تازہ ترین

بمنہ سرینگر اور پلوامہ میں جھڑپیں،2جنگجو جاں بحق

پولیس سب انسپکٹر اور پی ڈی ڈی ملازم کی ہلاکتوں میں ملوث تھے:آئی جی پی

تاریخ    16 اکتوبر 2021 (00 : 01 AM)   


بلال فرقانی +سید اعجاز
سرینگر+پلوامہ//سرینگر سے تعلق رکھنے والے2 جنگجو فورسز کیساتھ ہمدانیہ کالونی بمنہ اور وہی بگ پلوامہ میں تصادم آرائیوں کے دوران جاں بحق ہوئے۔پولیس نے اس بات کا دعویٰ کیا ہے کہ یہ دونوں جنگجوئوں حالیہ دو شہری ہلاکتوں میں ملوث تھے جن میں بٹہ مالو میں محکمہ پی ڈی ڈی کا ملازم اور خانیار میں پولیس سب انسپکٹر شامل ہے۔دونوں جھڑپیں محض ڈیڑھ گھنٹے کے دورانیہ میں ہوئیں۔
بمنہ و پلوامہ جھڑپیں
پولیس نے بتایا کہ بمنہ علاقے میں انہیں جنگجوئوں کی نقل و حرکت کے بارے مین مصدقہ طور پر علم ہوا جس کے فوراً بعد شام 6بجکر28منٹ پر ہمدانیہ کالونی میں بمنہ پل کے قریب ناکہ لگایا گیا جس کے دوران یہاں سے جنگجو کا گذر ہوا ۔ اس موقعہ پر طرفین کے درمیان فائرنگ کا مختصر تبادلہ ہوا جس میں ایک جنگجو کی ہلاکت ہوئی جس کی بعد میں تنزیل احمد ساکن حبہ کدل کے بطور شناخت ہوئی۔پولیس نے بتایا کہ تنزیل احمد پولیس کو خانیار میں سب انسپکٹر ارشد احمد کی ہلاکت میں مطلوب تھا۔بتایا جاتا ہے کہ تنزیل احمد قریب ایک ماہ پہلے گھر سے لاپتہ ہوا تھا۔ادھرپولیس نے مزید بتایا کہ وہی بگ نیوہ پلوامہ میں نالہ رومشی کے کنارے جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع ملی جس کے بعد5بجکر 25منٹ پر 50آر آر کی بھی خدمات حاصل کی گئیں اور مشتبہ مقام کو محاصرے میں لیا گیا۔جونہی سیکورٹی فورسز نے مخصوص جگہ کو گھیرے میں لیا تو جنگجو وہاں سے فرار ہوا اور ایک سبزی باغ میں داخل ہوا جہاں طرفین میں گولیوں کا شدید تبادلہ ہوا جس میں جنگجو جاں بحق ہوا جس کی شناخت بعد میں شاہد بشیر شیخ ساکن فتح کدل کے طور پر ہوئی۔ پولیس نے کہا کہ شاہد بشیر بٹہ مالو میں پی ڈی ڈی ملازم کے قتل میں ملوث تھا اور پولیس اسے ڈھونڈ رہی تھی۔مہلوک جنگجوئوں کی تحویل سے اسلحہ و گولہ بارود ضبط کیا گیا ۔
پولیس بیان
کشمیر پولیس زون کے ٹویٹر ہنڈل سے ایک ٹویٹ میںانسپکٹر جنرل آف پولیس ( آئی جی پی )کشمیر زون وجے کمار کے حوالے سے لکھا کہ  شہر سرینگر کے شہری کی ہلاکت میں ملوث ایک جنگجوکو پلوامہ میں مارا گیا۔ انہوں نے  جنگجو کی شناخت شاہد بشیر شیخٰ ولد بشیر احمد شیخ کے طور کی ہے۔انہوں نے بتایا مارا گیا جنگجومحکمہ پی ڈی ڈی کے ایک ملازم محمد شفیع ڈار کی ہلاکت میں ملوث تھا جس کو 2اکتوبر کو مارا گیاتھا۔ انہوں نے بتایا جس بندوق کو اس ہلاکت میں استعمال کیا گیا تھا اس کو بھی برآمد کیا گیا ہے ۔پولیس ٹویٹر ہینڈل پر بمنہ میں ہوئی جھڑپ کے بارے میں کہا گیا کہ مذکورہ جنگجو تصادم میں مارا گیا جو پولیس کے سب انسپکٹر ارشد احمد کی ہلاکت میں ملوث تھا جسے خانیار علاقے میں گذشتہ ماہ ہلاک کیا گیا تھا۔
 
