ملک میں کورونا سے مرنے والوں کی یومیہ تعداد 100 سے کم ، فعال کیسوں میں بھی کمی

نئی دہلی// کچھ ریاستوں میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے کیسز میں ہوئے اچانک اضافہ کے بعد راحت کی بات یہ ہے کہ ملک بھر میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا سے ہونے والی اموا ت کی تعداد اور فعال کیسز دونوں میں کمی واقع ہوئی ہے۔ مسلسل چھ دن تک کورونا وائرس سے مرنے وا لوں کی تعداد 100 سے زائد رہنے کے بعد گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ان میں کمی درج کی گئی ہے اور ان کی تعداد کم ہوکر 91 رہ گئی ہے اور اسی دوران نئے کیسز کے مقابلے میں صحتیاب ہونے والے افراد کی تعداد زیادہ رہنے سے پانچ دن بعد فعال کیسز میں کمی آئی ہے۔ دریں اثنا ملک میں اب تک ایک کروڑ 48 لاکھ 54 ہزار 136 افراد کو کورونا ٹیکے لگائے گئے ہیں۔  

وزیر اعظم نے کورونا ٹیکہ لگوایا

نئی دہلی //وزیر اعظم نریندر مودی نے آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز جا کر کورونا وائرس ویکسین کی پہلی خوراک لی ۔ کورونا کی دوسری لہرکے بیچ وزیر اعظم نریندر مودی پیر کی صبح ایمزگئے اور انہو ں نے کورونا کا پہلا ٹیکہ لگوایا جس کے ساتھ ہی یکم مارچ سے کورونا ویکسین کاٹیکہ لگانے کادوسرا مرحلہ شروع ہوا ۔وزیر اعظم نریندر مودی نے اس تعلق سے فیس بک پوسٹ کے ذریعہ خود یہ اطلاع دی۔ اس پوسٹ میں انہوں نے لکھا ہے ’’ایمس میں کووڈ19 ٹیکہ کی پہلی خوراک میںنے لی، ہمارے ڈاکٹروں اور سائنسدانوں نے کوویڈ کے خلاف عالمی لڑائی کو مضبوط کرنے کے لئے کم وقت میں کام کیا ہے،جو ویکسین لینے کے اہل ہیں میں ان سب اپیل کرتا ہوں کہ وہ ٹیکہ لگوائیں،ساتھ ہی ہم سب کو مل کرہندوستان کو اس وائرس سے پاک ملک بناناہے‘‘۔

مرکز کے اختیارات چیلنج | سپریم کورٹ میں عرضی مسترد

نئی دہلی//سپریم کورٹ نے انڈین پولیس سروس (آئی پی ایس) افسروں کو ڈیپوٹیشن پر بلانے کے مرکزی حکومت کے اختیارات کو چیلنج کرنے والی عرضی مسترد کر دی ہے۔ جسٹس ایل ناگیشور راؤ کی سربراہی میں بینچ نے مغربی بنگال کے رہنے والے اور پیشے سے ایک وکیل ابو سہیل کی عرضی ایک مختصر سماعت کے دوران مسترد کر دی۔ مغربی بنگال کے تین آئی پی ایس افسران کو مرکزی ڈیپوٹیشن پر بلانے کے بعد مرکزی اور ریاستی حکومت میں کھینچ تانی ہے۔عرضی گزار نے انڈین پولیس سروس (کیڈر) رولز 1954 کے رول6 (1) کی آئینی جوازیت کو چیلینج کیا تھا ، جس کے تحت آئی پی ایس افسران کو ڈیپوٹیشن پر بلانے کا مرکز کو اختیار ہے۔    

