تازہ ترین

۔50فیصد کیسز سرینگر سے نکل رہے ہیں|لاک ڈائون پر مجبور

تاجر و ٹرانسپورٹر تعاون کریں: ضلع انتظامیہ

تاریخ    21 ستمبر 2021 (00 : 01 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر //ضلع ترقیاتی کمشنرسرینگر نے کہا کہ کوویڈ 19 کے کل مثبت معاملات میں سے 50 فیصد سرینگر سے آرہے ہیں اور اگرشہر میں کوویڈ ایس او پیز پر عمل نہیں کیا گیا تو انتظامیہ دوبارہ سخت اقدامات کرنے پر مجبور ہوگی۔انہوں نے کہا کہ کوویڈ 19 کے مناسب رویے میں کسی قسم کی کوتاہی یا غفلت انتظامیہ کو کوویڈ 19 وائرس کی زنجیر توڑنے کے لیے سری نگر میں سخت اقدامات کرنے پر مجبور کرے گی۔انہوں نے کہا کہ کوویڈ 19 ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے پر جرمانہ عائد کرنا علامتی ہے کیونکہ اس کا مقصد یہ دیکھنا تھا کہ COVID-19 سے متعلقہ مشوروں اور ہدایات کے نفاذ ،جن میں فیس ماسک کا استعمال ، مختلف کاروباری اداروں اور دیگر عوامی مقامات پر سماجی دوری کو برقرار رکھنا شامل ہے، پر عمل ہورہا ہے یا نہیں۔اس موقع پر ، ڈی سی نے تاجروں ، پیدل چلنے والوں اور ٹرانسپورٹرز کے ساتھ بات چیت کی اور ان سے کہا کہ وہ عوامی تحفظ اور صحت کے لیے حکومتی ہدایات پر سختی سے عمل کریں۔انہوں نے سرینگر کے لوگوں ، تاجروں اور ٹرانسپورٹرز سے  تعاون کرنے اور کوویڈ 19 کے ایس او پیز ، ہدایات اور احتیاطی تدابیر پر سختی سے عمل کرنے کی اپیل کی۔ڈی سی نے کہا کہ کسی کو یہ حق نہیں ہے کہ وہ دوسروں کو متاثر کرے اور جو لوگ ماسک نہیں پہنتے اور بڑے اجتماعات سے گریز نہیں کرتے ہیں انہیں قانون کے مطابق کارروائی کا سامنا کرنا پڑے گا۔دورے کے دوران ، ڈی سی نے کچھ دکان داروں اور پیدل چلنے والوں کو چہرے کے ماسک فراہم کیے جو بغیر ماسک کے تھے۔ انہوں نے انہیں مشورہ بھی دیا اور انتباہ دیا کہ وہ مستقبل میں ماسک پہننے کے حوالے سے محتاط رہیں اس کے علاوہ انفیکشن سے بچنے کے لیے کوویڈ مناسب رویہ اپنائیں۔ضلع سرینگر میں کوویڈ 19 کے مثبت کیسز میں اضافے کے تناظر میں ڈپٹی کمشنرمحمد اعزاز اسد نے شہر کے مختلف بازاروں کا معائنہ کیا۔دورے کے دوران ، ڈی سی نے شہر کے مختلف بازاروں کا معائنہ کیا جن میں لال چوک ، گھنٹہ گھر ، جنگلات لین ، ڈلگیٹ ، پولو ویو ، ایم اے روڈ ، ریگل چوک ، ریذیڈنسی روڈ ، امیراکدل ، ہری سنگھ ہائی اسٹریٹ ، مہاراجہ بازار ، گونی کھن ، جہانگیر چوک ، بٹہ مالو اور دیگر ملحقہ کاروباری مراکز شامل ہیں۔معائنہ کے دوران دو درجن سے زائدتجارتی اداروں کو سیل کیا گیا اس کے علاوہ 20 ہزار روپے جرمانہ بھی کیا گیا۔

تازہ ترین