تازہ ترین

پاکستان پیر کو کرتار پور صاحب گلیارہ پھر سے کھولے گا

اسلام آباد// پاکستان نے سکھ عقیدت مندوں کے لئے کرتار پور صاحب کوریڈور پیر (29 جون) سے دوبارہ سے کھلنے کا فیصلہ کیا ہے۔ پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ٹوئٹ کرکے یہ اطلاع دی۔  قریشی نے ٹوئٹ میں کہا ”چونکہ دنیا بھر کے مذہبی مقامات کھولے جارہے ہیں، پاکستان سبھی سکھ عقیدت مندوں کے لئے کرتار پور صاحب گلیارہ پھر سے کھولنے کی تیار کررہا ہے۔ ہندوستان کو اطلاع دی جاتی ہے کہ ہماری تیاری 29 جون 202 کو مہاراجہ رنجیت سنگھ کی برسی کے موقع پر گلیارے کو پھر سے کھولنے کی ہے“۔ واضح رہے کہ عالمی وبا کورونا وائرس کے قہر کے پیش نظر احتیاط کے طور پر عقیدت مندں کے لئے کرتار پور صاحب گلیارہ بند کردیا گیا تھا۔ کرتار پور صاحب گلیارے کا افتتاح گزشتہ برس 9 نومبر کو سکھوں کے پہلے گرو گرو نانک دیو جی کے 550 ویں پرکاش پرو کے موقع پر کیا گیا تھا۔ ہندوستان کے سکھ بگیر کسی رکاو

ملک میں کورونا انفیکشن کے سب سے زیادہ 18552 نئے کیس، تعداد508953

نئی دہلی// گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا وائرس (کووڈ۔19) کے انفیکشن کے سب سے زیادہ 18552 نئے کیس رپورٹ ہوئے ہیں، جس سے متاثرین کی تعداد 5.08 لاکھ سے تجاوز کرگئی ہے۔ صحت و خاندانی بہبود کی مرکزی وزارت کی طرف سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق متاثرہ افراد کی کل تعداد بڑھ کر 508953 ہوگئی ہے جس میں کورونا وائرس کے انفیکشن کے 18552 نئے معاملے شامل ہیں۔ تاہم پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران اس بیماری کی وجہ سے 384 افراد فوت ہوچکی ہیں اگرچہ ایک دن پہلے کے مقابلے میں یہ تعداد 23 کم ہے۔ اس کے ساتھ ہی مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 15685 ہوگئی ہے۔ دوسری جانب اس بیماری سے نجات پانے والے افراد کی تعداد میں بھی اضافہ ہورہا ہے اور اسی عرصے میں 10244 مریض ٹھیک ہوگئے ہیں، جنہیں ملاکر کل 295881 مریضوں کو اسپتال سے چھوٹی دی جاچکی ہے۔ اس وقت ملک میں کورونا کے 197387 فعال معاملے ہیں۔ کورونا سے سب س

فوجی سربراہ کا لداخ کا دورہ|وزیر دفاع کو صورتحال سے آگاہ کیا

نئی دہلی// مشرقی لداخ میں حقیقی کنٹرول لائن پر ہندوستان اور چین کے درمیا ن جاری فوجی تعطل کے درمیان زمینی حالات کا جائزہ لینے کے بعد فوجی سربراہ منوج مکند نروانے نے وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ کو لداخ دورہ کے بعد انہیں تازہ صورتحال سے واقف کرایا۔ سنگھ بھی روسی دورے سے واپس آئے ہیں۔ لداخ کے دو دن کے دورے پر گئے جنرل نروانے نے گلوان وادی میں چینی فوجیوں کے ساتھ جھڑپ میں زخمی ہوئے فوجوں سے اسپتال جاکر ملاقات کی۔ انہوں نے چینی فوجیوں کے ساتھ 15 جون کی رات گلوان میں چینی فوج کو جواب دینے والے فوجیوں کو تعریف کا ایک خط بھی دیا۔ جنرل نروانے نے  سنگھ کو حقیقی کنٹرول لائن پر گزشتہ دنوں کے واقعہ، وہاں کی سرگرمیوں اور فوج کی تیاریوں کے بارے میں تفصیل سے واقف کرایا۔  

خود انحصار اتر پردیش روزگار مہم' کا افتتاح | یوپی نے آفت کو مواقع میں بدل کر مثال قائم کی: مودی

