مغل روڈ سے برف ہٹانے کاکام جاری | اگلے 2روز میں ٹریفک کی بحالی متوقع

راجوری//جموں و کشمیر کے مکینیکل انجینئرنگ ڈیپارٹمنٹ کے ذریعہ مغل روڈ پر برف باری ہٹانے کا کام پوری رفتار سے جاری ہے اور حکام کی جانب سے بدھ تک سڑک کی بحالی کی توقع کی جارہی ہے۔پیر گلی پہاڑی راستے کے ذریعہ پونچھ کے بفلیاز علاقے کو شوپیان کے ہیر پورہ سے ملانے والی مغل روڈ پیر کو شدید برف باری کے بعد بند ہوگئی جس کے بعد ہر طرح کی گاڑیاں نقل و حرکت معطل ہوکر رہ گئی ۔ اسسٹنٹ انجینئرطارق محمود نے کشمیرعظمیٰ کو بتایا کہ برف کاٹنے والی مشینیں بفلیاز سے 42 کلو میٹر کے فاصلے پرپہنچ گئی ہیں اور اب صرف 2 کلو میٹر کا رقبہ باقی ہے۔انہوںنے بتایا’’2 کلومیٹر حصہ صاف کرنے کے بعد ہم پیر گلی پہنچیں گے اور امید کرتے ہیں کہ اگلے دو دن تک اس باقی حصے کو صاف کردیں گے اور بدھ تک ٹریفک کے لئے سڑک کو کھول دیاجائے گا‘‘۔  

پونچھ میں دلدوز حادثہ | محکمہ بجلی کا ملازم ٹرانسفارمر پر لٹک کر لقمہ اجل

پونچھ//تحصیل منڈی کے فتح پور علاقے میں اس وقت کہرام مچ گیا جب محکمہ بجلی کاعارضی ملازم ٹرانسفارمر سے لٹک کر لقمہ اجل بن گیا۔سرور خان ولد شمس دین ساکن نونابانڈی پونچھ علاقے میں خراب بجلی ٹرانسفار مر کی مر مت کر رہا تھاجس دوران اچانک بجلی آئی اور مذکورہ ملازم کو کئی زوردار جھٹکے لگے جس کی وجہ سے وہ موقعہ پر ہی لقمہ اجل بن گیا۔جب مذکورہ ملازم کی نعش اس کے آبائی گھر نونابانڈی پہنچائی گئی تو وہاں کہرام مچ گیا۔ محکمہ بجلی نے ملازمین کی بار بار حادثوں کے دوران اموات پرافسوس کا اظہا کرتے ہوئے پی ڈی ڈی کیجول لیبر یونین کے صدر احمد نے کہاکہ محکمہ کی غفلت شعاری کی وجہ سے ایک قیمتی جان چلی گئی۔انہوں نے کہا کہ کہ وہ مرحوم کے لواحقین کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔ انہوں نے سرکار سے مطالبہ کیاکہ مرحوم کے لواحقین کو معاوضہ دیا جائے اور کسی گھر کے ایک فرد کو ملازمت بھی دی جائے تاکہ انہیں  مالی مشک

کوٹرنکہ کی بیشتر سڑکیں بد حالی کا شکار | تعمیر اتی ایجنسیوں کی لاپرواہی عام لوگوں کیلئے باعث تشویش

کوٹرنکہ //سب ڈویژن کی رابطہ سڑکیں بد حالی کا شکار ہوتی جارہی ہیں جبکہ تعمیراتی یجنسیوں کی لاپرواہی کی وجہ سے عام لوگوں کو شدید مشکلات درپیش ہیں ۔مقامی لوگوں نے محکمہ پی ڈبلیو ڈی اور پی ایم جی ایس وائی کیساتھ ساتھ دیگر ایجنسیوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ سب ڈویژن میں حالیہ کئی برسوں سے کئی سڑکیں زیر تعمیر ہیں لیکن ان کو مکمل کرکے عام لوگوں کو سہولیات فراہم نہیں کی جارہی ہیں ۔مکینوں نے بتایا کہ دراج تا سلٹھ 9کلو میٹر سڑک کی تعمیر 2011میں شروع کی گئی تھی لیکن ابھی تک سڑک کو مکمل کرنے میں کوئی دلچسپی ظاہر نہیں کی جارہی ہے ۔کنڈی تا موڑھ 14کلو میٹر سڑک اور سموٹ سے تر گائیں 5کلو میٹر سڑک کے پروجیکٹ بھی مکمل کرنے میں کوئی دلچسپی ظاہر نہیں کی جارہی ہے ۔لوگوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ تعمیر اتی ایجنسیوں کی جانب سے عوام کو بیوقوف بنایا جارہا ہے جبکہ غیر معیاری کام لوگوں و ٹرانسپورٹروں

کھٹوعہ سیکٹر میں گولہ باری

 جموں// پاکستان نے فائر بندی کی دوبارہ خلاف ورزی کر کے فوج کی اگلی چوکیوں اور کھٹوعہ سیکٹر میں کئی دیہات کو نشانہ بنایا۔ارنیا جموں کے آر ایس پورہ سیکٹر میں بین الاقوامی سرحد پر گزشتہ شب بھارتی حدود میں پاکستان کی جانب سے آنے والے ڈرون نظر آئے جس کے بعد وہاں تعینات فورسز نے گولیاں چلائیں اور ڈرون واپس چلے گئے۔ دفاعی حکام کے مطابق ہندپاک افواج کے مابین جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزیوںکا سلسلہ جاری ہے اور اتوار کو ایک مرتبہ پھر بین الاقوامی سرحد پر کھٹوعہ علاقے میںپاکستان اور بھارتی فوج کے مابین گولیوں کا تبادلہ ہوا۔پاکستانی فوج نے بھارتی افواج کی اگلی چوکیوں کو نشانہ بنایا نیز کئی دیہات پر بھی گولہ باری کی۔جبکہ بھارتی فوج نے پاکستانی گولہ باری کو بھر پور انداز میںجواب دیا ، تاہم کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیںہے ۔   

تازہ ترین