تازہ ترین

جموں وکشمیر میں مزید 4354 افراد کی رپورٹ مثبت، پانچ مریض فوت

سری نگر//جموں وکشمیر میں جمعے کے روز 4354 افراد کی رپورٹ مثبت آئی جبکہ 5 مریض فوت ہوئے ہیں۔     سرکاری ترجمان نے بتایا کہ سری نگر ضلع میں جمعے کے روز سب سے زیادہ 916 افراد میں کورونا کی تشخیص پائی گئی، بارہ مولہ میں 290، بڈگام میں 229، پلوامہ میں 90، کپواڑہ میں 618، اننت ناگ میں 329، بانڈی پورہ میں 109، گاندربل میں 42، کولگام میں 262، شوپیاں میں 29افراد کی رپورٹ پازٹیو آئی۔     جموں ضلع میں 763، اُدھم پور میں 111، راجوری میں 43، ڈوڈہ میں 103، کٹھوعہ میں 68، سانبہ میں 104، کشتواڑ میں 30، پونچھ میں 91، رام بن میں 106اور ریاسی میں 21افراد کی رپورٹ مثبت آئی ہے۔     سرکاری ترجمان نے مزید بتایا کہ جمعے کے روز جموں وکشمیر میں پانچ مریض فوت ہوئے ہیں ۔     اُن کے مطابق ابتک یوٹی میں وائرس سے مرنے والوں کی تع

جہلم سے ایک لاش برآمد، دوسرے کی تلاش جاری

    سری نگر//ضلع بارہمولہ کے خواجہ باغ علاقے میں دریائے جہلم سے ریت نکالنے کے دوران ڈوبنے والے بانڈی پورہ کے دو بھائیوں میں سے ایک کی لاش نکالی گئی۔   انہوں نے بتایا کہ ہلال احمد ملہ اور نصیر احمد ملہ آج صبح ڈوب گئے اور جلد ہی ان کی تلاش کے لیے ریسکیو آپریشن شروع کیا گیا۔   انہوں نے بتایا کہ ہلال احمد ملہ ولد منظور احمد ملہ لارواگھاٹ بانڈی پورہ کی لاش برآمد کر لی گئی ہے۔   ایک پولیس افسر نے تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ ایس ڈی آر ایف کے اہلکاروں، پولیس اور مقامی لوگوں کی جانب سے دوسرے کا سراغ لگانے کی کوششیں جاری ہیں۔  

سری نگر سمیت وادی کے سبھی اضلاع میں ’ویک اینڈ‘ لاک ڈاون نافذ

سری نگر// گرمائی دارلحکومت سری نگر میں جمعے کو دو بجے کے بعد ’ویک اینڈ‘ لاک ڈاون کے نفاذ کے ساتھ ہی تمام بازار سنساں نظر آئے اور سڑکوں پر ٹریفک کا رش بھی تھم گیا۔   بتادیں کہ کورونا کیسز میں درج ہو رہے اضافے کے پیش نظر انتظامیہ نے ’ویک اینڈ‘ لاک ڈاون میں توسیع کر دی ہے۔   سٹیٹ ایگزیکٹیو کمیٹی کے حکمنامے کے مطابق اب یونین ٹریٹری میں جمعے کے روز دو بجے سے پیر کی صبح چھ بجے تک لاک ڈآن نافذ رہے گا۔    شہر میں حکام کی گاڑیاں دو بجے سے قبل ہی بازاروں کا گشت کر رہی تھیں جن میں بیٹھے اہلکار دو بجے کے بعد لاک ڈاون کے نفاز کا اعلان کر رہے تھے۔    دو بجنے کے ساتھ ہی تمام بازاروں میں دکانداروں نے اپنے اپنے دکان بند کرنے شروع کئے اور تین بجنے سے قبل ہی شہر کے تمام بازار بند ہوگئے تھے۔    کہیں کہی

