تازہ ترین

جموں کشمیر میں کورونا وائرس کے540نئے کیس،تعداد27489

سرینگر//جموں کشمیر میں جمعہ کے روز کورونا وائرس کے نئے540کیس سامنے آئے۔ ان میں 60مسافر بھی شامل ہیں۔ آج وادی کشمیر میں 421جبکہ جموں صوبے میں119کورونا کیس ظاہر ہوئے۔  مرکز کے زیر انتظام علاقے میں کورونا متاثرین کی مجموعی تعداد27489 تک پہنچ گئی ہے۔  اعداد و شمارکے مطابق آج ایک بار پھر سرینگر میں سب سے زیادہ یعنی108کورونا کیس سامنے آئے۔ضلع بارہمولہ میں 47،پلوامہ میں31،کولگام میں11،شوپیان میں8،اننت ناگ میں29،بڈگام میں35،کپوارہ میں65،بانڈی پورہ میں50،گاندربل میں29،جموں میں41،رام بن میں3 ،کٹھوعہ میں4،اُدھمپور میں5،سانبہ میں4،ڈوڈہ میں3،پونچھ میں4 اورریاسی میں 8 کورونا کے کیس سامنے آئے۔  

اونتی پورہ میں جنگجوﺅں کے دو معاون گرفتار: پولیس

سرینگر//پولیس نے جمعہ کو دعویٰ کیا کہ انہوں نے جیش محمد سے وابستہ جنگجوﺅں کے دو معاونوں کو گرفتار کرکے اُن کے قبضے سے بارودی مواد بر آمد کیا ہے۔ پولیس ترجمان کے مطابق یہ گرفتاریاں پولیس اور فوج کی ایک مشترکہ کارروائی کے دوران جنوبی کشمیر کے اونتی پورہ میں عمل میں لائی گئیں۔ پولیس نے گرفتار شدگان کی شناخت ریاض احمد بٹ ساکن امیر آباد ترال اور محمد عمر تانترے ساکن آری پل ترال کے طور کی۔ پولیس کے مطابق دونوں جیش کے جنگجوﺅں کو پناہ دینے اور اُنہیں مختلف قسم کی مدد فراہم کرنے میں ملوث رہے ہیں۔  

پٹن کے گاﺅں میں سیکورٹی فورسز کا تلاشی آپریشن

سرینگر//سیکورٹی فورسز نے جمعہ کو ضلع بارہمولہ میں پٹن کے گوشہ بگ گاﺅں کو محاصرے میں لیکر تلاشی آپریشن شروع کیا۔ نیوز ایجنسی کے این او کے مطابق فوج کی29آر آر،ایس او جی اور سی آر پی ایف نے گوشہ بگ میں جنگجوﺅں کی موجودگی کی مصدقہ اطلاع کے بعد گھر گھر تلاشی آپریشن شروع کیا۔ فورسز نے علاقے کی طرف جانے والا ہر رستہ بند کرلیا ہے اور آخری اطلاعات ملنے تک تلاشی آپریشن جاری تھا۔  

شمالی کشمیر کی اُوڑی میں 3پستول اور15گرینیڈ بر آمد

سرینگر//پولیس اور فوج نے جمعہ کو شمالی کشمیر میں اُوڑی علاقے کے بونیار میں تین پستول،15گرینیڈ وغیرہ بر آمدکئے۔ نیوز ایجنسی جی این ایس کے مطابق فورسز نے جنگجوﺅں کی موجودگی کی ایک مصدقہ اطلاع کے بعد بونیار میں آپریشن شروع کیا۔ آپریشن کے دوران پولیس اور فورسز کی مشترکہ ٹیم نے 3 پستول،73گولیاں،2ڈیٹو نیٹر ،15گرینیڈ اور کچھ پاکستانی کرنسی بر آمدکی۔ یہ ساری چیزیں لچھی پورہ علاقے میں ایک نالے سے بر آمد کی گئیں۔  

