تازہ ترین

ملک میں کورونا وائرس کے 7964 نئے کیس،متاثرین کی تعداد1,73,763

نئی دہلی// ملک میں کورونا وائرس متاثرین کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہاہے اور گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران انفیکشن کے 7964 نئے کیس درج کئے گئے ہیں اور 265 افراد کی اس بیماری سے موت ہوئی ہے لیکن راحت کی بات یہ ہے کہ اس مدت میں صحت مند ہونے والوں کی تعداد میں بھی زبردست اضافہ ہوا ہے اور 11،264 مریض شفایاب ہوئے ہیں۔ مرکزی صحت اور خاندانی بہبود کی وزارت کی جانب سے ہفتہ کو جاری تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق ملک کی مختلف ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں اس کے انفیکشن سے اب تک 1,73,763لوگ متاثر ہوئے ہیں اور 4971 افراد کی موت پوچکی ہے۔ ملک میں 82،370 لوگ اس بیماری سے نجات حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں اور اب یہاں کورونا وائرس انفیکشن کے 86 ہزار 422فعال معاملے ہیں۔ اس وبا سے ملک میں سب سے زیادہ متاثر ریاست مہاراشٹر ہوا ہے۔ ریاست میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں 2682 نئے کیس سامنے آئے ہیں ا

ملک میں کورونا کا بڑھتا پھیلائو | 24گھنٹوں میںساڑھے7ہزار نئے معاملے سامنے | 4706 اموات ،متاثرین کی تعداد ایک لاکھ65ہزار کے پار

نئی دہلی//ملک میں کورونا وائرس (کوویڈ 19) متاثرین کی تعداد ہرروز بڑھنے کی وجہ سے اس وبا کی خطرناک شکل بڑھتی جارہی ہے اورپچھلے 24 گھنٹوں کے دوران انفیکشن کے ریکارڈ 7466 نئے معاملے سامنے آنے سے مریضوں کی کُل تعداد 1,65,799 پر پہنچ گئی ہے اور اس مدت میں 175 لوگوں کی موت ہوئی ہے ۔پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران ملک کے مختلف حصوں میں اس سے متاثر 3414 لوگ ٹھیک ہوئے ہیں جس سے ٹھیک ہوئے لوگوں کی کل تعداد 71,106 ہوگئی ہے ۔مرکزی صحت اور خاندانی بہبود کی وزارت کی جانب سے جمعہ کو جاری کئے گئے اعدادو شمار کے مطابق ملک کی مختلف ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام ریاستوں میں اب تک اس سے 1,65,799 لوگ متاثر ہوئے ہیں اور 4706 لوگوں کی موت ہوئی ہے ۔ملک میں فی الحال کورونا کے کل89987 فعال معاملے ہیں۔ملک میں بدھ کو اور منگل کو نئے معاملوں میں کمی دیکھی گئی تھی۔بدھ کو 6387 اور منگل کو 6535 نئے معاملے سامنے آئے تھے ا

بیمار، بزرگ، بچے، حاملہ خواتین غیر ضروری سفر سے بچیں:بھارتی ریلوے

نئی دہلی// انڈین ریلوے نے ہائی بلڈ پریشر، ذیابیطس، کینسر، امراض قلب جیسی بیماریوں میں مبتلا افراد، حاملہ خواتین، دس برس سے کم عمر کے بچوں اور بزرگوں کو اشد ضروری نہ ہونے پر شرمک اسپیشل اور دیگر خصوصی ٹرینوں میں سفر سے بچنے کی اپیل کی ہے ۔ریلوے کی وزارت نے کل یہاں جاری ایک پیغام میں کہا کہ ہندوستانی ریلوے ، ملک بھر میں روزانہ کئی اسپیشل ٹرینیں چلا رہا ہے ، تاکہ مہاجر مزدوروں کی اپنے گھروں کو واپسی یقینی بنائی جا سکے ۔ ایسا دیکھا جا رہا ہے کہ کچھ ایسے لوگ بھی اسپیشل ٹرینوں میں سفر کر رہے ہیں جو پہلے سے ہی ایسی بیماریوں میں مبتلا ہیں جس میں کووڑ -19 وبا کے دوران ان کی صحت کو خطرہ لاحق ہوجاتا ہے ۔ سفر کے دوران پہلے سے بیماریوں میں مبتلا افراد کی اموات کے کچھ افسوسناک معاملے سامنے آئے ہیں۔ریلوے کی وزارت نے کہا کہ ایسے کچھ لوگوں کی حفاظت کی خاطر ریلوے کی وزارت اپیل کرتی ہے کہ پہلے سے ہائی ب

چینی سرحد تناؤ پرحکومت کی خاموشی خطرناک: راہل گاندھی

نئی دہلی//کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے چین کی سرحد پر تناؤ کے حالات کے سلسلے میں حکومت کی خاموشی کو خطرناک قرار دیتے ہوئے کہا کہ ملک  میںبڑے پیمانے پر قیاس آرائیاں اور غیریقینی صورتحال کو تقویت مل رہی ہے ۔راہل گاندھی نے جمعہ کو ٹویٹ کرکے کہاکہ ’بحران کے اس دور میں چین کی سرحد کے حالات کے سلسلے میں حکومت کی خاموشی سے قیاس آرائیاں زور پکڑ رہی ہیں اور بے یقینی کا ماحول بنا ہوا ہے۔حکومت کو ملک کے عوام کو صاف صاف بتانا چاہئے کہ سرحد پر ہوکیا رہا ہے انہوں نے ٹوئٹ کر کے کہا کہ’چین کے ساتھ سرحد پر حالات کو لے کر حکومت کی خاموشی سے بحران کے وقت بڑے پیمانے پر قیاس آرائیاں اور غیریقینی صورتحال کو تقویت مل رہی ہے’۔ راہل گاندھی نے کہاکہ’حکومت کو سامنے آکر واضح کرنا چاہئے اور جو ہو رہا ہے، اس کے بارے میں ہندوستان کو بتانا چاہئے’۔انہوں نے کہا کہ حکومت کو

دنیا کی سب سے بڑی ٹیسٹنگ لبارٹری بھارت میں تیار ہوگی

نئی دہلی//انڈین ٹیکنالوجی انسٹی ٹیوٹ (آئی آئی ٹی) کے سابق طالب علموں نے کورونا وبا (کووڈ -19) کے متاثرین کی جانچ کے لئے دنیا کی سب سے بڑی ٹیسٹنگ لیب تیار کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔آئی آئی ٹی ایلومنائی کونسل نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ وہ ممبئی میں کورونا کے ٹیسٹ کے لئے ایک میگا لیب بنائے گی جس کے ذریعہ ہر ماہ ایک کروڑ لوگوں کا ٹیسٹ کیا جاسکے گا۔ کونسل کے صدر روی شرما نے یہاں ایک بیان میں کہا کہ دنیا میں کورونا کا ٹیکہ تیار کرنے کی کوششیں جاری ہیں لیکن کونسل نے وائرس کے ماہرین سے رابطہ کرکے یہ فیصلہ کیا ہے کہ ممبئی میں ایک بہت بڑی لیب بنائی جائے ۔ اس کے لئے گلوبل پارٹنرس تلاش اور انہیں مدعو کیا جا رہا ہے ۔ آئی آئی ٹی کے تقریباً ایک ہزار سابق طالب علم دنیا بھر میں اپنی سطح پر کوششیں کرکے اس خاص پروجیکٹ کو پورا کرنے میں مصروف ہیں۔ اس لیب میں روبوٹ ٹیکنالوجی کااستعمال کیا جائے گا اور دیگر متعد

تازہ ترین