’ہیمال ناگرائے‘کا مطالعہ | لاک ڈائون کی اکتاہٹ کاعلاج

نئی دہلی//کروناوائرس لاک ڈائون کے دوران اکتاہٹ کودور کرنے کیلئے ایک اشاعتی ادارے نے لوگوں کو 15کتابوں کا مطالعہ کرنے کی  صلاح دی ہے جن میں ایک کشمیری تصنیف بھی شامل ہے۔ایک بیان میں ’اسپیکنگ ٹائیگر‘نامی اشاعتی ادارے نے کہاکہ اُن کی کتابوں کی فہرست الگ تھلگ دن گزارنے کا ایک بہترین طریقہ ہے۔انہوں نے اس پہل کانام ’نئی دنیاکی پہچان‘رکھا ہے اور اس فہرست میں رسکن بانڈ،جیری پنٹو اوراپمنیوچٹرجی کی تصانیف بھی شامل ہیں ۔اس فہرست میں اونیزا درابو کی تصنیف ’ہیمال ناگرائے ،کشمیرکی عظیم لوک کہانیاں‘ بھی شامل ہے جبکہ فہرست میں بچوں کیلئے بھی پانچ کتابیں ہیں۔دیگرتصانیف میں رسکن بانڈ کی کتاب،’’اے بک آف سمپل لیونگ،بریف نوٹس فرام ہلز‘‘ ،جیری پنٹوکی’’مرڈراِن ماہم‘‘،سیدمجتبیٰ علی کی تصنیف ،’’اِن اے لینڈ فار

کورونا کا پھیلائو جاری | ملک بھر میں75 اموات ، 3072 افراد متاثر

نئی دہلی //  ملک میں کورونا وائرس (کووِڈ-19) سے متاثرین کی تعداد تین ہزار سے تجاوز کر گئی ہے جبکہ اس کی زد میں آکراب تک 75 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ہفتے کی رات وزارت صحت کی جانب سے جاری رپورٹ کے مطابق کورونا وائرس کی وبا ملک کی 29 ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں پھیل چکی ہے۔ اس سے متاثرہ افراد کی تعداد 3072 تک پہنچ گئی ہے۔ ان میں 57 غیر ملکی شامل ہیں۔ کورونا وائرس کی وبا سے پورے ملک میں اب تک 75 افراد کی موت ہوگئی ہے حالانکہ 213  افراد صحتمند ہوچکے ہیں۔ ملک میں کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر 490 افراد مہاراشٹر میں ہیں، یہاں 24 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ مہاراشٹر کے بعد قومی دار الحکومت نئی دہلی میں ہیں جہاں 445 افراد اب تک اس سے متاثر ہوئے ہیں، یہاں چھ افراد کی موت ہو چکی ہے۔ اس معاملے میں تیسرا مقام تملناڈو کا ہے جہاں اب تک 411 افراد کورونا وائرس سے متاثر ہوئے ہیں اور

مودی کی ٹرمپ کے ساتھ ٹیلی فون پر بات

نئی دلی // وزیر اعظم نریندر مودی نے کل امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے ساتھ ٹیلی فون پر بات چیت کی اور کرونائوائرس کی وجہ سے پیدا شدہ صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔دونوں رہنمائوں نے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی شدت پر تشویش کا اظہار کیا اور قریبی تعاون پر بات چیت کی۔انہوں نے کوویڈ ۔19 عالمی وبائی کے خلاف لڑنے کے لئے تمام ممالک کوآپس میں مل جل کر ایک دوسرے کے باہمی تعاون کے ساتھ ساتھ کام کرنے پر زور دیا ۔مودی نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا’’ہمارے مابین اچھی گفتگو ہوئی اور اس عالمی وباء کے خلاف پورے طاقت کے ساتھ لڑنے پر بھارت اور امریکہ کی شراکت داری پر بات کی ‘‘۔ دونوں رہنمائوں کے مابین اس وقت بات چیت ہوئی جب دنیا میں کرونا کے قہر سے لوگ خوف زدہ ہیں ۔  

آسمان کو روشنی دکھانا علاج نہیں: راہل

نئی دہلی// کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے وزیر اعظم نریندر مودی پر حملہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا کے خلاف جنگ کوتھالی بجا کر یا آسمان کو اجالا دکھا کر نہیں جیتا جا سکتا بلکہ اس کے لئے کافی ٹیسٹنگ سہولت دستیاب کرانازیادہ ضروری ہے۔مسٹر گاندھی نے ہفتہ کو ٹوئیٹ کرکے کہا کہ ہندوستان میں کورونا کی ٹیسٹنگ سہولت پاکستان اور سری لنکا سے بھی کم ہے۔ کورونا ٹیسٹ کی صلاحیت پاکستان میں 10 لاکھ لوگوں پر 67 اور سری لنکا کے پاس 97 جبکہ ہندوستان کے پاس 29 ہے۔ جنوبی کوریا کے پاس یہ صلاحیت 7622، اٹلی کے پاس 7122 ہے اور امریکہ کے پاس 2732 ہے۔انہوں نے کہا،’’ہندوستان کے پاس کووڈ -19 وائرس سے لڑنے کے لئے مناسب ٹیسٹ نظام تک نہیں ہے۔ لوگو ں سے تالی بجواکر یا آسمان کو روشنی دکھانے میں مسئلہ کا حل نہیں ہے۔‘‘یو این آئی  

چین سے آج لازمی طبی سامان آئے گا

نئی دہلی // چین سے لازمی طبی سامان لے کر سرکاری طیارہ خدمات کمپنی ایئر انڈیا کا طیارہ اتوار کو دہلی آئے گا۔شہری ہوا بازی کی وزارت نے ہفتہ کو بتایا کہ چین کے ساتھ ایئر انڈیا کے ذریعے قائم ایروبریج کے تحت شنگھائی سے طبی سامان لے کر پہلی پرواز اتوار کو دہلی آئے گی۔ لاک ڈاؤن کے بعد یہ پہلا موقع ہو گا جب کوئی مسافر یا کارگو طیارہ چین سے ہندوستان آئے گا۔ ہندوستان نے شنگھائی کے علاوہ ہانگ کانگ سے بھی دہلی کے لئے کارگو پرواز کی درخواست کی تھی جس کی اجازت مل گئی ہے۔ ملک کے مختلف حصوں میں طبی اور دیگر ضروری سامان کی فراہمی کے لئے شروع کی گئی ’ لائف لا ئن پرواز‘ کے تحت ایئر انڈیا اور ہندوستانی فضائیہ کے طیاروں نے جمعہ کو 10 پروازیں کیں اور ملک کے مختلف حصوں میں 19 ٹن سے زیادہ ضروری سامان پہنچایا۔ وزارت نے بتایا کہ جمعہ کے روز لازی طبی اور دیگر سامان کے ساتھ ایئر انڈیا نے آٹھ اور

تازہ ترین