تازہ ترین

کورونا وائرس متاثرین میں66مسافروں سمیت532 کا اضافہ

سرینگر//جموں کشمیر میں ہفتہ کے روز کورونا وائرس متاثرین میں مزید532کا اضافہ ہوا جن میں 66مسافر بھی شامل ہیں۔اس طرح مرکز کے زیر انتظام علاقے میں کورونا متاثرین کی تعداد بڑھ کر 28ہزار سے زیادہ ہوگئی ہے۔ نیوز ایجنسی جی این ایس کے مطابق گذشتہ 24گھنٹوں کے دوران وادی کشمیر میں 424جبکہ جموں صوبے میں108کورونا کیس ظاہر ہوئے۔  اعداد و شمار کے مطابق سرینگر میں آج بھی سب سے زیادہ 110کیس سامنے آئے۔بارہمولہ میں 36،پلوامہ میں13،بڈگام میں40،اننت ناگ میں39،کولگام میں10،شوپیان میں11،کپوارہ میں39،بانڈی پورہ میں81،گاندر بل میں45،جموں میں64،راجوری میں2،کٹھوعہ میں10،اُدھمپور میں4،رام بن میں 1،سانبہ میں13،ڈوڈہ میں3،پونچھ میں5،ریاسی میں4اور کشتواڑ ضلع میں 1کورونا وائرس کا کیس سامنے آگیا۔  

جموں کشمیر میں الیکشن حد بندی عمل کی تکمیل کے بعد: وزیر اعظم مودی

سرینگر//وزیر اعظم نریندر مودی نے ہفتہ کو اعلان کیا کہ جموں کشمیر میں الیکشن حد بندی عمل کی تکمیل کے بعد منعقد کرائے جائیں گے۔ یوم آزادی کے موقع پر اپنی تقریر میں وزیر اعظم نے کہا ” جموں کشمیر اور لداخ کو دفعہ370سے آزادی حاصل کئے ایک سال کا عرصہ ہوگیا“ انہوں نے کہا”یہ ایک سال جموں کشمیر میں رہنے والے مہاجرین اورخواتین کیلئے کافی اہم تھا اور اس دوران ترقی کی نئی منازل کی طرف سفر کا آغاز ہوا“۔ انہوں نے جموں کشمیر میں ”بیک ٹو ولیج“ پروگرام کا بھی ذکر کیا اور اس کی تعریفیں کیں۔ وزیر اعظم مودی نے کہا”میںاس پروگرام میں شمولیت کیلئے پنچوں اور سرپنچوں کا دل کی گہرائیوں سے شکریہ ادا کرتا ہوں“۔  

سری نگر میں پہلی بار وزیر اعظم کے خطاب کو دیکھنے کیلئے بڑی سکرینوں کی تنصیب

سری نگر// جموں و کشمیر کے گرمائی دارالحکومت سری نگر میں ہفتے کے روز حساس مقامات پر پہلی بار بڑی سکرینز نصب کر کے ان پر وزیر اعظم نریندر مودی کے یوم آزادی خطاب کو ٹیلی کاسٹ کیا گیا۔ انتظامیہ نے سری نگر کے سول لائنز میں کچھ ایک جگہوں، بشمول جہانگیر چوک اور ٹی آر سی کراسنگ پر بڑی سکرینز اور لاﺅڈ اسپیکرز نصب کئے تھے جن پر وزیر اعظم کے خطاب کو راست ٹیلی کاسٹ کیا گیا۔ جہانگیر چوک اور ٹی آر سی کرانسگ پر یہ بڑی سکرینز فلائی اوورز کے نیچے نصب کی گئی تھیں اور ان پر وزیر اعظم کو قوم سے خطاب کرتے ہوئے دیکھنے والے اکثر لوگ سیکورٹی فورسز کے اہلکار تھے یا سرکاری ملازم۔  

جموں کشمیر معمولات کی بحالی اور ترقی کے نئے سفر پر گامزن ہے:ایل جی سنہا

سرینگر//جموں کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے ہفتہ کو کہا کہ مرکز کا زیر انتظام علاقہ گذشتہ برس کی تبدیلیوں کے باعث نئی معمولات کی بحالی اور ترقی کی راہ پر گامزن ہے۔انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ وہ جموں کشمیر میں تبدیلی لانے کیلئے امن اور ترقی کو زینہ بنائیں گے۔ ایل جی سنہا کا کہنا تھا کہ یہ انتہائی دکھ کی بات ہے کہ جموں کشمیر کا کلچر فرقہ واریت کی بھینٹ چڑھ گیا لیکن اب اُس کو ٹھیک کرکے ”ہم پھراُسے بیانیہ بنانا چاہتے ہیں۔ ہم اس بیانیہ میں ترقی، امن اور سماجی یگانگت کو شامل کرنا چاہتے ہیں تاکہ یہ جموں کشمیر کا ناقابل تنسیخ حصہ بن جائے“۔ ایل جی سنہا شیر کشمیر کرکٹ سٹیڈیم سرینگر میں یوم آزادی کی تقریب کے دوران اپنے خیالات کا اظہار کررہے تھے۔ انہوں نے سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپائی کی ڈاکٹرئن’انسانیت،جمہوریت اور کشمیریت ‘کا بھی حوالہ دیا۔ &nb

