تازہ ترین

صوبہ جموں ڈینگو کی لہر میں شدت

۔ 2 اموات ، شہر کے 187کیسوں سمیت صوبہ میں279معاملات

تاریخ    16 اکتوبر 2021 (00 : 01 AM)   


سید امجد شاہ

  مسلسل اضافہ کے بیچ کمیٹی تشکیل ہوگی،جی ایم سی جموںمیں ڈینگومریضوں کیلئے64 بسترے مخصوص

 جموں //جموں خطے میں ڈینگوکے پھیلاؤکے بیچ ،جس سے اب تک ایک خاتون سمیت دو افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں، محکمہ صحت ریاستی ملیرالوجسٹ ڈاکٹر بیلو شرما کی سربراہی میں ایک کمیٹی تشکیل دے سکتا ہے۔ایک عہدیدار نے بتایا کہ ضلع ادھم پور سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون کی حالیہ موت ڈینگو اور مشترکہ بیماری کی وجہ سے ہوئی۔ ڈینگو کی وجہ سے پہلی موت سندربنی راجوری میں ہوئی جو ایک اے ٹی ایم گارڈتھا۔محکمہ صحت کے ایک سینئر عہدیدار نے اعلیٰ حکام کی ہدایات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا "ہمیں اعلیٰ حکام کی طرف سے ہدایت کی گئی ہے کہ ہم ڈینگو کیسوں میں پیدا ہونے والی صورت حال کی موثر نگرانی کے لیے ایک کمیٹی تشکیل دیںاور اس کی سربراہی ریاستی ملیرالوجسٹ ڈاکٹر بیلو شرما کریں گے"۔
عہدیدار نے مزید کہا کہ آنے والے دنوں میں کمیٹی کے قیام کا امکان ہے۔ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز ڈاکٹر رینو شرما نے بتایا کہ جموں خطے میں اب تک 279 کیس ریکارڈ ہوئے ہیں۔ڈاکٹر رینو نے کہا "ان 279 کیسوں میں سے 187 ڈینگو کیس جموں ضلع کے گنجان آباد شہری علاقوں جیسے راجیو نگر کی کچی آبادی ، ریہاری ، سروال ، نہری علاقوں جیسے بھگوتری نگر ، جموں کے اولڈ سٹی اور دیگر علاقوں سے ہیں۔"انہوں نے کہا کہ پندرہ سال سے کم عمر کے 15 کیس ، 108 خواتین اور 151 بالغ افراد بھی ڈینگو سے متاثر ہیں۔ڈینگو کے کیسوں میں اضافے کے باوجود انہوں نے کہا کہ صورتحال تشویشناک نہیں ہے اور ایک مثال پیش کی کہ ہر دو یا تین سال میں  ڈینگو کے کیسوں میں اضافہ ہوتا ہے لیکن 10 نومبر کے بعد ان میں کمی آتی ہے۔انہوںنے کہا’’ہم جموں صوبے کے تمام دس اضلاع میں روزانہ کی بنیاد پر ڈینگو کیسز کی نگرانی کر رہے ہیں۔ ڈسٹرکٹ ہیلتھ سروسز نے کہا کہ پنجاب ریاست کے ساتھ ضلع کٹھوعہ کے ایک علاقے میں ڈینگوکے کچھ کیس رپورٹ ہوئے ہیں لیکن ہم نے ان علاقوں میں کئی دن پہلے تمام مناسب اقدامات کیے ہیں‘‘۔تاہم انہوں نے تصدیق کی کہ انہیں ہدایت کی گئی ہے کہ وہ ایک سیل تشکیل دیں جس کی سربراہی ریاستی ملیرالوجسٹ کرے ، حالانکہ پہلے ہی محکمہ صحت کی طرف سے صورتحال کی نگرانی کی جا رہی ہے۔
دریں اثناء پرنسپل جی ایم سی جموں ڈاکٹر ششی سودھن نے پیڈیاٹرکس ، مائیکرو بائیولوجی ، میڈیسن ، پیتھالوجی ، بائیو کیمسٹری ، بلڈ بینک جی ایم سی جموں ، میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ، جی ایم سی اور ایس ایم جی ایس ہسپتالوں کے افسران اور ایمرجنسی ، جی ایم سی ایچ جموں کے افسران کے ساتھ ایک میٹنگ کی صدارت کی جس میں جی ایم سی اور اس سے وابستہ ہسپتالوں میں ڈینگی کیسز کے انتظام کے لیے تیاری کا جائزہ لیاگیا۔ایک عہدیدار نے بتایا کہ جی ایم سی جموں ہسپتال میں 38 ڈینگو سے متاثرہ مریض داخل ہیں۔ عہدیدار نے مزید کہا کہ ہسپتال نے بستروں کی گنجائش 64 تک بڑھانے کا بھی فیصلہ کیا ہے۔اس کے علاوہ ایک عہدیدار نے اضلاع سے ڈینگوکے سرکاری اعداد و شمار شیئر کیے جن کے مطابق سانبہ میں 17 ، کٹھوعہ میں 30 ، اودھم پور ۔راجوری میں 5-5 ، ریاسی میں 4 ، پونچھ ، ڈوڈہ اور رام بن اضلاع میں 1-1کیس ہے۔