 

راجوری پونچھ کے بھاٹہ دھوڑیاں علاقہ میں جمعہ کو 2 بار جنگجو فرار

طرفین میں زوردار فائرنگ کا تبادلہ، آپریشن 5ویں روز بھی جاری

سمت بھارگو +جاوید اقبال +عظمیٰ یاسمین 
 
پونچھ +راجوری //خطہ پیر پنچال کے دوسرحدی اضلاع میں دو الگ الگ مقامات پر گزشتہ کئی دنوں سے جنگجو مخالف آپریشن جاری ہیں ۔پونچھ اور راجوری کی سرحد’ڈھیرا کی گلی‘علاقہ میں گزشتہ 5دنوں سے تلاشی آپریشن جاری ہے جبکہ مینڈھر سب ڈویژن کے بھاٹہ دھوڑیاں ،طوطا گلی علاقہ میں شروع ہوا آپریشن دوسرے روز بھی جار ی رہا ۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ بھمبر گلی بریگیڈ کے نزدیکی جنگلات طوطا گلی اور بھاٹہ دھوڑیاں میں جمعہ کو دوسرے روز بھی تلاشی مہم جاری رہی جبکہ اس دوران فوج و پولیس کی اضافی کمک کو بھی روانہ کیا گیا ۔انہوں نے بتایا کہ جمعہ کے روز دو مرتبہ طرفین کے مابین گولیوں کا تبادلہ بھی ہوا جبکہ فوری طور پر کسی بھی جانی ومالی نقصان کی کوئی خبر موصول نہیں ہوئی ۔انہوں نے بتایا کہ اس بات کا زیادہ امکان ہے کہ ملی ٹینٹ مذکورہ جنگلات میں ہی موجود ہیں ۔ دونوں سرحدی اضلاع کی حد ڈھیرا کی گلی علاقہ میں فوج اور پولیس کی جانب سے مشترکہ طورپر شروع کر دہ تلاشی مہم گزشتہ پانچ دنوں سے جاری ہے جبکہ سیکورٹی فورسز نے ایک وسیع علاقہ کا محاصرہ کیا ہوا ہے جس کے دوران تمام داخلی و خارجی پوائنٹس پر نظر رکھی جارہی ہے ۔دوسری جانب فوج کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ روز انکائونٹر کے دوران دو فوجی اہلکار ہلاک ہوئے تھے جن کی شناخت رائفل مین وکرم سنگھ ساکن اتراکھنڈ اور یوگمبر سنگھ ساکن اترا کھنڈ کے طورپر ہوئی ہے ۔ادھرسیکورٹی فورسز نے بھمبر گلی ،مینڈھر ،سرنکوٹ ،تھنہ منڈی ودیگر ملحقہ علاقوں کے تمام داخلی و خارجی پوائنٹس پر اضافی سیکورٹی اہلکاروں کو تعینات کر دیا گیا ہے جبکہ دونوں اضلاع میں تمام مسافر گاڑیوں کی چیکنگ کیلئے خصوصی پولیس اہلکار تعینات کئے گئے ہیں ۔ دونوں سرحدی اضلاع میں درجنوں مقامات پر اضافی چیک پوسٹ قائم کی گئی ہیں ۔اس دوران جموں راجوری پونچھ شاہراہ دوسرے روز بھی بند رہی۔