زراعت میںتحقیق اور ترقی کیلئے زیادہ کردار ادا کرنا چاہئے: وزیراعظم

 نئی دہلی// (یو این آئی) وزیر اعظم نریندر مودی نے زراعت میں تحقیق اور ترقی کے لئے نجی شعبے میں زیادہ سے زیادہ شراکت کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ مودی نے پیر کو زراعت اور کسان بہبود سے متعلق بجٹ کی فراہمی کے موثر نفاذ کے بارے میں منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نجی شعبے پر اعتماد بڑھنے سے کاشتکاروں کے اعتماد میں بھی اضافہ ہوگا۔ اب کاشتکاروں کو یہ اختیارات دینا ہوں گے جس میں وہ صرف گندم اور دھان کی کاشت تک ہی محدود نہیں ہیں۔ آپ نامیاتی کھانے سے متعلق  سلاد سبزیوں کو اگانے کی کوشش کر سکتے ہیں۔ اس طرح کی بہت ساری فصلیں ہیں جن کی کاشت کی جاسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سی ویڈ (سمندری سوار) اور بیج ویکس  کے لئے بازار تلاش کرنے کی ضرورت ہے۔ ویبنار میں زراعت ، دودھ ، ماہی گیری ، سرکاری ، نجی اور کوآپریٹو سیکٹر کے اسٹیک ہولڈرز اور دیہی معیشت کو مالی اعانت فراہم کرنے والے بینکوں

پٹرول ڈیزل کی قیمتیں دوسرے دن مستحکم

نئی دہلی // (یواین آئی )  بین الاقوامی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں ایک مرتبہ پھر تیزی  آ نے کے درمیان گھریلو مارکیٹ میں سوموار کو پٹرول اور ڈیزل کی قیمتیں مسلسل دوسرے روز مستحکم رہی۔ قومی دارالحکومت دہلی میں لیٹر پٹرول ابھی 91.17 روپے اور ڈیزل 81.47 روپے فی لیٹر ہے ۔ ہفتے کے روز ان دونوں کی قیمتوں میں بالترتیب 24 پیسے اور 15 پیسے فی لیٹر کا اضافہ ہوا تھا ۔آئل مارکیٹنگ کی سرکاری کمپنی انڈین آئل کارپوریشن کے مطابق ان دونوں ایندھنوں کی قیمتیں مستحکم ہیں۔بین الاقوامی  مارکیٹ میں خام تیل نے ایک بار پھر زور تیزی  آئی  ہے ۔ لندن برینٹ کروڈ 65 ڈالر فی بیرل کو عبور کرچکا ہے۔ اگلے ہفتے  اوپیک پلس کے ممالک کی  میٹنگ  ہونی  ہے۔ جس میں تیل کی پیداوار  بڑھانے  پر بات چیت ہونے کی توقع کی جارہی ہے۔  

بی جے پی کارکنان کی ماں کے ساتھ مارپیٹ پر خواتین کمیشن سخت

 نئی دہلی//(یواین آئی) قومی خواتین کمیشن نے مغربی بنگال میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ایک کارکن کی ماں کے ساتھ مارپیٹ کرنے کی خبروں کا نوٹس لیتے ہوئے چیف الیکشن کمیشن سے فوراً کارروائی کرنے کو کہا ہے اور اس کی رپورٹ مانگی ہے۔خاتون کمیشن کی صدر ریکھا شرما نے چیف الیکشن کمیشن سنیل اروڑا کو پیر کو اس معاملے میں ایک خط لکھا اور کہا کہ ایک سیاسی پارٹی کے کارکنان کا دوسری پارٹی کے کارکن کی ماں کے ساتھ مارپیٹ کرنے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔  شرما نے کہا کہ خواتین کی سکیورٹی کیلئے کمیشن فکرمند ہے اور اس طرح کا کام ناقابل قبول ہے۔انہوں نے کہا کہ مغربی بنگال اسمبلی انتخابات کو دیکھتے ہوئے اس معاملے میں کارروائی کئے جانے کی ضرورت ہے اور ایسی واقعات کو دہرائے جانیسے روکنے کی ضرورت ہے۔کمیشن نے کہا کہ الیکشن کمیشن کو اس معاملے میں فوری طورپر کارروائی کرنی چاہئے اور اس کی کارروائی رپو

تازہ ترین