ایل جی نے ایک سال کیلئے اپنی تنخواہ کی 30 فیصد رقم کورونا سے متاثرہ افراد کیلئے وقف کی

جموں//لیفٹیننٹ گورنر گریش چندر مرمو نے اگلے ایک سال کیلئے اپنی تنخواہ میں سے 30 فیصد رقم کووڈ 19 سے متاثرہ افراد کی بہبودی و علاج و معالجے کیلئے وزیر اعظم ریلیف فنڈ میں وقف کرنے کا اعلان کیا ۔  لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ اس وبائی بیماری کا مقابلہ کرنے کیلئے مشترکہ کوششیں ضروری ہیں اور بحثیت ایک شہری یہ ہماری ذمہ داری بنتی ہے کہ ہم موجودہ صورتحال سے مقابلہ کرنے کیلئے اس عمل میں بھر پور اشتراک کریں ۔  

تین نئے مثبت معاملات سامنے آئے،35,243 اَفراد زیر نگرانی

جموں//حکومت نے پیر کے روز کہا کہ جموںوکشمیر میں آج کورونا وائر س کے 3 مثبت نئے معاملات سامنے آئے ہیں اور ان سبھی کا تعلق کشمیر صوبے سے ہے۔اس طرح جموں وکشمیر میں مثبت معاملات کی کل تعداد 109تک پہنچ گئی ہے۔  حکومت کی طرف سے جاری کئے گئے روزانہ میڈیا بلٹین میں بتایا گیا ہے کہ نوول کورونا وائرس کے 109 مثبت معاملات میں سے 103 سرگرم معاملات ہیں ،04 مریض صحتیاب ہوئے ہیں اور 02کی موت واقع ہوئی ہے۔ان معاملات میں سے 85معاملات کشمیر صوبے سے جبکہ 18معاملات جموں صوبے سے تعلق رکھتے ہیں۔ اب تک 35,243 ایسے اَفراد کو نگرانی میں رکھا گیا ہے جن کا سفری پس منظر ہے یا جو مشتبہ معاملات کے رابطے میں آئے ہیں ۔ ان میں سے 10,556 اَفراد کو ہوم کورنٹین میں رکھا گیا ہے جس میں سرکار کی طرف سے چلائے جارہے کورنٹین مراکز بھی شامل ہیں ۔ اس کے علاوہ615 اَفراد کو ہسپتال کورنٹین میں رکھا گیا ہے۔103کو ہسپتال آ

کورونا مخالف اقدام: وزیراعظم سمیت سبھی ارکان پارلیمنٹ کی تنخواہ میں 30فیصد کٹوتی کاآرڈنینس منظور

سرینگر//کورونا وائرس کی وجہ سے پیداحالات سے نمٹنے کےلئے وسائل جٹانے کے مقصد سے مرکزی حکومت نے وزیراعظم سمیت سبھی ارکان پارلیمنٹ کی تنخواہ میں ایک سال تک 30فیصد کی کمی کرنے کےلئے ایک آرڈنینس کو منظوری دی ہے۔ صدر ،نائب صدر اور سبھی گورنروں نے بھی اس آرڈنینس سے الگ خوداپنی مرضی سے ایک سال تک اپنی تنخواہوں میں سے 30فیصد کی کمی کرنے کا اعلان کیا ہے۔  اس کے علاوہ ارکان پارلیمنٹ کے فنڈ کو دو سال کےلئے ملتوی کرکے اس کی رقم کوبھی ملک کے کنسولیڈیٹیڈ فنڈ میں رکھنے کا فیصلہ کیاگیاہے۔ وزیراعظم نریندرمودی کی صدارت میںمنعقدہ مرکزی کابینہ کی میٹنگ میں اس آرڈنینس کوپیر کے روز منظوری دی گئی۔ اطلاعات و نشریات کے وزیر پرکاش جاوڈیکر نے میٹنگ کے بعد نامہ نگاروں کو بتایا کہ یہ آرڈنینس ارکان پارلیمنٹ کہ تنخواہ ،بھتے اور پنشن سے متعلق آرٹیکل 1954میں ترمیم کےلئے لایا گیا ہے اور ارکان پارلیم

سرینگر میں حادثاتی طور گولی چلنے کا واقعہ،پولیس اہلکار زخمی

 سرینگر//سرینگر کے ہائی سیکورٹی زون گپکار روڑ پر پیر کے روز ایک پولیس کانسٹیبل حادثاتی طور گولی چلنے کے واقعہ میں زخمی ہوگیا۔ پولیس ذرائع کے مطابق سپیشل سیکورٹی گروپ(ایس ایس جی) سے وابستہ کانسٹیبل اُس وقت زخمی ہوگیا جب ایس ایس جی لائینز کے نزدیک اُس کی سروس رائفل سے حادثاتی طور گولی چل گئی۔  زخمی اہلکار کو فوری طور اسپتال منتقل کیا گیا جہاں اُس کی حالت مستحکم بتائی جارہی ہے۔ ایس ایس جی مقامی پولیس کاایک خصوصی سیکورٹی گروپ ہے جو جموں کشمیر میں خاص شخصیات کو سیکورٹی فراہم کرتا ہے۔  

