تازہ ترین

مینڈھر قصبہ کی لفٹ سکیم 6برسوں بعد بھی پائیہ تکمیل تک نہ پہنچ سکی

بور ویل نکالنے وکچھ پاپئیں بچھانے کیلئے پروجیکٹ کو چھوڑ دیا گیا

تاریخ    12 اکتوبر 2021 (00 : 01 AM)   


جاوید اقبال
مینڈھر //مینڈھر قصبہ میں سے بنائی جارہی واٹر لفٹ سپلائی سکیم گزشتہ 6برسوں سے مکمل ہی نہیں کی جارہی ہے جس کی وجہ سے قصبہ کیساتھ ساتھ ملحقہ علاقوں کی وسیع آبادی پینے کے صاف پانی کی شدید قلت کا سامنا کررہی ہے ۔مقامی لوگوں نے محکمہ جل شکتی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ مینڈھر قصبہ میں سے ہنو مان مندرکی اراضی پر واٹر سپلائی سکیم کے سلسلہ میں 2بور ویل نکالے گئے ہیں جبکہ پانی کو جمع ٹینک میں سپلائی کرنے کے سلسلے میں ٹرانسفارمر و دیگر مشینری بھی نصب کی گئی ہے ۔انہوں نے بتایا کہ کچھ پاپئیں بھی بچھائی گئی ہیں جبکہ پانی کو جمع کرنے کیلئے ایک واٹر ٹینک بھی تعمیر کیا گیا ہے لیکن اس کے بعد متعلقہ محکمہ نے پروجیکٹ کو یوں ہی چھوڑ دیا جس کی وجہ سے مینڈھر قصہ کیساتھ ساتھ ملحقہ علاقوں کی بڑی آبادی پینے کا صاف پانی ہینڈ پمپوں کیساتھ ساتھ نالوں و قدرتی چشموں سے لانے پر مجبور ہیں ۔مینڈھر قصبہ کے رہائشی دویندر کمار ٹنڈن ،وکاس بسین ،سبھاش چندر سرپنچ ،سنیلہ دیوی ،بلرام شرمااور ستیش چندر ودیگران نے بتایا کہ محکمہ کی لاپرواہی کی وجہ سے ایک وسیع علاقہ کی عوام متاثر ہو رہی ہے لیکن مقامی انتظامیہ و ضلع انتظامیہ محکمہ کو پروجیکٹ مکمل کرنے کیلئے کوئی ہدایت جاری نہیں کررہی ہے ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ کی لاپرواہی کا سنجیدہ نوٹس لے کر واٹر لفٹ سکیم کو جلدازجلد مکمل کرنے کی ہدایت جاری کی جائیں تاکہ لوگوں کو صاف پانی میسر ہو سکے ۔