تازہ ترین

ہندوستانی ٹیم کا دورۂ سری لنکا | وراٹ کوہلی اورروہت شرماسری لنکا نہیں جائیں گے : گنگولی

دہلی //ہندوستانی کرکٹ بورڈ (بی سی سی آئی ) کے صدر سورو گنگولی نے اتوار کو کہا کہ ہندوستانی ٹیم ٹاپ کھلاڑیوں کے بغیر جولائی میں محدود اوورس کی سیریز کیلئے سری لنکا کا دورہ کرے گی۔ہندوستانی کرکٹ بورڈ  (بی سی سی آئی ) کے صدر سورو گنگولی نے اتوار کو کہا کہ ہندوستانی ٹیم ٹاپ کھلاڑیوں کے بغیر جولائی میں محدود اوورس کی سیریز کیلئے سری لنکا کا دورہ کرے گی۔ ٹیم انڈیاکے کپتان وراٹ کوہلی اور نائب کپتان روہت شرما جولائی میں ہونے والی اس سیریز کا حصہ نہیں ہوں گے کیونکہ وہ اس وقت انگلینڈ کے خلاف ۵؍ٹیسٹ میچوں کی سیریز کی تیاری کررہے ہوں گے۔ سورو گنگولی نے کہا’’ہم نے جولائی میں سینئر مردو ںکی ٹیم کیلئے محدود اوورس کی سیریز کا منصوبہ بنایا ہے۔یہ ٹیم سری لنکا میں ٹی۲۰؍ اور ون ڈے میچ کھیلے گی۔ ‘‘ہندوستان کی ۲؍الگ الگ ٹیموں کے بارے میں پوچھے جانے پر ٹیم انڈیا کےسابق کپتان نے

ملک میں3.48 لاکھ سے زیادہ معاملات

 نئی دہلی//ملک میں کورونا وائرس (کووڈ 19) کے یومیہ معاملوں میں پھر سے اضافہ دیکھا گیا ہے اور پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران انفیکشن کے 3.48 لاکھ سے زیادہ معاملات سامنے آئے اور 4200 سے زیادہ مریضوں کی امعات سے یہ تعداد بڑھ کر ڈھائی لاکھ سے زیادہ ہوچکی ہے اس دوران ملک میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 24,46,674 افراد کوکورونا کے ٹیکے لگائے گئے۔ اس کے بعد اب تک 17 کروڑ 52 لاکھ 35 ہزار 991 افراد کی ٹیکہ کاری ہوچکی ہے۔مرکزی وزارت صحت کی جانب سے بدھ کی صبح جاری اعداد و شمار کے مطابق ، گذشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا کی 3,48,421 نئے معاملوں کی آمد کے ساتھ ، متاثرہ افراد کی تعداد 2 کروڑ 33 لاکھ 40 ہزار 938 ہوگئی۔ اسی کے ساتھ ہی اس وبا سے 3 لاکھ 55 ہزار 338 افراد شفایاب ہوئے ، جس کے بعد کووڈ 19 کو شکست دینیوالوں کی تعداد بڑھ کر 19382642 ہوگئی۔ اس وقت ملک میں کورونا کے 3704099 سرگرم معاملے ہیں۔ اسی دوران

آکسیجن کی عدم دستیابی کی وجہ سے کسی بھی مریض کی موت نہیں ہونی چاہئے | ڈاکٹر جتیندرسنگھ نے جی ایم سی جموں پر تبادلہ خیال کیلئے ہنگامی اجلاس طلب کیا؛ آکسیجن ، وینٹی لیٹر آڈٹ کی ہدایت

نئی دہلی/جموں//مرکزی وزیر مملکت (آزادانہ چارج) برائے وزیر اعظم دفتر ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں میں آکسیجن سلنڈروں اور وینٹی لیٹروں کا آڈٹ کرنے پرزوردیا کیا تاکہ ضرورت مند مریضوں کے لئے مساوی تقسیم کو یقینی بنایا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ آکسیجن کی مبینہ عدم فراہمی کی وجہ سے بھی ایک ہی موت زبردست معاشرتی بدامنی کا سبب بنتی ہے اور اگر کوئی ہو تو دوسرے تمام اچھے کاموں کی نفی کرتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اعتماد سازی کے پیغام کو بلند آواز میں اور واضح کرنا ہوگا کہ جی ایم سی جموں جیسا ایک اعلی ادارہ اس بات کو یقینی بنائے گا کہ آکسیجن کی عدم دستیابی کی وجہ سے ایک بھی موت واقع نہ ہو۔ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے یہ واضح دعویٰ انتظامیہ اور طبی عملے کی ہنگامی اعلی سطحی میٹنگ کے دوران کیا ، جس میں انہوں نے کوویڈ انتظامیہ کی سہولیات سے متعلق گورنمنٹ میڈیکل کالج ، جموں سے پریشان کن اطلاعات