تازہ ترین

نومبر مہینے میں کووڈ اموات میں 3گنا اضافہ

اکتوبر کے مقابلے میں متاثرین بھی 67فیصد بڑھ گئے

تاریخ    3 دسمبر 2021 (00 : 01 AM)   


پرویز احمد
سرینگر //جموں و کشمیر میں اکتوبر کے مقابلے میں نومبر مہینے میں کورونا متاثرین کی تعداد میں 67فیصد اضافہ ہوا جبکہ وائرس سے فوت ہونے والی اموات میں 3گنا اضافہ ہوا ۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق جموں و کشمیر میں یکم اکتوبرکو متاثرین کی مجموعی تعداد 3لاکھ 29ہزار 563تھی جو ایک ماہ میں 2686افراد کے اضافہ کے ساتھ 3لاکھ 32ہزار 249تک پہنچ گئی جبکہ یکم نومبر کو متاثرین کی مجموعی تعداد 3لاکھ 32ہزار 347تھی جو مزید 4505متاثرین سے  بڑھ کر 3لاکھ 36ہزار 852تک پہنچ گئی ۔ اس طرح نومبر مہینے میں اکتوبر کے مقابلے میں متاثرین کی مجموعی تعداد میں 1819افراد کا اضافہ ہوا ۔  اکتوبر مہینے میں صرف 9افراد وائرس سے فوت ہوئے تھے لیکن نومبر مہینے میں اموات کی تعداد 40تک پہنچ گئی ۔ اسطرح ایک ماہ کے دوران اموات میں تین گنا اضافہ ہوا۔ نومبر مہینے میں وائرس سے متاثر ہونے والے 4505افراد میں سب سے زیادہ ضلع سرینگر میں 1758، بارہمولہ میں 818، بڈگام میں 352،پلوامہ میں 88، کپوارہ میں 282، اننت ناگ میں 69، بانٖڈی پوری میں 185، گاندربل میں 302، کولگام میں 23، شوپیان میں 7افراد کی رپورٹیں مثبت آئی ۔ اس دوران کشمیر میں کورونا وائرس سے 31افراد فوت ہوئے ، جن میں سرینگر میں 21، بارہمولہ میں5، اننت ناگ میں,1بڈگام میں1جبکہ بانڈی پورہ میں 3افراد شامل ہیں۔ جموں صوبے میں نومبر مہینے میں 705افراد کورونا وائرس سے متاثر ہوئے جن میں ضلع جموں میں 321، ادھمپور میں 25، راجوری میں 58، ڈوڈہ میں 66، کٹھوعہ میں 25، سانبہ میں 12، کشتواڑ میں 14، پونچھ میں 44 جبکہ رام بن میں 23افراد متاثر ہوئے ۔ جموں صوبے میں 9افراد کورونا وائرس سے فوت ہوگئے ۔ اس سے قبل اکتوبر مہینے میں جموں صوبے میں وائرس سے صرف 3افراد فوت ہوئے تھے۔جموں صوبے میں نومبر مہینے کے دوران 9افراد کورونا وائرس سے فوت ہوئے جن میں  ضلع جموں میں 6، راجوری میں 1، اور پونچھ میں 2افرادشامل ہیں۔ 
 
 

لداخ میں بھی اضافہ

سیول سیکٹریٹ عام لوگوں کیلئے بند

سرینگر// جموںکشمیر کے ساتھ ساتھ لداخ میں بھی کووڈ19کے مثبت معاملات میںاضافہ ہورہا ہے ۔ اس ضمن میںیوٹی انتظامیہ نے احتیاطی تدابیر اُٹھائے ہیں۔لیہہ میں کورونا کے کیسز میں مسلسل اضافے کی وجہ سے کئی پابندیاں لگنا شروع ہو گئی ہیں۔ انتظامیہ نے سیکرٹریٹ میں عام لوگوں کے داخلے پر پابندی عائد کر دی ہے۔ حکام نے بتایا کہ 15 دسمبر تک صرف ملازمین ہی سیکرٹریٹ میں داخل ہو سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ ہیلتھ ورکرز پورے ڈویڑن میں مسلسل نمونے لے رہے ہیں۔ انہوں نے لوگوں سے کہا ہے کہ وہ کورونا پروٹوکول پر عمل کریں۔
 

 

تازہ ترین