بٹہ مالو سری نگر میں پولیس اہلکار پر فائرنگ

  سری نگر//نامعلوم ملی ٹینٹوں نے جمعہ کو ایس ڈی کالونی بٹہ مالو سری نگر میں ایک پولیس اہلکار پر فائرنگ کی لیکن وہ معجزانہ طور پر بچ گیا۔   ایک اعلیٰ پولیس افسر نے بتایا کہ تقریباً ساڑھے تین بجے عسکریت پسندوں نے پولیس کانسٹیبل پر فائرنگ کی۔     تاہم پولیس اہلکار بال بال بچ گیا۔ حملے کے فوراً بعد، پورے علاقے کو گھیرے میں لے لیا گیا اور تلاشی شروع کر دی گئی۔   انہوں نے کہا کہ مقدمہ درج کر کے مزید تفتیش شروع کر دی گئی ہے۔  

حکومت نے پلوامہ اور کپواڑہ کے رجسٹرار کا چارج تفویض کیا

  سری نگر//حکومت نے جمعہ کو ضلع پلوامہ اور کپواڑہ کے رجسٹرار کے عہدے کا چارج جموں و کشمیر ایڈمنسٹریٹیو سروسز کے دو افسران کو سونپا ہے۔   حکومت کی طرف سے جاری کردہ ایک حکم کے مطابق، ڈاکٹر فیاض احمد بانڈے ، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر، پلوامہ کو اگلے احکامات تک رجسٹرار ضلع پلوامہ سنبھالنے کے احکامات جاری کئے گئے ہیں۔   وہیں غلام نبی بھٹ، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر کپواڑہ، کو اگلے احکامات تک اپنے فرائض کے علاوہ رجسٹرارضلع کپواڑہ کے عہدے کا چارج سنبھالنے کے لیے کہا گیا ہے۔   واضح رہے "یہ احکامات متعلقہ اضلاع میں بطور کمشنر ان کی جوائننگ کی تاریخ سے نافذ العمل سمجھے جائیں گے"۔  

پلوامہ ٹرین حادثہ: زخمی ایس پی او بھی دم توڑ گیا

سری نگر// جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ کے کاکہ پورہ علاقے میں دو روز قبل ریلوے ٹریک کے نزدیک ایک شخص کو بچانے کی کوشش کے دوران زخمی ہونے والا گورنمنٹ ریلوے پولیس سے وابستہ ایک ایس پی او جمعے کے روز یہاں ایک ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لا کر دم توڑ گیا۔   بتادیں کہ پلوامہ کے کاکہ پورہ علاقے میں 26 جنوری کو شوکت احمد ڈار ساکن بی کے پورہ بڈگام نامی ایک شہری ٹرین کی زد میں آکر بر سرموقع ہی لقمہ اجل بن گیا تھا جبکہ وہاں ڈیوٹی پر تعینات ایک ایس پی او اس کو بچانے کی کوشش کے دوران زخمی ہوگیا تھا۔     زخمی ایس پی او کی شناخت شبیر احمد کے بطور ہوئی تھی جنہیں علاج ومعالجے کے لئے ہسپتال منتقل کیا گیا تھا۔     سرکاری ذرائع نے بتایا کہ زخمی شبیر احمد سپر سپیشلٹی ہسپتال شیرین باغ سری نگر میں زیر علاج تھا جہاں وہ جمعے کے روز زخموں کی تاب نہ لا کر د

