تازہ ترین

دنیا میں جان لیوا کووڈ 19سے 46.91 لاکھ سے زائد ہلاکتیں

 واشنگٹن / ریو ڈی جنیرو / نئی دہلی // (یو این آئی) دنیا بھر میں کورونا وائرس (کووڈ 19) کی ہلاکت خیزی جاری ہے اور اس جان لیوا وبا سے اب تک دنیا میں 46.91 لاکھ سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں اور اس ہلاکت خیز وبا سے متاثر ہونے والے لوگوں کی کی تعداد 22.85 کروڑ سے تجاوز کرچکی ہے۔ اب تک دنیا میں 5.90 ارب افراد کو کورونا کی  ویکسین دی جا چکی ہے۔امریکہ کی جان ہاپکنز یونیورسٹی کے سینٹر فار سائنس اینڈ انجینئرنگ (سی ایس ایس ای ) کے جاری کردہ تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق دنیا کے 192 ممالک اور خطوں میں کورونا متاثرہ افراد کی تعداد بڑھ کر 22 کروڑ 85 لاکھ 40 ہزار 37 جبکہ 46 لاکھ 91 ہزار 543 لوگ اس  وبا کی وجہ سے اپنی جانیں گنوائی ہیں۔دنیا میں سب سے زیادہ اور بری طرح متاثر امریکہ میں کورونا وائرس کی زد میں آنے کا سلسلہ جاری ہے۔ یہاں متاثرین کی تعداد 4.20 کروڑ سے تجاوز کرچکی ہے اوراب

ڈبلیو ایچ او کے سربراہ طالبان قیادت سے ملنے کابل پہنچے

 کابل// (یو این آئی) عالمی صحت تنظیم (ڈبلیو ایچ او) کے سربراہ ڈاکٹر ٹریڈوس ادھانوم گھیبریسس  پیر کو افغانستان کی راجدھانی کابل پہنچے اور ان کی وزیراعظم ملا حسن اخوند، ان کے نائب وزیراعظم ملا برادر اور سرکاری افسران سمیت طالبان قیادت کے ساتھ میٹنگ ہونے کی امید ہے۔ٹولو نیوز کے مطابق ڈبلیو ایچ او کے سربراہ کے کابل میں افسران کے ساتھ افغان صحت کے شعبے میں عالمی بینک کی مدد میں کمی اور اسے پھر سے شروع کرنے کے امکانات پر بھی بات چیت ہونے کی امید ہے۔ٹولو نیوز نے اطلاعات و  ثقافت کی وزارت کے ثقافتی کمیشن کے رکن احمد اللہ واثق کے حوالے سے کہا کہ ڈاکٹر گھیبریسس  وزیراعظم ملا حسن اخوند، نائب وزیراعظم ملا برادر اور نگران کابینہ کے قائم مقام وزیر خارجہ سے بھی سے ملاقات کریں گے۔

برطانیہ اور فرانس کے وزرائے دفاع کے درمیان میٹنگ منسوخ

 لندن // (یو این آئی) برطانوی وزیر دفاع بین والیس اور فرانسیسی وزیر دفاع فلورنس پارلی کے درمیان ملاقات منسوخ کر دی گئی ہے۔یہ اقدام امریکہ ، آسٹریلیا اور برطانیہ نے فرانس کو پیچھے چھوڑتے ہوئے 66 بلین ڈالر مالیت کے دفاعی معاہدے کے اعلان کے بعد کیا ہے۔ برطانوی اخبار’دی گارجین‘ نے اتوار کو رپورٹ کیا کہ فرانکو برٹش کونسل کے شریک چیئرمین پیٹر ریکٹس نے اتوار کو اخبار کو بتایا کہ اجلاس کو آگے کی تاریخ تک ملتوی کر دیا گیا ہے۔ اس کے ہی ساتھ دونوں رہنماؤں کے درمیان لندن میں ہونے والی دوطرفہ ملاقات بھی منسوخ کر دی گئی ہے۔قابل ذکر ہے کہ ایک بے مثال اقدام میں فرانسیسی صدر امانوئل میکرون نے گذشتہ ہفتے کینبرا اور واشنگٹن کے اپنے فرانسیسی سفیروں کو واپس بلا لیا۔ انہوں نے یہ قدم آسٹریلیا کے  ذریعہ  فرانس کے بجائے برطانیہ اور امریکہ کے ساتھ 66 بلین امریکی ڈالر کا دفاعی معا