تازہ ترین

جموں کشمیرمیں بجلی کی پیداوار گھٹ کر408میگاواٹ

سرینگر//وادی میں مسلسل خشک سالی کی وجہ سے دریائوں میں پانی کی سطح کم ہونے سے پن بجلی کی پیداوارمیں زبردست کمی ہوئی ہے اور یہ صرف408میگاواٹ ہونے کی وجہ سے مرکزی زیرانتظام علاقہ جموں کشمیر کوبجلی کی طلب کو پورا کرنے کیلئے باہر سے برقی رودرآمدکرنی پڑتی ہے ۔کشمیرعظمیٰ کے پاس اعدادوشمار کے مطابق 20نومبردن کے دوبجے تک جموں کشمیرباہر کی کمپنیوں سے 81فیصد یعنی 1726 میگاواٹ بجلی درآمد کرتا تھا۔ سرکاری اعدادوشمار کے مطابق جموں کشمیرمیں بجلی کی مانگ2134میگاواٹ ہے جس میں کشمیر میں 1430 میگاواٹ اورجموں خطے میں704میگاواٹ شامل ہیں ۔تاہم سرکاری اعداوشمار کے مطابق جموں کشمیرکے ملکیتی اورنیشنل ہائیڈروالیکٹرک پاور کارپوریشن کے بجلی گھروں سے صرف 408 میگاواٹ بجلی اس وقت پیداہوتی ہے۔ اعدادوشمار کے مطابق اوڑی ۔اول پروجیکٹ صرف 83میگاواٹ بجلی پیداکررہا ہے جبکہ اوڑی ۔دوم بھی83میگاواٹ بجلی ہی پیدا کرتا ہے۔اعدا

کورونا وائرس|4ماہ بعد کورونا اموات 2تک سمٹ گئیں

 سرینگر //پچھلے 4ماہ میں پہلی مرتبہ کورونا وائرس سے روزانہ مرنے والوں کی تعداد سمٹ کر 2تک آگئی ہے۔ پچھلے 24گھنٹوں کے دوران جموں و کشمیرمیں کورونا وائرس سے2افراد فوت ہوگئے۔ اس طرح متوفین کی مجموعی تعداد 1624 تک پہنچ گئی۔ ان میں551جموں جبکہ 1073کشمیر میں فوت ہوئے ہیں۔ پچھلے 24گھنٹوں کے دوران 26 ہزار 692 تشخیصی ٹیسٹ کئے گئے جن میں 608کی رپورٹیں مثبت آئیں اور اسطرح متاثرین کی مجموعی تعداد1لاکھ 5ہزار984ہوگئی ہے جن میں 42113جموں جبکہ 63ہزار 871کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں۔ نئے 608معاملات میں 279کشمیر جبکہ 311جموں صوبے سے سامنے آئے ہیں۔ کشمیر کے 279معاملات میں 124سرینگر، 40بارہمولہ، 47بڈگام، 21پلوامہ، 16کپوارہ، 12اننت ناگ، 16بانڈی پورہ، 16گاندربل، 1کولگام اور 4شوپیان سے تعلق رکھتے ہیں۔ جموں صوبے کے 311متاثرین میں115ضلع جموں، 8 راجوری،68ادھمپور، 28ڈوڈہ، 14کٹھوعہ، 3پونچھ، 13سانبہ، 35کشتواڑ،