لکھنؤ// کورونا بحران میں چیلنجز کو بخوابی انداز میں مواقع میں تبدیل کرنے کے لئے یوگی حکومت کی تعریف کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نے جمعہ کو کہا کہ دنیا کے کئی ممالک سے بھی بڑی آبادی والے اترپردیش نے کورونا وائر س سے پیداہونے والے حالات سے جس اچھے ڈھنگ سے مقابلہ کیا ہے وہ بے مثال ہے ۔دیگر ریاستوں کو بھی اس سے ترغیب لینے کی ضرورت ہے ۔'خود انحصار اتر پردیش روزگار مہم' کا افتتاح کرتے ہوئے وزیر اعظم نے ' کہا کہ پوری دنیا کے لئے دہشت بنے کورونا وائرس کی ویکسین تیار ہونے تک لوگوں کو ددو گز کی دوری اور فیس ماسک کا استعمال کرنا چاہے ۔ یہی اس جان لیوا وائرس سے بچے رہنے کی واحد ترکیب ہے ۔انہوں نے کہا کہ جب دیگر ریاستیں کورونا وائر سے مقابلے میں پریشان ہیں یوپی نے اپن ترقی کے لئے اتنی بڑی اسکیم شروع کردی ہے ۔ ایک طرح سے مصیب سے بنے ہر موقع کو یو پی حکومت پورا فائدہ اٹھا رہی ہے ۔ دنی

ہند چین سرحدی کشیدگی | لوگوں کو گمراہ کرنے کے بجائے سچ بتایا جائے:سونیا گاندھی

نئی دہلی// کانگریس کی صدر سونیا گاندھی اور پارٹی کے سابق صدر راہل گاندھی نے کہا ہے کہ چین کی سرحد پر جنگ کا ماحول ہے اور حکومت اپنی ذمہ داری سے بھاگ نہیں سکتی۔جمعہ کو یہاں جاری ایک ویڈیو پیغام میں محترمہ گاندھی نے کانگریس کے ذریعہ کل خراج عقیدت پیش کرنے کے لئے منعقدہ‘شہداء کو سلام’ کے موقع پر کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کہتے ہیں کہ چین ہماری سرحد میں داخل نہیں ہوا ہے ، تو حکومت یہ بتائے کہ ہمارے 20 فوجی کیسے ہلاک ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ مودی کو ہندوستان کے لوگوں کو گمراہ کرنے کی بجائے یہ بتانا چاہئے کہ چینی فوجی کب اور کیسے ہماری سرحد سے باہر ہوں گے ۔ چینی فوج وادی گلوان میں نئی تعمیرات اور نئے بنکر تعمیر کرکے سرحدوں کی خلاف ورزی کررہی ہے اور سیٹیلائٹ کی تصویر سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ چین نے سرحد پر اپنی فوجی پوزیشن کو مضبوط کرلی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ہم جانتے ہیں کہ ہمارا مل

بارشوں اور آسمانی بجلی سے تباہی

نئی دلی // بہار اور اتر پردیش میں آسمانی بجلی گرنے سے 110 افراد ہلاک اور 32 زخمی ہوگئے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق ریاست بہار کی ڈزاسٹر مینیجمنٹ اتھارٹی کا کہنا ہے کہ ان کی ریاست میں 83 افراد ہلاک ہوئے ہیں جبکہ20 دیگر زخمی افراد ہسپتالوں میں موجود ہیں۔ادھرپڑوسی ریاست اتر پردیش میں بھی 20 لوگوں کی ہلاکت کی اطلاع ہے۔انڈیا میں مون سون کی موسلا دھار بارشوں کے دوران آسمانی بجلی گرنے کے واقعات عام ہیں۔اس دوران بارشوں اور طوفان سے درختوں اور تعمیرات کو بھی وسیع پیمانے پر نقصان پہنچا ہے۔حکام نے شہریوں کو خبردار کیا ہے کہ وہ ہوشیار رہیں اور گھروں میں رہیں کیونکہ موسمیاتی ماہرین کے مطابق موسم اگلے چند دنوں میں بھی خراب رہے گا۔وزیرِ اعظم نریندر مودی نے کہا ہے کہ امدادی کارروائیاں جاری ہیں جبکہ انہوں نے متاثرہ افراد کے خاندانوں سے بھی تعزیت کی۔بہار کے وزیر برائے قدرتی آفات لکشمیشور رائے نے بتایا کہ ی