کورونا کے روزانہ معاملوں میں پھر اضافے کا رجحان،49881 نئے کیس ظاہر

نئی دہلی// کیرالہ ، مہاراشٹر اور دہلی میں کورونا وائرس کے انفیکشن کے معاملات میں اضافے کی وجہ سے ، ملک میں مسلسل دوسرے دن ان کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے اور یہ تعداد ایک دن میں 50 ہزار کے قریب پہنچ گئی ہے اور ہلاکتوں کی تعداد 500 سے بھی تجاوز کرگئی۔ جمعرات کو صحت و خاندانی بہبود کی مرکزی وزارت کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے 49881نئے کیس رپورٹ ہوئے ہیں اور متاثرہ افراد کی تعداد 80.40 لاکھ ہوگئی ہے۔ ایک روز قبل بدھ کے روز43843 مریضوں میں انفیکشن کی اطلاع ملی تھی ، جبکہ منگل کو یہ تعداد36470 تھی۔ پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران 56480 افراد نے وبا کو شکست دی۔ اس سے زیر علاج مریضوں کی تعداد7116سے گھٹ کر 603687ہوگئی ہے۔ وہیں 517 مریضوں کی موت کے بعد ، ہلاک ہونے والوں کی تعداد120527 ہوگئی ہے۔  

دہلی کے لوگوں پر کورونا وائرس اور آلودگی کی دوہری مار

نئی دہلی// ملک کی دارالحکومت دہلی کے لوگ حال میں دوہری مار جھیل رہے ہیں۔ ایک تو آب و ہوا میں آلودگی کا ’زہر‘گھلا ہوا ہے تودوسری طرف جان لیوا کورونا وائرس کے ہر روز ریکارڈ توڑ نئے معاملے سامنے آرہے ہیں۔ دارالحکومت کی ہوا میں معیار کی سطح ایک بار پھر ’بہت خراب‘ زمرے سے بڑھکر ’شدید خراب حالت‘ میں پہنچ گئی ہے۔دارالحکومت میں ہوا کے معیار کا انڈیکس (اے کیو آئی) کی سطح 400 کو پار کرگئی ہے جو سب سے زیادہ خراب مانی جانے والے زمرے میں ا?تی ہے۔ دہلی آلودگی کنٹرول کمیٹی (ڈی پی سی سی) کے آج جاری اعدادو شمار کے مطابق صبح علی پور میں اے کیو آئی 405 تو آنند وہار میں یہ سطح 401 درج کی گئی۔وزیرپور میں یہ 410 تھا۔ مرکزی آلودگی کنٹرول بورڈ(سی پی سی بی) کے مطابق جہانگیر پوری میں اے کیو آئی کی سطح 420 درج کی گئی۔لودھی روڈ پرآئی کیو یو 311،آر کے پورم میں 376 ،آ

ملک میں کورونا معاملات میں پھر اضافہ

نئی دہلی//ملک میں کورونا وائرس کے کیسز میں ایک بار پھر اضافہ ہوا ہے اوریہ ایک بار پھر 40 ہزار کو عبور کرچکے ہیں اور ایک ہی دن میں اموات کی تعداد بھی 500 تک جا پہنچی ہے ۔مرکزی صحت اور خاندانی بہبود کی وزارت کی جانب سے بدھ کے روز جاری تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کوروناوائرس کے 43،893 نئے کیسز رپورٹ ہوئے جبکہ ایک دن پہلے ہی یہ تعداد 36،470 تھی۔ اسی مدت کے دوران 58،439 کورونا مریضوں نے وبا کو شکست دی،جس سے ایکٹیو کیسز کی تعداد 15،054 سے گھٹ کر 6،10،803 رہ گئی۔ اسی عرصے کے دوران 508 کورونامریضوں کی موت سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد ایک لاکھ 20 ہزار سے زیادہ ہوگئی۔جان لیوا عالمی وبا کورونا وائرس سے اب تک 79.90 لاکھ افراد متاثر ہوئے ہیں جن میں سے 72.59 لاکھ شفایاب ہوئے ہیں۔ اس کے ساتھ ملک میں کورونا وائرس سے شفایابی کی شرح 90.85 فیصد ،ایکٹیو کیسز کی شرح 7.64