بیورو کریسی عوامی سرکار کی متبادل نہیں: دویندر رانا

جموں// بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے سینئر لیڈر اور سابق رکن قانون ساز دویندر رانا نے جموں و کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کو ایک قابل سیاسی لیڈر اور تجربہ کا منتظم قرار دیتے ہوئے کہا کہ بیوروکریسی کسی بھی صورت میں عوامی سرکار کی متبادل نہیں ہو سکتی ہے۔   انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر کی بیوروکریسی میں قابل لوگ ہیں لیکن لوگوں کے مسائل کو ان کے چنے ہوئے نمائندے ہی حل کرسکتے ہیں۔   موصوف لیڈر نے ان باتوں کا اظہار جمعے کے روز یہاں میڈیا کے ساتھ بات کرنے کے دوران کیا۔   انہوں نے کہا: ’جموں و کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا صاحب ایک قابل سیاسی لیڈر ہیں اور ایک تجربہ کار منتظم بھی ہیں وہ یہاں کی انتظامیہ کو بہترین انداز میں چلا رہے ہیں لیکن پھر بھی بیوروکریسی عوامی سرکار کی متبادل نہیں ہے‘۔   ان کا کہنا تھا: ’جموں

دنیا میں کورونا سے مرنے والوں کی تعداد 56.37 لاکھ سے متجاوز

واشنگٹن//دنیا میں اب تک کورونا وائرس کی وجہ سے 56.37 لاکھ سے زیادہ لوگوں کی موت ہو ئی ہے اور اب تک 36.62 کروڑ سے زیادہ لوگ اس وبا سے متاثر ہو چکے ہیں۔ وہیں دنیا بھر میں اب تک 9.89 ارب سے زیادہ ویکسین کی خوراکیں دی جا چکی ہیں۔   امریکہ کی جان ہاپکنز یونیورسٹی کے کورونا وائرس ریسورس سینٹر کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق دنیا بھر میں کورونا سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 36 کروڑ 62 لاکھ 49 ہزار 339 ہو گئی ہے اور ہلاکتوں کی تعداد 56 لاکھ 37 ہزار 611 تک پہنچ گئی ہے۔   امریکہ کورونا انفیکشن کے سب سے زیادہ کیسز کے ساتھ دنیا میں سرفہرست ہے جہاں اب تک 7.34 کروڑ سے زائد لوگ اس وبا سے متاثر ہو چکے ہیں اور 878421 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔   اس وبا کے انفیکشن کے معاملے میں ہندوستان دوسرے نمبر پر ہے، جہاں جمعہ کی صبح تک گزشتہ 24 گھنٹوں میں کووڈ انفیکشن کے د

تجاوزات کو ہرگز برداشت نہیں کیا جائے گا:ایس ایم سی کمشنر

سری نگر//سری نگر میونسپل کارپوریشن (ایس ایم سی) نے ناجائز تجاوزات کے خلاف مہم جاری رکھتے ہوئے جمعے کے روز سری نگر کے کئی علاقوں میں سڑکوں اور فٹ پاتھوں پر ہونے والے ناجائز تجاوزات کو ہٹا دیا۔   اسی ایم سی کی ٹیم نے لالچوک، ہری سنگھ ہائی سٹریٹ، مہاراجہ بازار اور جہانگیر چوک میں کارروائیاں انجام دے کر کئی دکان تھڑوں جنہوں نے فٹ پاتھ بند کر دئے تھے کو ہٹایا اور جن ریڑھی بانوں نے سڑکوں پر ریڑے لگا دئے تھے ان کو بھی ہٹایا گیا۔   اس موقع پر ایس ایم سی کمشنر اطہر عامر خان جو خود اس کارروائی کی نگرانی کر رہے تھے، نے میڈیا کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ سڑکوں اور فٹ پاتھوں پر جو ناجائز تجاوزات کئے گئے ہیں ان کے خلاف ہماری مہم مسلسل جاری ہے۔   انہوں نے کہا کہ ہماری ٹیم روزانہ بنیادوں پر یہ مہم چلاتی ہے تاکہ لوگوں کو چلنے پھرنے میں دقتوں کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