ڈاکٹرفاروق عبداللہ کاچیف الیکشن کمشنر کومکتوب

سرینگر//عوامی اتحاد برائے گپکار اعلامیہ نے ہفتہ کے روز کہا کہ سیکورٹی کو جمہوری عمل میں مداخلت کرنے کے لئے کسی آلے یا بہانے کے طور پر استعمال نہیں کیا جاسکتا ہے۔چیف الیکشن کمشنر کے کے شرما کو لکھے گئے خط میں ،عوامی اتحاد برائے گپکار اعلامیہ کے صدر ڈاکٹر فاروق عبد اللہ نے کہا کہ ایک عجیب اور انوکھی صورتحال منظرعام پر آگئی ہے جس کے تحت عوامی اتحاد برائے گپکار اعلامیہ کے نامزد امیدواروں کو سیکورٹی کے نام پر فوری طور پر ’’محفوظ مقامات‘‘پر منتقل کردیا جاتا ہے اور انہیںان’’محفوظ مقامات‘‘ تک محدودرکھاجاتا ہے۔ عوامی اتحاد برائے گپکار اعلامیہ کے ذریعہ بھیجے گئے خط میں لکھا گیا ہے،’’انہیں نقل و حرکت کرنے کی اجازت نہیں ہے ، وہ اُن لوگوں سے مکمل طور پر رابطے سے باہر ہیں جن سے وہ ووٹ مانگتے ‘‘۔ڈاکٹر فاروق عبداللہ کی جانب

’’جموں کشمیرکودودوہاتھوں لوٹاجارہا ہے‘‘

پلوامہ //پیپلزڈیموکریٹک پارٹی کی صدر اور سابق وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی نے الزام لگایا ہے کہ مرکزطاقت کے بل پر جموں کشمیر کے لوگوں سے انتقام لے رہا ہے اور جموں کشمیرکاآئین اور پرچم چھیننے کے بعد دوسری چیزیں بھی اسی طرح چھینی جارہی ہیں ۔ا س دوران پولیس نے پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی کو نالہ رنبہ آرہ کا دورہ کرنے سے روک دیا،جس پر محبوبہ مفتی نے شدیدغصے کااظہار کیا۔محبوبہ مفتی نے کہا ،’’جس طرح کہیںڈاکوآکر لوٹ مچاتے ہیں اُسی طرح جموں کشمیر کوبھی دودوہاتھوں لوٹاجارہاہے ‘‘۔انہوں نے کہا کہ5اگست2019کے بعد یہاں کے لوگوں کو باہر جانے نہیں دیا جارہا ہے ،سب کو قیدکیاگیا ہے۔محبوبہ نے کہا کہ یہاں کے مقامی لوگوں کو ندی نالوں سے ریت باجری نکالنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے جبکہ غیرمقامی لوگوں کو اس کے ٹھیکے الاٹ کئے گئے ہیں جس کے نتیجے میں یہاں کامزدور طبقہ بے روزگار ہوکر فاقہ کشی کا

مدثرعلی کے گھر دوسرے روزبھی تعزیت پرسی کاسلسلہ جاری

سرینگر// گریٹر کشمیر کے سینئر ایڈیٹر اور جواں سال صحافی مدثر علی کے انتقال پر دوسرے روز پر اُن کی رہائش گاہ واقع نیو کالونی چرار شریف میں تعزیتی مجلس کا سلسلہ جاری رہا ،جس میں مختلف طبقہ ہائے فکر سے وابستہ لوگوں اور انجمنوں نے اہل خانہ کے ساتھ تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے مرحوم کے حق میں دعائے مغفرت کی۔ دوسرے روز بھی چرار شریف میں مدثر علی کے گھر میں ہر سو مایوسی دیکھنے کو ملی اور ہر ایک آنکھ اشکبار نظر آئی۔ پورے علاقے میں ماتم کی کفیت سنیچر کو بھی تھی اور علاقے میں ہر ایک فرد مدثر علی کی موت سے نڈھال نظر آرہا تھا۔ رشتہ داروں،ہمسایوں اور دوستوں کے علاوہ سیاسی، سماجی، مذہبی، ادبی اور صحافتی انجمنوں کے وفود و نمائندوں کی آواجاہی کا سلسلہ بھی دیکھنے کو ملا۔پی ڈی پی کے سینئر لیڈران کے ایک وفد نے چرار شریف جاکر’’ گریٹرکشمیر‘‘ کے مرحوم صحافی مدثر علی کے گھر جاکر اہلخا