تازہ ترین

۔9/11 حملوں کی تحقیقات کا پہلا مسودہ جاری

تاریخ    13 ستمبر 2021 (00 : 12 AM)   


یو این آئی
واشنگٹن//امریکی صدر جو بائیڈن کے ایگزیکٹو آرڈر پرفیڈرل بیورو آف انویسٹی گیشن (ایف بی آئی) نے نائن الیون حملوں کی جانچ سے متعلق پہلے دستاویز جاری کئے اور ہائی جیکروں کے لئے سعودی حکومت کی مشتبہ مدد کو بھی عام کیا ہے  ایف بی آئی نے کہا ‘‘11 ستمبر ، 2001 کے دہشت گردانہ حملوں سے متعلق بعض دستاویزات کے ڈی کلاسی فکیشن جائزے پر امریکی صدر جو بائیڈن نے 3 ستمبر 2021 کو دستخط کیے تھے اور ان دستاویزات کو ان کے ایگزیکٹو آرڈر کے جواب میں عام کیا جا رہا ہے ’’۔ ایف بی آئی الیکٹرانک مواصلاتی دستاویزات ہفتہ ، 4 اپریل ، 2016 کو جاری کیے گئے ۔ یہ دستاویزات مختلف لوگوں کے ساتھ رابطے کو ظاہر کرتے ہیں کہ نائن الیون طیاروں کو ہائی جیک کرنے والے دو افراد کا امریکہ میں سعودی اتحادیوں سے رابطہ ہوا تھا ، لیکن اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ سعودی حکومت اس سازش میں ملوث تھی۔ امریکہ میں نائن الیون کے متاثرین کے خاندانوں نے طویل عرصے سے حکومت سے ، جو سعودی دہشت گرد ہوسکتے ہیں ان کے روابط سے متعلق معلومات عام کرنے کی گزارش کی تھی جنہوں نے نائن الیون حملے انجام دیئے تھے ۔ادھرنیویارک میں سانحہ نائن الیون کی یاد میں تعزیتی تقریب ہوئی جس میں امریکا کے موجودہ صدر جو بائیڈن، سابق صدور باراک اوباما اور بل کلنٹن نے شرکت کی۔ تقریب کے آغاز میں نائن الیون حملوں کی یاد میں ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی گئی۔ نائن الیون حملوں کے 20 برس مکمل ہونے پر برطانیہ کی ملکہ الزبتھ دوم کا کہنا ہے کہ ہماری دعائیں سانحے کے متاثرین کے ساتھ ہیں۔
 
 

ہلاکت کی افواہوں کے باوجو ایمن الظواہری کاویڈیو پیغام

واشنگٹن //امریکہ میں نائن الیون کے واقعات کے 20 برس مکمل ہونے پر القاعدہ کے سربراہ ایمن الظواہری کی ایک ویڈیو سامنے آئی ہے جس میں وہ امریکی فوج کے افغانستان سے انخلا، یروشلم اور رواں برس کے آغاز پر شام میں روسی افواج کو نشانہ بنانے کا تذکرہ کر رہے ہیں۔یہ ویڈیو ایسے وقت میں سامنے آئی ہے جب چند ماہ قبل یہ افواہیں زیرِ گردش تھیں کہ مصری نزاد ایمن الظواہری انتقال کر چکے ہیں۔ ویب سائٹس کی نگرانی کرنے والے ادارے 'سائٹ' انٹیلی جنس گروپ کا کہنا ہے کہ یہ ویڈیو ہفتے کو جاری کی گئی ہے، البتہ  ویڈیو میں 20 سال بعد افغانستان سے امریکی فوج کے انخلا کا ذکر ہے۔ 
 

تازہ ترین