دنیا میں کورونا متاثرین کی تعداد1کروڑ 2لاکھ | اب تک ساڑھے 5لاکھ لوگ زندگی کی جنگ ہار گئے

بیجنگ // عالمی وبائی کورونا وائرس (کووڈ 19) کے پھیلاؤ میں اضافہ ہوتا جارہا ہے اور اس بیماری سے متاثرہ افراد کی تعداد دنیا بھر میں 1.02 کروڑ ہوگئی ہے اور تعداد اموات کی تعداد بھی پانچ سے زیادہ ہوگئی ہے ۔امریکہ کی جان ہاپکنز یونیورسٹی کے سینٹر فار سائنس اینڈ انجینئرنگ (سی ایس ایس ای) کے جاری کردہ تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق، دنیا بھر میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 10275599 تک جا پہنچی ہے جبکہ 504830 افراد اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔کووڈ ۔19 کے معاملے میں، امریکہ دنیا بھر میں پہلے ، برازیل دوسرے اور روس تیسرے نمبر پر ہے ۔ دوسری طرف اس وبا کی وجہ سے تعداد اموات کے لحاظ سے ، امریکہ پہلے ، برازیل دوسرے اور برطانیہ تیسرے نمبر پر ہے ۔ہندوستان میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران، کورونا انفیکشن کے 18522 نئے کیس رپورٹ ہوئے ہیں اور اب متاثرین کی کل تعداد 566840 ہوگئی ہے ۔ اسی مدت کے دوران

کورونا سے نجات تک | خواتین حاملہ ہونے سے گریز کریں: مصر

قاہرہ //نئے کرونا وائرس کووڈ 19سے جب تک نجات نہیں مل جاتی خواتین حامہ ہونے سے گریز کریں۔یہ مشورہ مصر کی وزارت صحت نے دیا ہے ۔وزارت صحت کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کی وبا کے دوران خواتین کا حمل سے گریز کرنا اس لیے ضروری ہے کہ نئی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ وائرس سے متاثرہ ماحول میں خون کے جمنے کا متعلقہ عمل بیضہ دانی اور بچے کے غذائی نظام دونوں کو متاثر کرسکتا ہے ۔ یہ اطلاع عرب نیوز نے دی ہے ۔وزارت صحت کے مطابق حمل خواتین میں کمزوری اور ان کے قوت نظام کو کمزور کرنے کی وجہ بن سکتا ہے جس سے حاملہ خواتین بری طرح وائرس کا شکار بن سکتی ہیں۔وزارت صحت نے خواتین کو عارضی طور پر احتیاط اور مانع حمل اشیاء استعمال کرنے کی بھی ہدایت کی ہے اور حمل کے دوران خواتین کو متحرک، پرسکون اور زیادہ سے زیادہ آرام کا مشورہ دیا گیا ہے ۔ ایکسرسائز کے لیے واک کو سب سے بہترین حل بتایا جاتا ہے لیکن وزارت نے

امریکہ ہانگ کانگ کو دفاعی آلات برآمد نہیں کرے گا

واشنگٹن //امریکہ نے ہانگ کانگ کو دفاعی آلات اور حساس ٹکنالوجی کی برآمد پر روک لگانے کا اعلان کیا ہے ۔امریکہ کے وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے منگل کو ایک بیان جاری کرکے یہ اعلان کیا۔ پومپیو نے اپنے بیان میں کہا ’’ہانگ کانگ کے سلسلے میں چین نیا قومی سلامتی قانون نافذ کرنے کی جانب بڑھ رہا ہے ۔ اس کے پیش نظر امریکہ آج چین کی طرح ہانگ کانگ کو بھی دفاعی آلات اور حساس ٹکنالوجی کی برآمد پر روک لگانے کا اعلان کرتا ہے ‘‘۔امریکی وزیر خارجہ نے کہا کہ چین کی کمیونسٹ پارٹی کے ہانگ کانگ کی آزادی ختم کرنے کے فیصلے نے ٹرمپ انتظامیہ کو ہانگ کانگ کے سلسلے میں اپنی پالیسی کا جائزہ لینے کے لئے پابند کیا ہے ۔امریکہ اپنی قومی سلامتی برقرار رکھنے کے لئے یہ فیصلہ لینے پر مجبور ہوگیا ہے ۔ دفاعی آلات اور حساس ٹکنالوجی کی برآمد کے سلسلے میں اب ہم ہانگ کانگ اور چین میں کوئی فرق نہیں کرسکتے ۔ ہ

تازہ ترین