کشمیری روایتی کانی شال کی صنعت زوال پذیر کیوں؟

سری نگر// وادی کشمیر کی جو روایتی دستکاری کی چیزیں دنیا کے گوشہ وکنار میں اپنی ایک منفرد شناخت و مقام رکھتی ہیں ان میں کانی شال سر فہرست ہے لیکن اس اہم اور تاریخی دستکاری کی صنعت گذشتہ کئی برسوں سے روبہ انحطاط ہے۔   اس صنعت سے جڑے دستکاروں کا کہنا ہے کہ بیوپاریوں کی طرف سے انتہائی کم مزدوری ملنے کی وجہ سے نہ صرف یہ کہ اس صنعت سے وابستہ دستکار کنارہ کشی کرکے روزی روٹی کے لئے دوسرے پیشے اختیار کر رہے ہیں بلکہ کوئی بھی نیا شخص اس پیشے کو اپنے روزگار کا ذریعہ نہیں بنا رہا ہے۔   انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ مستقبل میں دستکاری کی یہ صنعت ختم ہی ہوسکتی ہے جس سے ہماری شاندار ثقافت کی عمارت کا ستون زمین بوس ہوسکتا ہے۔   کانی شال کی صنعت سے گذشتہ 18 برسوں سے وابستہ دستکار فیصل احمد لون نے یو این آئی کے ساتھ گفتگو میں کہا کہ مہنگائی کے اس دور میں اس پیشے سے جڑ

بانڈی پورہ کے 2 بھائی جہلم میں غرقاب

  بارہمولہ//ضلع بارہمولہ کے خواجہ باغ علاقے میں بانڈی پورہ کے دو بھائی دریائے جہلم سے ریت نکالتے ہوئے غرقاب ہو گئے۔   سرکاری زرائع کے مطابق ہلال احمد ملہ اور نصیر احمد ملہ آج صبح اس وقت جہلم میں ڈوب گئے ، جب وہ ضلع ہارہمولہ کے خواجہ باگ علاقے میں جہلم سے ریت نکال رہے تھے ۔   اُنہوں نے بتایا کہ دونوں بھائیوں کے غرقاب ہونے کی خبر پہنچتے ہی اُن کی تلاش کے لیے ریسکیو آپریشن شروع کیا گیا۔   ایک پولیس افسر نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ ان کا سراغ لگانے کی کوششیں جاری ہیں۔   

گوگل، ایئرٹیل کے ساتھ شراکت داری میں ایک ارب ڈالر کی کرے گا سرمایہ کاری

نئی دہلی//معروف ٹیک کمپنی گوگل ٹیلی کام خدمات فراہم کرنے والی سرکردہ کمپنی بھارتی ایئرٹیل کے ساتھ شراکت داری کرکے اپنے انڈیا ڈیجیٹائزیشن فنڈ کے طور پرایک ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کرے گی۔   اس سلسلے میں دونوں کمپنیوں نے شراکت داری کی ہے جس کے تحت گوگل ایئرٹیل میں 1.28 فیصد حصص کے لیے 70 کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کرے گی اور 30 کروڑ ڈالر کا کئی سال کاروباری معاہدہ کیا گیا ہے۔   ایئرٹیل کے بورڈ نے جمعہ کو گوگل کو 734 روپے فی شیئر کے حساب سے 7.1 کروڑ ترجیحی حصص جاری کرنے کی منظوری دی۔ مجموعی طور پر گوگل کو 5224.3 کروڑ روپے کے شیئرز جاری کیے جائیں گے۔   بی ایس ای میں آج ایئرٹیل کا شیئر 1.24 فیصد کے اضافے کے ساتھ 716 روپے فی شیئر پر کاروبار کر رہا ہے۔   ایئرٹیل نے یہاں ایک بیان میں کہا کہ اس شراکت داری کے تحت، گوگل ایک ارب ڈالر کی سرمایہ کاری