کورونا مخالف اقدام :کالیج پرنسپلوں کو رضاکار فراہم کرنے کی ہدایت

سرینگر// جموں کشمیر میں حکا م نے سبھی کالیج پرنسپلوں کو ہدایت دی ہے کہ وہ ایسے رضاکار گروہ فراہم کریں جو انتظامیہ کو کورونا وائرس سے پیدا صورتحال سے نمٹنے میں مدد کریں گے ۔ اعلیٰ تعلیم کے سیکریٹری طلعت پرویز کی طرف سے جاری آرڈر میں مرکز کے زیر انتظام علاقہ کے متعدد کالیج پرنسپلوں کو ہدات دی گئی ہے کہ وہ تدریسی و غیر تدریسی عملے پر مشتمل5سے15افراد کے ایسے رضاکارانہ گروپ فراہم کریں جو ”کیمونٹی لیڈر“ بن کرضلع انتظامیہ کو کورونا سے پیدا صورتحال سے نمٹنے میں تعاون فراہم کریں۔  آرڈر میں بتایا گیا ہے”ہر گروپ کا ایک ممبر لیڈر ہو گا،کالیج کے پرنسپل سبھی گروہوں کے معاونین کے طور کام کریں گے اور انتظامیہ کے ساتھ گروہ کے ممبران کی تربیت ، تعیناتی اور ضروری احکامات کیلئے کارڈی نیٹ کریں گے“۔  تعلیم کے سیکریٹری کے مطابق یہی گروپ ممبران لوگوں کو کورونا سے

کورونا :قرنطین کی مدت مکمل کرنے والے161افراد گھروں کیلئے راونہ

سرینگر//طالب علموں اور دیگر مسافروں پر مشتمل161افراد کو پیر کے روز وادی کے مختلف اضلاع میں قائم قرنطین مراکز پر مطلوبہ مدت مکمل کرنے کے بعد گھروں کیلئے روانہ کیا گیا۔  سرکاری ذرائع نے کہا کہ 24مارچ کو سرینگر ایئر پورٹ سے 161افراد کو قرنطین کیلئے لیجایا گیا تھا۔ یہ سبھی افراد باہری ریاستوں یا ممالک سے آئے تھے۔مذکورہ ذارئع نے مزید کہا کہ مذکورہ افراد کے نمونے حاصل کرکے اُن کے ٹیسٹ بھی کرائے گئے تھے جن کے رپورٹ منفی آئے ہیں۔ دریں اثناءمذکورہ افراد کو قرنطین کے دوران ہر ممکن سہولیات فراہم کرنے پر محکمہ صحت کے حکام،پولیس اور انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا گیا ہے۔قرنطین کی مدت مکمل کرنے والے ایک نوجوان کے والد نے کہا”ہم محکمہ صحت کے حکام اور پولیس کے مشکور ہیں جو اس عمل کے ساتھ پورے وقت تک جُڑے رہے “۔  

کورونا بحران: راجستھان میں قرنطین کی مدت مکمل کرنے والے کشمیریوں کی واپسی کا مطالبہ

سرینگر//وسطی ضلع بڈگام کے ماگام قصبہ میں پیر کے روز بیسیوں ایسے والدین نے خاموش احتجاج کیا جن کے بچوں نے جیسلمیر راجستھان میں اپنی قرنطین کی مدت مکمل کرلی ہے لیکن اُنہیں واپس نہیں لیا جارہا ہے۔  مذکورہ والدین نے کہا کہ اُن کے بچے تہران میں زیر تعلیم تھے اور موجودہ طبی ایمرجنسی کی وجہ سے اُنہیں15مارچ کو وہاں سے واپس لاکر راجستھان میں قرنطین کیلئے لیجایا گیا۔مذکورہ سبھی نوجوانوں نے اب قرنطین کی مدت مکمل کرلی ہے۔ احتجاجی والدین نے کہا”ہم انتظامیہ سے اپیل کرتے ہیں کہ ہمارے بچوں کو راجستھان سے گھر لایا جائے، اُنہوں نے اگر چہ قرنطین کی مدت مکمل کرلی ہے پھر بھی ہم اُنہیں ہوم قرنطین میں رکھیں گے مگر اُنہیں واپس لایا جانا چاہئے“۔ مذکورہ طالب علموں کی تعداد120ہے جنہیں15مارچ کو تہران سے لایا گیا تھا۔  

سامبہ میں قرنطین مرکز سے فرار ہونے والا شخص بازیاب، کیس درج

سرینگر//ضلع سامبہ میں کورونا وائرس کے ایک مشتبہ مریض کو قرنطین مرکز سے فرار ہونے کے بعد واپس لایا گیا جس کے بعد پولیس نے اُس کیخلاف کیس درج کرلیا۔ سرکاری ذرائع نے پیر کے روز بتایا کہ ہندوارہ کا رہنے والا ایک شخص گذشتہ روز سامبہ میں قائم ایک قرنطین مرکز سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔واقعہ کی اطلاع ملنے کے بعد پولیس کی ایک ٹیم نے مذکورہ شخص کو بازیاب کرکے واپس قرنطین مرکز پہنچایا۔ سرکاری ذرائع کا مزید کہنا تھا کہ مذکورہ شخص کو اچھی طرح معلو م ہے کہ کورونا وائرس کتنا مہلک ہے اور اس کے باوجود قرنطین مرکز سے جان بوجھ کر بھاگ گیا جس کی وجہ سے اُس نے باقی لوگوں کو خطرے میں مبتلاءکیا۔ انہوں نے کہا کہ مذکورہ شخص کیخلاف رام گڑھ پولیس سٹیشن میں کیس درج کرلیا گیا ہے۔  

تازہ ترین