ملک میں 926 پولیس اہلکاروں کوتمغے ، جموں کشمیر پولیس کو81بہادری کے میڈل

نئی دہلی// یوم آزادی کے موقع پر ملک بھر میں 926 پولیس اہلکاروں کو پولیس میڈل سے نوازا گیا ہے، جن میں سے 215 پولیس اہلکاروں کو بہادری کا میڈل، 80 اہلکاروں کوامتیازی کاموں کے لیے صدر جمہوریہ کا تمغہ اور 631 اہلکاروں کو خصوصی خدمات کے لیے صدرجمہوریہ کے تمغے کے لیے منتخب کیا گیا ہے۔ پولس اہلکاروں کے لیے میڈل کا اعلان جمعہ کو وزارت داخلہ نے کیا ۔ جموں وکشمیر پولس کو سب سے زیادہ 81 بہادری کے تمغے ملے ہیں، جبکہ سینٹرل ریزرو پولیس فورس کو 55 اور اترپردیش پولیس کو 23 ، دہلی پولیس کو 16 اور مہاراشٹر پولیس کو14 میڈل ملے ہیں۔ جھارکھنڈ پولیس 12 تمغے، آسام پولیس کو پانچ، چھتیس گڑھ اور اروناچل پردیش کی پولیس کو تین، تلنگانہ کو دو اور بارڈر سیکیورٹی فورس کو بہادری کا ایک تمغہ ملا ہے۔  

وسطی کشمیر کے بڈگام میں فوجی اہلکار کی خود کشی

سری نگر// وسطی ضلع بڈگام کے رنگریٹ علاقے میں جمعہ کی صبح ایک فوجی اہلکار نے مبینہ طور پر خود کشی کر کے اپنا کام تمام کر دیا۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ اولڈ ایئر فیلڈ رنگریٹ میں ایک فوجی اہلکار نے اپنی ہی سروس رائفل سے اپنے آپ کو ہی نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں اس کی بر سر موقع ہی موت واقع ہوئی۔ انہوں نے مہلوک فوجی اہلکار کی شناخت لانس نائیک اوم پرکاش کے طور کی ہے۔  

توہین عدالت معاملہ میں پرشانت بھوشن قصوروار قرار ، 20 اگست کوسزا کا اعلان

نئی دہلی// سپریم کورٹ نے جمعہ کو چیف جسٹس شرد اروند بوبڈے اور چار سابق چیف جسٹس کے خلاف توہین آمیز ریمارکس معاملہ میں معروف وکیل پرشانت بھوشن کو قصور وار قرار دیا۔ جسٹس ارون مشرا ، جسٹس بی آر گوئی اور جسٹس کرشن مراری پر مشتمل ڈویڑن بنچ نے اپنا حکم سنایا کہ بھوشن کو توہین عدالت کا قصوروار قرار دیا جاتا ہے۔ بنچ کی جانب سے جسٹس گوئی نے ایک مختصر حکم سناتے ہوئے کہا ” بھوشن کو توہین عدالت کا مرتکب پایا گیا ہے۔ عدالت 20 اگست کو ان کی سزا سنائے گی“۔ یاد رہے کہ بنچ نے 5 اگست کو اپنا فیصلہ محفوظ کر رکھ لیا تھا۔ عدالت نے ٹوئٹر پر بھوشن کے دو توہین آمیز ریمارکس پر 9 جولائی کو توہین عدالت کا معاملہ دائر کیا تھا اور 22 جولائی کو انہیں نوٹس جاری کیا تھا۔ ٹوئٹر نے اس معاملہ سے اپنا دامن بچاتے ہوئے بھوشن کے قابل اعتراض ٹوئٹس کو ہٹادیا تھا اور عدالت سے معافی مانگ لی تھی۔  پ

کپوارہ میں ایل او سی پر گولہ باری، کسی جانی یا مالی نقصان کی اطلاع نہیں

سری نگر// شمالی کشمیر میں ضلع کپوارہ کے کیرن سیکٹر میں لائن آف کنٹرول پر گذشتہ شب ہندوستان اور پاکستان کی فوج کے درمیان گولہ باری کا تبادلہ ہوا تاہم کسی جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔ یاد رہے کہ کپوارہ کے ٹنگڈار سیکٹر میں ایل او سی پر 6 اگست کو طرفین کے درمیان گولہ باری کے نتیجے میں دو شہری ہلاک جبکہ چار زخمی ہوئے تھے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ کپوارہ کے کیرن سیکٹر میں ایل او سی گذشتہ شب پاکستانی فوج نے بھارت کی اگلی چوکیوں کو نشانہ بنا کر گولہ باری کی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی گولہ باری سے متصل دیہات میں خوف وہراس پھیل گیا کیونکہ کچھ گولے پنز گام علاقے میں بھی گر گئے۔ ذرائع نے بتایا کہ لوگ رات کو سونے کی تیاریاں کر ہی رہے تھے کہ گولہ باری شروع ہوئی اور لوگوں نے گھر بار چھوڑ کر محفوظ مقامات میں پناہ لی۔ انہوں نے کہا کہ تاہم کسی بھی جانب کسی جانی یا مالی نق

