تازہ ترین

دفعہ 370کا خاتمہ تاریخی فیصلہ تھا: امیت شاہ

پریم ناتھ ڈوگرہ اور شیاما پرساد مکھرجی کا خواب پورا ہوا، امن و قانون میں کسی کو رخنہ اندازی کی اجازت نہیں دی جائے گی

تاریخ    25 اکتوبر 2021 (00 : 12 AM)   
(عکاسی:میر عمران)

یو این آئی
جموں// مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے کہا کہ جموں و کشمیر میں شروع ہونے والے ترقی کے دور کو کوئی روک نہیں سکتا ہے، کیونکہ یہاں کی ترقی میں خلل ڈالنے والوں کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ امت شاہ نے یہ باتیں اتوار کو یہاں بھگوتی نگر میں ایک عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہیں۔انہوں نے کہا’’یہاں شروع ہونے والے ترقی کے دور میں خلل ڈالنے والے، خلل ڈالنے کی کوششیں کر رہے ہیں، ترقی کا یہ دور کوئی روک نہیں سکتا ہے، میں آپ سب کو بھروسہ دلانے آیا ہوں کہ ترقی کے اس دور کو کوئی روک نہیں پائے گا‘‘۔وزیر داخلہ نے کہا ’’ جموں و کشمیر میں دفعہ 370 کے خاتمے سے پریم ناتھ ڈوگرہ اور شاما پرساد مکھرجی کا خواب پورا ہوا ہے‘‘۔انہوں نے کہا’’آج پریم ناتھ ڈوگرہ کا جنم دن ہے، پورے بھارت کے لوگ انہیں کبھی بھول نہیں سکتے ، یہ وہ عظیم شخصیت تھیں جنہوں نے پرجا پریشد قائم کر کے شاما پرساد مکھرجی کے ساتھ ’ایک دیش میں دو نشان، دو ودھان اور دو پردھان نہیں چلیں گے ‘کا نعرہ دیا تھا‘‘۔انہوں نے کہا’’پریم ناتھ ڈوگرہ اور شاما پرساد مکھرجی کی آتمائیں آج وزیر اعظم نریندر مودی کو لاکھ لاکھ بار شکریہ ادا کر رہی ہوں گی، ہم سب کا خواب تھا کہ شاما پرساد مکھرجی کا خواب پورا ہو، مودی جی کی وجہ سے یہ خواب پورا ہوا ہے‘‘۔ امت شاہ نے کہا کہ جموں سے نا انصافی کا دور ختم ہو چکا ہے اور اب دونوں خطوں کی یکساں ترقی ہو گی۔ان کا کہنا تھا’’میں آپ سے آج یہ کہنے آیا ہوں کہ جموں سے نا انصافی کا دور ختم ہو چکا ہے، آپ نے برسوں تک نا انصافی جھیلی ہے، اب دونوں کشمیر اور جموں کی مساوی ترقی ہو گی، دونوں خطے مل کر بھارت کو آگے بڑھانے کی کوشش کریں گے‘‘۔وزیر داخلہ نے کہا ’’ ہم جموں و کشمیر میں ایک ایسی صورتحال کے حق میں ہیں کہ جس میں ایک بھی شخص کی جان نہ جائے‘‘۔ان کا مزید کہنا تھا’’پانچ اگست سے پہلے دعویٰ کیا گیا تھا کہ دہشت گردی بڑھ جائے گی، 2004 سے  2014 تک یہاں 2081 لوگ مارے گئے، یعنی ہر سال 208۔ اور  2015 سے  2021 تک ہر سال 30 لوگ مارے گئے، اس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ دہشت گردی میں کمی آئی ہے‘‘۔قبل ازیں وزیر داخلہ امت شاہ نے آئی آئی ٹی جموں کے نئے کیمپس کا افتتاح کیا اور کئی دوسرے پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد بھی رکھا۔انہوں نے کہا کہ پہلے جموں و کشمیر میں صرف چار میڈیکل کالج تھے، آج سات نئے میڈیکل کالج قائم ہوئے ہیں، پہلے میڈیکل کی 500 سیٹیں تھیں، اب یہاں سے 2000 طلبا ایم بی بی ایس کی ڈگری حاصل کر سکتے ہیں۔اگر000 45نوجوان جموں و کشمیر کے غریبوں کی خدمت میں مصروف رہیں گے تو ملی ٹینٹ بے اختیار ہوجائیں گے۔انہوں نے کہا کہ سرمایہ کاری سے پانچ لاکھ نئی ملازمتیں پیدا کرنے میں مدد ملے گی۔ جب ہم نے نئی صنعتی پالیسی متعارف کروائی تو اس وقت تین خاندان جنہوں نے برسوں آپ کا استحصال کیا، کہا کرتے تھے کہ جموں و کشمیر میں کون آئے گا، لیکن یہ نریندر مودی کا جادو ہے کہ اب تک کروڑوں روپے کی سرمایہ کاری ہوئی ہے۔ 12,000 کروڑ موصول ہو چکے ہیں اور 2022 سے پہلے، تقریباً 2000 کروڑ روپے کی سرمایہ کاری ہوگی اور51000کروڑو صول کیے جائیں گے۔تین خاندانوں نے مجھ سے پوچھا کہ آپ یہاں کے لوگوں کو کیا دیں گے ، لیکن آپ کے تین خاندانوں نے 70 سالوں میں کیا دیا ، جموں و کشمیر کے لوگ حساب مانگ رہے ہیں کہ انہوں نے لوگوں کے لیے کیا کیا۔ نریندر مودی نے ایک لاکھ روپے کا پیکیج دیا تھا۔ وزیر اعظم بنتے ہی 55ہزارکروڑ دیئے گئے، جن میں سے 35000 کروڑ خرچ ہو چکے ہیں اور 21 سکیمیں مکمل ہو چکی ہیں اور آپ حساب مانگ رہے ہیں کہ ہم نے کیا کیا؟کیا آپ نے اپنے خاندان کے علاوہ کسی اور کی پرواہ کی ہے۔جموں اور سرینگر میں میٹرو شروع ہونے والی ہے، جموں کے ہوائی اڈے کے لیے زمین کا ایک بڑا ٹکڑا الاٹ کیا گیا ہے اور ہوائی اڈے کو 2000 کروڑ روپے سے تیار کیا جائے گا۔ چار سالوں میں مودی حکومت نے 2000 کروڑ روپے خرچ کیے ہیں۔