تازہ ترین

مزید خبریں

تاریخ    13 اکتوبر 2021 (00 : 01 AM)   


  جموں وکشمیر کے وقار کی بحالی کیلئے جدوجہد 

کی وجہ سے لوگ اپنی پارٹی میں شامل ہورہے ہیں :منجیت سنگھ

جموں //اپنی پارٹی صوبائی صدر جموں منجیت سنگھ نے کہا ہے کہ پانچ اگست2019کوجموں وکشمیر کے چھینے گئے وقار وشناخت کی بحالی کیلئے پالیسیوں اور ایجنڈے کی وجہ سے لوگ اپنی پارٹی میں شامل ہورہے ہیں۔ ضلع جنرل سیکریٹری سردیش رانا کی طرف سے منعقدہ ایک پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے منجیت سنگھ نے کہاکہ ریاست کا درجہ گھٹا کر اِس کو دو مرکزی زیر انتظام علاقے بنادینے سے جموں وکشمیر کے لوگ مایوس ہیں اور یک زباں سبھی کا مطالبہ ریاستی درجے کی بحالی ہے۔ نئے ساتھیوں کا اپنی پارٹی میں خیر مقدم کرتے ہوئے منجیت سنگھ نے کہاکہ اپنی پارٹی ریاستی درجے کی بحالی اور لوگوں کے حقوق کا تحفظ کرنے کی وعدہ بند ہے۔ جن کارکنان نے پارٹی جوائن کی ، میں گردیال کنڈل، موہندر لال لہنگے، جوگیندر لال لہنگے، پون کمار، راجندر کمار، بلوان داس، ارون کمار، ویشال گپتا،راج کمار، جیت راج وغیرہ شامل ہیں۔ انہوں نے کہاکہ مقامی نوجوانوں کے لئے نوکریوں میں تحفظ، ترقیاتی پروجیکٹوں اور صنعتی شعبہ میں روزگار کو یقینی بناناضروری ہے۔ انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیر کے لوگوں کے مفادات کے ساتھ کوئی سمجھوتہ نہیں جائے گا ۔ جموں کے لوگ جھوٹے وعدوں کی وجہ سے سخت متاثر ہیں۔ اپنی پارٹی اہلیان جموں کو تنہا نہیں چھوڑے گی اور لوگوں کے حقوق کے لئے جدوجہد جاری رکھی جائے گی۔ انہوں نے مزید کہاکہ جموں میں سیاحتی شعبہ، کاروبار، ہوٹل اور دیگر شعبہ جات سخت بحران کا شکار ہیں جن کی احیاء کے لئے جامع پالیسی کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہاکہ کاروبارکا احیا ء اور مقامی نوجوانوں کے لئے روزگارتبھی ممکن ہے جب منتخب حکومت ہوگی، لہٰذا یہ ناگزیر بن چکا ہے کہ بلاتاخیر اسمبلی انتخابات کرائے جائیں۔ ضلع صدر جموں اربن پرنو شگوترہ نے کہاکہ جموں میونسپل کارپوریشن لوگوں کو بنیادی سہولیات فراہم کرنے میں ناکام رہا ہے ۔ جموں میں ترقی چیدہ چیدہ علاقوں میں کی جارہی ہے۔ صرف ایک خاص سیاسی جماعت کے کارپوریٹرز کو ہی ترجیحی دی جارہی ہے ، باقی سبھی کو مشکلات کا سامنا ہے۔اس موقع پر ایس سی ریاستی کارڈی نیٹر بودھ راج بھگت، او بی سی ریاستی کارڈی نیٹر مدن لال چلوترہ، صوبائی سیکریٹری ڈاکٹر روہت گپتا، ریاستی جنرل سیکریٹری یوتھ ونگ ابہے بقایہ، انچارج یوتھ ضلع صدر جموں وپل بالی، صوبائی نائب صدر یوتھ ونگ جوگیندر سنگھ، ضلع جنرل سیکریٹری ابھشیک گوسوامی، صوبائی سیکریٹری یوتھ ونگ سہیل کھجوریہ بھی موجود تھے۔
 
 
  
 

