تازہ ترین

کشتواڑضلع میں کرونا کے بڑھتے معاملات کا ذمہ دارکون ؟ | انتظامیہ عوام پر سخت تو سیاسی جماعتوں کے اجتماعات پر مہربان

تاریخ    20 ستمبر 2021 (22 : 01 AM)   


عاصف بٹ
کشتواڑ//اگرچہ ضلع کشتواڑ میں کورونا وائرس کے مثبت معاملات کی تعداد جموں کشمیر کے دیگر اضلاع سے بالکل کم ہے اور ریاسی کے بعد کشتواڑ دوسرے نمبر پر ہے لیکن گزشتہ چند مہینوں کے دوران ان کی تعداد میں مسلسل اضافہ انتظامیہ کیلئے بھی حیران کن ہے ۔کوروناوائرس کی پہلی و دوسری لہر میں کشتواڑ میں کل 4805معاملے درج کیے گئے جن میںسے 4751 اس وبائی بیماری سے صحتیاب ہوئے جبکہ محض دس مثبت معاملے اس وقت ضلع میں موجود ہیں جو سبھی گھروں میں زیرعلاج ہیں۔جہاں انتظامیہ نے مثبت معاملات کو بڑھنے سے روکنے کیلئے سخت انتظامات عمل میں لائے اور آئے روز خلافورزی کرنے والوںسے ہزاروں روپے جرمانہ وصولاجاتا ہے اور بڑے اجتماعات پر پابندی لگائی جاتی ہے وہیں دوسری طرف سیاسی جماعتوں کو بڑے اجتماعات کیلئے کھلی چھوٹ دی جاتی ہے اور نہ ہی ان پر کوئی جرمانہ عائد کیاجاتا ہے۔کشمیر عظمیٰ سے بات کرتے ہوئے سماجی کارکنان نے بتایا کہ حالیہ سیاسی اجتماعات میں ہزاروں کی تعداد میں لوگ بغیر کسی سماجی دوری و ماسک کے نظر آئے ہیں لیکن ضلع انتظامیہ و پولیس کہیں دیکھائی نہیں دی اور نہ ہی ان پر کاروائی عمل میں لائی گئی جبکہ دوسری طرف  گاڑیوں کے اندر بغیر ماسک کے دیکھنے پر بھی پولیس قوانین دکھاکر جرمانہ وصولتی ہے۔ایک نوجوان نے بتایا کہ عبادتگاہوں و تعلیمی اداروں  کو بند رکھا جارہا ہے اور سیاسی اجتماعات پر لوگوں کی بھیڑ کا ا کٹھا کی جارہی ہے ۔ انہوںنے کہا کہ اگر کشتواڑ میں دوبارہ سے کنٹینمنٹ زون بنانے پڑے یا لاک ڈائون لگانا پڑا تو اسکا ذمہ دار کون ہوگا؟،کیا انتظامیہ ذمہ داری اپنے سرلے گی یا اسے بھی عوام کے سرہی تھونپا جائے گا؟۔ انھوں نے ضلع میں کورونا کی تیسری لہر سے بچنے کیلئے انتظامیہ کو سختی برتنے کی اپیل کی اورسیاسی جماعتوں کے اجتماعات پر مکمل پابندی عائد کرنے کامطالبہ کیا۔
 

کووڈ ایس ا وپیز کی خلاف ورزی پر28ہزار کا جرمانہ |  2198 ٹیکے لگائے گئے ، 1017 نمونے جمع کئے گئے

رام بن//ضلع رام بن میں کووڈ پروٹوکول کے نفاذ کے لئے نافذ کرنے کی مہم کو جاری رکھتے ہوئے انفورسمنٹ ٹیموں نے چہرے کے ماسک نہ پہننے اور جسمانی فاصلہ برقرار نہ رکھنے پر کئی خلاف ورزی کرنے والوں پر جرمانہ عائد کیا۔نافذ کرنے والی ٹیموں نے اپنے متعلقہ دائرہ کار میں معائنہ کے دوران 28ہزار100 روپے جرمانہ وصول کیا۔انفورسمنٹ افسران نے لوگوں پر زور دیا کہ وہ چہرے کے ماسک پہنیں اور جسمانی فاصلہ برقرار رکھیں اس کے علاوہ اپنے قریبی سی وی سی پر کوویڈ ویکسی نیشن کی خوراکیں لیں۔ضلع امیونائزیشن آفیسر ڈاکٹر سریش نے بتایا کہ ضلع رام بن میں آج 2198 افراد کو پہلی اور دوسری کوویڈ ویکسین کی خوراک دی گئی۔چیف میڈیکل آفیسر کے جاری کردہ روزانہ بلیٹن کے مطابق محکمہ صحت نے 1017 نمونے جمع کیے ہیں جن میں 269، RT-PCR اور 748 ،RAT نمونے شامل ہیں اس کے علاوہ 2198 افراد کو کوویڈ ویکسین ضلع کے مخصوص ویکسی نیشن مراکز میں دی گئی ہے۔
 

ڈوڈہ میں کورونا وائرس کے 6 نئے مثبت معاملات | 18 سال سے زیادہ کے عمر کے 85 فیصد افراد کو ٹیکے لگائے گئے 

اشتیاق ملک
ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع میں کورونا وائرس کے 6 نئے مثبت معاملات سامنے آئے ہیں اور 18 سال سے اوپر کی عمر کے 85 فیصد سے زائد افراد کو ٹیکے لگائے گئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق اتوار کے روز ڈوڈہ، بھدرواہ، ٹھاٹھری ،گندوہ و عسر میں ہوئی کوؤڈ جانچ کے دوران 6 افراد کی ٹیسٹ رپورٹ مثبت آئی ہے جنہیں ہوم قرنطینہ میں رکھا گیا ہے۔اس طرح سے ضلع میں فعال کیسوں کی تعداد بڑھ کر 73 پہنچ گئی ہے اور شفایاب ہوئے مریضوں کی مجموعی تعداد 7512 ہو گئی ہے۔ضلع میں اب تک 345610 افراد کو ٹیکے لگائے گئے ہیں اور اب تک کؤؤڈ 19 سے 131 افراد فوت ہوئے ہیں۔
 

تازہ ترین