تازہ ترین

امریکی فوجیوں کا انخلا، روس کو افغانستان میں خانہ جنگی کا خدشہ

ماسکو// روسی وزیرِ دفاع سرگئی شوئیگو کا کہنا ہے کہ امریکا کے انخلاء کے بعد افغانستان میں خانہ جنگی ہو گی جبکہ افغانستان کے پڑوسی ممالک اور بین الاقوامی تنظیمیں صورتحال پر توجہ دیں۔ یہ بات روس کے وزیرِ دفاع سرگئی شوئیگو نے بین الاقوامی سلامتی سے متعلق ماسکو میں ہونے والی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی ہے، ان  کا مزید کہنا تھاکہ اسلام آباد اور تہران کے بغیر افغان گروہوں کو متحد رکھنا ناممکن ہے۔انہوں نے کہا ہے کہ افغانستان کے پڑوسی ممالک اور بین الاقوامی تنظیمیں اس صورتِ حال پر توجہ دیں  جبکہ اس حوالے سے  شنگھائی تعاون تنظیم کی صلاحیتوں کو بروئے کار لانا چاہیئے۔وزیرِ دفاع کا مزید کہنا ہے کہ مشترکہ سلامتی معاہدہ تنظیم ضروری سیکیورٹی اقدامات کرے گی  اور سی ایس ٹی او کے رکن ممالک کی دفاعی صلاحیتوں کو بڑھایا جائے گا۔یاد رہے امریکی صدر جو بائیڈن نے افغانستان سے امریکی افواج

حج درخواستوں کی وصولی بند

جدہ //سعودی وزارت حج و عمرہ نے حج درخواستوں کی وصولی بند کردی ہے جبکہ خوش قسمت عازمین کے ناموں کا اعلان آج یعنی جمعہ کو ہوگا۔بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب حج درخواستوں کی وصولی کا پورٹل بند کردیا گیا تھا۔وزارت حج وعمرہ نے کہا ہے کہ ’پورٹل کے ذریعہ 5 لاکھ 58 ہزار افراد نے حج درخواستیں جمع کرائی ہیں‘۔وزارت نے واضح کیا ہے کہ ’ناموں کا اعلان قرعہ اندازی کے ذریعہ نہیں بلکہ اہلیت  کی بنیاد پر ہوگا‘۔

ایتھوپیاپر فضائی بمباری، 80افراد ہلاک

تیگرائے//یواین آئی//شورش زدہ ایتھوپیا میں ووٹوں کی گنتی کا عمل جاری ہے تاہم اس دوران ایک مصروف بازار میں فضائی بمباری کے نتیجے میں کم از کم 80 افراد ہلاک اور 43 زخمی ہوگئے ۔ ایتھوپیا کے علاقے تیگرائے میں انتخابی عمل کے دوران جھڑپوں کا سلسلہ جاری ہے ۔ ایک بڑے اور مصروف بازار پر فضائی بمباری بھی کی گئی تاہم یہ واضح نہیں ہوسکا بمباری کس نے کی۔اقوام متحدہ کے حکام کا کہنا ہے کہ فضائی بمباری میں 80 افراد ہلاک اور 43 زخمی ہوگئے ۔ ہلاک اور زخمی ہونے والوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔ زخمیوں میں سے کئی کی حالت نازک ہے ۔مقامی اسپتال کے انتظامیہ کا کہنا ہے کہ اب تک 30 لاشیں لائی گئی ہیں جب کہ جائے وقوعہ پر درجن سے زائد ایمبولینسیں ہلاک اور زخمی افراد کو اسپتال لانے کے لئے انتظامیہ جنگجو گروپ سے مذاکرات میں مصروف ہے ۔اقوام متحدہ کے حکام نے بتایا کہ دو گروہ کے درمیان جنگ جاری ہے اور حملے کی جگہ