ڈوڈہ میں کویڈ 19 کا 1کیس مثبت 

اشتیاق ملک
ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع سے منگل کو کورونا وائرس کا صرف 1 مثبت کیس سامنے آیا ہے اور 12 مریض صحتیاب ہوئے ہیں۔ اس طرح سے ضلع میں فعال کیسوں کی تعداد سمٹ کر 23 و شفایاب ہوئے مریضوں کی مجموعی تعداد 7650 پہنچ گئی ہے۔ ضلع میں اب تک کوؤڈ 19 سے 133 افراد فوت ہوئے ہیں اور 423748 ٹیکے لگائے گئے ہیں۔ 
 
 

محکمہ ریلوے کا اقتصادی ترقی کو آسان بنانے میں اہم رول 

شمالی ریلوے کے عہدیداران کی جموں کے معرف صنعت کاروں سے بات چیت 

نیوز ڈیسک 
جموں //انڈسٹریز اینڈ کامرس جموں نے شمالی ریلوے کے بزنس ڈویلپمنٹ یونٹ اور جموں ڈویژن کے معروف صنعت کاروں کے درمیان بات چیت کے ایک سیشن کا اہتمام کیاگیا۔یہ سیشن پرنسپل سکریٹری برائے حکومت صنعت و تجارت جموں وکشمیر رنجن ٹھاکر کی ہدایت پر منعقد ہوا جس کی رہنمائی ڈائریکٹر انڈسٹریز اینڈ کامرس جموں انو ملہوترا کر رہے تھے۔جبکہ تقریب میں دیگر اعلیٰ افسران بھی موجود تھے ۔سینئر ڈویژنل آپریشنز منیجر ناردرن ریلوے نوین کمار جھا نے ہندوستانی ریلوے کا جائزہ پیش کیا اور حاضرین کو آگاہ کیا کہ ہندوستانی ریلوے ملک کے لاجسٹک سیکٹر میں ریڑھ کی ہڈی تصور کیا جاتا ہے 
۔انہوں نے کہا کہ ریلوے ملک کی متوازن اور جامع سماجی اقتصادی ترقی کو آسان بنانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ریلوے تقریبا تمام اشیاء بشمول کوئلہ ، آئرن ایسک ، آئرن اینڈ اسٹیل ، غذائی اناج ، سیمنٹ ، پیٹرولیم مصنوعات ، کھاد اور دیگر اشیاء کنٹینروں میں لے جاتی ہے۔ڈویژنل ریلوے منیجر سیماشرما نے کہا کہ ریلوے زمینی نقل و حمل کا سب سے زیادہ ماحول دوست طریقہ ہے۔انہوں نے کہا کہ ٹرینیں صرف سواریاں ہی نہیں بلکہ اشیاء ضروریا بھی ایک جگہ سے دوسری جگہ تک لے جاتی ہیں اور ہائی وے پر گاڑیوں کی بھیڑ بھاڑ کو بھی کم کرنے میں مدد گار ثابت ہوتی ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ ٹرینوں کے ذریعے سامان کی نقل و حمل سے ماحول کو ایندھن کی کارکردگی اور پائیداری سے بھی زیادہ فوائد حاصل ہوتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ریلوے نے ملک کے مال بردار منظر نامے کو تبدیل کر دیا ہے لیکن یہ ابھی تک جموں و کشمیر تک پہنچنا باقی ہیں۔انہوں نے انڈسٹریل ایسوسی ایشنز/فیڈریشنز/ٹریڈ باڈیز اور انفرادی یونٹ ہولڈرز سے درخواست کی کہ وہ ان اختراعات سے فائدہ اٹھائیں۔اجلاس میں موجود صنعتکاروں نے شمالی ریلوے اور محکمہ صنعت و تجارت کے اس اقدام کا خیرمقدم کیا اور سیشن کے انعقاد پر ان کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے خام مال اور تیار شدہ سامان کی لاجسٹک نقل و حرکت کے لحاظ سے خطے میں صنعت کو درپیش چیلنجوں پر روشنی ڈالی۔انہوں نے یہ بھی درخواست کی کہ خدمات کے معیار کو اپ گریڈ کیا جائے اور ریلوے کی طرف سے ٹرانزٹ کا وقت کم کیا جائے۔ انہوں نے یہ بھی درخواست کی کہ جدید ٹریکنگ سسٹم کو ریلوے لاجسٹکس میں ضم کیا جائے تاکہ انڈسٹریز کو ٹرانزٹ کے دوران سامان کی ریئل ٹائم ٹریکنگ سے آگاہ رکھا جاسکے ۔
 
 
 
۔