بہار میں ووٹنگ ختم

پٹنہ //بہار میں سخت حفاظتی انتظامات کے مابین اسمبلی کے پہلے مرحلہ کے لئے آج پرامن طریقے سے ووٹنگ ختم ہوگئی جس میں 55 فیصد سے زائد ووٹروںنے 1066 امیدواروں کی قسمت کا فیصلہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین ( ای وی ایم ) میں قید کر دیا۔ریاستی الیکشن دفتر کے مطابق بدھ کو 71 اسمبلی سیٹ کیلئے 31380 پولنگ مراکز پر صبح سات بجے سے ووٹنگ شروع ہوئی شام چھ بجے ختم ہوچکی ہے۔ اس دوران قریب 55 فیصد رائے دہندوں نے اپنے حق رائے دیہی کا استعمال کیا۔ حالانکہ ابھی بھی کچھ پولنگ مراکز پر ووٹنگ چل رہی ہے اور کچھ مقامات سے آخری رپورٹ کا انتظار ہے۔ شام چھ بجے تک جموئی ضلع میں سب سے زیادہ قریب 58 فیصد ووٹنگ ہوئی جبکہ مونگیر ضلع میں سب سے کم لگ بھگ 44 فیصد ووٹنگ ہوئی۔دریں اثناء بڑہرا سے راشٹریہ جنتادل ( آرجے ڈی ) امیدوار اور رخصت پذیر رکن اسمبلی سروج یادو نے آرہ کے پولنگ مرکز 115 پر اپنے اوپر حملہ ہونے کا دعویٰ کیا۔ ان

اس مشکل دور میں بہار میں مستحکم حکومت ضروری:مودی

مظفرپور // وزیراعظم نریندر مودی نے قومی جمہوری اتحاد ( آرجے ڈی ) سپریمو لالو پرساد یادو کے بیٹے اور مہا گٹھ بندھن کی جانب سے وزیراعلیٰ عہدے کے امیدوار تیجسوی یادو کانام لئے بغیر انہیں جنگل راج کا یوراج قرار دیتے ہوئے کہاکہ ان کا پرانا ٹریک ریکارڈ ایسا ہے کہ سرکاری نوکری توچھوڑیئے ، ان لوگوں کے اقتدار میں آنے سے نوکری دینے والی پرائیوٹ کمپنیاں بھی ریاست سے بھاگ جائیںگی۔مسٹر مودی نے بدھ کو یہاں قومی جمہوری اتحاد ( این ڈی اے ) کے حق میں انتخابی اجلاس کو خطاب کرتے ہوئے کہاکہ بہار کا انتخاب اس بار غیر معمولی حالات میں ہورہاہے۔ کورونا کی وجہ سے پوری دنیا متفکر اور مشکل میںہے۔ وبا ء کے اس مشکل دور میں بہار میں مستحکم حکومت ضروری ہے۔ انہوں نے کہاکہ کورونا وبا کے وقت میں جنگل راج والے اقتدار میں آجائیں تو یہ بہار کے لوگوں پر دوہری مار ہوگی۔جنگل راج کے یوراج آجائیں تو وبا سے نمٹنے کیلئے جو پ

جھوٹ بولنے میں نریندر مودی کا کوئی مقابلہ نہیں : راہل

بگہا //کانگریس کے سابق قومی صدر راہل گاندھی نے وزیراعظم نریندر مودی پر ملک کے لوگوں سے جھوٹ بولنے کا الزام عائد کرتے ہوئے بدھ کو کہاکہ جھوٹ بولنے کے معاملے میں وزیراعظم کا کوئی مقابلہ نہیںہے۔مسٹر گاندھی نے مغربی چمپارن ضلع کے مدھوبنی بلاک کے دونا ہا میڈل اسکول میدان میں ایک انتخابی ریلی میں روزگار اور زرعی اصلاحات قانون کے معاملے پر مسٹر مودی پر جم کر نشانہ سادھا اور کہاکہ وزیراعظم نریندر مودی نے دو کروڑ روزگار کی بات کہی تھی اب اگر وزیراعظم دو کروڑ روزگار کی بات بول دیں تو شاید بھیڑ انہیں بھگا دے گی۔ کچھ سال قبل مسٹر مودی یہاں آئے تھے اور کہا تھاکہ یہ گنے کا علاقہ ہے چینی مل چالو کروں گا اور آئندہ مرتبہ آئوںگا تو یہاں کی چینی چائے میں ملا کر نوش کروں گا۔ انہوںنے سوالیہ لہجے میں کہاکہ گذشتہ وعدے کے مطابق وزیراعظم نے یہاں کے لوگوں کے ساتھ چائے نہیں پی۔کانگریس لیڈر نے روزگار کا مسئلہ

کووند نے دہلی یونیورسٹی کے وائس چانسلر کو معطل کر دیا

نئی دہلی//صدر رام ناتھ کووِند نے دہلی یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر یوگیش کمار تیاگی کو ان کے عہدے سے علیٰ الفورمعطل کر دیا۔صدر نے دہلی یونیورسٹی کے وزیٹر کے بطور اپنے اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے پروفیسر تیاگی کو فوری اثر سے معطل کر دیا اور ان کے خلاف ذمہ داریوں پر عمل درآمد نہ کرنے کے معاملے میں تفتیش کا حکم دیا ہے۔ یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر جوشی آج سے وائس چانلسر کا عہدہ سنبھالیں گے۔

تازہ ترین