید خراب حالت’ میں پہنچ گئی ہے ۔دارالحکومت میں ہوا کے معیار کا انڈیکس (اے کیو آئی) کی سطح 400 کو پار کرگئی ہے جو سب سے زیادہ خراب مانی جانے والے زمرے میں آتی ہے ۔دہلی آلودگی کنٹرول کمیٹی (ڈی پی سی سی) کے آج جاری اعدادو شمار کے مطابق صبح علی پور میں اے کیو آئی 405 تو آنند وہار میں یہ سطح 401 درج کی گئی۔وزیرپور میں یہ 410 تھا۔مرکزی آلودگی کنٹرول بورڈ(سی پی سی بی) کے مطابق جہانگیر پوری میں اے کیو آئی کی سطح 420 درج کی گئی۔ لودھی روڈ پرآئی کیو یو 311،آر کے پورم میں 376 ،آئی ٹی او پر

آن لائن کلاسس اردو زبان میں بھی چلائی جائیں

حیدرآباد//تلنگانہ ہائی کورٹ نے ایک اہم فیصلہ سناتے ہوئے ریاستی حکومت کو تلگو اور انگریزی زبان کے ساتھ ساتھ اُردو زبان میں بھی آن لائن کلاسس چلانے کے احکامات جاری کئے ۔یہ فیصلہ اسٹوڈنٹس اسلامک آرگنائزیشن آف انڈیا(ایس آئی او)کے جہد کار عبدالسمیع بگدل کی جانب سے دائر کردہ عرضی کی سماعت کے بعد دیا گیا۔ ہائی کورٹ کا یہ فیصلہ ریاست بھر کے ہزاروں اردو میڈیم طلبہ کے لئے انتہائی خوش آئند ہے جو موجودہ حالات میں طلباء کے درمیان حصول تعلیم سے متعلق تشویش اور پریشانی کو کم کرے گا۔کورونا وائرس کی اس خطرناک وباء اور لاک ڈاون کی وجہ سے زندگی کا ہر شعبہ متاثر ہوا ہے خاص طور سے شعبہ تعلیم کی حالت بہت دگرگوں ہے ۔ابھی نئے تعلیمی سال کے چھ مہینے گزر جانے کے بعد بھی اسکولس اور کالجس میں تعلیم کا آغاز نہیں ہوسکا۔ اس دوران آن لائن ذریعہ تعلیم ہی طلبہ اور اساتذہ کے لئے بہتر متبادل ہے ۔ حکومت نے بھی طلبہ کی سہو

تازہ ترین