تازہ ترین

کورونا متاثرین میں 86,821کا اضافہ، تعداد63,12,585

نئی دہلی// ملک میں دو دن تک کورونا کی وبا کو مات دینے والوں کی تعداد انفیکشن کے نئے معاملوں سے زیادہ رہنے کے بعد پچھلے 24 گھنٹے کے دوران کورونا وائرس کے 86,821 نئے معاملے سامنے آئے،جس سے فعال معاملوں میں 264 کا اضافہ ہوا۔ مرکزی وزارت صحت اور خاندانی بہبود کی جانب سے جمعرات کو جاری اعدادو شمار کے مطابق کورونا کے متاثرین کی کل تعداد 63,12,585 پر پہنچ گئی ہے۔ اس دوران 85376 مریض صحتیاب ہوئے ہیں جس کے ساتھ ہی اب تک کورونا سے نجات پانے والوں کی تعداد 52,73,202 ہو گئی ہے۔

بابری مسجد انہدام کا معاملہ| ایڈوانی، جوشی، اوما بھارتی سمیت سبھی 32ملزمان بری

 لکھنؤ//بابری مسجد انہدام معاملے میں 28سال کے بعد سی بی آئی کی خصوصی عدالت نے بدھ کو اپنے فیصلے میں سبھی 32ملزمین کو بری قرار دیتے ہوئے کہا کہ6 دسمبر 1992 کو بابری مسجد کے انہدام میں شرپسند عناصر کا ہاتھ تھا۔ عدالت نے سبھی ملزمین کو انہدامی کاروائی یا کسی بھی قسم کی سازش سے بری قرار دیتے ہوئے آر ایس ایس اور وشو ہندو پریشد کو بھی بری الذمہ گردانا ہے ۔خصوصی جج ایس کے یادو نے بابری مسجد مسماری کے ملزم سابق نائب وزیر اعظم لال کرشن اڈوانی، ڈاکٹر مرلی منوہر جوشی، اوما بھارتی اور کلیان سنگھ سمیت سبھی 32ملزمین کو بری کرتے ہوئے کہا کہ سی بی آئی اس معاملے میں کوئی پختہ ثبوت پیش نہیں کرسکی ۔اسپیشل جج نے کہا'سی بی آئی ملزمین کے خلاف جرم ثابت نہیں کرپائی۔ عدالت نے اپنے فیصلے میں مانا کہ ملزمین نے بھیڑ کو خاموش کرنے کی پوری کوشش کی تھی اور ان کا بابری مسجد گرانے میں کوئی کردار نہیں تھا۔عدال

عدالت کا فیصلہ ناانصافی کی مثال : مسلم پرسنل لا بورڈ

نئی دہلی// بابری مسجد انہدامی مقدمے میں تمام ملزمین کو بری کئے جانے پر سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے جنر ل سکریٹری مولانا محمد ولی رحمانی نے کہا کہ یہ ایک بے بنیاد فیصلہ ہے جس میں شہادتوں کو نظرانداز کیا گیا اور قانون کا بھی پاس و لحاظ نہیں رکھا گیا ۔انہوں نے کہا کہ یہ فیصلہ اسی ذہنیت کا آئینہ دار ہے جو ذہنیت حکومت کی ہے اور جس کا اظہار بابری مسجد کیس میں سپریم کورٹ کے ججوں نے کیا تھا۔ سپریم کورٹ نے تو اتنا کیا کہ اپنے فیصلہ میں کئی واضح حقیقتوں کو تسلیم کیا پھر جو فیصلہ دیا وہ انصاف کے چہرے پر بڑاسیاہ دھبہ ہے۔ سی بی آئی  عدالت نے سارے مجرمین کو بری کردیا جبکہ پورے ملک میں ویڈیو اور تصویریں موجود ہیں جو صاف بتاتی ہیں کہ مجرم کون ہے اور بابری مسجد کی شہادت کی سازش اور کارروائی میں کون لوگ شریک ہیں۔مولانا رحمانی نے یہ بھی کہا کہ 1994ء میں بابری مسجد کی

یو پی ایس سی کے پرائمری امتحانات

نئی دہلی// سپریم کورٹ نے کورونا وبا کی وجہ سے تاخیر سے منعقد ہورہے یونین پبلک سروس کمیشن (یو پی ایس سی) کے پرائمری امتحانات کو چار اکتوبر سے مزید آگے بڑھانے سے بدھ کو انکار کردیا۔جسٹس اے ایم کھانولکر کی صدارت والی بنچ نے کمیشن کی جانب سے دی گئی دلیلوں پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے یو پی ایس سی کے پرائمری امتحانات کے 20 امیدواروں کی جانب سے دائرعذرداری خارج کردی۔کمیشن نے دلیل دی تھی کہ اب امتحانات ملتوی کرنے کا اثر اگلے سال کے امتحانات پر بھی پڑے گا۔ اتنا ہی نہیں اس امتحانات کے انعقاد کی ساری تیاریاں مکمل کی جاچکی ہیں اور اب اسے مزید ملتوی کیا گیا تو کمیشن کو کروڑوں روپے کا نقصان ہوگا۔کمیشن کی جانب سے کہا گیا ہے کہ امتحانات امیدواروں کی صحت کی سلامتی کے لئے سبھی مناسب طریقے اپنائے گئے ہیں۔ بنچ نے کہا ہے کہ حال کے دنوں میں مختلف مسابقتی امتحانت کے کامیاب انعقاد اس بات کا ثبوت ہے کہ ان ام

بھارت میں اقلیتوں کے ساتھ روا سلوک تشویشناک:شاہ محمودقریشی

سرینگر//پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کی المناک داستان پوشیدہ ہے ۔انہوں نے کہا کہ ایمنیسٹی انٹرنیشنل نے جب بھارت کی جانب سے انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو منظر عام پر لانا چاہا تو انہیں اتنا مجبور کیا گیا کہ انہیں بھارت میں اپنے دفاتر بند کرنا پڑے، ان کے اکاؤنٹس منجمد کردیئے گئے۔ سی این آئی کے مطابق پاکستانی وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہندوستان میں اقلیتوں، بالخصوص مسلمانوں کے ساتھ جو سلوک کیا جا رہا ہے ،اس پر بے حد تشویش ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارت نے جموں و کشمیر میں جس طرح انسانی حقوق کی پامالیاں جاری رکھی ہوئی ہیں،جبکہ ایمنیسٹی انٹرنیشنل نے جب بھارت کی جانب سے انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو منظر عام پر لانا چاہا تو انہیں اتنا مجبور کیا گیا کہ انہیں بھارت میں اپنے دفاتر بند کرنا پڑے، ان کے اکاؤنٹس منجمد کردیے