کچھ گھنٹوں تک معطل رہنے کے بعد کشمیر میں موبائل انٹر نیٹ سروس بحال

سرینگر//حکام نے ہفتہ کو وادی کشمیر میں پندرہ اگست تقریبات کے پیش نظر موبائل انٹر نیٹ سروسز کو معطل کردیا۔تاہم مذکورہ سروسز کو بعد میں بحال کیا گیا۔ موبائل انٹر نیٹ سروسز، جو ایک سال کے زیادہ عرصہ سے ٹو جی تک محدود ہیں، کو صبح چھ بجے معطل کرکے دوپہر کے آس پاس بحال کیا گیا۔ وادی کشمیر میں 15اگست کے روز انٹر نیٹ اور ایس ایم ایس سروسز کی معطلی کی روایت کئی برس سے جاری ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ ایسا حفاظتی صورتحال کے پیش نظر کیا جاتا ہے۔  

برفانی تودے کی زد میں آکر لاپتہ ہونے کے آٹھ ماہ بعد گلمرگ میں فوجی کی لاش بر آمد

سرینگر//شمالی کشمیر میں بارہمولہ ضلع کے گلمرگ علاقے میں سنیچر کو ایک فوجی اہلکار کی لاش اُس کے لاپتہ ہونے کے آٹھ ماہ بعد بر آمد کی گئی۔مذکورہ فوجی اہلکار آٹھ ماہ قبل ایک برفانی تودے کی زد میں آنے کے بعد لاپتہ ہوا تھا۔ نیوز ایجنسی جی این ایس کے مطابق 11گڈوال سے وابستہ راجندر سنگھ نامی فوجی اہلکار کی لاش کوگلمرگ میں روشنی فسٹ پوسٹ کے مقام سے بر آمد کیا گیا۔وہ اس سال8جنوری سے لاپتہ تھا ۔  فوجی اہلکار کی لاش کو قانونی لوازمات پوری کرنے کیلئے گلمرگ پولیس سٹیشن پہنچایا گیا ہے۔  

تودہ ہٹانے کے بعد سرینگر۔ جموں شاہراہ پر گاڑیوں کی نقل و حمل بحال

سرینگر//سرینگر۔جموں شاہراہ کوہفتہ کے دن ٹریفک کی نقل و حمل کیلئے کھول دیا گیا۔مذکورہ شاہراہ پر رام بن ضلع میں دو روز قبل ایک بھاری زمینی تودہ گر آیا تھا جس کے بعد اسے گاڑیوں کی آمد و رفت کیلئے بند کیا گیا تھا۔ تودہ گرآنے کی وجہ سے شاہراہ کے دونوں طرف ہزاروں گاڑیاں درماندہ ہوکر رہ گئی تھیں۔ان میں وہ گاڑیاں بھی شامل تھیں جن پر وادی کی طرف ضروری سامان لایا جارہا تھا ۔ محکمہ ٹریفک کے حکام کے مطابق شاہراہ پر گذشتہ شام دیر گئے تودے کو مکمل طور ہٹایا گیا جس کے بعد درنادہ گاڑیوں کو جانے کی اجازت دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ آج صبح شاہراہ پر سرینگر سے جموں کی طرف گاڑیوں کو چلنے کی اجازت دی گئی۔  

ملک میں پھرایک دن میں65 ہزارسے زائد کوروناوائرس کیس

نئی دہلی// ملک میں کورونا وبا کی شدت میں اضافہ کے درمیان اس جان لیوا وائرس سے شفایاب ہونے والوں کی تعداد میں بھی تیزی سے اضافہ ہورہا ہے اور گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 57 ہزار سے زیادہ متاثرین صحتمند ہوئے ، جبکہ اس عرصے کے دوران 65 ہزار سے زیادہ نئے افراد اس جان لیوا وبا کی زد میں آچکے ہیں۔ صحت و خاندانی بہبود کی مرکزی وزارت کی جانب سے ہفتہ کے روز جاری تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق ملک میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 57381افراد وبا سے شفایاب ہوئے ہیں جس سے صحت مند افراد کی مجموعی تعداد 1808937ہوگئی ہے۔ اسی عرصے کے دوران 65002افراد مہلک وبا کا شکار ہوچکے ہیں ، جس سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 2526193ہوگئی ہے۔ اسی مدت میں 996 افراد کی ہلاکت سے اموات کی مجموعی تعداد 49036ہوگئی۔ ملک میں ایکٹیو کیسز کی تعداد 6625 سے بڑھ کر 668220ہوگئی ہے۔  

ملک میں کورونا ویکسن بنانے کی بڑے پیمانے پر تیاری: وزیر اعظم مودی

نئی دہلی//وزیراعظم نریندرمودی نے ہفتے کو کہا کہ ملک میں اس وقت ایک نہیں دو نہیں تین تین کورونا ویکسن ٹیسٹ کے مختلف مراحل میں ہیں اور جیسے ہی سائنس دانوں سے ہری جھنڈی ملے گی،ملک میں ویکسن کو بڑے پیمانے پر تیار کیا جائے گا اور ملک اس کیلئے پوری تیاری ہے۔  مودی نے 74 ویں یوم آزادی کے موقع پر ملک کو لال قلعہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا،”جب کورونا کی بات آتی ہے ،ہر کسی کے دل میں سوال آتا ہے کہ ویکسن کب آئے گی۔میں ملک کے عوام کو ایک بات کہنا چاہوں گا کہ ہمارے ملک کے سائنس داں اور ان کی صلاحیت ایک ریشی منی کی طرح لیباریٹری میں جی جان سے جٹی ہے۔ملک کے سائنس داں بےحد محنت کررہے ہیں۔سخت مشقت کررہے ہیں۔“ انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں ایک نہیں،دو نہیں تین تین ویکسن ٹیسٹ الگ الگ مراحل میں ہیں۔جب سائنس داں ہری جھنڈی دیں گے،بڑے پیمانے پر ان کی تیاری ہوگی۔اس کے ساتھ ہی ویکسن ہر ریاست

تازہ ترین