کورونا لاک ڈائون آج 2بجے سے

    سرینگر// جموں کشمیر میں آج2بجے سے ایک بار پھرہفتہ وار لاک ڈائون کا نفاذ عمل میں لایا جائے گا،جو64گھنٹوں تک جاری رہنے کے بعد پیر صبح6 بجے ختم ہوگا۔   ادھر 26جنوری کی تقریبات ی وجہ سے تقریباً دو دن تک روز مرہ سرگرمیاں متاثر رہنے کے بعد جمعرات کو روز مرہ معمولات بحال ہوئیں۔   یوم جمہوریہ تقریبات کے پیش نظر غیر معمولی سیکورٹی بندو بست کی وجہ سے جموں میں سیکورٹی چوکس رکھی گئی جبکہ وادی میں 25جنوری سہ پہر سے ہی بازار بند اور ٹرانسپورٹ معطل رہا۔   جمعرات کو ہر طرح کا کاروباری اور دیگر سرگرمیاں بحال ہوئیں  تاہم آج جمعہ کو ہفتہ وار لاک ڈائون کا ایک بار پھرنفاذ عمل میں لایا جارہا ہے۔    کورونا کیسوں میں اضافے کے پیش نظر جنوری کے وسط میں ہفتہ وار لاک ڈائون شروع کیا گیا ہے،جس کا نفاذ مسلسل تیسرے ہفتے بھی جاری رہے

جموں و کشمیر میں راتوں کے دوران شدید سردی، دن میں دھوپ

  سری نگر//جموں و کشمیر اور لداخ میں رات کا درجہ حرارت نقطہ انجماد سے کئی درجے نیچے رہا۔     محکمہ موسمیات نے مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں اگلے 72گھنٹوں کے دوران موسم خشک رہنے کی پیش گوئی کی ہے۔   آئی ایم ڈی کے ایک اہلکار نے کہا، "موسم 31 جنوری تک خشک رہنے کی توقع ہے اور رات کے صاف آسمان کی وجہ سے، کم از کم درجہ حرارت میں مزید کمی کا امکان ہے"۔   اسی دوران سری نگر میں منفی 3.6، پہلگام میں منفی 11.8اور گلمرگ میں منفی 10.4ڈگری سیلسیس کم سے کم درجہ حرارت تھا۔   لداخ کے علاقے میں دراس ٹاؤن میں منفی 28.2تھا، جو اس سیزن میں سب سے کم ریکارڈ کیا گیا ہے۔ رات کا سب سے کم درجہ حرارت لیہہ میں منفی 17.2اور کارگل میں منفی 21.4تھا۔   جموں شہر میں کم سے کم درجہ حرارت 4.7، کٹرہ 4.5، بٹوت 0.5، بانہال 2.8اور

اب کورونا کے سب سے زیادہ کیسز اومیکرون سے وابستہ، ڈیلٹا کا پھیلاؤ بھی جاری: وزارت صحت

  نئی دہلی// مرکزی حکومت نے کہا ہے کہ ملک میں رپورٹ ہو رہے کورونا وائرس کے انفیکشن کے زیادہ تر معاملات اب اومیکرون ویرینٹ سے وابستہ ہیں اور اب یہ سب سے بڑا ویرینٹ بن چکا ہے۔   این ڈی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق وزارت صحت میں جوائنٹ سکریٹری لو اگروال نے بتایا کہ گزشتہ ایک مہینے کے دوران ملک میں رپورٹ ہونے والے کورونا کے بیشتر کیسز اومیکرون سے وابستہ ہیں۔ تاہم حکومت نے اس بات کو بھی تسلیم کیا کہ ڈیلٹا ویرینٹ اب بھی بڑے پیمانے پر موجود ہے اور اس کے پھیلنے کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔   وزارت صحت کے جوائنٹ سکریٹری لو اگروال نے کہا، ’’دنیا میں اس وقت کورونا کے 6.5 کروڑ کیسز فعال ہیں۔ امریکہ، برطانیہ، یونان اور جنوبی افریقہ میں کورونا کیسز کم ہو رہے ہیں۔ ہندوستان میں تقریباً 22 لاکھ فعال کیسز ہیں۔   صرف 11 ریاستیں ایسی ہیں جہاں کورونا کے فع

تازہ ترین