تازہ ترین

کورونا وائرس سے دس لاکھ سے زائد ہلاکتیں انتہائی تکلیف دہ: گوٹریس

اقوام متحدہ//اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گوٹریس نے کورونا وائرس کی وبا سے دنیا بھر میں 10 سے زائد ہلاکتوں کو ایک’انتہائی تکلیف دہ سنگ میل‘ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ اعداد و شمار قلب و ذہن کو سن کردینے والاہے۔ امریکہ کی جان ہاپکنز یونیورسٹی کے سینٹر فار سائنس اینڈ انجینئرنگ (سی ایس ایس ای) کی جانب سے جاری تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق کورونا سے اب تک دنیا بھر میں 10 لاکھ 555 افراد ہلاک ہوچکے ہیں ، جبکہ 3کروڑ 32 لاکھ 73 ہزار 720 افراد اس جان لیوا وبا کی زد میں آچکے ہیں۔  گوٹریس نے اپنے ایک بیان میں کہا”ہماری دنیا انتہائی تکلیف دہ سنگ میل پر پہنچ چکی ہے۔ کوڈ۔19 وبانے 10 لاکھ افراد کو ہلاک کیا۔ یہ قلب و ذہن کو سن کردینے والا ہے۔ ہمیں کبھی بھی کسی شخص کی زندگی سے محروم نہیں ہونا چاہئے۔ وہ والدین ، شریک حیات ، بہن بھائی ، دوست اور ساتھی کارکن تھے۔ اس

دنیابھر میں کوروناسے3کروڑ35لاکھ متاثر | ہلاکتوں کی تعداد10لاکھ کے پار

واشنگٹن / ریو ڈی جنیرو / نئی دہلی//مہلک ترین اور جان لیوا عالمی وباکورونا وائرس (کووڈ-19) سے متاثرہ افراد کی تعداد تین کروڑ سے تجاوز کرچکی ہے ، جبکہ اس وبا کی زد میں آکر ہلاک ہونے والوں کی تعداد 10لاکھ سے زائد ہوچکی ہے ۔امریکہ کی جان ہاپکنز یونیورسٹی کے سائنس اور انجینئرنگ سینٹر (سی ایس ایس ای) کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق کورونا نے اب تک دنیا بھر میں33,311,251 افراد کو متاثر کیا ہے جبکہ ہلاک شدگان کی تعداد 1,002,452 ہوچکی ہے  کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے بعد سے امریکہ متاثرہ ممالک کی فہرست میں پہلے مقام پر ہے اور اس ملک میں اب تک جان لیوا وبا سے متاثرہ افراد کی تعداد 71.14 لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے اور اب تک 2.04 لاکھ سے زیادہ افراد اپنی زندگیوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔ہندوستان میں مرکزی وزارت صحت اور خاندانی بہبود کی جانب سے پیر کے روز جاری اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹو

وٹامن ڈی کی کمی جان لیوا ہو سکتی ہے

واشنگٹن//وٹامن ڈی کی کمی سے کووڈ 19 کی شدت سنگین یا جان لیوا ثابت ہوسکتی ہے ۔ یہ بات امریکہ میں ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ 40 سال سے زائد عمر کے ایسے مریض جن میں وٹامن ڈی کی سطح زیادہ ہوتی ہے ان میں کووڈ 19 سے موت کا خطرہ اس وٹامن کی کمی کے شکار افراد کے مقابلے میں 51.5 فیصد کم ہوتا ہے ۔ اس تحقیق کے نتائج طبی جریدے پلوس ون میں شائع ہوئے ۔بوسٹن یونیورسٹی اسکول آف میڈیسین کی تحقیق میں بتایا گیا کہ وٹامن ڈی کی جسم میں صحت مند سطح ہو تو کووڈ 19 کے مریضوں میں مختلف پیچیدگیوں بشمول سائٹوکائین اسٹروم (خون میں مدافعتی پروٹینز کا بہت زیادہ اخراج ہونا) کو کم کیا جاسکتا ہے ۔وٹامن ڈی سورج کی روشنی میں گھومنے سے جلد میں قدرتی طور پر بنتا ہے مگر مخصوص غذاؤں اور سپلیمنٹس کے ذریعے بھی حاصل کیا جاسکتا ہے ۔تحقیق کے نتائج گزشتہ چند ماہ کے دوران سامنے آنے والی تحقیقی رپورٹس کو

زائرین کعبہ اور حجر اسود کے قریب نہیں جائیں گے

مکہ//حرمین شریفین کی انتظامیہ نے کہا ہے کہ زائرین کو طواف اور عمرے کے دوران کعبہ اور حجر اسود کے قریب جانے کی اجازت نہیں ہو گی۔سبق ویب سائٹ کے مطابق انتظامیہ نے کہا ہے کہ 'طواف، کعبہ کے گرد نصب باڑ کے باہر ہوگا۔'’کورونا وائرس کی روک تھام اور زائرین کی حفاظت کے لیے حجر اسود کا بوسہ لینا یا کعبے کو چھونا منع ہے۔'’تمام زائرین کو سماجی فاصلے کے علاوہ طواف کے دوران زمین پر نشانات پر چلنے کی پابندی کروائی جائے گی۔'’طواف اور سعی کے دوران سماجی فاصلہ رکھنے کی پابندی کروانے کے لیے انتظامیہ نے اہلکار تعینات کیے ہیں۔'’تمام زائرین کے جسم کا درجہ حرارت لیا جائے گا، طبی ٹیم ہر وقت موجود رہے گی اور زائرین کی نگرانی پر مامور ہوگی۔''طواف اور سعی کو منظم کرنے کے علاوہ زائرین کی طرف سے وقت کی پابندی کے لیے ٹیم موجود رہے گی۔'دوسری طرف حرمین کی انتظام

تناؤ کم کرنے کی کوشش کریں گے : ٹرمپ

واشنگٹن//ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ نگورنو قاراباخ خطے میں آرمینیا اور آذربائیجان کے مابین موجودہ تناؤ کو کم کرنے کیلئے امریکہ کی جانب سے تمام کوششیں کی جائیں گی اور اس پر غور کیا جارہا ہے ۔ ٹرمپ نے صحافیوں کو بتایا‘‘تنازع پر ہماری نظر ہے۔ اس خطے کے بہت سارے ممالک کیساتھ ہمارے اچھے تعلقات ہیں۔ ہم اس پر غور کریں گے کہ ہم اس تشدد کو روکنے کیلئے کیا کر سکتے ہیں۔ ’’امریکی وزارت خارجہ نے ایک بیان جاری کیا ہے جس میں آرمینیا اور آذربائیجان سے فوری طور پر نگورنو قاراباخ خطہ میں جنگ بندی پر عمل درآمد کرنے کی اپیل کی گئی ہے اور کہا گیا ہے کہ اس تنازع اور حالات میں کسی تیسرے فریق کی شمولیت سے کوئی فائدہ نہیں ہوگا اور حالات اس سے بھی بدتر ہوسکتے ہیں ۔