نوگام حملہ جیش نے کیا:آئی جی کشمیر

سرینگر//پولیس کے انسپکٹر جنرل برائے کشمیر، وجے کمار نے جمعہ کو جنگجو تنظیم جیش محمد کو سرینگر نوگام حملے میں ملوث قرار دیا۔اس حملے میں دو پولیس اہلکار ہلاک اور ایک زخمی ہوگیا۔ نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرتے ہوئے آئی جی کشمیر نے کہا کہ نوگام حملہ جیش سے وابستہ جنگجوﺅں نے کیا۔  آئی جی نے کہا” ملوث جنگجوﺅں کی شناخت کی گئی ہے“۔ نوگام میں جنگجوﺅں کا حملہ ایک ایسے وقت پر ہوا جب شہر سرینگر کے ساتھ ساتھ پوری وادی میں15اگست کے سلسلے میں سیکورٹی ہائی الرٹ پر ہے۔  

ملک میں کورونا وائرس کے 64553نئے کیس ، 1007 اموات

نئی دہلی// ملک میں کورونا انفیکشن کے تیزی سے بڑھتے ہوئے قہر کے درمیان گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 64 ہزار سے زائد نئے کیس سامنے آئے اور 1007 افراد کی موت ہوگئی ۔ وزارت برائے صحت اور خاندانی بہبود کی جانب سے جمعہ کے روز جاری اعداد و شمار کے مطابق ایک ہی دن میں کورونا وائرس کے 64553کیس سامنے آنے سے متاثرین کی تعداد2461191 ہوگئی ، وہیں اس دوران 1007 افراد کی موت ہونے سے اموات کی تعداد 48040ہوگئی ہے تاہم راحت کی بات یہ ہے کہ ایک ہی دن میں 55573افراد کے صحت یاب ہونے سے اس وبا سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 1751556پر پہنچ گئی۔  

سرینگر نوگام میں جنگجوﺅں کے حملے میں2پولیس اہلکار ہلاک، ایک زخمی

سرینگر//مشتبہ جنگجوﺅں نے جمعہ کی صبح سرینگر کے نوگام علاقے میں پولیس پارٹی پر حملہ کیا جس کے نتیجے میں 2 اہلکار ہلاک جبکہ ایک زخمی ہوگیا۔ یہ واقعہ نوگام بائی پاس کے نزدیک پیش آیا جس میں پولیس ذرائع کے مطابق دو اہلکار ہلاک اور تیسرا زخمی ہوگیا۔ پولیس نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا کہ جنگجوﺅں نے نوگام بائی پاس کے قریب پولیس اہلکاروں پر اندھا دھند گولیاں چلائیں جس کے نتیجے میں تین اہلکار زخمی ہوگئے۔زخمیوں کو اسپتال پہنچایا گیا جہاں دو اہلکار زخموں کی تاب نہ لاکر دم توڑ بیٹھے جبکہ تیسرے کا علاج جاری ہے۔ ذرائع کے مطابق فورسز نے واقعہ کے فوراً بعد علاقے کو محاصرے میں لیکر تلاشی آپریشن شروع کیا ہے۔  

سرینگر نوگام میں پولیس پارٹی پر جنگجوﺅں کا حملہ، 2اہلکار زخمی

سرینگر//مشتبہ جنگجوﺅں نے جمعہ کی صبح سرینگر کے نوگام علاقے میں پولیس پارٹی پر حملہ کیا جس کے نتیجے میں دو اہلکار زخمی ہوگئے۔ یہ واقعہ نوگام بائی پاس کے نزدیک پیش آیا جس میں نیوز ایجنسی جی این ایس کے مطابق دو پولیس اہلکار زخمی ہوگئے۔ زخمی اہلکاروں کو اسپتال پہنچایا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق فورسز نے واقعہ کے فوراً بعد علاقے کو محاصرے میں لیکر تلاشی آپریشن شروع کیا ہے۔  

تازہ ترین