تازہ ترین

امیر ممالک کے لالچ سے غریب ممالک ویکسین کے منتظر:عالمی ادارہ صحت

جینیوا// عالمی ادارہ صحت نے دولت مند ممالک کو کوڈ ویکسین اضافی جمع کرنے پر نہ صرف تنقید کا نشانہ بنایا ہے بلکہ غریب ممالک کی ویکسین تک رسائی میں اسے رکاوٹ بھی قرار دیا ہے۔ڈبلیو ایچ او کے ڈائریکٹر جنرل ٹیڈروس اڈھانوم  نے کہا کہ کچھ مالدار ممالک کے ویکسین مینوفیکچررز کے ساتھ براہ راست سودے کا مطلب یہ تھا کہ وہ غریب ممالک میں ویکسین کی تقسیم کم ہو۔اقوام متحدہ کی ہیلتھ ایجنسی کے سربراہ نے کہا کہ یہ رقم امریکہ ، یوروپی یونین اور جرمنی کی تازہ شراکت کے بعد غریب ترین ممالک کو ویکسین کی خوراک تقسیم کرنے کیلئے لیکن اگر انہیں کچھ نہیں مل رہا تو یہ بیکار ہیا۔ٹیڈروز نے دولت مند ممالک پر زور دیا کہ وہ دواساز کمپنیوں کے ساتھ اپنے معاہدوں کی جانچ شروع کریں کہ آیا اس سے غریب ممالک کو نقصان تو نہیں پہنچ رہا جو اپنی پہلی خوراک کا انتظار کرتے ہوئے اس پر انحصار کررہے ہیں۔  

میانمار میں مظاہرین پر فائرنگ، 3 ہلاک

رنگون// میانمار میں اقتدار پر قابض ملٹری قیادت کی فوجی بغاوت کے خلاف عوامی احتجاج کو طاقت سے کچلنے کی دھمکی کے بعد سے 3 مظاہرین گولیوں کا شکار بن کر ہلاک ہوچکے ہیں۔یکم فروری کو ملک کے اقتدار پر قابض ہوکر جمہوری حکومت کا تختہ الٹنے والی ملٹری قیادت نے فوجی بغاوت کے خلاف ملک بھر میں جاری مظاہروں کو ختم کرنے کی وارننگ دی تھی کہ بصورت دیگر طاقت کا استعمال کیا جائے گا۔ملٹری قیادت کے انتباہ کے باوجود ہزاروں مظاہرین سڑکوں پر نکل آئے اور اس دوران سیکیورٹی فورسز نے فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں 2 افراد ہلاک اور ایک خاتون شدید زخمی ہوگئی۔ زخمی خاتون نے گزشتہ شب اسپتال میں دم توڑ دیا۔نوجوان مظاہرین کی ہلاکت پر فوجی بغاوت کے خلاف جاری مظاہروں میں مزید شدت آگئی اور رنگون سے شروع ہونے والے مظاہرے ملک بھر میں پھیل گئے۔ادھر یورپی یونین نے عندیہ دیا ہے کہ وہ میانمار میں جمہوری حکومت کا تختہ الٹنے والی

مزید 2 جرنیلوں پر امریکی پابندی عائد

رنگون//میانمار میں فوجی بغاوت کے خلاف جاری عوامی احتجاج مزید زور پکڑنے لگا۔ امریکا نے میانمار کے مزید 2 جرنیلوں پر پابندی عائد کردی۔ امریکا نے لیفٹیننٹ جنرل مو مینٹ تون اور جنرل مونگ مونگ کیوا پر دو شہریوں کو احتجاجی کے دوران ہلاک کرنے پر پابندی عائد کرنے کا اعلان کیا۔امریکی وزیرخارجہ انتھونی بلنکن کا کہنا ہے کہ عوام کی رائے کو دبانے والے اور ان پر تشدد کرنے والوں کے خلاف مزید سخت اقدامات بھی کیے جاسکتے ہیں۔  

غلاف کعبہ کی تیاری میں 200 کاری گرمصروف

مکہ مکرمہ// سعودی حکام نے کہا ہے کہ بیت اللہ کے لیے دنیا کے مہنگے ترین غلاف کی تیاری کے لیے باقاعدہ 8 شعبے قائم ہیں اور ان میں 200 پیشہ ور ماہر کاری گر عظیم خدمت انجام دے رہے ہیں۔ عرب ٹی وی کے مطابق غلاف کعبہ کی تیاری کا کام شاہ عبدالعزیز کمپلیکس کے زیر انتظام ہے۔ اس کے لیے کپڑے کی تیاری سے تکمیل اور تبدیلی تک 8 مراحل میں کام کیا جاتا ہے۔ غلاف کعبہ کی تیاری کے لیے ایک وسیع و عریض کارخانہ قائم ہے، جہاں کپڑے کا تجزیہ، رنگنا، لیبارٹری کے مرحلے سے گزارنا، خودکار طریقے سے سلائی، پرنٹنگ اور سونے کے دھاگے سے کڑھائی کی جاتی ہے۔ آخر میں مختلف حصوں کو جوڑا جاتا ہے، جس کے بعد غلاف تبدیل کیا جاتا ہے۔