تازہ ترین

بحریہ کیلئے54تارپیڈو کی خریداری

نئی دہلی//وزارت دفاع نے بحریہ کے لیے 423 کروڑ روپے کی لاگت سے امریکہ سے ایم کے 54 تارپیڈو کی خریداری کا معاہدہ کیا ہے ۔وزارت دفاع کے ایک ترجمان نے کل یہاں بتایا کہ معاہدہ غیر ملکی فوجی فروخت کے زمرے کے تحت کیا گیا ہے ۔ یہ تارپیڈو بحریہ کے جاسوسی طیارے پی-8I کے لیے خریدے جا رہے ہیں۔یہ تارپیڈو کسی بھی جنگی جہاز ، ہیلی کاپٹر یا ہوائی جہاز سے فائر کیا جا سکتا ہے اور یہ پانی کے اندر بھی اہداف کو نشانہ بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے ۔ہندوستان نے گزشتہ سال اس خریداری کی منظوری دی تھی۔ادھر برطانوی بحریہ کے سربراہ ایڈمرل سر ٹونی رڈاکن کل ہندوستان کے تین روزہ دورے پر یہاں پہنچے اور صبح نیشنل وار میموریل میںجاں بحق فوجیوں کو خراج عقیدت پیش کیا۔ اس کے بعد وہ بحریہ کے سربراہ ایڈمرل کرمبیر سنگھ سے ملنے کے لیے ساؤتھ بلاک پہنچے ۔ اس سے قبل انہیں ساؤتھ بلاک کے لان میں گارڈ آف آنر پیش کی گئی۔ایڈمرل رڈاکن کا

اجلاس اور موسمیاتی تبدیلی سے متعلق کانفرنسG-20

نئی دہلی//وزیر اعظم نریندر مودی 29 اکتوبر کو اٹلی اور برطانیہ کا دورہ کریں گے ، جہاں وہ بالترتیب جی-20 کے اجلاس اور موسمیاتی تبدیلی سے متعلق فریقوں کی کانفرنس (سی او پی 26) میں شرکت کریں گے ۔ذرائع کے مطابق اس دورے کے دوران وہ اٹلی اور برطانیہ کے وزرائے اعظم کے ساتھ دوطرفہ بات چیت بھی کریں گے ۔دورے کے پہلے مرحلے میں وہ 29 سے 31اکتوبر تک اٹلی میں ہوں گے۔  

راج ناتھ نے تیجس میں اُڑان بھری

نئی دہلی//وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے کل دیسی ساختہ ہلکے جنگی طیارے تیجس میں سمیلیٹر کے ذریعے پرواز کا تجربہ کیا اور کہا کہ یہ حیرت انگیز تھا۔ مسٹر سنگھ ان دنوں دو روزہ بنگلور کے دورے پر ہیں۔انہوں نے ایروناٹیکل ڈویلپمنٹ اسٹیبلشمنٹ (اے ڈی اے ) کا دورہ کیا۔اس اسٹیبلشمنٹ میں وہ تیجس ہوائی جہاز کے سمیلیٹر میں بیٹھے اور طیارے کے اڑنے کا تجربہ کیا۔بعد میں انہوں نے ٹویٹ کیا کہ "بنگلورو کے ایروناٹیکل ڈویلپمنٹ اسٹیبلشمنٹ (اے ڈی اے ) میں ایل ایس اے تیجس سمیلیٹر کو اڑانے کا شاندار تجربہ۔ سمیلیٹر کا ڈسپلے ہوائی جہاز کی اونچائی اور دیگر ڈیٹا کو ظاہر کرتا ہے ۔یہ اسٹیبلشمنٹ مسلح افواج کے لیے بغیر پائلٹ طیارے اور دیگر فضائی نظام تیار کرنے کے لیے کام کرتی ہے ۔  

مزید 2مہم جوئوں کی لاشیں برآمد

 نینی تال//اتراکھنڈ میں بارشوں سے پیش آئے حادثات سے مرنے والوں کی تعداد 65 ہو گئی ہے ، جس میں صرف کوماؤں ڈویژن میں 58 لوگوں کی موت ہوئی ہے ۔ اس دوران 11رکنی ٹریکنگ ٹیم کے 2 مزید مہم جو جو لاپتہ ہوئے تھے مردہ پائے گئے ہیں جس سے ہلاکتوں کی تعداد سات ہو گئی ہے جبکہ باقی دو کی تلاش جاری ہے۔ ٹیم کے دو ارکان کو جمعرات کو زندہ بچا لیا گیا تھا۔ ایک اہلکار نے بتایا کہ وہ زخمی ہیں اور ہرسیل اور اترکاشی میں زیر علاج ہیں۔سٹیٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ سینٹر سے جمعہ کو موصول ہونے والے تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق 17 سے 19 اکتوبر تک ہونے والی موسلا دھار بارشوں سے پیش آئے حادثات سے ابھی تک نو اضلاع میں 65 لوگوں کی موت ہو چکی ہے اور 22 لوگ زخمی ہوئے ہیں جبکہ دو ابھی بھی لاپتہ ہیں ۔